وحدت نیوز (اسلام آباد) پاکستان کو ایک طویل مدتی معاشی پالیسی کی ضرورت ہے۔معاشی مشکلات سے نکلنے کے لئے معاشی پالیسی پر قومی اتفاق رائے پیدا کرنا ناگزیر ہو چکا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید اسد عباس نقوی نے میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا ۔انہوں نے کہا کہ ملک کے وسیع تر مفاد میں تمام سیاسی جماعتوں کو مل بیٹھ کر ہم آہنگی کے ساتھ ایسی معاشی پالیسی تشکیل دینے کی ضرورت ہے جس کے ذریعے ہم اس مادروطن کو قرضوں کے گرداب سے نکال کر معاشی خودمختاری پر گامزن کرسکیں۔

انہوں نےمزیدکہاکہ مسلسل نااہلی اور کرپشن نے ملک کو دیوالیہ ہونے کے قریب لاکھڑا کیا ہے اور اس کا نتیجہ میں آج عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں۔ ملکی سلامتی کے لیے ضروری ہے کہ ہم معاشی آزادی کو اولین ترجیح دیں۔ ملکی ترقی کے لئے جلد از جلد ا?ئی ایم ایف سے چھٹکار پانا ضرور ی ہے۔ حکومت ملک بھر کی ضلعی انتظامیہ کو رمضان المبارک میں گران فروشوں سے سختی سے ساتھ نمٹنے کے لئے پابند کرے رمضان المبارک میں عوام کو گراں فروشوں کے استحصال سے بچا کر کچھ ریلیف دیا جاسکتا ہے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ کے تحت کراچی کے مقامی ہال میں وحدت اسلامی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا ، جس میں شیعہ سنی اکابر ین سمیت عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ کانفرنس سے مرکزی خطاب مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کیا ۔ کانفرنس میں پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء اور پارلیمانی سیکریٹری برائے مذہبی امور آفتاب جہانگیر ، جماعت اسلامی کے مرکزی رہنماء معراج الہدیٰ صدیقی ، تحریک منہاج القرآن کے رہنماء علامہ آفتاب اظہر ،مجلس علمائے شیعہ پاکستان کے صدر علامہ مرزا یوسف حسین ،ملی یکجہتی کونسل کراچی کے صدر قاضی احمد نورانی، جعفریہ الائنس پاکستان کے رہنماء جناب شبر رضا، پاکستان عوامی تحریک کے رہنماء ظفر اقبال قادری ، ذاکرین امامیہ پاکستان کے صدر علامہ نثار قلندری سمیت دیگر سماجی و سیاسی شخصیات نے شرکت کی ۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ وحدت ایک عمل ہے جو دشمن کے منصوبوں کو خاک میں ملانے کے لئے ہے۔ برطانیہ نے مسلمانوں کے اتحاد کو توڑ کر پورے برصغیر پر قبضہ کیا۔سائوتھ ایشیاءمیں نئے نئے خرافاتی فرقوں کی تشکیل برطانوی ایجنڈاتھا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو ٹکرےٹکرے کرنے کے بعد مسلمانوں کے دل میں اسرائیل کی ناجائز ریاست بنائی۔سربراہ مجلس وحدت مسلمین نے کہا کہ امریکہ برطانیہ اسرائیل اور انکے اتحادی ہمارے دشمن ہیں۔یہی ہیں جو داعش جیسی قوت کو بنا کر ہم پر مسلط کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر مسلمان ممالک اکھٹے ہوں تو ڈانلڈ ٹرمپ کی مجال نہیں کہ وہ کسی مسلم لیڈر کی توہین کر سکے۔ امام خمینی کہتے تھے کہ جو شیعہ سنی کے درمیان تفرقے کی بات کرے وہ ہم میں سے نہیں۔علامہ راجہ ناصر نے کہا کہ پاکستان میں دشمن نے بہت سرمایہ کاری کی ہے مسلمانان پاکستان کے آپس کے اتحاد کو ختم کرنے کی منظم کوشش کی ہے۔۲۲ کڑوڑ کے ایٹمی ملک کو عالمی طاقتوں نے کمزور کر دیا ہے۔

 اسٹیٹ بینک اور ایف بی آر کے سربراہ اب آئی ایم ایف لگوا رہا ہے ۔ آج لوگ سیکیولر جماعتوں میں تو اکھٹے بیٹھتے ہیں مگر مذہبی پلیٹ فارم پر متحد نہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہم کو قومی، لسانی، فرقہ پرستی سمیت کئی مسائل میں الجھا دیا گیا ہے۔آج ہمارے ملک میں قانون کی حکمرانی نہیں، ظالم اور بے حس حکمران ہم پر مسلط کر دیئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں صدراتی کیمپ آفس کے باہر ہماری مائیں بہنیں ۸ روز سے سراپا احتجاج ہیں ۔ان کا مطالبہ ہے کہ اگر ہمارا بچہ مرگیا ہے تو اس کی لاش دے دو، اگر زندہ ہیں تو انہیں کورٹ میں پیش کردو۔ انہوں نے سوال کیا کہ کہاں ہے پاکستان کی ریاست،کہاں ہیں انصاف کے ادارے؟

پاکستان تحریک انصاف کے پالیمانی سیکرٹری برائے مذہبی امور آفتاب جہانگیر کنے اپنے خطاب میں کہا کہ اگر کسی نے کوئی جرم کیا ہے اسے عدالت میں پیش کرنا چاہئے۔مسنگ پرسنز کا مسئلہ پہلے بھی ایوان میں اٹھایا ہے پھر اٹھائیں گے۔اگر بندہ مرجائے تو گھر والوں کو سکون مل جاتا ہے لیکن اگر غائب کردیا جائے تو اہل خانہ کو کسی صورت سکون نہیں ملتا ۔ہمیں وحدت اسلامی کے ساتھ ساتھ وحدت پاکستان کیلئے بھی کوشش کرنے چاہئے۔ہمیں امت مسلمہ کے درمیان اتحاد و یکہجتی کے لیے اقدامات کرنے چاہئے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیر معراج الہدیٰ نے کہا کہ نیوزی لینڈ میں اسلاموفوبیا کی سوچ جب مسجد پر حملہ آور ہوتی ہے تو مسلک نہی پوچھتی۔انہوں نے کہا کہ ہیلری کلنٹن کا داعش بنانے کا انکشاف دنیا کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہے۔انہوں نے کہا کہ فکرخمینی نا اسرائیل کو زندہ رہنے دے گی اور نا اس کے باجائز باپ امریکہُ کوآج غزہ اسرائیلی میزائیلوں کے نشانے پر ہے۔یہی فکرخمینی ہے جس نے آج نام نہاد بادشاہتوں کی رات کی نیندیں حرام کی ہوئی ہیں، جنہیں خادمین کہا جاتا ہے ان کے لئے ڈونلڈ ٹرمپ کے خیالات شرم ناک ہیں۔

پاکستان عوامی تحریک کے رہنماء علامہ آفتاب اظہر کا کہنا تھا کہ نبی کریمؐ نے چودہ سو سال قبل امت مسلمہ میں ایمانی انقلاب برپہ کیا۔ جس معاشرے کی تقسیم طبقاتی بنیادوں پر ہو وہ ترقی نہیں کرتا۔ ڈاکٹر طاہر القادری کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ انہوں نے کبھی کسی مسلک کی تکفیر نہیں کی۔ مجلس وحدت مسلمین اور پاکستان عوامی تحریک مظلوموں کے حقوق کی مشترکہ جدوجہد جاری رکھیں گے۔

ملی یکجہتی کونسل سندھ کے صدر علامہ قاضی نورانی نے کہا کہ سحر وافطار پر امت مسلمہ انواع و اقسام کے کھانے کھا رہے ہوں گے تو وہیں فلسطین کے مسلمان اپنے پیاروں کی لاشین اٹھا رہے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عوام نے دشمن کی کوششوں کو ناکام بنایادشمن کے ایماء پر پاکستان میں داعش کو لانے کی کوشش کی جارہی ہے اسلام کی حقانیت پر حملہ کرنے کے لئے طرح طرح کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔

وحدت نیوز(سکردو) گلگت میں تحریک حمایت مظلومین گلگت بلتستان کے رہنماوں کی احتجاجی گرفتاری پر مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ آغاعلی رضوی کی سربراہی میں ہنگامی اجلاس کا انعقاد اسکردو میں ہوا۔ اجلاس میں تحریک حمایت مظلومین کی چارٹر آف ڈیمانڈ پر فوری طور پر عمل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔ اس اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے آغا علی رضوی نے کہا کہ تحریک حمایت مظلومین گلگت بلتستان کا مطالبہ پورے گلگت بلتستان کا مطالبہ ہے ، قبل اس کے کہ جیلوں میں جگہ کم پڑ جائے ارباب اقتدار کو فوری طور اقدامات اٹھانے چاہیے۔

 تحریک مظلومین کا مطالبہ گلگت بلتستان کے ہر فرد کا مطالبہ ہے۔ چارٹر میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے حالیہ فیصلے کے مطابق گلگت بلتستان کے عوام کو تمام تر بنیادی انسانی حقوق دئیے جائیں اور سپریم اپیلٹ کورٹ،چیف کورٹ کے ججز کی تعیناتی کے حوالے سے غیر قانونی طریقے ختم کرکے جوڈیشل کمیشن کے تحت ججز کی تعیناتی عمل میں لائی جائے اور چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی میرٹ کی بنیاد پر عمل میں لائی جائے۔

انہوں نے کہا کہ تحریک حمایت مظلومین کا یہ مطالبہ بھی پورے گلگت بلتستان کے عوام کا مطالبہ ہے کہ خطے کی زمین اور جنگلات پر عوام کا حق تسلیم کیا جائے اور خالصہ سرکار کے نام پر ناجائز قبضے کا سلسلہ ختم کیا جائے۔اسی طرح اپوزیشن لیڈر کی گرفتاری  عوامی مینڈیٹ کی توہین لہذا انہیں فوری طور پر رہا کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سانحہ 13اکتوبر 2005ء کی جوڈیشنل انکوائری منظر عام پر لائی جائے۔

آغا علی رضوی نے کہا کہ تحریک حمایت مظلومین گلگت بلتستان کے ان تمام مطالبات کی بھرپور حمایت کرتے ہیں اور پورے خطے میں ان مطالبات کی بازگشت سنائی دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ خطے کے عوام تیار اور آمادہ رہیں حکومتی مظالم اور غیر قانونی ہتھکنڈے حد سے گزر گئے ہیں۔

وحدت نیوز (سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے زیراہتمام ملک بھر میں جبری لاپتہ ہونے والے شیعہ افراد کے اہل خانہ کی طرف سے کراچی میں جاری دھرنے کی حمایت اور قانون ساز اسمبلی گلگت بلتستان کے لیڈر آف اپوزیشن کیپٹن ریٹائرڈ محمد شفیع کی گرفتاری کے خلاف بعد از نماز جمعہ احتجاجی ریلی نکالی گئی جو یادگار شہداء اسکردو پر احتجاجی جلسے کی صورت اختیار کر گئی۔ اس احتجاجی جلسے سے آئی ایس او بلتستان ڈویژن کے رہنماء شفقت غازی، نامور سماجی کارکن علی شفاء، مزدور رہنماء اخوند حسین،ایم ڈبلیو ایم کے رہنماء مولانا علی حسین ، مولانا ذیشان ، سید الیاس موسوی اور نامور عالم دین آغا علی رضوی نے خطاب کیا۔

مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ کراچی میں شیعہ افراد کی جبری گمشدگی ماورائے آئین اور خلاف ضابطہ ہے۔ گمشدہ افراد کو ماورائے عدالت گرفتار کرنا انتہائی افسوسناک عمل اور آئین پاکستان کی سنگین خلاف ورزی ہے۔ ملت جعفریہ نے وطن عزیز کی حفاظت و سلامتی کے لیے جانیں دیں اور دفاعی فرنٹ لائن کا کردار ادا کیا لیکن افسوس کی بات ہے کہ پاکستان کے بنانے والوں کے لیے پاکستان کی سرزمین تنگ کی جارہی ہے۔ کئی روز سے صدر پاکستان کے گھر کے دروازے پر مائیں ، بہنیں اور بیٹیاں سراپا احتجاج ہیں لیکن مدینے کی ریاست بنانے کے دعویدار خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پاکستان کے محب وطن شہریوں کے لیے عرصہ حیات تنگ کرنے کی کوشش نہ کی جائے اور کراچی میں جبری طور پر گمشدہ ہونے والے افراد کو رہا کیا جائے۔

مقررین نے کہا کہ گلگت میں لیڈر آف اپوزیشن کی گرفتاری انتہائی افسوسناک اور شرمناک عمل ہے۔ انہیں عوامی حقوق کے لیے آواز بلند کرنے کی سزا دی جارہی ہے۔صوبائی حکومت ہوش کے ناخن لیں اور غیر جمہوری رویہ ترک کر ے بصورت دیگر پورے خطے میں صوبائی حکومت کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہوں گے۔

وحدت نیوز(قم) ایم ڈبلیو ایم پاکستان کے سیکرٹری امور خارجہ ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ کوئی کسی غیر قانونی اقدام میں ملوث ہے تو اسے قانون کے مطابق عدالتوں میں لایا جائے اور انصاف کے تقاضوں کے مطابق اس پر مقدمہ چلایا جائے۔ مقدمات چلائے اور قانونی تقاضے پورے کئے بغیر جوانوں کی جبری گمشدگی جیسے اقدامات عوام اور ریاست کے درمیان خلیج پیدا کرتے اور عوام میں عدم تحفظ کے احساس کو تقویت دیتے ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ شیعہ جوانوں نے کبھی جائز ملکی مفاد کے خلاف کام نہیں کیا اور شیعہ قوم کے ہر فرد کی حب الوطنی طول تاریخ میں ایک ثابت شدہ چیز ہے۔ انہوں نے جبری گمشدگیوں کو انسانی حقوق کی خلاف ورزی قرار دیا اور کہا کہ یہ ظلم کا ایک واضح مصداق ہے۔

 ڈاکٹر شفقت حسین شیرازی نے جبری گمشدہ فیملیز کی طرف سے کراچی دھرنے کی مکمل حمایت کی اور اس دھرنے کی حمایت میں پاکستان سمیت امریکہ, کینڈا و دیگر ممالک میں مومنین کی طرف سے اظہار یکجہتی اور علامتی دھرنوں پر مومنین کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اگر ریاست مسنگ پرسنز کی فیملیز کو مطمئن کرنے میں ناکام رہی تو مجلس وحدت مسلمین احتجاج کو ملکی اور بین الاقوامی سطح پر مزید وسیع کردے گی۔

وحدت نیوز(دمشق) جولان ہمیشہ سے شام کا حصہ ہے اور ٹرمپ سمیت کسی کو حق نہیں ہے کہ وہ جولان کو کسی دوسرے ملک کے حوالے کرے. ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری امور خارجہ ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی نے 3 مئی بروز جمعہ کو تحریک جہاد اسلامی فلسطین کے زیر اہتمام دمشق کے علاقے قدسیا میں منعقدہ ایک بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کے دوران کیا۔

 انہوں نے کہا کہ امریکہ اور اسرائیل اس اقدام سے خطے میں ناامنی چاہتے ہیں.کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ قانونی اور اخلاقی دونوں لحاظ سے فلسطینوں کا وطن واپسی کا حق ثابت ہے اور وہ دن ضرور آئے گا جس دن فلسطینی بغیر کسی رکاوٹ کے اپنے وطن لوٹیں گے. اور مزید کہا کہ ڈیل آف سنچری کا امریکی منصوبہ بھی اپنی ولادت سے پہلے ایسے ہی دم توڑ چکا ہے جیسے نئے مشرق وسطی کے امریکی منصوبے کا گلا جولائی 2006 میں لبنانی مقاومت حزب اللہ  لبنان نے جنم سے پہلے ہی گھونٹ دیا تھا۔

 تحریک جہاد اسلامی فلسطین کے زیر انتظام جولان و فلسطین سے اظہار یکجہتی کے لیے منعقد ہونے والی اس کانفرنس میں جنوبی افریقہ, آسٹریلیا, لبنان, فلسطین, پاکستان اور شام سمیت متعدد اسلامی و غیر اسلامی ممالک کے وفود نے شرکت کی. کانفرنس کے مہمان خصوصی انٹرنیشنل مقاومت سپورٹرز کونسل کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر یحیی غدار تھے. کانفرنس کے اختتام پر بین الاقوامی وفود کے درمیان باہمی ملاقات اور عشائیے کا اہتمام کیا گیا تھا۔

Page 8 of 1294

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree