وحدت نیوز(اسلام آباد) پاکستان پیپلز پارٹی، پاکستان تحریک انصاف، متحدہ قومی موومنٹ پاکستان، پاکستان عوامی تحریک، سنی اتحاد کونسل سمیت دیگر سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنماء ناصر عباس شیرازی کے اغواء کی شدید مذمت کی ہے ۔ پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنماؤں علی زیدی، شیریں مزاری اور اعجاز چوہدری نے ٹوئیٹر پر جاری اپنے بیانات میں کہا کہ ناصر شیرازی کا اغواء سنگین اقدام ہے۔ علی زیدی نے کہا کہ ناصر شیرازی کو اگرکو ئی بھی ضرر پہنچا تو اسکی ذمہ دار پنجاب حکومت ہوگی ۔

تحریک انصاف کی مرکزی رہنما شیریں مزاری نے کہا کہ ایم ڈبلیو ایم کے رہنماء نے رانا ثناء اللہ کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں پٹیشن دائر کر رکھی تھی اور کل رات انہیں اغواء کر لیا گیا ۔ شیریں مزاری نے مزید کہا کہ رانا ثناء اللہ اپنی فرقہ وارنہ ہٹ دھرمی پر اتر آئے ہیں ، ناصر شیرازی کو راناثناءاللہ کے خلاف رٹ پٹیشن ہائی کورٹ میں داخل کرنے پر انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے ، جس کی ہم مذمت کرتے ہیں ۔اعجاز چوہدری نے کہا کہ ہم مجلس وحدت مسلمین کے رہنما ناصرشیرازی کے اغواء کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، پنجاب حکومت اس غیر قانونی اقدام کی ذمہ دار ہے، ہمارا مطالبہ ہے کہ ناصر شیرازی کو فوری طور پر بازیاب کرایا جائے۔

مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے میڈیا کو جاری ایک بیان میں کہا کہ ناصر عباس شیرازی کے اغواء کا مقدمہ شہباز شریف اور رانا ثناءاللہ کے خلاف درج ہونا چاہئے ، ایم ڈبلیوایم کے رہنماکو رانا ثناءاللہ کے خلاف مقدمہ کرنے پر پولیس وردی والوں کا اٹھا کر لے جانا قابل مذمت ہے، پنجاب کے موجودہ حکمرانوں ہمیشہ قانون اور آئین کی دھجیاں اڑائی ہیں، اگر سانحہ ماڈل ٹاون کے مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچادیا جاتا تو یہ اب تک اس طرح پولیس اور انتظامیہ کے ذریعے سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ نا بنارہے ہوتے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی جنرل سیکریٹری سید نیئر حسین بخاری نے کہا کہ ایم ڈبلیوایم کے رہنما ناصر شیرازی کی نامعلوم افراد کے ہاتھوں اغواء کی پرزور مذمت کرتے ہیں، ناصر شیرازی کی بازیابی یقینی بنائی جائے، ملزمان کو گرفتارکرکے قرار واقعی سزا دی جائے، اس انداز میں سیاسی ومذہبی رہنماوں کا اغواء تشویش  ناک ہے، سابق ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی اور پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما فیصل کریم کنڈی نے ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ ناصر شیرازی کے اغواء کی پرزور مذمت کرتے ہیں ، سیاسی قائدین کا اس طرح ماورائے عدالت و قانون اغواء ریاستی کمزوری کو ظاہر کرتا ہے، کیا ہم بنانار ی پبلک ہیں ؟؟

سنی اتحاد کونسل کے صاحبزادہ حامد رضانے کہا کہ اغوا کاروں نے واردات کے موقع پر خود آپس میں باتیں کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعلیٰ اور رانا ثنااللہ کو بتادیں کام ہوگیا ہے، انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت مکمل طور پر بوکھلا چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حلف میں عقیدہ ختم نبوت کے حوالے سے ترمیم کے بعد ہمیں بھی دھمکیاں دی جار ہی ہیں کہ رانا ثناء اللہ کیخلاف آواز نہ اٹھائیں، لیکن ہم واضح کرنا چاہتے ہیں کہ ہم مجلس وحدت مسلمین کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ناصر شیرازی کو ان کی اہلیہ کے سامنے اغوا کرنا بہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنی اتحاد کونسل ایم ڈبلیو ایم کیساتھ ہے

 پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی رہنماء خرم نواز گنڈہ پو ر نے اپنے مذمتی بیان میں کہا کہ مجلس وحدت مسلمین کے رہنما ناصر شیرازی کے اغوا کی شدیدمذمت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ناصر شیرازی نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے ایک اہم رٹ پٹیشن دائر کر رکھی ہے۔

 متحدہ قومی موومنٹ کے رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی نے کہا ہے واپڈا ٹاون لاہور سے مجلس وحدت مسلمین کے رہنماسید ناصر شیرازی کا اغواء قابل مذمت اقدام ہے، پنجاب حکومت سیاسی مخالفین کے خلاف طاقت کا استعمال ترک کرے،واضح رہے کہ بد ھ کی شب مجلس وحدت کے مرکزی رہنماءناصر شیرازی کو سادہ وردی اہلکاروں نے اغواء کر لیا تھا ۔

وحدت نیوز(جیکب آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندہ کے صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا ہے کہ مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنماء سید ناصر عباس شیرازی ایڈوکیٹ کا اغوا نواز لیگ کی پنجاب حکومت کا سیاہ کارنامہ ہے۔ مجلس وحدت مسلمین نے وطن عزیز میں امن، اخوت، اتحادبین المسلمین اور حب الوطنی کے فروغ کے لئے جو جدوجہد کی ہے، دوست و دشمن اس کے معترف ہیں۔ ایک عرصہ سے ملت جعفریہ انتقامی کاروائیوں کے نشانے پر ہے، یہ واضح امتیازی سلوک ہی ہے کہ ہزاروں زائرین اس وقت بھی تفتان ، کوئٹہ اور سندہ ، بلوچستان بارڈر پر پریشان بیٹھے ہیں ۔ حکومت زائرین کو تحفظ دینے کی بجائے ان کے لئے مشکلات کھڑی کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سید ناصر عباس شیرازی، جرئت و بہادری اور جہد مسلسل کا نام ہے۔ ایم ڈبلیو ایم کے بہادر کارکن حسینیت کے جذبے سے سرشار ہیں، انہیں گھٹیا حرکتوں سے خوفزدہ نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ چیف جسٹس ، ایڈوکیٹ سید ناصر عباس شیرازی کی اغوا نما گرفتاری کا فوری نوٹس لیں۔ سید ناصر عباس شیرازی کو فوری طور پر رہا نہ کیا گیا تو بھرپور احتجاج کا راستہ اختیار کیا جائے گا۔ کارکن قائد وحدت کے حکم کے منتظر ہیں، مرکز سے موصولہ رہنمائی کے مطابق بھرپور احتجاجی تحریک کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حق و صداقت کی راہ میں قید وبند کی صعوبتیں برداشت کرنا اہل حق کا شیوہ ہے، تاریخ گواہ ہے کہ جیل کی سلاخیں حق والوں کو جھکانے میں ناکام رہی ہیں اب بھی شکست و رسوائی ان کا مقدر ہوگی۔

وحدت نیوز(مانٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے سینیئر نائب صدر علی زیدی نے کہا ہے کہ آئی جی پنجاب پیشہ وارانہ غیرت کا مظاہرہ کریں اور ناصر شیرازی کو فوری بازیاب کروائیں، پنجاب میں سرکاری غنڈہ گردی اپنی مثال آپ ہے، اس صوبے کے عوام کا تحفظ کون کرے گا، جہاں اغواء کار اور قاتل وزیر بنا دیئے جائیں۔ یہ باتیں انہوں نے میڈیا کو جاری کردہ اپنے ایک بیان میں کیں۔ علی زیدی کا کہنا تھا کہ ماڈل ٹاؤن میں معصوم انسانوں کا خون بہانے والا شخص کھلے عام اغواء کاری کا دھندہ کرنے لگا ہے، ناصر شیرازی کے جسم و جان کو کسی قسم کا نقصان پہنچا تو ذمہ دار رانا ثناء اللہ ہوگا، آئی جی پنجاب پیشہ وارانہ غیرت کا مظاہرہ کریں اور ناصر شیرازی کو فوری بازیاب کروائیں، آئی جی پنجاب کا فرض ہے کہ اغواء کاروں کے سرغنے کو بے نقاب کرکے کٹہرے میں کھڑا کریں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایم ڈبلیو ایم کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید ناصر شیرازی کے اغوا کار سرکاری اورایلیٹ فورس کی گاڑیوں میں تھے۔ایک مذہبی وسیاسی جماعت کے ایسے مرکزی رہنما کو پنجاب حکومت کی ایما پر اغوا کیاگیا ہے جس پر کسی قسم کا کوئی مقدمہ یا الزام نہیں۔انہیں رانا ثنا اللہ کے خلاف پیٹیشن دائر کرنے پر انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ناصر شیرازی کا اغوا جمہوریت کے منہ پر طمانچہ ہے۔حکومت پنجاب کے اس ظالمانہ اقدام کے خلاف جمعہ کے روز پورے ملک میں نماز جمعہ کے بعد احتجاجی جلوس نکالے جائیں گے۔لاہور میں احتجاجی جلوس پریس کلب سے وزیر اعلی ہاؤس تک نکالا جائے گا۔پنجاب کی انتظامیہ اور ادارے ریاست کی بجائے شخصی غلامی کا حق ادا کر کے قانون و آئین سے انحراف کر رہے ہیں۔سیکورٹی ادارے عوام کوتحفظ فراہم کرنے کی بجائے دہشت کی علامت بنتے جا رہے ہیں۔اس اغوا کے ذمہ دار شہباز شریف ،رانا ثنا اللہ اور آئی جی پنجاب ہیں۔اختیارات اور طاقت کا ناجائز استعمال غیر آئینی اور جمہوری اقدار کے منافی ہے۔اگر ناصر شیرازی کو کسی بھی قسم کا نقصان پہنچا تو حالات کی تمام تر ذمہ داری پنجاب حکومت پر ہو گی۔ ناصر شیرازی کی عدم بازیابی کی صورت میں پنجاب ہاؤس کے گھیراؤ سمیت متعدد دیگر آپشنززیر غور ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نون لیگ کی سوشل میڈیا ٹیم کے دو نوجوانوں کے لاپتہ ہونے پر نواز شریف اور وفاقی وزیر داخلہ سمیت دیگر رہنماؤں نے واویلا کرنا شروع کر دیا ہے جبکہ ہمارے مرکزی رہنما کے اغوا پر دانستہ نظر انداز کی پالیسی پر عمل کیا جا رہا ہے۔مغوی کے بھائی کی درخواست پر مقدمہ دائر کرنے سے پولیس نے انکار کر دیا ہے۔اغوا کاروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کے لیے ہم نے عدالت سے رجوع کر لیا ہے۔ظالموں کے مقابلے میں ہم کبھی سرنگوں نہیں ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ نفرت اور تعصب اس ملک کی سالمیت کے دشمن ہیں ۔ہم ان دشمنوں کے خلاف پورے عزم کے ساتھ میدان میں موجود ہیں۔ وطن عزیز کی سلامتی و استحکام کے دشمن ملک میں انارکی پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ناصر شیرازی کے اغواکا مقصد حکومت مخالف مذہبی و سیاسی جماعتوں کا دھمکانا ہے۔پوری انتظامی مشینری نا اہل وزیر اعظم کو پروٹوکول دینے میں مصروف ہے۔ملکی آئین و قانون کو پامال کیاجا رہا ہے۔انہوں نے وزیر اعظم اور وفاقی وزیر داخلہ سے مطالبہ کیا ہے کہ مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید ناصر عباس شیرازی ایڈووکیٹ کو فوری طور پر بازیاب کیا جائے۔اس سنگین مسئلہ میں حکومت کی غیر سنجیدگی ملت تشیع کے اضطراب میں اضافے کا باعث ہو گی۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ خواتین کی مرکز ی سیکریٹری جنرل محترمہ سیدہ زہرا نقوی نے ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی ایڈوکیٹ کی جبری گمشدگی کے خلاف مرکزی سیکریٹریٹ سے جاری اپنے مذمتی بیان میں کہاہے کہ پنجاب حکومت اپنے سیاسی مخالفین کے خلاف انتقامی ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے، ناصر شیرازی وطن کا باوفا بیٹا ہے، جسے مظلوموں کی حمایت اور آئین کی بالادستی کے جرم میں گرفتار کیاگیا، ایم ڈبلیوایم نے ہمیشہ اتحاد بین المسلمین، آئین کی باسداری اور مظلوموں کی حمایت کی سیاست کی ہے، ناصرشیرازی قوم کا قیمتی سرمایہ ہیں ، اگر حکومت پنجاب نے ہوش کے ناخن نا لیئے اور ناصر شیرازی کو فوری طور پر رہا نہ کیا تو ملت کی بیٹیاں کردار زینبی ؑ اداکرتے ہوئےوقت کے یزیدوں کے جینا دوبھر کردیں گی۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید ناصر عباس شیرازی کی بازیابی، وزیراعلٰی پنجاب شہباز شریف اور وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ کیخلاف اندراج مقدمہ کیلئے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا گیا۔ سید ناصر عباس شیرازی کے بھائی علی عباس شیرازی کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ناصر شیرازی نے لاہور ہائیکورٹ میں رانا ثناء اللہ کی نااہلی کیلئے رٹ پٹیشن دائر کر رکھی ہے، جس کی پاداش میں رانا ثناء اللہ نے انہیں گذشتہ شب لاہور کے علاقے واپڈا ٹاؤن سے اغوا کروا لیا ہے۔ درخواست میں وزیراعلٰی پنجاب شہباز شریف، وزیر قانون رانا ثناء اللہ اور آئی جی پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست گزار نے مزید کہا ہے کہ تھانہ ستوکتلہ میں ناصر شیرازی کے اغواء کیخلاف درخواست دی، لیکن پولیس نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ پولیس کو اندراج مقدمہ کا حکم دیا جائے اور ناصر شیرازی کو فوری بازیاب کروایا جائے۔

Page 1 of 4

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree