وحدت نیوز (کراچی) نائیجیریا میں اسرائیل نواز افواج کے ہاتھوں مسلمانوں کا قتل عام ریاستی دہشت گردی کی بدترین مثال ہے، نائیجیریا حکومت اسلامی تحریک کے سربراہ شیخ ابراہیم زکزکی اور ان کے اہل خانہ کو فی الفور رہا کرے اور تحفظ فراہم کرے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنماؤں مولانا اعجاز بہشتی، مولانا احمد اقبال رضوی، مولانا باقر زیدی اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی کے صدر یاور عباس سمیت ایم ڈبلیو ایم کے رہنماؤں مولانا علی انور جعفری، علامہ مبشر حسن، سید میثم رضا، حسن ہاشمی نے کراچی پریس کلب کے باہر نائیجیریا کے مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے نائیجیریا کی اسرائیل نواز فوج کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر مظاہرین کی بڑی تعداد موجود تھی جن کے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز موجود تھے، جن پر اسلامی تحریک نائیجیریا کے سربراہ شیخ ابراہیم زکزکی کی رہائی کے مطالبے سمیت اسرائیل نواز نائیجیرین فوج کے خلاف نعرے آویزاں تھے۔ یاد رہے کہ 12 دسمبر کو زاریا شہر میں اسرائیل نواز نائیجیرین فوج نے بھاری ٹینکوں اور گولہ بارود کے ساتھ شہریوں کو ریاستی دہشت گردی کا نشانہ بنانا شروع کیا تھا اور تیس گھنٹوں تک جاری سفاکانہ دہشت گردی میں 6 ہزار سے زائد معصوم انسانوں کو موت کی نیند سلا دیا گیا تھا۔

مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کا کہنا تھا کہ نائیجیریا کے مظلوم مسلمانوں اور بالخصوص اسلامی تحریک کے سربراہ شیخ ابراہیم زکزکی کا قصور یہ ہے کہ انہوں نے ہمیشہ فلسطینیوں کی حمایت کی ہے اور غاصب اسرائیل اور اس کی سرپرست قوتوں امریکہ اور برطانیہ کے خلاف صدائے احتجاج بلند کی ہے، تاہم مظلوم فلسطینیوں کی حمایت کے اس جرم میں شیخ ابراہیم زکزکی نے اپنے پانچ فرزندوں کی قربانی دی ہے اور آج خود بھی اسرائیل نواز نائیجیرین افواج کے ہاتھوں ریاستی دہشت گردی کا نشانہ بنے ہوئے ہیں۔ رہنماؤں نے نائیجیریا میں جاری ریاستی دہشت گردی پر عالمی برادری کی مجرمانہ خاموشی سمیت ذرائع ابلاغ کی جانب سے خاموشی اور سکوت کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور کہا کہ آج اگر یہی واقعہ کسی یورپی یا مغربی ممالک میں رونما ہوتا تو یہ ذراع ابلاغ، انسانی حقوق کے ادارے اور عالمی برادری پوری دنیا کو تگنی کا ناچ نچوا دیتے لیکن کیونکہ یہ ریاستی دہشت گردی نائیجیریا میں مظلوم اور نہتے مسلمانوں پر ہوئی ہے اس لئے پوری دنیا خواب خرگوش میں ہے۔

انہوں نے کہا کہ نائیجیریا حکومت کو چاہئیے کہ اسرائیل نواز آرمی کی مدد سے بنائے جانے والے دہشت گرد گروہ بوکو حرام کے خلاف سخت اقدامات کئے جائیں نہ کہ ملک کے پر امن باسیوں کا بڑے پیمانے پر قتل عام کیا جائے۔ انہوں نے نائیجیریا کی حکومت اور افواج کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ اگر اسلامی تحریک نائیجیریا کے سربراہ شیخ ابراہیم زکزکی کو فی الفور رہا نہ کیا گیا اور مسلمانوں کے قتل عام کا سلسلہ بند نہ ہوا تو پاکستان بھر میں احتجاج کا دائرہ وسیع کر دیں گے اور نائیجیریا کے سفارت خانے کا گھیراؤ بھی کیا جائے گا۔ اس موقع پر مظاہرین نے امریکہ مردہ باد، اسرائیل نامنظور، دہشت گردی مردہ باد اور شیخ ابراہیم زکزکی کو رہا کرو کے نعرے بھی لگائے اور اس موقع پر امریکی اور اسرائیلی پرچم کو بھی نذر آتش کیا گیا۔

وحدت نیوز (لاہور) کرم ایجنسی کے شہر پاراچنار میں دھماکے کیخلاف مجلس وحدت مسلمین لاہور کے کارکنوں نے لاہور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے ٹائر جلا کر حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ پارا چنار میں دھماکے کیخلاف مجلس وحدت مسلمین کے کارکنوں نے لاہور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے ٹائر جلا کر سڑک بلاک کردی اور حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ دہشتگردی کیخلاف موثر اقدامات نہیں کئے جا رہے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ پارا چنار کے شہداء کے لواحقین کی داد رسی اور زخمیوں کی امداد نہ کی گئی تو احتجاج کا دائرہ کار بڑھا دیا جائے گا۔ رہنماؤں نے کہا کہ کرم ایجنسی واحد ایجنسی ہے جہاں پاکستان کا پرچم لہرایا جاتا ہے، دہشتگردوں نے پارا چنار میں بم دھماکا کرکے مکینوں کو حب الوطنی کی سزا دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت ضرب عضب آپریشن سے دہشتگردوں کی کمر ٹوٹ گئی ہے اور آخری سانسیں لیتے دہشتگرد معصوم شہریوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

وحدت نیوز (نصیرآباد) شکارپور سانحہ کے خلاف مجلس وحدت مسلمین ، شیعہ علماء کونسل اور اصغریہ اسٹوڈنٹس کی جانب سے جامع مسجد حسینی سے احتجاجی ریلی نکالی گئی ، مظاہرین نے ہاتھوں میں بینر اور پلے کارڈ اٹھائے ہوئے تھے جن میں سانحے شکارپور میں ملوث دہشتگردوں کے خلاف سزا کے نعرے درج تھے ، مظاہرین شہر کا گشت کرنے کے بعد ابو تراب چوک پر پہنچے وہاں پر دھرنا دیا ،دھرنے کے شرکاء سے رہنماؤں مولانا خادم حسین ،سیکریٹری جنر ل سید اختر عباس نقوی ، سیکریٹری تنظیم سازی حبدار علی لغاری ، محمد ملوک ، وزیر جعفری اور دیگر نے کہا کے شکار پور کا سانحہ سند ھ گورنمٹ کی نا اہلی کا ثبوت ہے ، سندھ حکومت سانحہ شکارپور کے دھشتگردوں کی پشت پناہی کر رہی ہے ، وفاقی حکومت ، چیف آف آرمی اسٹاف سے مطالبہ کرتے ہیں کے سندھ میں بھی ضرب عضب آپریشن کر کے طالبان سمیت تمام دھشتگردوں کے خلاف کاروائی کر کے ان کا خاتمہ کیا جائے ۔

وحدت نیوز (نوشہروفیروز) سانحہ شکارپور کے شہداء کے قاتلوں کی گرفتاری کے لئے مجلس وحدت مسلمین اور مسجد امام بارگاھ نجف سندھ آرگنائیزيشن کمیٹی نوشہروفیروز کی جانب سےقدم مولاعلی  علیہ اسلام  سے لیکر حبیب چونک احتجاجی ریلی نکالی گئی  ریلی میں مجلس وحدت مسلمین، شیعہ علماء کائونسل، اصغریہ پاکستان، انجمن عزاداران امام حسین ، انجمن عاشقان مہدی عج اور ديگر تنظیموں نے ریلی میں شرکت کی اس موقع پر   مشتاق حسین مری، اطہر علی مطہری، اظہر بلوچ، نوکر علی میمن، انصارالحسین میمن، مولوی محمد یوسف حسینی اور دیگر نے کہا کہ  حکمران عوام کے مال و جان کی تحفظ کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں  سانحہ پشاور اور شکارپور حکمرانو ں کے ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے،  انہوں نے مزيد کہا کہ وزيرستان کی طرح سندھ میں ضرب عضب آپریشن کرکے دھشتگردوں کا خاتمہ کیا جائے دیگر صورت میں احتجاج  کا دائرہ بڑھایا جائيگا جب کہ شکارپور کے شہدا کے لئے قرآن خوانی اور عزاداری بھی کی گئی۔

وحدت نیوز (حیدرآباد) سانحہ شکار پور کو ایک ہفتہ گذر جانے اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف مجلس وحدت مسلمین سندھ کی اپیل پر جمعہ کے روز سندھ بھر میں یوم شہدائے شکارپور منایا گیا، اس سلسلے میں قدم گاہ مولاعلی ؑ پر ایم ڈبلیوایم ضلع حیدر آبادکی جانب سے بعد نماز جمعہ مجلس ترحیم منعقدکی گئی جب کہ بعداز مجلس احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، جس سے مولانا سید باقرعباس زیدی ، مولانا امدا دعلی نسیمی ، مولانا گل حسن مرتضوی، مولانا انور علی گلگتی اور مولانا ملازم حسین نے خطاب کیا،احتجاجی مظاہرے میں عوام کی بڑی تعداد شریک تھی، اس موقع پر رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ایک ہفتہ گذر جانے کے باوجود قاتلوں کی عدم گرفتاری سے حکمرانوں کی سنجیدگی کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے، افسوس ناک بات یہ ہے کہ حکمران ووٹ لیتے وقت تو عوام کے دروازوں کے چکر کاٹتے ہیں لیکن جب ان گھروں میں لاشیں پڑیں ہوں تو انہیں تعزیت کی بھی زحمت نہیں ہوتی، جن لوگوں کے اجداد نے پاکستان بنانے کے لئے اپنے تن من دھن کی قربانی دی وہ آج پاکستان بچانے کے لئے بھی قیمتی جانوں کی قربانیاں دے رہے ہیں ، جن لوگوں کے اجداد نے پاکستان بنانے کو گناہ قرار دیا، پاکستان کے بانی کو کافر اعظم کہا، آج وہ پاکستان کو تباہ و برباد کرنے کے در پہ ہیں، پاکستان کے غیور اور مظلوم عوام کو نا اہل سیاسی مکاروں سے سوائے جھوٹ فریب اور دھوکے بازی کے کسی بات کی توقع نہیں ، دہشت گردی کے ڈسے ہوئے عوام کو انصاف اور انتقام کی امید فقط پاک فوج سے ہے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین ضلع اسلام آباد کی جانب سے سانحہ شکار پور کے شہداءکی یاد میں نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے سامنے شمعیں روشن کی گئیں اور شہداء کیلئے دعا کی گئی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم اسلام آباد کے سیکرٹری جنرل ظہیر نقوی اور ایم ڈبلیو ایم پنجاب کے ترجمان علامہ اصغر عسکری کا کہنا تھا کہ سانحہ پشاور کے بعد سانحہ شکار پور حکومتی اور ریاستی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہیں، مظلوم عوام کو دہشتگردوں کے رحم و کرم پر چھور دیا گیا ہے۔ اکیسویں آئینی ترمیم کی منظوری کو ایک ماہ گزر گیا لیکن قومی ایکشن پلان پر عمل درآمد کی رفتار نہ ہونے کے برابر ہے یہی وجہ بنی ہے کہ کالعدم جماعتیں آج بھی سرگرام عمل ہیں اور یہاں تک کہ شکار پور میں بدترین سانحہ کرکے 65 نمازیوں کو خون میں نہلا دیا گیا۔ علامہ اصغر عسکری کا کہنا تھا کہ حکومت کے کالعدم جماعتوں سے آج بھی مراسم قائم ہیں یہی وجہ ہے کہ کالعدم جماعتیں اپنی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں، انہیں روکنے ٹوکنے والا کوئی نہیں ہے۔ جبکہ دوسری جانب دہشتگردی مخالف قوتوں کو ہراساں کیا جارہا ہے۔ ایم ڈبلیو ایم کے کئی کارکنوں ضلعی رہنماوں کو بے گناہ گرفتار کرکے پابند سلسل کردیا گیا ہے۔ اس عمل سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت ہمیں پاک فوج کی حمایت کی سزا دے رہی ہے۔ علامہ عسکری نے مطالبہ کیا کہ حکومت فی الفور سانحہ شکارپور میں ملوث افراد اور ان کے سہولت کاروں کو عبرت ناک سزا دے اور انہیں قوم کے سامنے بےنقاب کرے۔ وہ مدارس جو دہشتگردی میں ملوث ہیں انہیں فی الفور بند کیا جائے۔ افسوس کا مقام ہے کہ خود وزیرداخلہ چودھری نثار کہہ چکے ہیں کہ 10 فیصد مدارس دہشتگردی میں ملوث ہیں لیکن تاحال ان مدارس کیخلاف کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی جا رہی۔

Page 9 of 16

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree