وحدت نیوز (کراچی) مجلس وحدت مسلمین کے رکن اسمبلی آغاسید محمد رضا کے بلوچستان حکومت میں صوبائی وزیر شامل ہونے پر سربراہ ایم ڈبلیوایم علامہ راجہ ناصرعباس جعفری، آغا رضا ، ایم ڈبلیوایم بلوچستان اور کوئٹہ ڈویژن کے ساتھیوں کو مبارک باد پیش کرتے ہیں، آغا رضا ایک محنتی ، قابل ، فرض شناس او رتعلیم یافتہ رکن اسمبلی ہونے کی حیثیت سے وزارت قانون سمیت دیگر چار اہم وزارتوں کے قلمدان سنبھالنے کی اہلیت رکھتے ہیں، انہوں نے اپنے حلقے کی عوام کی گذشتہ چار سالوں میں جو مثالی خدمت کی ہے وہ پورے صوبے کیلئے قابل تقلید ہے، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے سیکریٹری جنرل علامہ محمد صادق جعفری، ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ مبشر حسن، پولیٹیکل سیکریٹری میر تقی ظفر، سیکریٹری اطلاعات احسن عباس رضوی، سیکریٹری وحدت یوتھ کاظم عباس، سیکریٹری خیر العمل ٹرسٹ زین رضوی، سیکریٹری تنظیم سازی زیشان حیدر، سیکریٹری مالیات فاران رضوی ،سیکریٹری شماریات سبط اصغر، سیکریٹری روابط عباس اشرف ودیگر نے کراچی ڈویژن کی شوریٰ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

رہنمائوں نے مزید کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ ایک ممبر اسمبلی کی طاقت سے ہم نے بلوچستان میں اہم سیاسی کردار ادا کیا ہے ، ہمارے ممبر اسمبلی آغا رضا کی قابلیت ، صلاحیت اور عوامی خدمت کے جذبے کی بدولت نومنتخب وزیر اعلیٰ عبد القدوس بزنجو نے انہیں وزارت قانون سمیت چار اہم قلمدان سپرد کیئے ہیں،انشاءاللہ بلوچستان میں ن لیگ کے کرپٹ وزیر اعلیٰ کی چھٹی کے بعد پنجاب کے ظالم اعلیٰ کی چھٹی قریب ہے،میٹروبس ، اورنج لائن ٹرین اور دیگر منصوبوں میں شہباز شریف حکومت نے بھی قومی خزانے کو اربوں روپے کا چونا لگایا ہے، صوبے میں کرپشن اور سانحہ ماڈل ٹائون کے مقتولوں کے قتل کے جرم میں شہباز شریف اور ان کے حواریوں کو جلد سلاخوں کے پیچھے جانا ہوگا۔

وحدت نیوز(کراچی) پیام کربلا وبیداری امت مہم کے سلسلے میں سالانہ مجلس عزا بسلسلہ شہادت حضرت سکینہ بنت الحسین ؑ  مجلس وحدت مسلمین ضلع ملیر اور خانوادہ عارف رضا زیدی کے زیر اہتمام مسجد وامام بارگاہ امامیہ ایف سائوتھ جعفرطیارسوسائٹی میں منعقد ہوئی جس میں حرم مطہرامام حسین ؑ،امام رضا ؑ اور بی بی معصومہ قمؑ کے گنبد کے پرچموں کی زیارت کروائی گئی،مجلس عزا میں نظامت کے فرائض سید احسن عباس رضوی نے انجام دیئے جبکہ تلاوت حدیث کساءقاری ساجدنے کی ، سوزخوانی نسیم زیدی وبرادران نے کی ، سلام احسن مہدی، محمد عارف نے پیش کیاجبکہ مجلس عزا سے خطاب ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ترجمان علامہ مختاراحمد امامی نے کیااور سکیورٹی کے فرائض وحدت اسکائوٹس نے انجام دیئے۔

وحدت نیوز(کراچی) ملت تشیع کے علما و اکابرین کی شہریت کی معطلی اور بے جا گرفتاریوں کے خلاف مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر ملک بھرکی طرح شہر قائد میں جامع مسجد حسینی ملیر اور جامع مسجد خوجہ اثنا عشری کھارادر میںاحتجاجی مظاہرہ کیا گیا احتجاجی مظاہرے سے مرکزی رہنما مولانا باقر زیدی ،علامہ مبشر حسن ،غلام محمدفاضلی، احسن عباس رضوی ،مولانا نشان حیدر ،میثم عابدی تقی ظٖفر و دیگر رہنما وں نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سانحہ کوئٹہ نے ایک بار پھر پوری قوم کو سوگوار کر دیا ہے۔یہ المناک واقعہ حکومت اور ریاستی اداروں کی ناکامی کو ظاہر کررہا ہے۔دہشت گرد مختلف چیک پوسٹوں سے گزر کر اپنے ہدف تک پہنچے ہیں ۔بالکل اسی طرح ڈیرہ اسماعیل خان جیل میں بھی دہشت گردوں نے کاروائی کی تھی۔جب تک حکومت دوغلی پالیسی کو ترک نہیں کرتی تب تک دہشت گردی کے عفریت سے چھٹکارا ممکن نہیں۔سانحہ اے پی ایس کے بعد قوم پُر امید تھی کہ اب دہشت گردی کی بیخ کنی میں کوئی کسر نہیں چھوڑی جائے گی اور نیشنل ایکشن پلان کے تمام نکات پر مکمل طور پر عمل درآمد ہو گا لیکن بدقسمتی سے نیپ کا رُخ دہشت گرد عناصر کی طرف کرنے کی بجائے محب وطن افراد کی طرف موڑ دیا گیا۔کالعدم جماعتوں کے خلا ف فیصلہ کن اقدامات کرنے کی بجائے ان کو لچک دی جا رہی ہے۔دہشت گرد تنظیموں کے سربراہاں کی کھلے عام حکومتی وزراء سے ملاقاتیں نیشنل ایکشن پلان کی دھجیاں اڑانے کا منہ بولتا ثبوت ہے۔حکومت کی طرف سے ان ملک دشمن عناصر کا نام شیڈول فور سے نکالے جانے کی یقین دہانی کونیشنل ایکشن پلان کی ناکامی کے علاوہ کوئی دوسرا نام نہیں دیا جا سکتا۔انہوں نے کہا ہمارے لوگوں کو انتقام کانشانہ بنایا جا رہا ہے۔حکومتی ادارے ان افراد کی پکڑ دھکڑ میں مصروف ہیں جن کا ماضی حال بالکل شفاف ہے۔وہ کسی غیر قانونی سرگرمی میں کبھی ملوث نہیں رہے۔اگر وہ مجرم ہیں تو انہیں طویل عرصہ تک ٹارچر سیلوں میں غائب رکھنے کے غیر قانونی  اقدام کی بجائے عدالتوں میں کیوں پیش نہیں کیا جاتا۔ایک  طرف ہمیں دہشت گردی کا نشانہ بنایا جاتا ہے تو دوسری طرف حکومت کی بیلنسنگ پالیسی کے ذریعے ملت جعفریہ  پر ستم توڑے جا رہے ہیں۔ریاستی اداروں کی یہ نا انصافیاں قابل مذمت ہیں۔ہم ان حکومتی مظالم کے خلاف جمعہ کے روز ملک بھر میں احتجاج کریں گے۔ہم ایک بار پھر واضح کرنا چاہتے ہیں کہ مکتب تشیع کا کبھی دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں رہا ہے، ہمارا کوئی بندہ آج تک اپنی مادر وطن کے خلاف استعمال نہیں ہوا، لیکن افسوس کہ حکومت ہمارے پرامن لوگوں کو گرفتار کررہی ہے جن کا دہشتگردی سے دور دور تک کوئی واسطہ نہیں ہے، ہمارے بزرگ علماء تک کو شیڈول فور میں ڈال دیا گیا ہے اور ان کے شہریت منسوخ کرکے اکاونٹس تک منجمد کردئیے گئے ہیں حکومت کے ان اقدام کی سخت مذمت کرتے ہیں۔ مجلس وحدت مسلمین کی شوریٰ عالی کے رکن علامہ امین شہیدی جو اس وقت ملی یکجہتی کونسل کے نائب صدر بھی ہیں ، اسی طرح علامہ مقصود ڈومکی جو مجلس وحدت سندھ کے سیکرٹری جنرل اور بلوچستان میں ملی یکجہتی کونسل کے صوبائی سیکرٹری جنرل ہیں ان کے نام بھی بیلنس پالیسی کے تحت شیڈول فور میں ڈال گیا ہے۔اسی طرح مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے رہنما علامہ شیخ نئیر عباس، بزرگ عالم دین شیخ محسن علی نجفی جن کی ملت کیلئے بے پناہ خدمات ہیں اور سماجی شخصیت ہیں، ان سمیت دو سو زائد بیگناہ افراد کو شیڈول فور میںڈال گیا ہے۔عزاداری ہمارا آئینی و قانونی حق ہے۔ہم تحفظ فراہم کرنا

حکومت کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ ہم پاکستان کے اندر آئین کی عملداری پر یقین رکھتے ہیں۔کبھی کسی مارشل لاکا ساتھ نہیں دیا جائے گا۔کسی بھی غیر آئینی و غیر قانونی اقدام کے مقابلے میں ہم کھڑے رہیں گے۔سپریم کورٹ،ایف بی آر،نیب،الیکشن کمیشن اور ایف آئی اے سمیت دیگر مقتدر اداروں کو بھی اپنی ذمہ داریاں پوری کرنا ہوں گی تاکہ ملک بحرانوں کا شکار نہ ہو۔نا اہل حکمرانوں کی بدولت اس ملک میں اختیارات کی جنگ جاری ہے۔طاقتور سیاسی حکومت ہی ملک کے حالات کو ٹھیک کر سکتی ہے۔مارشل لا سے ملک برباد ہوا ہے ٹھیک نہیں ہوا۔ہم آئینی ،سیاسی اور جمہوری حکومت کے حامی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنی ہم خیال جماعتوں سے بھی رابطے میں ہیں۔ حکومت  اپنا قبلہ درست کرلے۔ ہم کرپشن کے خلاف عمران خان کے احتجاج کو جائز سمجھتے ہیں، آئینی و قانونی حق سے کسی کو محروم نہیں کیا جاسکتا،حکمران کسی احتجاج کو طاقت کے زور پر کچلنے کی پالیسی سے گریز کریں۔ حکمرانوں نے کرپشن کے ریکارڈز قائم ہیں جن سے پوچھنے والا کوئی نہیں۔ اگر وزیر اعظم بے گناہ ہیں تو پانامہ لیکس کی تحقیقات سے کیوں گھبرا رہے ہیں کئی ماہ گزر گئے ہیں لیکن تحقیقات کرنے کے بجائے مٹی پاو کی پالیسی اپنائی جارہی ہے۔ایک واضح کرتے ہیں کہ مجلس وحدت مسلمین کسی غیرآئینی اقدام کا حصہ نہیں بنے گی بلکہ اس کی مخالف کرے گی۔ہم تمام اپوزیشن جماعتوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کرپشن کے ناسو کے خاتمے کیلئے یک نکاتی ایجنڈے پر ایک ہوں تاکہ اس ملک کو کرپشن سے محفوظ بنایا جاسکے۔ دہشتگردی کی ایک وجہ کرپشن بھی ہے۔ ریاستی اداروں کو حکومت کے تابع ہونے کے بجائے آزاد کام کرنا چاہیئے۔

وحدت نیوز (کراچی) گذشتہ ایک ہفتے سے نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے سامنے شیعہ ٹارگٹ کلنگ اور ریاستی اداروں کی مجرمانہ خاموشی کے خلاف جاری سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کی بھوک ہڑتال سے اظہار یکجہتی کیلئے ایم ڈبلیوایم ضلع ملیر کے تحت اسٹارگیٹ کراچی پر امن احتجاجی مظاہرہ اور اور شہداء کی یاد میں چراغاں کیا گیا، اس موقع خواتین ،مرد اور بچوں کی بڑی تعداد موجود تھی جنہوں نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر شیعہ نسل کشی کے خلاف اور علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کے حق میں نعرے درج تھے، مقررین سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی رہنما سید علی حسین نقوی ،مولانا نشان حیدر ،آصف صفوی اور سید احسن عباس رضوی نے کہا کہ حکمرانوں کے کیلئے شرم کامقام ہے کہ پاکستان کی ایک بڑی سیاسی ومذہبی جماعت کا سربراہ اپنی قوم کے اکابرین کے قتل عام میں ملوث دہشت گردوں کے خلاف کاروائی اور اہل خانہ کو انصاف دلوانے کیلئے ایک ہفتے سے بھوک ہڑتال پر بیٹھا ہوا ہے، ریاستی اداروں کی نااہلی کا عالم یہ ہے کہ وہ کسی بڑے حادثے یا ملک گیر احتجاجی تحریک کے انتظار میں بیٹھے ہیں اور علامہ راجہ ناصرعباس کے 10جائز مطالبات کی منظوری میں لیت ولعل کا مظاہرہ کررہے ہیں ۔

مقررین نے کہا کہ ملت تشیع نے ہمیشہ حب الوطنی کا مظاہرہ کیا 23ہزار سے زائد پیاروں کے جنازے اٹھانے کے باوجود کسی ملک دشمن قوت کے آلۂ کار نہیں بنے اس کے باوجود ریاستی ادارے ہمیں انصاف فراہم کرنے سے قاصر ہیں ، وفاقی ، خیبرپختونخوا، پنجاب اور سندھ کی حکومت مسلسل ہماری نسل کشی پر خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے، پاراچنار میں ایف سی اہلکاروں نے نہتے شہریوں پر گالیاں چلائیں جو کہ نواسہ رسول ﷺ کی ولادت کے جشن میں مصروف تھے، ڈیرہ اسماعیل خان ملت تشیع کی مقتل گاہ بنا ہوا ہے لیکن میاں نواز شریف اور عمران خان صاحب کو اقتدار کی رسہ کشی کی فرصت نہیں ،ایم ڈبلیوایم رہنماؤں نے چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف سے مطالبہ کیا کہ ملت جعفریہ کاحکمرانوں سے اعتبار اٹھ چکا ہے اور وہ شیعہ قتل عام پرانصاف کے حصول کیلئے ان کی جانب دیکھ رہی ہے ، ہمارے قائد ضعیفی، ناتوانی اور بیماری کی حالت میں انصاف کے حصول کیلئے بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہیں لیکن کسی ریاستی ادارے کو یہ توفیق نہیں کہ وہ ان کی شکایت سن سکے ۔

وحدت نیوز (کراچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی، ضلع ملیرکا سال 16-2013کے تنظیمی دورکا آخری ضلعی شوری کا اجلاس زیرصدارت سیکریٹری جنرل سید احسن عباس رضوی وحدت ہائوس جعفرطیارمیں  منعقد ہوا، اجلاس میں اراکین ضلعی کابینہ سمیت تمام یونٹس کے سیکریٹری اور ڈپٹی سیکریٹری جنرل صاحبان نے شرکت کی،اجلاس میں صوبائی اور ڈویژنل کنونشن سمیت ضلعی کنونشن میں کے انعقاد پر تفصیلی گفتگو ہوئی اور باہمی اتفاق رائے سے  15مئی کو ضلعی کنونشن کے انعقاد کا اعلان کردیا گیا، کنونشن ضلعی ہیڈ کوارٹرجعفرطیار سوسائٹی میں منعقد ہوگاجس میں مرکزی ، صوبائی اور ڈویژنل قائدین شرکت کریں گے، جبکہ اراکین شوریٰ خفیہ رائے شماری کے ذریعے آئندہ تین سال کیلئے مجلس وحدت مسلمین ضلع ملیرکے نئےسیکریٹری جنرل کا انتخاب عمل میں لائیں گے۔

وحدت نیوز (کراچی) وحدت اسکائوٹس پاکستان کے مرکزی چیف برادرتنصیرحیدرشہیدی نے وحدت ہائوس جعفرطیارسوسائٹی میں ضلع ملیر کے یوتھ اور اسکائوٹس مسئولین کے ساتھ ملاقات کی ، اس نشست میں مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے سیکریٹری یوتھ سید زیشان حیدرسمیت ، اسکائوٹ انچارچ لطف علی،ضلعی سیکریٹری جنرل احسن عباس ، ضلعی اسکائوٹ انچارچ حامد حسین سمیت مختلف یونٹس سے  یوتھ اور اسکائوٹس مسئولین شریک تھے، تنصیر شہیدی نے وحدت اسکائوٹ کی کارکردگی اور آئندہ کے اہداف کے حوالے سے شرکاءکو تفصیلی طورپر آگاہ کیا ۔

Page 1 of 8

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree