وحدت نیوز(اوورسیز نیوز آن لائن) علامہ تصور حسین نقوی اور ان کی اہلیہ پر قاتلانہ حملہ کرنے والوں کا سراغ نہ مل سکا، انتظامیہ ریاست کی سالمیت پر حملہ کرنے والوں کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ۔

تفصیلات کے مطابق سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی  اور ان کی اہلیہ پر 15فروری کو نامعلوم افراد نے قاتلانہ حملہ کیا ۔ ملزمان دن دیہاڑے کاروائی کر کے غائب ہو گئے ، انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے دیگر ادارے انہیں گرفتار کرنے میں ناکام رہے ۔ واقعہ کے بعد آزادکشمیر بھر سمیت پاکستان میں بھی قاتلوں کی گرفتاری کیلئے مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والوں نے احتجاج کیا۔انتظامیہ کی یقین دہانیوں کے بعد احتجاج کا سلسلہ تو رک گیا مگر تا حال کوئی تسلی بخش کاروائی نہ ہو سکی ۔انتظامیہ کی نا اہلی پر آزادکشمیر کے عوام میں شدید بے چینی پائی گئی ہے ۔

ایک شہری نے اوورسیز نیوز آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر علامہ تصور حسین نقوی الجوادی جیسی بڑی شخصیت پر حملہ کرنے والے گرفتار نہ ہو سکے اور دن کی روشنی میں پولیس و دیگر اداروں کی نظروں سے اوجھل ہو گئے تو عام شہریوں کا کیا بنے گا ۔ انتظامیہ کو ہوش کے ناخن لینے ہونگے ، اس واقعہ کو معمولی نہ سمجھا جائے، ریاست کے امن کو پارہ پارہ کرنے کی مذموم سازش کو بے نقاب کرنے کی ضرورت ہے ، حملہ آور اور ان کے آلہ کار اگر قانون کی گرفت میں نہیں آتے تو ایسے مزید واقعات رونما ہو سکتے ہیں ۔

یاد رہے کہ علامہ تصور حسین نقوی الجوادی اور ان کی اہلیہ پر 15فروری کو دن گیارہ بجے نا معلوم افراد نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں علامہ تصور جوادی اور ا نکی اہلیہ زخمی ہو گئے ۔ جنہیں زخمی حالت میں سی ایم ایچ مظفرآباد منتقل کیا گیا ۔ بعد ازاں علامہ تصور جوادی کو اسلام آباد سی ایم ایچ منتقل کر دیا گیا تھا ۔چند روز قبل انہیں واپس مظفرآباد گھر منتقل کیا گیا ۔علامہ تصور جوادی تیزی سے روبہ صحت ہو رہے ہیں ۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ سید مبارک علی موسوی کا صوبائی کابینہ کے اجلاس سے خطاب میں کہنا تھا کہ اسلام آباد پریڈ گراؤنڈ میں کامیاب تاریخی "مہدی برحق کانفرنس" کا انعقاد ہمارے جانباز اور نڈر کارکنان کی انتھک محنت اور خداوند متعال کے خاص لطف و کرم کا نتیجہ ہے، ہم اس تاریخی کانفرنس کی انعقاد پر قائد وحدت علامہ راجہ ناصر عباس اور جانثار کارکنان کو مبارکباد پیش کرتے ہیں، سنٹرل پنجاب سے ہزاروں مرد و خواتین نے موسم اور سفر کی صعوبتوں کو بالائے طاق رکھ کر شرکت کرکے مجلس وحدت مسلمین کے قائدین اور شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی سے اپنے والہانہ محبت و عقیدت کا اظہار کیا، ان شاء اللہ ہم ارض پاک سے ملک دشمن دہشتگردوں اور کرپٹ مافیا کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین کا یہ منشور ہے کہ ہم ہر ظالم و جابر کیخلاف آہنی دیوار اور ہر مظلوم کے دست بازو بنیں گے، ہم اپنے شہداء ارض پاک کے پاکیزہ لہو کو رائیگاں نہیں جانے دینگے۔

انہوں نے کہا ہمارے محبوب قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی کی شہادت کا سبب حب الوطنی اور مسلم امہ کے درمیان وحدت کا پیغام عام کرنا تھا، پاکستان میں ملت تشیع کے قتل عام کا اصل مطلب یہ ہے کہ وہ اس ملک کے فطری دفاع اور دفاعی فرنٹ لائن کو ختم کرنا چاہتے ہیں، لیکن یہ ان کی خام خیالی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چودہ سو سال سے ہمارا قتل عام جاری ہے لیکن ہم نے ظالموں اور جابروں کے سامنے اپنے سر جھکانے سے سر کٹانے کو ترجیح دی ہے، ہمارا یہ ایمان ہے کہ شہادت ہمارا ورثہ ہے جو ہماری ماوُں نے ہمیں دودھ میں پلایا ہے، وطن عزیز کی سلامتی و دفاع کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ دینا ہمارے ایمان کا حصہ ہے۔ اجلاس میں پروفیسر ڈاکٹر افتخار نقوی، علامہ ملازم نقوی، علامہ حسن ہمدانی، سید حسن کاظمی، سید حسین زیدی، رائے ناصر علی، رانا ماجد علی سمیت دیگر رہنماؤں اور کارکنان کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ قانون و انصاف کی بالادستی کے بغیر ملک میں امن و امان کاحقیقی قیام ممکن نہیں۔اختیارات اور طاقت کے ناجائز استعمال نے عدم تحفظ کے احساس اور بدامنی کو تقویت دی ہے۔ملک کے ہر فرد کو انصاف تک رسائی ہونی چاہیے۔دہشت گردی کے واقعات میں ملوث تمام مجرموں کو بلاتخصیص کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔انہوں نے کہا حکمرانوں نے سانحہ ماڈل ٹاؤں کی شکل میں ریاستی دہشت گردی کی بدترین مثال رقم کی ہے۔پاکستان کی تاریخ میں اس طرح کے ریاستی جبر کی اس سے قبل مثال نہیں ملتی۔سانحہ ماڈل ٹاؤن میں ملوث تمام مجرمان کو قانون کے مطابق سزاملنا عدل و انصاف کا تقاضہ ہے۔انصاف کی فراہمی میں تاخیرمجرمان کے ساتھ رعایت سمجھی جاتی ہے۔ماڈل ٹاؤن شہدا کے لواحقین انصاف کے منتظر ہیں۔جسٹس باقر نجفی رپورٹ کو منظر عام پر لایا جائے تاکہ عوام حقائق سے آگاہ ہوں۔ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مجرمان کوسزا ملنا ملک میں قانون و انصاف کی حاکمیت کا نقارہ سمجھا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین انصاف کے حصول کے لیے عوامی تحریک کی جدوجہد کی حمایت جاری رکھے گی۔ 2018 کے انتخابات میں مسلم لیگ نون کی بدترین شکست واضح طور پر دکھائی دے رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین قومی انتخابات میں بھرپور حصہ لے گی۔ مظلومین کی حمایت اور ظالموں کی مخالفت ہمارے تنظیمی منشور کا حصہ ہے۔الیکشن میں ظالموں کے ساتھ ہمارا اتحاد کسی بھی صورت ممکن نہیں۔

وحدت نیوز(لاہور) کالعدم شدت پسند وں کو نادیدہ قوتیں پھر سے متحرک کرنے میں مصروف ہیں،نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد صرف بیانات تک محدود ہوگئے ہیں،دہشتگردوں کے سرپرستوں ہاتھ ڈالنے سے حکمران اب تک قاصرہیں،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صدر علامہ مبارک موسوی نے صوبائی سیکرٹریٹ میں سنٹرل پنجاب کے وفود سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ پنجاب میں عزاداری سید شہداء و مجالس عزاء کے لئے انتظامیہ نت نئے حربوں کے تحت ملت تشیع کو ہراساں کر رہی ہیں،مجالس و محافل ہمارا آئینی حق ہے اس سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے،حکومت ایک طرف دہشتگردوں کو ٹی وی شوز میں لا کر ان کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے تو دوسری طرف دہشتگردی سے متاثرہ فریق پر زمین تنگ کر رہی ہے یہ کہا ں کا انصاف ہے،پنجاب بھر سے ہمار درجنوں پرامن علماء اور جوان تا حال لاپتہ ہیں،ہمارے ہزاروں شہداء کے لواحقین اب بھی انصاف کے منتظر ہیں،ہمارا جرم حب الوطنی اور پرامن رہنا ہے،ہم نے ہزاروں شہداء کی بے رحمانہ قتل عام کے بعد بھی ملکی میں امن عامہ کو خراب ہونے نہیں دیا،اس کا صلہ ہمیں سیاسی انتقامی کاروئیوں کی صورت میں دیا گیا،انہوں کہا کہ دشمن ہمیں تقسیم کرکے ایک نئے بحران کی طرف دھکیلنے کی سازش میں ہے،ایسے میں ہماری ذمہ داری ہے کہ متحد ہو کر دشمن کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملائیں،اور مادروطن کو لاحق خطرات کا دانشمندی کیساتھ مقابلہ کریں۔

وحدت نیوز(ڈی آئی خان) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی نے ایم ڈبلیوایم ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کے زیر اہتمام کوٹلی امام حسین ؑ میں منعقدہ برسی شہدائے ڈیرہ اسماعیل خان کے سلسلے میں عظیم الشان  اجتماع  منعقد کیا گیا ،اس موقع پر شہدائے ڈیرہ اسماعیل خان کے اہل خانہ سمیت جوانوں ، بزرگوں اور خواتین کی بڑی تعداد شریک تھی، اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سید ناصرعباس شیرازی  نے کہا کہ ڈیرہ اسماعیل خان کے عوام تاحال حکومت کی جانب سے انصاف کے منتظر ہیں  ، درجنوں دہشت گردی کے واقعات میں شہید ہونے والے سینکڑوں شہریوں کے ورثاءآج بھی اپنے پیاروں کے قاتلوں کو سولی چڑھتا دیکھنے کے منتظر ہیں ، ایک جانب ہماری نسل کشی جاری ہے تو دوسری جانب ہمارے ہی بے گناہ جوانوں کو ماورائے عدالت اغوا کیا جارہاہے، جو کہ سراسر ریاستی جبر اور نا انصافی ہے، انہوں نے کہا کہ بیرونی مداخلت اس وقت وطن عزیز کیلئے سنگین مسئلہ بن چکا ہے اور اس کا سب سے زیادہ شکار صوبہ خیبر  پختونخوا ہے جہاں ایک مذہبی جماعت ایک فرقہ پرست اسلامی ملک کے حکومتی وزراء کو عوامی اجتماعات میں دعوت دے کر قومی سلامتی کو دائو پر لگا رہی ہے ،وہ بھی ایسے ملک کے وزراء جن کے ہاں خود مذہبی اجتماعات کے انعقاد پر سخت پابندی ہے ، جو دوسرے ممالک میں باخوشی سیاسی اجتماعات میں فخریہ شرکت کرتے ہیں ، ریاستی ادارے دوغلی پالیسی ترک کریں اگر اس انتہا پسند ملک کے وزراءکا ایک مذہبی جماعت کے اجتماعات میں شرکت کرنا قانونی اور آئینی اقدام ہے تو پھر عالم اسلام کے حقیقی ہیروز امام خمینی ؒ،رہبر معظم امام خامنہ ای اور سید حسن نصر اللہ کے امت مسلمہ کی ترقی اور خدمات پر مبنی  کارہائے نمایاں بیان کرنے پر بھی تکلیف نہیں ہو نی چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کوٹلی امام حسین ؑ کی وقف املاک امام حسین ؑ کی ملکیت ہے، جس کی جانب اٹھنے والی ہر گندہ آنکھ پھوڑ ڈالی جائے گی، ہم کسی صورت کوٹلی امام حسین ؑ کی زمین پر محکمہ اوفات کے  غیر قانونی قبضے کی کوشش کو کسی صورت کامیاب نہیں ہو نے دیں گے، صوبائی حکومت ہو ش کے ناخن لے اور متعلقہ قابض افسران کو لگام دے۔

وحدت نیوز(رتو ڈیرو) سانحہ سہون شریف کے متاثرین کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ سانحہ سہون شریف کے متاثرین کو انصاف فراہم نہیں کیا گیا، سانحہ کو ستر دن گذر گئے، نہ وارثان شہداء کو امدادی رقم ملی اور نہ ہی زخمیوں کو امداد دی گئی۔ سانحہ کے زخمی آج بھی علاج کے لئے دربدر ہیں، سندھ حکومت کی نا اہلی کے سبب سندھ میں دہشت گردی کی وارداتیں روز کا معمول بن گئی ہیں۔ مجلس وحدت مسلمین پہلے دن سے آج تک سانحہ سہون شریف کے متاثرین کے ساتھ ہے۔ آئندہ بھی ہر محاذ پر متاثرین کی آواز بلند کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ 28 اپریل زائرین کے مسائل اور دہشت گردی کے خلاف یوم احتجاج ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ زائرین کے لئے جان بوجھ کر مشکلات کھڑی کی گئی ہیں، کئی کئی روز تک مرد، خواتین، بزرگ اور بچوں کو بارڈر پر روکا جاتا ہے، آخر کیوں۔؟ محکمہ حج و اوقاف کا شعبہ زائرین کیوں زائرین کے مسائل سے لاتعلق اور غیر فعال ہے۔ آخر کس قانون کے تحت بلوچستان بارڈر پر زائرین کو روک کر این او سی طلب کیا جاتا ہے۔؟
انہوں نے مطالبہ کیا کہ نواز لیگ کی وفاقی اور صوبائی حکومت زائرین کے مسائل فی الفور حل کرے۔

Page 1 of 3

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree