وحدت نیوز(اسلام آباد)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ ملک سے لوٹا گیا قومی سرمایہ واپس لایا جائے، اپوزیشن اور حکمران جماعت ایک دوسرے پر الزامات کی بوچھاڑ کرکے اپنے گناہ چھپانے کی کوشش میں مصروف ہیں، پوری قوم لوٹی ہوئی رقم کی ایک ایک پائی کا تقاضا کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سوئس اکاؤنٹس ہوں، لندن فلیٹس یا پھر آف شور کمپنیاں قوم کو ایک ایک پیسے کا حساب دیا جائے، اقتدار کے حصول کے لئے تیری باری میری  باری کا کھیل اب مزید نہیں چل سکتا، عوام نے تمام چہروں کو اچھی طرح پہچان لیا ہے، وفاق میں حکمرانوں اور سندھ کی صوبائی حکومت نے عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں کو محض تشہیراتی مہم تک محدود رکھا، سندھ میں حکومتی اداروں میں عملہ کی موجودگی کے باوجود صفائی کے ناکافی انتظامات سے تنگ آکر پرائیویٹ سطح سے صفائی کا آغاز کیا جانا حکومتی نااہلی کی بدترین مثال ہے۔

علامہ ناصر عاس نے کہا کہ تھنک ٹینک انسٹی ٹیوٹ فار پالیسی ریفارمز کی معاشی رپورٹ چشم کشا ہے، جس کے مطابق 2 کروڑ بیس لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں، رپورٹ میں معاشی پالیسیوں کو ناقص اور معاشی ترقی کے برعکس قرار دیا گیا، انفراسٹرکچر کے فقدان کے سبب نجی سرمایہ کاری نہ ہونے کے برابر ہے۔ علامہ ناصر عباس نے کہا کہ حکومت کے پاس پہلے دن سے کوئی پالیسی موجود نہیں، یہی وجہ ہے کہ تعلیم، صحت، توانائی، سرمایہ کاری اور بیروزگاری کے خاتمے سمیت کسی بھی میدان میں بہتری نہیں لائی جا سکی۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو الیکشن کا انتظار ہے اور عین الیکشن کے نزدیک عوامی منصوبوں کا اعلان کرکے عوام کو بےوقوف بنانے کی کوشش کی جاتی ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے ایم ڈبلیوایم سندھ کے صوبائی سیکرٹری تربیت مولانامحمد نقی حیدری کی بلاجواز گرفتاری کے خلاف شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ علماکی تضحیک کی کسی کو اجازت نہیں دی جا سکتی۔عظمت زہرا کانفرنس کے انعقاد کے اعلان پر ایک عالم دین کو گرفتار کیا جانا اختیارات کے نا جائز استعمال کی بدترین مثال ہے۔ اس پولیس گردی کا مقصد پورے ملک کے شیعان حیدر کرار کے جذبات کو مشتعل کرنا ہے۔ سندھ میں پیپلز پارٹی کے مقامی رہنما ذاتی رنجش کا بدلے اتارنے کے لیے پوری ملت تشیع کو اضطراب کا شکار کر رہے ہیں جو پیپلز پارٹی کی ساکھ کے لیے بھی سخت نقصان دہ ثابت ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ آئین پاکستان کی رو سے مذہبی آزادی ہر شخص کا بنیادی حق ہے۔ ہندؤں کی مذہبی تقریب ہولی اور مسیحی برادری کی کرسمس میں حکومتی شخصیات کی شرکت مذہبی آزادی کابین ثبوت ہے۔دختر رسول ﷺ کا یوم ولادت منانے سے روکنے والے ملک میں مذہبی عصبیت کے فروغ کی راہ ہموار کرنا چاہتے ہیں ۔اس ملک کو تفرقہ بازی سے پاک کرنا ہے تو ایسے متعصب افراد کے خلاف کاروائی کرنا ہو گی جو اختیارات کا غیر منصفانہ استعمال کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مولانا نقی حیدری ایک متقی اور باعمل عالم دین ہیں۔انہوں نے ہمیشہ اخوت و وحدت کا پرچار کیا۔انہیں دفعہ144کا روایتی ہتھیار استعمال کرتے ہوئے گرفتار کیا گیا ۔حکومت کے اس ناروا رویے کے خلاف مجلس وحدت مسلمین بھرپور احتجاج کرتی ہے۔پرامن اور محب وطن افراد کے خلاف یہ غیر مناسب اقدامات ناقابل برداشت ہیں۔پاکستان پیپلز پارٹی کے مقامی رہنمااور ان کے حواری ملت تشیع کو انتقامی نشانہ بنا کر اپنی سیاسی جماعت کی سیاسی حیثیت کو کمزور کرنا چاہتے ہیں۔ ۔انہوں نے کہا کہ رسول کریم ﷺ اور اہل بیت ؑ کے ایام منانے پر کوئی پابندی قبول نہیں کی جائے گی۔

وحدت نیوز (لاہور) مجلس وحدت مسلمین کے رہنمااسد عباس نقوی کا کہنا ہے کہ مشکل کی اس گھڑی میں جب فوج تکفیری دہشت گردوں کے خلاف ایک اہم آپریشن میں مصروف ہے ایسے میں فوج کے بارے میں بیانات دینانہایت قابل مذمت اور غیر ذمہ دارانہ فعل ہے۔ انہوں نے کہا کہ بینظیر بھٹو کے بعد آصف علی زرداری کا پیپلز پارٹی کی قیادت سنبھالنا اس جماعت کی سیاسی موت تھی۔ انہوں نے کہاکہ ایک ماڈل کی وجہ سے پیپلز پارٹی کی قیادت اس حد تک بوکھلاہٹ کا شکار ہے کہ اب پاکستان کے سب سے اہم ادارے فوج کے بار ے میں بھی غیر ذمہ دارانہ بیانات دیے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پوری قوم پاک کے شانہ بشانہ ہیں اور ایسے بیانات کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا،ن لیگ اور پیپلز پارٹی ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں،پیپلز پارٹی کے پانچ سالہ دور کے ریکارڈ کرپشن میں ن لیگ برابر کے شریک ہیں،پاکستان میں سیاست دان خوشحال اور عوام کسمپرسی کی زندگی گذارنے پر مجبور ہیں،ریاستی ادارے اگر ملک قوم سے مخلص ہیں تو پاکستان کے دولت لوٹنے والوں کا کڑا احتساب کیا جائے،تاکہ غریب اور کی حلال کی کمائی لوٹنے والوں کو اس کی سزا مل سکے۔

وحدت نیوز (نوشہروفیروز) مجلس وحدت مسلمین پاکستان ضلع نوشہرو فیروز کے سیکریٹری جنرل اعجاز علی ممنائی نے اپنے پریس بیان میں کہا ہے کہ کرپٹ سیاستدانوں نے ملک کو کنگال کر دیا ہے ان کی کرپشن کی وجہ سے ہم دنیا میں بدترین قوم کا اعزاز دیا جا رہا ہے جو ایک افسوس ناک بات ہے انہوں نے سابقہ صدر پاکستان آصف زرداری کی جانب سے پاک فوج پرزبان درازی پر اپنے موقف کا اظہار کرتے ہوۓ کہا کہ زرداری نے اپنے دور حکومت میں نااہل جنرلوں کے خلاف قدم کیوں نہیں اٹھایا اب جب پیپلز پارٹی کو بلوچستان خیبر پختوں خواہ اور گلگت بلتستان میں شکست ہوئی ہے تو وہ پاک فوج کے خلاف باتیں کر رہا ہے  انہوں نے پاک فوج اور سپریم کورٹ کو اپیل کی کہ تمام سیاستدانوں کو احتساب کے کٹہرے میں لیا جائے تاکہ ملک کو ان لٹیروں سے نجات مل سکے۔

وحدت نیوز (کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ دہشتگردی اور کرپشن دو ایسے عفریت ہیں جنہوں نے اس ملک کی بنیادوں کو ہلا کر رکھا دیا ہے۔ اقتصادی بدحالی ،عدم تحفظ، بد امنی اور بے یقینی جیسے عوامل انہی کی پیداوار ہیں ۔ان سے چھٹکارے کے لیے ریاستی اداروں اور سیاسی قائدین میں ہم آہنگی اور اخلاص بنیادی شرطیں ہے۔دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کی جو تائید کرے گا قوم اسے ہی اپنا مخلص اور خیر خواہ سمجھے گی۔وحدت ہاؤس کراچی سے جاری اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ سیاسی شخصیات کی طرف سے پاک افواج کو مورد الزام ٹہرانا درست نہیں بالخصوص ایسی کڑی صورتحال میں جب اسے ملک دشمن عناصر سے بیشتر داخلی محاذوں پر برسرپیکار ہونے کے ساتھ ساتھ پڑوسی ملک بھارت کی طرف سے جارحانے عزائم کا بھی سامنا ہے۔جبکہ حکمران طبقہ کی جانب سے ملکی دولت لوٹنے کا سلسلہ بتریج جاری ہے ۔قومی پیسوں کو دوسرے ملکوں میں منقل کیا جانا بڑے بڑے محلات بنانے کی حقیقت عوام کے سامنے آیاں ہیں ۔ملک کا ہر شہری وطن عزیز سے کرپشن و دہشت گردی کے مکمل خاتمے کا خواں ہے۔حکومت کی طرف سے بھی کرپشن کے خاتمے کے لیے آئے روز دعوے کیے جا رہے ہیں۔اس کی عملی صورت تب ہی واضح ہو گئی جب اُس قومی خزانے کو واپس لایا جائے گا جسے بااختیار شخصیات نے منی لانڈرنگ اور دیگر غیر قانونی ذرائعوں سے بیرون ممالک منتقل کیا ہے۔پوری قوم یہ چاہتی ہے کہ لوٹی ہورقم واپس لانے میں ریاستی ادارے اپنی ذمہ داریوں کا ادراک کرتے ہوئے موثر اقدامات کریں ۔اپنی کارگزاریوں پر پردہ ڈالنے کے لیے پاک فوج پر الزام دھرنا اور دھمکانا اوچھے اور نامناسب ہتکھنڈے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہمارے سیاستدانوں، جنرلوں اور بیورکریٹس کو چاہییے کہ وہ احتساب کے لیے خود کو عوام کے سامنے پیش کریں۔ کوئی بھی ایسا شخص دوسروں کے احتساب کے لیے آواز بلند کرنے کا اہل نہیں جس کا اپنا دامن کرپشن سمیت متعدد برائیوں سے آلودہ ہو۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) پاکستان پیپلز پارٹی نے سینیٹرفیصل رضا عابدی سے سینیٹ کی نشست سے استعفٰی طلب کرلیا ہے، سینیٹر فیصل رضا عابدی سے  پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل راجہ پرویز اشرف نے پارٹی قیادت کے حکم پر استعفٰی طلب کیا ہے۔ پیپلز پارٹی کے مطابق سینیٹر فیصل رضا عابدی سے سینیٹ کی نشست سے استعفٰی آئین پاکستان کے مخالف تقاریر اور  پارٹی پالیسی کے خلاف بیان بازی کرنے کی وجہ سے طلب کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے پارٹی قیادت کی ہدایت پر وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے سینیٹر فیصل رضا عابدی کو شوکاز نوٹس اور سات دن میں جواب طلب کیا تھا۔واضح رہے کہ آصف زرداری اور میاں نواز شریف کے درمیان ہو نے والی ایک اہم ملاقات کے بعد اچانک فیصل رضا عابدی سے سینٹ کی رکنیت سے استعفیٰ طلب کیا گیا کیوں کہ فیصل رضا عابدی حکومت اور طالبان کے درمیان جاری مذاکراتی مل کی کھل کر مخالفت کر رہے ہیں اور نواز لیگ کی حکومت کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہیں ،جب کہ آصف زرداری نے نواز شریف کو طالبان کے ساتھ مذاکرات میں پیپلز پارٹی کی مکمل حمایت کی یقین دہانی کروائی ہے ، لہذافیصل عابدی اور پارٹی قیادت کےدرمیان پالیسی میں واضح اختلاف فیصل عابدی سے استعفیٰ طلب کر نے کی وجہ ثابت ہوا۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree