وحدت نیوز (سکردو) عوامی ایکشن کمیٹی بلتستان کے سربراہ و مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل آغا علی رضوی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ سوشل میڈیا پہ دیامر سے منسوب خبر کی سختی سے تردید کرتا ہوں اور واضح کرنا چاہتا ہوں کہ گورنر گلگت بلتستان کے ساتھ کسی قسم کی ملاقات ہوئی ہے اور نہ ہی خطے کو کسی بھی حوالے سے تقسیم ہونے دیں گے۔ ہم گلگت بلتستان کی ایک ایک انچ زمین کی حفاظت کرکے دم لیں گے۔ میرے لیے دیامر ، ہنزہ، غذر اور بلتستان میں کوئی فرق نہیں ہے۔ پورے گلگت بلتستان کو میں اپنا گھر سمجھتا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ ادوار میں گلگت بلتستان کو تقسیم کرنے کی بات کی تو سب سے زیادہ ہم نے ہی اس پہ آواز بلند کی ہے جس کی تاریخ شاہد ہے۔ گلگت بلتستان کا ہر فرد خطے کا اور پاکستان کا محافظ و امین ہے۔ اس خطے کو ٹکرے کرنے کے خواب دیکھنے والوں کے خواب ٹکرے ٹکرے کرکے دم لیں گے۔

آغا علی رضوی نے کہا کہ عوام کسی قسم کے منفی پروپیگنڈے میں نہ آئیں اور اپنی صفوں میں اتحاد قائم کریں۔ چند عناصر گلگت بلتستان کے غیور عوام کو حقوق سے پیچھے ہٹانے کے لیے لسانیات، علاقائیت اور فرقہ واریت جیسی لعنت کا طوق گلے میں لٹکانا چاہتے ہیں۔جسے کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ گلگت بلتستان ایک اکائی کی صورت ہے اور ایک گھر کی مانند ہے اور ہر فرد آپس میں اخوت کے رشتے میں بندھے ہوئے ہیں۔ دیامر کے ڈیم متاثرین کا مسئلہ ہو یا سوست بارڈر پہ تاجرین کا مسئلہ،  بلتستان میں زمینوں کا مسئلہ ہویا کوئی اور مسئلہ جب تک ہماری جان میں جان ہے خطے میں ہونے والے ہر ظلم کے خلاف آواز بلند کرتے رہیں گے۔ہمیشہ سے دیامر کے مسائل کے حل کے لیے بلتستان کے علماء نے آواز بلند کی ہے اور بلتستا ن کے مسائل کے حل کے لیے دیامر کے علماء نے کردار ادا کیا ہے اور یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

وحدت نیوز(سکردو )  عوامی ایکشن کمیٹی گلگت  بلتستان کےچیئرمین مولانا سلطان رئیس نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے بائیس لاکھ عوام کی آواز اور عوامی ایکشن کمیٹی کے سینئر رہنما ء آغا علی رضوی کو شیڈول فور کے سلسلے میں ہراساں کرنے یا انہیں گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی تو کسی قسم کو سمجھوتہ نہیں ہوگا اور کھلی طور پر مزاحمت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ اداروں کو بھی یہ سوچنا چاہیے کہ جب ہم نے شیڈول فور کے خلاف عدالت سے رجوع کیا ہے اور پٹیشن دائر کیا ہوا ہے کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ گلگت  بلتستان میں شیڈول فور کا نفاذ غیر قانونی اور غیر آئینی عمل ہے۔اس غیر قانونی عمل کے خلاف جب ہم کورٹ گئے ہیں تو انہیں انہیں کورٹ کا احترام کرنا چاہیے ۔ مولانا سلطان رئیس نے کہا کہ اداروں کو عدالت اور عوامی جذبات کا احترام کرتے ہوئے اپنے ہاتھ محدود کرنا چاہیے اگر کسی قسم کی غلطی کی گئی تو انہیں اس چیز کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں شیڈول فور کو عوامی حقوق کے لیے آواز اٹھانے والوں کے خلاف استعمال کرنا انتہائی افسوسناک عمل ہے۔ فوری طور یہ سلسلہ رک جانا چاہیے۔

وحدت نیوز  (سکردو)  مرکزی امامیہ جامع مسجد اسکردو میں بلتستان کے علماء کا ایک غیر معمولی اجلاس حجت الاسلام شیخ محمد حسن جعفری کی سرپرستی میں ہوا، جس میں علمائے بلتستان کے نمائندہ وفد نے شرکت کی۔ اجلاس میں گلگت بلتستان میں عوامی حقوق اور اتحاد و وحدت کے لئے آواز بلند کرنے والے علماء بالخصوص آغا علی رضوی اور دیگر محب وطن شہریوں کو شیڈول فور میں ڈالنے کی بھرپور مذمت کی گئی۔ اجلاس میں کہا گیا کہ گلگت بلتستان میں امن و اتحاد کے قیام میں سب سے زیادہ کردار علماء کرام کا ہے۔ انہیں شیڈول فور میں ڈالنا علماء کی توہین اور ہتک عزت ہے۔ انہوں نے کہا کہ جی بی جیسے پرامن خطے میں شیڈول فور کا نفاذ بلاجواز ہے اور علماء کرام کو عوامی حقوق کے لئے آواز اٹھانے سے روکنے کی سازش ہے، جسے کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ علمائے بلتستان کے اجلاس کے آخر میں اہم قرارداد بھی منظور کی گئی۔

ذرائع کے مطابق اس قرارداد میں کہا گیا کہ گلگت بلتستان جیسے پرامن خطے میں شیڈول فور کا استعمال بلاجواز ہے۔ اسے دہشتگردوں اور تکفیری عناصر کے خلاف استعمال کرنے کی بجائے محب وطن شہریوں اور عوامی حقوق کے لئے آواز بلند کرنے والوں کے خلاف استعمال کرنا قابل مذمت ہے۔ بلتستان کے علماء اس سلسلے میں ریاستی اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ شیڈول فور کے ناجائز استعمال کو روکیں۔ قرارداد میں مطالبہ کیا گیا آغا علی رضوی، بلتستان کے دیگر علماء اور عوامی حقوق کے لئے آواز بلند کرنے والے محب وطن شہریوں کو شیڈول فور میں ڈالنا انتہائی ناقابل برداشت اور عوامی حقوق کے لئے اٹھنے والی آواز کو دبانے کی کوشش ہے، انہیں فوری طور شیڈول فور سے نکالا جائے۔ جی بی کے علماء پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں، انہیں شیڈول فور میں ڈالنا ملک دشمنی ہے اور اس سے خطے میں شدید بےچینی پھیل سکتی ہے۔ اجلاس میں مطالبہ کیا گیا کہ وزیر مملکت برائے داخلہ اور دیگر مقتدر حلقے بلتستان کی حساسیت کو مدنظر رکھتے ہوئے آغا علی رضوی اور دیگر علماء کو فوری طور پر شیڈول فور سے خارج کریں۔

وحدت نیوز (سکردو)  مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے سربراہ آغا علی رضوی نے دیامر میں ہونے والے حالیہ افسوسناک واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ واقعہ دیامر کے عوام کے خلاف گہری عالمی سازش ہے اور اسکی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ دیامر کے عوام کو تعلیمی میدان میں پیچھے رکھنے کی ہر سطح پر سازشیں ہو رہی ہیں، عوام ان سازشوں کے خلاف کھڑے ہو جائیں۔ دیامر چلاس میں تعلیمی اداروں کو نذر آتش کرنے والے چاہتے ہیں کہ تعلیمی طور پر یہ علاقہ پسماندہ رہے اور ساتھ میں علاقے کی پرامن ساکھ بھی خراب ہو۔ حالیہ افسوسناک واقعے کے ذریعے دیامر کے عوام کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے کی کوشش کی ہے۔ ہم اپنے دیامر کے بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ دیامر کے عوام محبت کرنے والے اور تعلیم دوست ہونے کے ساتھ ساتھ پرامن بھی ہیں۔ چند شر پسند افراد چاہتے ہیں کہ یہ علاقہ تعلیمی طور پر پسماندہ رہے اور خطے کی ساکھ خراب ہو۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو چاہیئے کہ اس پسماندہ علاقے کی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے آگے بڑھیں۔ ہر دور کی حکومت نے دیامر کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کے لئے کوئی سنجیدہ اقدام نہیں اٹھایا ہے۔ عوام اور جوان دیامر کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کے لئے جو بھی اقدام اٹھائیں ہم ان سے دس قدم آگے ہونگے۔ تعلیمی انقلاب و پیشرفت کے لئے دیامر کے عوام کا جہاں پسینہ گرے گا وہاں ہم اپنا خون بہانا سعادت سمجھتے ہیں۔ آغا علی رضوی نے کہا کہ خطے کے عوام اتحاد و محبت کی فضاء کو قائم رکھیں اور تمام تر سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں۔ جب تک خطے میں تعلیمی انقلاب نہیں آئے گا، امن و بھائی چارگی کی فضاء قائم نہیں رہے گی خطے میں ترقی کا خواب پورا نہیں ہو سکتا۔

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت  بلتستان کے سربراہ آغا علی رضوی نے سکردو قمراہ میں اسدکی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امام حسین ؑ اور شہدائے کربلا سے عقیدت و محبت ہی زندگی کا سب سے بڑا سرمایہ ہے اور یہی سرمایہ انسان کو باعزت زندگی گزارنے کا سلیقہ سکھاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہدائے کی یاد انسان کو ظلم کے مقابلے میں قیام کا درس دیتا ہے اور اسلامی اقدار پر سب کچھ قربان کرنے کا سبق ملتا ہے۔ آج دنیا بھر میں اگر مظلوموں کو اپنے وقت کے یزید و شمر کے خلاف بولنے کی ہمت پیدا ہوگئی ہے اور تحریک چلا رہے ہیں تو یہ سب معرکہ کربلا کی مرہون منت ہے جو مردہ قوموں کو زندگی بخشتا ہے۔ آغا علی رضوی نے کہا کہ امام حسین ؑ کا حقیقی پیروکار کبھی بھی ظلم کے ساتھ سمجھوتہ نہیں کر سکتا، وہ سر تن سے جدا کر سکتا ہے لیکن ظالم کے آگے سر خم نہیں کیا جا سکتا ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں واقعہ کربلا سے درس حریت لیتے ہوئے ظلم کے خلاف ڈٹ جانا چاہیے تاکہ عدل و انصاف کا بول بالا ہو اور ظالم کی سرکشی ختم ہو جائے۔ ظلم کے خلاف جتنی دیر سے اٹھیں گے اتنی زیادہ قربانی دینی پڑے گی۔ کربلا سے درس لینے والے نہ کسی سے خوف کھاتے ہیں اور نہ کسی قسم کی مصلحت کا شکار ہوتے ہیں۔ وہ سچ اور حق کی بالا دستی کے لیے سب کچھ قربان کر دیتا ہے۔ جس قوم کے پاس کربلا کا درس ہو انہیں نہ کوئی شکست دے سکتا ہے اور کوئی اس پر ظلم ڈھا سکتا ہے۔ عزاداری مردہ یزید پر لعن کرنے کا نام نہیں بلکہ وقت کے یزیدوں کو للکارنا اور ظلم کے مقابلے میں ڈٹ جانا ہے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں عوامی جدوجہد پر یقین رکھنے والی ، محب وطن شخصیت آغا علی رضوی، شیخ کریمی اور شبیر انجینئر سمیت ایکشن کمیٹی کے دیگر ممبران کو شیڈول فور میں شامل کر کے دہشتگرد مخالف قوتوں اور محب وطن پاکستانیوں پر کاری ضرب لگائی ہے۔ آغا علی رضوی گلگت بلتستا ن کے عوام کی توانا آواز ہے جو حقوق سے محروم استحصال کے شکار گلگت بلتستان کو قومی دھارے میں شامل کرانے کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں اور خطہ دشمن پالیسیوں کے خلاف سرگرم عمل ہے۔

 انہوں نے روز اول سے ہی اتحاد و وحدت کی آواز بلند کی اور دہشتگردوں کے خلاف جاری آپریشنز کی ہمیشہ اخلاقی پشت پناہی کی ہے۔ وہ بلاتفریق مسلک و مذہب مظلوموں کے حقوق کی جنگ لڑنے والی شخصیت ہے انہیں مجوزہ طور پر شیڈول فور میں شامل کرنے والے اداروں نے ظلم کیا ہے۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کی محافظت پر انکی خدمات کو سراہاجاتا لیکن افسوس کی بات ہے انہیں وطن دشمنوں کی صفوں کھڑا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ گلگت بلتستان میں شیڈول فور کا استعمال سراسر سیاسی بنیادوں پر ہو رہا ہے۔ مجلس وحدت مسلمین کے رہنماوں پر شروع دن سے ہی شیڈول فور نافذ کر کے سیاسی جدوجہد کا حق چھیننے کی کوشش کی گئی ہے۔ ہم مقتدر حلقوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ گلگت بلتستان پاکستان کا حساس ترین علاقہ اور اثاثہ ہے یہاں کے عوام کو حقوق دینے اور قومی دھاریں میں شامل کرنے کے لیے عملی اقدامات اٹھائیں۔ اس خطے کے عوام کو مایوسی کی طرف نہ دھکیلیں۔ یہ عوام پاکستان کے محب وطن اور مدافع ہیں۔ یہاں پر عوامی حقوق کے لیے عوامی جدوجہد کرنے والی شخصیات کا گھیرا تنگ کرنے کی کوشش نہ کرے۔جی بی کی صوبائی حکومت آغا علی رضوی، خطے کی سالمیت اور عوامی حقوق کے لیے جدوجہد کرنے والوں کے لیے سکیورٹی تھریٹ بن چکی ہے۔ سکیورٹی ادارے خطے کی سیاسی اور عوامی شخصیات کی سکیورٹی کے ذمہ دار ہیں۔

Page 1 of 10

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree