وحدت نیوز(کراچی) مجلسِ وحدت مسلمین  شعبہ خواتین  کراچی  کی جانب سے شعبہ خواتین کراچی کےتین اضلاع کا اجلاس منعقد ہوا جسمیں ضلع غربی ،ضلع وسطی اور ضلع شرقی کی ذمہ داران نے شرکت کی،اجلاس میں مرکزی سیکریٹری جنرل شعبہ خواتین محترمہ زہرانقوی اور مرکزی سیکریٹری امور تنظیم سازی مہدی عابدی نے خصوصی طور پر شرکت کی اور ضلعی ذمہ داران سے مختلف موضوعات پر خطاب کیا، محترمہ زہرانقوی نے  مسئلہ فلسطین پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ  فلسطین امتِ اسلامی کا سب سے اہم ترین مسئلہ ہےاور تمام اسلامی ممالک پہ فلسطین اور مسجدِ اقصٰی کے لئے آوازِ حق بلند کرنا ایک فرض کی حیثیت رکھتا ہے، یہ دوشمن کی ناکامی کا ثبوت ہے کہ دشمن خود ساختہ دعٰوی کرنے لگا ہے جو سراسر بین الاقوامی قوانین  کی خلاف ورزی  ہے اور اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کے منافی ہے۔انشاء اللہ ہم بحیثیتِ مکتبِ تشیع پاکستان ہر فورم پر قبلہ اول کی مکمل آزادی تک استعمار کے خلاف آوازِ حق بلند کرتے رہیں گے۔

سید مہدی عابدی نے  ملکی اور بین الاقوامی سیاسی صورتحال کے پس منظر میں ملتِ تشیع پاکستان کے کرادار کے حوالے سےتفصیلی گفتگو کی، انہوں نے انتہائی مفصل انداز میں ملکی اور بین الاقوامی حالات وواقعات،مسجدِ اقصٰی بیت المقدس کی تحریک سے لے کر شام اور عراق سے داعش کی شکست اور پھر انخلا اور دنیائے تشیع کے کردارپر روشنی ڈالی اور ملکی سیاسی صورتحال ، واقعات و حالات کے پس منظر میں حاضرین  کی جانب سے پوچھے جانے والے مختلف سوالات کے بھی تفصیلی جوابات دئیے۔

اجلاس کے اختتام پر شعبہ خواتین کراچی کے حوالے سے آنے والی تینوں  اضلاع کی مسؤلین سے تنظیمی و فلاحی امور کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی  اور مستقبل قریب کے مختلف پروگرامز ترتیب دئے، بلخصوص شعبہ خواتین ضلع وسطی کے زیرِ انتظام بیتِ زہرہ ع کی نمائندہ مسؤلین سےخصوصی ملاقات کی اور بیت زہرہ ع کی کارگردگی کےحوالے سے تین ماہ کی رپورٹ طلب کی ، اسکے علاوہ بیتِ زہرہ ع  میں آئندہ آنے والے دنوں میں آغاز کئے جانے والے مختلف فلاحی پروجیکٹز کے حوالے سے گفتگو کی ، بعد ازاں ضلع غربی  میں شعبہ  خواتین کی جانب سے سردیوں کے پیشِ نظر گرم کپڑے اور سردیوں کا دیگر ضروری سامان ضلع غربی کی ذمہ داران کے حوالے کیا گیاتاکہ خواتین کو بروقت سامانِ ضرورت مہیا کیا جاسکے۔

وحدت نیوز( کراچی) ماہ مبارک ربیع الاول کے انتظامات کے حوالے سے بلدیہ عظمیٰ کراچی کے زیر اہتمام میئر کراچی وسیم اختر کی ذیر صدارت اجلاس میں مجلس وحدت مسلمین کے وفد کی علامہ صادق جعفری کی زیر قیادت شرکت، وفد میں ڈویژنل رہنما میر تقی ظفر اور سبط اصغربھی شامل تھے، علامہ صادق جعفری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ماہ محرم الحرام میں صفائی ستھرائی  میں کوتاہیوں کو ماہ مبارک ربیع الاول میں دور کیاجائے ، انشاءاللہ ہمیشہ کی طرح اس سال بھی شیعہ سنی ملکر رسول اکرم ﷺ کی ولادت کا جشن منائیں گے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) ملی یکجہتی کونسل کی اہم رکن جماعت مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی کے اغواءکے خلاف ملی یکجہتی کونسل کا اہم اعلیٰ سطحی اجلاس 22نومبر بروز بدھ اسلام آباد میں طلب کرلیا گیا ہے، ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نے مجلس حدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری امور سیاسیات سید اسدعبا س نقوی سے ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ناصرشیرازی ایڈوکیٹ کی جبری گمشدگی کے خلاف ملی یکجہتی کونسل کا اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا گیا ہے ، جس میں کونسل تمام رکن جماعتوں کے سربراہان اور نمائندگان شرکت کریں گے، لیاقت بلوچ نے ناصرشیرازی کے تین ہفتے سے لاپتہ ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کیا اور اب تک حکومتی غیر سنجیدہ رویئے کی مذمت بھی کی، لیاقت بلوچ نے کہا کہ اجلاس  میں شرکت کے حوالے سے تمام رکن جماعتوں کو باضابطہ طور پردعوت نامے جاری کردیئے گئے ہیں، ایم ڈبلیوایم کے قائدین سے بھی گذارش کرتے ہیں کے وہ اجلاس میں لازمی شرکت فرمائیں ، اسدعباس نقوی نے ناصر شیرازی کے اغواء جیسے حساس مسئلے پر ملی یکجہتی کونسل کا بروقت اجلاس طلب کرنے پر کونسل کے مرکزی سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ کا شکریہ اداکیا اور انہیں ایم ڈبلیوایم کی جانب سے شرکت کی یقین دہانی کروائی۔

وحدت نیوز(لاہور) حکومت پنجاب کے پاس مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل برادر سید ناصر عباس شیرازی کی فوری رہائی کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ہے ،اگر پنجاب حکومت نے ملت تشیع کے خلاف تعصب پر مبنی کاروائیاں ختم نہ کیں تو ملت جعفریہ کا ہر فرد گھروں سے کفن پہن کر نکل پڑے گا ان خیالات کا اظہارصوبائی سیکرٹری عزاداری کونسل رانا ماجد علی نے وحدت ہاؤس پنجاب میں اربعین کے انعقاد کے بعد انتظامی کارکنوں سے ملاقات میں کارکنوں کی شب و روز محنت اور بہترین انتظامات پر فخراج تحسین کیا اور کہا کہ اربعین سیدالشہداء کے عالمی سطح پر تاریخ بشریت کے سب سے  بڑے اجتماع نے مکتب تشیع کی حقانیت کا علم بلند کر کے سر فخر سے  بلند کردیا ہے۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین سنٹرل پنجاب کے عزاداری سیل کا اجلاس سیکرٹری جنرل سنٹرل پنجاب علامہ مبارک موسوی کے زیر صدارت صوبائی سیکرٹریٹ سنٹرل پنجاب میں منعقد ہوا،جس میں سید حسن کاظمی،رانا ماجد علی رائے ناصر علی،نجم الحسن،آغا نقی مہدی،سید حسین زیدی،اسدعلی،سید سجاد نقوی سمیت دیگر کارکنان شریک ہوئے،اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے صوبائی سیکرٹری عزاداری سیل رانا ماجد علی نے کہا کہ امسال پنجاب میں انتظامیہ نے مجالس ،جلوس ہائے عزاء کی انعقاد کے جرم میں ملت تشیع کیخلاف ساڑھے آٹھ سو سے زائد بلاوجہ ایف آئی آر کا اندراج کرکے ہمارے بنیادی آئینی حق پر قدغن لگانے کی کوشش کی ہے،جس کی ہم پور زور مذمت کرتے ہیں ،چہلم امام عالی مقام ؑ کے بعد ہم اس متعصبانہ عمل کیخلاف اعلیٰ عدالتوں سے رجوع کریں گے،فیصل آباد ،سیالکوٹ،ناروال،اوکاڑہ،فاروق آباد،چونیاں،قصور،ساہیوال میں عزاداران امام عالی مقام کو مسلسل شرپسندوں کیساتھ مل کر انتظامیہ ہراساں کرتی رہی،آپریشن ردالفساد کے باوجود شرپسند گروہ کھل کر محرم میں امن عامہ کی تہہ تیغ کرنے میں پیش پیش رہے،بارہا انتظامیہ کے نوٹس میں ان واقعات کو لانے کے باوجود ان شرپسندوں کیخلاف کوئی کاروائی نہ کرنا اس بات کی دلیل ہے کہ ان شرپسندوں کو پنجاب حکومت کی آشیرباد حاصل تھی،فیصل آباد میں شرپسند گروہ نے مدینہ ٹاوُن میں چھتوں پر چڑھ کر عزاداران پر پتھراو کرتے رہے،لیکن عزاداران کی جانب سے امن عامہ کے خاطر کوئی درعمل نہیں دکھایا، فیصل آباد پولیس نے الٹا بے گناہ عزاداروں کیخلاف مقدمات درج کئے،ہم اس متعصبانہ عمل کو کسی صورت برداشت نہیں کریں گے،اوراس کیخلاف ہر قسم کے قانونی آئینی جدو جہد جاری رکھیں گے،لاہور ساندہ میں ن لیگ کے مقامی کونسل آصف ملک کی سرپرستی میں شرپسندوں نے چاردیواری کے اندر منعقد ہونے والے مجلس پر حملہ آور ہوئے اہل خانہ کو ہراساں کر کے سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں ،لیکن انتظامیہ کو وہاں بھی ہم نے بے بس دیکھا،انہوں نے کہا کہ ملک جہاں جہاں ن لیگ کی حکومت ہے وہاں وہاں ملت جعفریہ مشکلات کا شکار ہے،ایام عزاء کے بعد عزاداران کی اجلاس میں حکومتی متعصبانہ عمل کیخلاف لائحہ عمل کا اعلان کرینگے۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) فرقہ واریت ملک و قوم کے لیے زہر قاتل ہے، مملکت خداداد پاکستان کو ایک سازش کے تحت اس گھناؤنے کھیل کا شکار بنایا جارہا ہے، مسلمانوں کو اندرونی طور پر اختلاف کا شکار کر دشمن اپنے عزائم حاصل کرتا ہے، میانمار میں ظلم و ستم مودی کی ایما پر ہو رہا ہے، مودی کا دورہ میانماراسی گھناؤنی سازش کی ایک کڑی ہے، مودی ایک جانب میانمار میں اپنا کھیل بہترین انداز میں کھیل رہا ہے دوسری جانب آزاد کشمیر میں بھی مودی کی ایما پر را کے ایجنٹوں نے ٹارگٹ کلنگ کو ہتھیار کو طور پر آزمایا ہے، علامہ تصور نقوی پر حملہ دراصل ریاست آزاد کشمیر کی سالمیت اور اتحاد بین المسلمین پر حملہ ہے۔ ان خیالات کا اظہار مرکزی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے وحدت سیکرٹریٹ مظفرآباد میں منعقدہ ایک اجلاس سے ٹیلیفونک خطاب کے دوران کیا ۔

 انہوں نے کہا کہ دشمن ایجنسی را شیعہ سنی لڑائی چاہتی ہے، وہ آزاد کشمیر میں امن و امان کی صورتحال کو مخدوش کرتے ہوئے دنیا کو یہ باور کروانا چاہتی ہے کہ پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کسی طور پر بھی پرامن نہیں ۔ مگر سلام ہے آزاد کشمیر کے غیور شیعہ سنی کو کہ جس نے ہر سازش کو بھانپتے ہوئے حکمت سے ناکام بنایا۔ مگر سوال پیدا ہوتا ہے کہ آزاد کشمیر کی حکومت ، انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے کیوں سست روی کا شکار ہیں ، کیا یہ فرقہ واریت کی آگ جسے را کے ایجنٹوں نے آزاد کشمیر میں سلگانے کی کوشش کی اسے جلنے سے پہلے بُجھا نہیں دینا چاہیے؟ ان کے اس تجربے کو ناکام نہیں بنا دینا چاہیے؟ کیا ان کی جڑوں تک پہنچتے ہوئے انہیں نیست و نابود نہیں کر دینا چاہیے؟ آزاد کشمیر پرامن خطہ ، کیا امن کو تہہ و بالا کرنے کی سازش کرنے والوں کو کیفر کردار تک نہیں پہنچانا چاہیے؟ آزاد کشمیر کے اندر اتحاد بین المسلمین ، امن ، رواداری اور محبت کے لیے کام کرنے والوں کو محفوظ نہیں کرنا چاہیے؟ انہوں نے کہا کہ سوال ہے حکومت سے کہ انہوں نے اب تک علامہ تصور نقوی کو محفوظ ٹھکانے پر منتقل کیوں نہیں کیا؟ ان کے بچوں کی تعلیم تباہ ہو رہی ہے، ریاستی حکومت اس جانب توجہ کرنا تو دور کی بات عیادت تک کرنے نہیں آئی ، یہ حکومتی نااہلی ہے۔ حملہ کرنے والے پکڑے نہیں گئے ، علامہ کو سیکورٹی دی نہیں جارہی ، علامہ کے دیگر معاملات کو دیکھا نہیں جا رہا ۔ جو کہ ملت جعفریہ اور مجلس وحدت مسلمین کےلئے باعث تشویش ہے ۔ کیا پھر سے کسی سانحے کا انتظار کیا جا رہا ہے؟ کیا ہم پھر سے سڑکوں پر نکلیں اور ارباب اقتدار کو متوجہ کریں ۔ وزیراعظم آزاد کشمیر سے کہتا ہوں ، علامہ تصور نقوی کا مسئلہ انتہائی اہم مسئلہ، اگر عیادت کرنا گوارہ نہیں تو نہ کریں مگر ریاست کی جو ذمہ داریاں ہیں انہیں پورا کیا جائے۔ انتظامیہ اپنا کام تندی و تیزی سے کرتے ہوئے مجرمان کو کیفر کردار تک پہنچائے۔ ہم برما کے مسلمانوں کے ساتھ بھی اظہار یکجہتی کرتے ہیں ، اور سمجھتے ہیں کہ بھارتی ایما پر یہ سب کچھ ہو رہا ہے ، مگر آزاد کشمیر میں بھی ہمیں آنکھیں بند نہیں کرنی چاہیے اور مزید کسی سانحے کا انتظار کیئے بغیر اقدامات کرنا ہوں گے۔

Page 1 of 24

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree