وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری سید ناصر شیرازی نے بھارتی ہائی کمیشن کے سفارت کاروں کے پاکستان کے اندر تخریبی کاروائیوں میں ملوث ہونے پر شدید ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان بارہا سفارتی آداب کی سنگین خلاف ورزیوں کا مرتکب ہو چکا ہے۔وطن عزیز میں ہونے والی دہشت گردی کے مختلف واقعات میں بھارتی سفیروں کا براہ راست ملوث ہونا ایک ناقابل معافی جرم ہے۔بھارت وطن عزیز کی سلامتی و استحکام کا سب سے بڑا دشمن ہے جس نے ہمیشہ ہمیں نقصان پہنچایا اور عالمی سطح پر پاکستان کا امیج خراب کرنے کے لیے بے جا پروپیگنڈہ کیا۔ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث را کے ان ایجنٹوں کو ناپسندیدہ قرار دے کرمحض ملک بدر کر دینا ملک و قوم کے ساتھ زیادتی ہو گی۔ان عناصر کوبلا تاخیر تحقیقاتی ایجنسیوں کے حوالے کیا جانا چاہیے تاکہ ان کے باقی نیٹ ورک کا بھی مکمل طور پر پتا لگایا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھارتی جاسوس کلبھوشن یا دیوکے معاملے پر بھی حکمرانوں نے ملک و قوم کے مفاد کو مقدم رکھنے کی بجائے انڈیا سے دوستی کا حق ادا کیا۔بھارت کے معاملے میں ہمارے حکمرانوں کا عاجزانہ رویہ پوری قوم کی توہین ہے ۔ پاکستان کے ساتھ بھارت کی ازلی دشمنی کسی سے پوشیدہ نہیں۔اب لیت ولعل کے بجائے دو ٹوک موقف اختیار کرنے کا وقت ہے۔اگر حکومت ملک میں حقیقی امن کی خواہاں ہے تو پھر ان تمام نیٹ ورکس اور مراکزکا خاتمہ کرنا ہو گا جو دہشت گردی کے محرک بنتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جاری دہشت گردی میں ملوث کالعدم مذہبی جماعتوں اور را کے درمیان تعلقات کے شواہد ماضی میں بھی منظر عام پر آچکے ہیں۔لیکن بدقسمتی سے ان جماعتوں کے خلاف کاروائی کرنے کی بجائے ان کے رہنماؤں سے حکومتی وزرا تعلقات استوار کرنے میں مگن رہے جو کہ دہشت گردی کے خاتمے میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔دہشت گردی کے عفریت سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لیے ملک کی تمام محب وطن سیاسی و مذہبی جماعتوں کو مشترکہ کوشش کرنا ہوں گی اور اس سلسلے میں کسی تعلق، دباؤ یا مصلحت کو رکاوٹ نہ بننے دینے کا عزم انتہائی ضروری ہے۔

دریں اثنا سید ناصر شیرازی نے بلوچستان کے علاقے گڈانی میں ناکارہ جہاز کے اندر آگ لگانے سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر رنج و غم کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ آگ پر تاحال قابو نہ پایا جانا متعلقہ حکام کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔انہوں نے بلوچستا ن اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ آگ پر فوری قابو پانے کے لیے جدید مشینری اور ہیلی کاپٹرز اور دیگر ضروری آلات کی فراہمی میں کوئی تاخیر نہ برتی جائے تا کہ مزید جانی نقصان کے خدشات کو کم کیا جا سکے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) ن لیگی وزراء آئے روز عسکری اداروں کی کردار کشی پر مبنی بیانات دے کر ملک کو عدم استحکام کا شکار کررہے ہیں ، عسکری ادارے اور اعلیٰ عدلیہ وفاقی وزراءکی ہرزہ سرائیوں کا فوری نوٹس لیں ، ان خیالات کا ظہار مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری امور سیاسیات سید ناصر عباس شیرازی نے دورہ کراچی کے موقع پر نمائندہ وحدت نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ان کا کہا تھا کہ مسلم لیگ ن کے سینیٹر مشاہد اللہ خان کا عسکری حکام اور ادارے کے خلاف حقیقت کے منافی بیان قابل مزمت ہے، ن لیگ کے متعدد وزراءریاستی اداروں کی کردار کشی پر مبنی بیانات دیتے رہے ہیں جس سے قومی سلامتی اور استحکام کو شدید خطرات لاحق ہوئے ہیں ، دھرنا تحریک کو فوجی حمایت سے منصوب کرنے کی سازش ن لیگی حکومت کا مخفی ایجنڈا ہے ، جسے اعلیٰ قیادت کی بھر پو رحمایت حاصل ہے، انہوں نے کہا کے پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت نے کرپشن اور لوٹ کھسوٹ کی اعلیٰ مثالیں قائم کیں ہیں ، باریاں بدل بدل کر عوام کو لوٹنے والے حکمرانوں نے عوام کا جینا محال کردیاہے ، انہوں نے کے الیکٹرک کی جانب سے بجلی کے نرخوں میں ہوشربہ اضافے کو عوام دشمن اقدام قرار دیا ، انہوں نے کہا کہ لوڈشیڈنگ ، غربت اور بے روزگاری سے تنگ عوام پر کے الیکٹرک انتظامیہ کی جانب سے قیمتوں میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا، اگر کے الیکٹرک انتظامیہ نے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ واپس نہ لیا تو ایم ڈبلیوایم بھر پور احتجاج کرکے گی۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree