وحدت نیوز (کراچی)  مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مختار امامی ،صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل یعقوب حسینی،صوبائی رہنما عالم کربلائی نے جنرل ورکرز اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان موجودہ دور میں غیر ملکی ملک دشمن قوتوں امریکہ،اسرائیل اور بھارت اور اسی طرح اندرونی طور پر ان شیطانی قوتوں کے مقامی ایجنٹوں کی سازشوں کا شکار ہے جس کے نتیجے میں ملک کے کسی کونے میں ٹارگٹ کلنگ تو کسی کونے میں آبادیوں کو بم دھماکوں سے اڑائے جانے کے مناظر نظر آ رہے ہیں اسی طرح افواج پاکستان ،مساجد ،مزارات اولیاء اللہ،الغرض شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے ہر فرد کو خواہ وہ درس و تدریس کے شعبہ سے وابستہ ہو یا شعبہ طب سے وابستہ ہو یا پھر انصاف کی فراہمی کے شعبہ وکالت سے وابستہ ہو غرض یہ کہ ہر کسی کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور سر زمین پاکستان کے خلاف ایسی خطر ناک سازشیں کی جا رہی ہیں جس کا مقصد مملکت خداداد پاکستان کو غیر مستحکم کرنا اور سامراجی شیطانی قوتوں کے ناپاک عزائم کی تکمیل کو انجام دینا ہے۔ ایسے حالات میں جب پورے ملک کے کونے کونے میں ان غیر ملکی دہشت گرد قوتوں کے مقامی ایجنٹوں نے پاکستان کے باسیوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنا رکھا ہے مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ملک دشمن قوتیں خواہ وہ بیرونی ہوں یا اندرونی ایجنٹ ہوں ان کے ناپاک عزائم کو ناکام بنا کر خاک میں ملادیا جائے گا لہذٰا اسی حوالے مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ نے اعلان کیا ہے کہ25دسمبر بروز اتوار کوحیدرآباد میںعظیم الشان ’’لبیک یارسول اللہ کانفرنس منعقد کی جائے گی۔کانفرنس ملک میں جاری غیر ملکی و اندرونی سازشوں کا قلع قمع کرنے اور دشمنان اسلام و پاکستان کے تابوت میں آخری کیل ٹھوکنے اور استحکام پاکستان کی ضمانت کے مترادف ثابت ہو گی۔ جس میں سندھ بھر سے ہزاروںموالیان اہل بیت علیہم السلام اور شیعیان حیدر کرار (ع) محب وطن پاکستانی شریک ہوں گے  اور ثابت کر دیں گے کہ پاکستان کے عوام سر زمین پاکستان پر امریکی و اسرائیلی اور ان کے مقامی ایجنٹوں کے ناپاک عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔2دسمبر کا عظیم الشان اجتماع اولیاء اللہ کے ماننے والوں،صوفیوں کے چاہنے والوں اور محب وطن پاکستانیوں کا تاریخ ساز اجتماع ہو گا جو استحکام پاکستان کی ضمانت ثابت ہو گا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری سید ناصر شیرازی نے بھارتی ہائی کمیشن کے سفارت کاروں کے پاکستان کے اندر تخریبی کاروائیوں میں ملوث ہونے پر شدید ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان بارہا سفارتی آداب کی سنگین خلاف ورزیوں کا مرتکب ہو چکا ہے۔وطن عزیز میں ہونے والی دہشت گردی کے مختلف واقعات میں بھارتی سفیروں کا براہ راست ملوث ہونا ایک ناقابل معافی جرم ہے۔بھارت وطن عزیز کی سلامتی و استحکام کا سب سے بڑا دشمن ہے جس نے ہمیشہ ہمیں نقصان پہنچایا اور عالمی سطح پر پاکستان کا امیج خراب کرنے کے لیے بے جا پروپیگنڈہ کیا۔ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث را کے ان ایجنٹوں کو ناپسندیدہ قرار دے کرمحض ملک بدر کر دینا ملک و قوم کے ساتھ زیادتی ہو گی۔ان عناصر کوبلا تاخیر تحقیقاتی ایجنسیوں کے حوالے کیا جانا چاہیے تاکہ ان کے باقی نیٹ ورک کا بھی مکمل طور پر پتا لگایا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھارتی جاسوس کلبھوشن یا دیوکے معاملے پر بھی حکمرانوں نے ملک و قوم کے مفاد کو مقدم رکھنے کی بجائے انڈیا سے دوستی کا حق ادا کیا۔بھارت کے معاملے میں ہمارے حکمرانوں کا عاجزانہ رویہ پوری قوم کی توہین ہے ۔ پاکستان کے ساتھ بھارت کی ازلی دشمنی کسی سے پوشیدہ نہیں۔اب لیت ولعل کے بجائے دو ٹوک موقف اختیار کرنے کا وقت ہے۔اگر حکومت ملک میں حقیقی امن کی خواہاں ہے تو پھر ان تمام نیٹ ورکس اور مراکزکا خاتمہ کرنا ہو گا جو دہشت گردی کے محرک بنتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جاری دہشت گردی میں ملوث کالعدم مذہبی جماعتوں اور را کے درمیان تعلقات کے شواہد ماضی میں بھی منظر عام پر آچکے ہیں۔لیکن بدقسمتی سے ان جماعتوں کے خلاف کاروائی کرنے کی بجائے ان کے رہنماؤں سے حکومتی وزرا تعلقات استوار کرنے میں مگن رہے جو کہ دہشت گردی کے خاتمے میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔دہشت گردی کے عفریت سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لیے ملک کی تمام محب وطن سیاسی و مذہبی جماعتوں کو مشترکہ کوشش کرنا ہوں گی اور اس سلسلے میں کسی تعلق، دباؤ یا مصلحت کو رکاوٹ نہ بننے دینے کا عزم انتہائی ضروری ہے۔

دریں اثنا سید ناصر شیرازی نے بلوچستان کے علاقے گڈانی میں ناکارہ جہاز کے اندر آگ لگانے سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر رنج و غم کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ آگ پر تاحال قابو نہ پایا جانا متعلقہ حکام کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔انہوں نے بلوچستا ن اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ آگ پر فوری قابو پانے کے لیے جدید مشینری اور ہیلی کاپٹرز اور دیگر ضروری آلات کی فراہمی میں کوئی تاخیر نہ برتی جائے تا کہ مزید جانی نقصان کے خدشات کو کم کیا جا سکے۔

وحدت نیوز (ہالا) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے ہالا پریس کلب میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئےکہا ہے کہ پاکستان میں موجود کالعدم مذہبی جماعتیں بھارتی خفیہ ایجنسی را کی معاونت کے لئے سرگرم ہیں، بھارتی ایجنسی کے اعلٰی عہدیدار کی بلوچستان سے گرفتاری سے بہت سارے راز افشا ہوں گے۔ را کے حاضر سروس نیول کمانڈر کا علیحدگی پسند اور فرقہ وارانہ تنظیموں سے رابطے کا اعتراف ان عوامل کو سمجھنے میں مددگار ہے، جو پاکستان میں فرقہ واریت کی بنیاد بنے۔ جن مدارس میں نفاق اور تکفیر کا نصاب پڑھایا جاتا ہے، ان مدارس کی تاریں بھارت سے ملتی ہیں۔ جب تک ہندوستانی معاونت سے چلنے والی کالعدم جماعتوں اور مدارس پر پابندی نہیں لگائی جاتی تب تک فرقہ واریت کے خاتمے کے لئے جاری کوششیں نتیجہ خیز ثابت نہیں ہوسکتیں۔ پاکستانی ذرائع ابلاغ کی قد آور شخصیات کا یہ انکشاف آنکھیں کھولنے کے لئے کافی ہے کہ پاکستان میں موجودہ متنازعہ مذہبی لٹریچر بھارت سے شائع ہو کر آتا ہے، تاکہ شیعہ سنی فسادات کو ہوا دی جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت ہمارا ازلی دشمن ہے۔ سانپ کو جتنا چاہے دودھ پلائیں، اس کے ڈسنے کی فطرت کبھی ختم نہیں ہوتی۔ ہم بارہا دوستی کا ہاتھ بڑھا کر یہ ثابت کرچکے ہیں کہ خطے میں امن کے قیام کے لئے پاکستان کی کوششیں مخلصانہ ہیں، لیکن کم ظرف دشمن ہماری ان امن کی کوششوں کے برعکس سازشوں اور چال بازیوں میں مصروف ہے۔ علامہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا کہ ہمیں مکار دشمن سے ’’مخصوص لہجے‘‘ میں بات کرنا ہوگی۔ انہوں نے کہا اس ایجنٹ کی گرفتاری ہمارے اداروں کی اہم پیش رفت ہے، اس سے ان گروہوں تک پہنچنے میں مدد ملے گی جو وطن عزیز کے امن اور استحکام کے دشمن ہیں۔ ملک دشمن عناصر کسی بھی رعایت کے قطعاََ مستحق نہیں، ان کا تعلق چاہے کسی بھی مذہبی یا سیاسی گروہ سے ہو۔ دہشت گردوں کے خلاف بلاتفریق آپریشن کرکے ان کو کیفر کردار تک پہنچایا جانا چاہیئے۔ ریاست میں آئین و قانون توڑنے کا اختیار کسی کو حاصل نہیں۔ علامہ ناصر عباس نے کہا کہ بھارتی سفیر کو بلاکر سخت الفاظ میں سرزنش کی جائے اور باور کرایا جائے کہ اگر بھارت نے اپنا طرز عمل تبدیل نہ کیا تو سفارتی تعلقات شدید متاثر ہوسکتے ہیں۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے ترجمان مظاہر شگری نے پشاور میں امریکی قونصلیٹ کی گاڑی سے دھماکہ خیز مواد بر آمد ہونے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ سی آئی اے کے ایجنٹ ملک میں تخریب کاری کی وارداتوں میں ملوث ہیں جبکہ حکمرانوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے آنکھیں بند کر رکھی ہیں، دھماکہ خیز مواد کی برآمدگی لمحہ فکریہ ہے، وطن عزیز میں فرقہ وارانہ فسادات کروانے کے لئے دشمن قوتیں متحرک ہیں، اگر حکومت نے ان سازشوں کا قلع قمع نہ کیا تو شدید نقصان ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ارکان سینیٹ کی جانب سے ڈرون حملوں کو پاکستان کیلئے مفید قرار دینے والے یہ مت بھولیں کہ وہ امریکی سینیٹ کے نہیں بلکہ پاکستان کی سینیٹ کے رکن ہیں اور انہیں پاکستان کے مفاد میں بات کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کھلم کھلاڈرون حملوں کے ذریعے ملکی حدود کی خلاف ورزی کر رہا ہے اور حملوں میں خواتین، معصوم بچوں کو شہید کر رہا ہے، امریکی نام نہاد جنگ نے ملکی معیشت کو 100 ارب ڈالر سے زائد کا نقصان پہنچایا اور 50 ہزار بے گناہ افراد کو نگل لیا ہے، ایک طرف امریکہ افغانستان سے انخلاء چاہتا ہے تو دوسری طرف وہ اپنی شکست کا بدلہ پاکستان سے لینا چاہتا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ حکمران ہوش کے ناخن لیں اور فی الفور اس جنگ کو خیرباد کہہ دیں۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree