آل از ویل

وحدت نیوز(آرٹیکل) ایک دفعہ کسی شخص کو سفر پر جانے کے لئے گھوڑے کی ضرورت پڑی وہ اپنے دوست کے پاس جاتا ہے تاکہ اُس کا گھوڑا مانگ سکے۔ وہ شخص اپنے دوست کے پاس پہچتا ہے اور اپنی مجبوری بیان کرتا ہے، دوست نہایت ہی افسوس کے ساتھ اُس سے معزرت کرتا ہے کہ گھوڑے کو تو کوئی اور شخص لے کر گیا ہے اتنی دیر میں گھر کے کونے سے گھوڑے کی آواز آتی ہے۔ یہ شخص تعجب سے اپنے دوست سے پوچھتا ہے یار تم تو کہہ رہے تھے گھوڑا نہیں ہے اب یہ آواز کس چیز کی ہے؟ دوست بولتا ہے تمھے گھوڑے کی آواز پر بروسہ ہے یا اپنے دوست کی بات پر۔

ایران کا عراق میں موجود قدیم ترین امریکی ملٹری بیس پر میزائلوں سے حملہ اور امریکی صدر ٹرمپ کا بیان بھی کچھ اسی طرح کا ہے۔ ساری دنیا جانتی ہے کہ ایران کے بلاسٹک میزائلوں نے امریکی بیس کو ہدف بنایا ہے لیکن ٹرمپ ٹوئٹ کرتا ہے "آل از ویل" پھر طویل خاموشی کے بعد کہتا ہے کہ ہمیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ یہ الگ بات ہے کہ اسرائیلی نیوز رپورٹر نے جب عراق سے دوسو پینتالیس امریکی زخمی فوجیوں کو اسرائیلی ہسپتال میں منتقل کرنے کا خبر نشر کیا تو اس کی ٹویٹر اکائونٹ ہی بند کرادی گئی۔

اب حالات یہ ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ جو ایرانی حملے سے کچھ دیر پہلے تک ایران کو دھمکیاں دے رہا تھا اور حملے کی صورت میں منہ توڑ جواب دینے کا کہہ رہا تھا ایران کی طرف سے ایک ہی تھپڑ میں سدھر گیا ہے اور ایران کو غیر مشروط مذاکرات کی پیشکش کر رہا ہے۔ لیکن ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ سید علی خامنہ ای کا کہنا تھا کہ "عراق میں موجود عین الاسد فوجی اڈے پر ایران کے میزائل حملہ امریکیوں کے منہ پر زودار طمانچہ مارا ہے، لیکن یہ انتقام نہیں۔"

کیوں انتقام نہیں ہے؟ کیونکہ جنرل سلیمانی کی شخصیت کے برابری کا امریکہ میں کوئی ہے ہی نہیں۔ جنرل سلیمانی کی شخصیت اور ان کے قصاص کے حوالے سے بات کرتے ہوئے لبنان کے مقاومتی تحریک حزب اللہ کے سربراہ سید حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ "ٹرمپ کا سر بھی قاسم سلیمانی کے جوتے کے برابر نہیں ہو سکتا"۔ اور یہ کوئی مبالغہ بھی نہیں ہے جس جنرل نے چالیس سال امریکہ اور اسرائیل کو ناکو چنے چبوا دیے ہوں، لبنان، فلسطین سے لیکر افغانستان غرض ہر محاز پر دشمنوں کو شکست دی ہو۔ شام اور عراق میں امریکی پیداوار داعش جیسے لعنت کو ملیا میٹ کیا ہو اس عظیم شخصیت کے کون برابر ہوسکتا ہے۔ جنرل سلیمانی کی یہ تعریفیں صرف ہم نہیں کر رہے ہیں بلکہ خود مغربی میڈیا اور مغربی شخصیت بھی ان تعریفیں کرتے نہیں تھکتے ہیں۔

ان کی مقبولیت اور شخصیت کا اندازہ تو دنیا کو ان کی شہادت کے بعد ہوئی ہے، اس شخص کی جذبہ ایمانی اگر نہیں ہوتے تو آج عراق اور شام میں امن نام کی کوئی چیز نہیں ہوتی اور آج اگر دنیا میں سامراجی طاقتوں اور عالمی غنڈوں سے کوئی برسر پیکار ہے تو یہ اسی شخص کی تربیت یافتہ افراد ہیں۔ جنرل قاسم سلیمانی کی مجاہدانہ زندگی اور ان کے کارناموں کو اگر دیکھیں تو کئی جلد کتاب کی شکل بن جائے لذا ایسے شخصیت کی برابری کون ہوسکتا ہے۔

اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا ڈونلڈ ٹرمپ کی پریس کانفرنس کے ایران امریکہ کی کشیدگی میں کمی آئے گی؟ میرے نظر میں اب کشیدگی میں کمی کا امکان نہیں ہے کیونکہ ایران کی طرف سے کم از کم شہید قاسم سلیمانی کی قصاص امریکہ کا مشرق وسطیٰ سے مکمل انخلاء ہے جو امریکہ آسانی سے نہیں مانے گا۔ لیکن امریکہ اس وقت سخت پریشر اور بکھلاہٹ کا شکار ہے۔ امریکہ اب وہ سُپر پاور نہیں رہا جس کی جنگی جہاز جب کسی ملک کی طرف رخ کرتا تھا تو وہاں کی حکومت گر جاتی تھی اور امریکہ کے سامنے گھٹنے ٹیک دیتے تھے۔ ابھی امریکہ کی حالت یہ ہے کی ایک دفعہ فوجی انخلاء کا لیٹر جاری کر دیتا ہے پھر مس ٹائپنگ کہہ کر بیان کو واپس لیا جاتا ہے۔ اس وقت سینکڑوں سوالات امریکہ پر اٹھ رہے ہیں اور ٹرمپ ان سب سوالوں کے جواب میں کہہ رہے ہیں تم لوگوں کو میری باتوں پر یقین نہیں ہے؟

یہاں ایک اور اہم بات کا ذکر کرتا چلوں کی ایک اہم سوال یہ بھی کیا جا رہا ہے کہ امریکہ کے سب سے بڑے فوجی بیس پر حملہ ہوا ہے اور امریکیوں نے جوابی کاروائی تک نہیں کی؟ ان کے پاس تو دنیا کا بہترین ڈیفنس سسٹم موجود تھا پھر کیا ہوا کہ ایرانی میزائلوں کو نہیں روک سکا؟ ان کا جواب تو امریکہ نہیں دے سکے مگر ایران کے جنرل حاجی زادہ نے دے دیا ہے ان کا کہنا تھا کہ "ہم نے امریکی دہشت گرد فوج کے اڈے عین الاسد پر حملے کے وقت ایک سائبر اٹیک کے ذریعے امریکہ کے جنگی بحری بیڑے اور ان  کے ڈرون طیاروں کے نظام کو بھی مفلوج کر دیا تھا جو اطلاع رسانی کا کام کرتے تھے، ہم اس حملے میں کسی کو قتل نہیں کرنا چاہتے تھے  بلکہ ہم اس مرحلے پر دشمن کی عسکری طاقت کو ضرب لگانا چاہتے تھے۔"

یہ کوئی پہلے بار نہیں ہے کی ایران نے امریکہ کو بے بس کر دیا ہے، اس سے پہلے بھی ایران نے امریکی ڈرون کو باحفاظت زمین پر اتار کر بھی دنیا کو حیران کر دیا تھا یعنی بے شک امریکہ اپنے آپ کو سپر پاور کہلائے اور ساری دنیا احمقوں کی طرح اُس کو سُپر پاور تسلیم کریں مگر دنیا میں ہمیشہ ایسا رہا ہے کہ جب بھی کسی ظالم و جابر نے خدائی کا دعویٰ کیا ہے اُس وقت ایک قلیل تعداد نے خدا کی وحدانیت اور حاکمیت پر یقین رکھتے ہوئے وقت کے سپر پاور کو للکارا ہے اور ہمیشہ فتح اُس قلیل مظلوموں کی ہوئی ہے۔

ساری دنیا امریکہ سے ڈرتی ہے حتیٰ روس اور چین بھی دو بہ دو ہونے سے اجتناب کرتے ہیں اور واحد ایران اور مقامتی تحریکیں ہیں جو شیطان بزرگ اور اس کے ناجائز اولاد اسرائیل سے نبرد آزما ہیں اور خداوند عالم نے ہمیشہ انھیں فتح و کامرانی عطا کی ہیں۔

لیکن ہمارے کمزور عقیدہ رکھنے والے مسلمان اور اسلامی کرپٹ حکمران اب بھی امریکہ اور عالمی طاقتوں سے مرعوب ہیں حالانکہ اس وقت اسلامی حکومتوں کو چاہئے تھا کہ وہ ایران کی سپورٹ کرتے یا کم از کم حوصلہ افزائی ہی کرتے مگر ہمارے حکمرانوں کو ایسا نصیب نہیں ہوا۔ بحرحال زندہ دل لوگ جہاں کہیں بھی ہیں وہ اس وقت ایران کی جرات کو سلام پیش کر رہے ہیں اور ایران کے جواب کو عالم اسلام کی طرف سے جواب قرار دے رہے ہیں۔

لیکن ابھی یہ جنگ ختم نہیں ہوئی ہے، بلکہ ابھی تو شروع ہوئی ہے اور یہ امریکہ اسرائیل کی نابودی تک جاری رہے گئی۔ ابھی تو حزب اللہ لبنان اور حزب اللہ عراق کی طرف سے بدلہ لینا بھی باقی ہے اور انشااللہ ہم دیکھیں گے ایک دن امریکہ مشرق وسطی سے اُسی طرح رسوا ہو کر جائینگے جس طرح اسرائیل جنوبی لبنان سے گئے تھے۔

تحریر: ناصر رینگچن

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے اسلامی نظریاتی کونسل کے سابق رُکن، ممتاز شیعہ مورخ و مصنف علامہ نجم الحسن کراروی مرحوم کے فرزند روزنامہ جنگ راولپنڈی کے اسٹنٹ ایڈیٹر،سنیئر صحافی  سید شمس رضوی کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کی صحافتی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مرحوم ایک صاف گو اور سادہ طبعیت کے مالک تھے۔ان کی صحافتی اور وقومی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔انہوں نے مرحوم کی بلندی درجات اور پسماندگان کے لیے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین ضلع لاھور کی سیکرٹری جنرل محترمہ حنا تقوی اور ڈپٹی سیکرٹری جنرل محترمہ عظمی نقوی نے قونصلیٹ جنرل اسلامی جمہوریہ ایران لاھور محترم رضا ناظری سے ملاقات کی۔ وفد نے سردار لشکر اسلام حاج قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت پر تعزیت و تسلیت پیش کی۔

 اس موقع پر محترمہ حنا تقوی کا کہنا تھا کہ جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت فقط ملت تشیع نہیں بلکہ ملت اسلامیہ کے لیے شدید نقصان اور صدمے کا باعث ہے ۔ہم ملت ایران اور رھبر معظم سید علی خامنہ ای کے حضور اس عظیم شخصیت کی جدائی پر تعزیت کرتے ھیں۔ ان کا کہنا تھا ملت پاکستان استعماری و استکباری قوتوں کے خلاف اپنے برادر ملک ایران کیساتھ ہر محاذ پر کھڑی ہے۔

وحدت نیوز(چنیوٹ) شھید قاسم سلیمانی ، شھید ابو مھدی المھندس اور انکے ساتھیوں کی شھادت پر خراج عقیدت پیش کرنے اور امریکہ کے بزدلانہ حملے کے خلاف بھرپور احتجاج کرنے کے لیے ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین ضلع چینیوٹ کی جانب سے مردہ باد امریکہ ریلی نکالی گئ جس میں شعبہ خواتین کی جانب سے بھرپور شرکت کی گئی۔

 ریلی میں مرکزی سیکرٹری تنظیم سازی ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین محترمہ معصومہ نقوی ، مرکزی سیکرٹری ورکنگ وومن محترمہ ڈاکٹر ردا فاطمہ، ضلعی سیکرٹری جنرل چینیوٹ محترمہ انجم کاظمی نے شرکت کی اور ریلی سے خطاب کیا  ۔

محترمہ معصومہ نقوی نے اپنے خطاب میں شیطان الاکبر امریکہ کی عالمی قوانیں کو روندتے ھوئے بزدلانہ حملہ کرنے پر شدید مزمت کرتے ھوئے کہا کہ امریکہ کے دن گنے جا چکے ہیں، اس وقت پوری دنیا امریکہ کی دھشت گردانہ کاروائیوں اور جنرل قاسم سلیمانی و رفقاء کی شھادت کے خلاف سراپا احتجاج ھے۔ ان کا کہنا تھا کہ قاسم سلیمانی کی شہادت فقط ایران کا مسئلہ نہیں بلکہ عالم اسلام کا مسئلہ ہے۔

وحدت نیوز(کوہاٹ) مجلس وحدت مسلمین ضلع کوہاٹ کے زیر اہتمام شہید قاسم سلیمانی مہدی مہندس اور انکے با وفا ساتھوں کی  یاد میں مجلس ترحیم کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر مجلس وحدت صوبہ خیبر پختونخواہ کے سیکرٹری جنرل علامہ وحید کاظمی نے مجلس ترحیم سے خطاب کیا۔ انہوں نے امریکہ کے بزدلانہ حملے اور اسلام دشمن پالیسیوں پر روشنی ڈالی۔ صوبائی سیکرٹری جنرل نے شہید قاسیم سلیمانی اورمہدی مہندس کو زبردست خراج تحسین پیش کیا۔

 انہوں نے کہا اس عظیم شہید کے بدولت وہ کام جو سالوں میں نہیں ہوسکیں صدر ٹرمپ کی بےوقوفیوں کی وجہ سے چند دونوں میں رونما ہوگئے۔ ایران اورعراق میں عوامی اتفاق اتحاد نے امریکہ کی نیندیں حرام کردی ہیں جو وہ کھبی نہیں چاہتےتھے۔ اس موقع پر امریکہ کے خلاف احتجاج بھی کیا گیا، صدر ٹرمپ کی تصویر اور امریکی پرچم نزر آتش کیا گیا۔

 اجتماع میں مختلف تنظیموں کے نمائندگان، ایم ڈبلیوایم کے صوبائی سیکریٹری جنرل وحیدعباس کاظمی، شیعہ علماء کونسل کےصوبائی صدر حمید حسین امامی، امامیہ علماء کونسل علامہ قیصر عباس الحسینی ، قومی وحدت کونسل کے چیئرمین آغا سید عبدالحسین الحسینی ،علامہ محمد باقر منتظری ،علامہ سید ثاقب حسین شیرازی ،علامہ اشرف علی قرائتی نے اپنے خطابات سے شہداء کوخراج  عقیدت پیش کیا۔ ان خطباء کے علاوہ دسیوں علماء مشران قوم اور سینکڑوں مومنین اور میڈیا کے نمائندے موجودتھے۔

وحدت نیوز(سجاول) مجلس وحدت مسلمین ضلع سجاول کے سیکرٹری جنرل حاجی مظفر علی لغاری کی قیادت میں بعد نماز جمعہ مسجد الحسینی سجاول سے پرانی نیشنل بنک سجاول  تک فرزندان اسلام قاسم سلیمانی اور مہدی مہندسکی امریکی دہشت گردانہ حملے میں  المناک شہادت کے خلاف شیطان بزرگ امریکہ اور اسکی ناجائز اولاد اسرایئل کے خلاف قائد وحدت علامہ راجہ ناصر عباس جعفری حفظہ اللہ کی کال پراحتجاجی ریلی نکالی گئی۔

 ریلی کے شرکاء سے حاجی مظفر علی لغاری سیکرٹری جنرل ضلع سجاول۔ڈپٹی سیکرٹری جنرل فیاض حسین شیخ ،مجلس وحدت المسلمین ٹنڈو محمد خان کے ضلعی رہنما مولانا محمد بخش غدیری ،نجف علی لغاری،گل محمد لغاری،سید منصور شاہ زیدی اور مولانا مراد علی لغاری نے خطاب کیا۔

حاجی مظفر علی لغاری،مولانا محمد بخش غدیری اور برادر فیاض حسین شیخ نے اپنے خطاب میں کہا کہ عراق وشام میں انبیاءکرام، اہل بیت عصمت وطہارت ،اصحاب کرام اور مسلمانوں کی جان ومال عزت وآبرواور ناموس کی حفاظت کرنے والے دو عظیم مجاہدین اسلام کے سچے فرزند جنرل قاسم سلیمانی اور انجینئرابو مہدی المہندس کی فرعون زمان امریکا کے ہاتھوں مظلومانہ شہادت پر پوری امت مسلمہ اپنے غم وغصے کا اظہار کرتی ہے اور پاکستان سمیت تمام اسلامی ممالک سے سے اس دور کے فرعون امریکا سے اپنے تعلقات اور وابستگیاں ختم کرکے امریکی سفارت خانوں کر فوری بند کرنے کا مطالبہ کرتی ہے ۔

مقررین نے کہا کہ سب سے بڑےشیطان کے ہاتھوں ان عظیم فرزندان اسلام کی شہادت کا ہدف امت مسلمہ کے خلاف نئی جنگ کا آغاز ہے۔پاکستان کی عظیم اسلامی ملت شہداء کے خانوادگان  پوری دنیا کے مظلومین اور رہبر مظلومین جہاں آیت اللہ سید علی خامنہ ای سے اظہار تعزیت اور امریکا سے نفرت کا اظہار کرتے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ اس جانگزار سانحہ کے موقع پر وحدت مسلمین کے ذریعے امریکی اہداف کو شکست دینے کا عہد کرتے ہیں ، شہداءاپنا وعدہ پورا کرگئے شہداءکے ساتھی اللہ کا وعدہ پورا ہونے تک اپنا عہد پورا کرتے رہیں گے انشاءاللہ ۔

Page 11 of 1439

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree