وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے شعبہ سیاسیات سے جاری اعلامیے کے مطابق بلوچستان کے بلدیاتی انتخابات میں موصول ہونے والے نتائج کے مطابق مجلس وحدت مسلمین کے 16 امیدوار کامیابی سے ہمکنار ہوچکے ہیں۔ مجلس وحدت مسلمین شعبہ سیاسیات کے ترجمان سید طاہر عباس کے میڈیا کو جاری اعلامیہ کے مطابق ایم ڈبلیو ایم کے امیدوار سید عبدالغنی شاہ یونین کونسل کی نشست پر، عبدالکریم جمالی، ضلع صحبت پور سے عاشق علی جاکھرانی ضلع کونسل کی نشست پر، محمد زمان گولہ، مسز گلاب خان تحصیل تنبو سے کونسلر، سبی سے ایم ڈبلیو ایم سیکرٹری جنرل سید ندیم رضا زیدی، اوستہ محمد سے ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین کی رکن ضلع کونسل کی نشست حاصل کرنے میں کامیاب رہی ، غلام محمد جمالی سے ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین کی رکن مائی جوری جمالی کامیاب ہوگئی ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ کوئٹہ سے مجلس وحدت مسلمین کے امیدوار عباس علی اور کربلائی رجب علی، ڈیرہ مراد جمالی سے غلام علی عمرانی، گوٹھ داود خان سے جاوید علی عمرانی اور دیگر کامیاب ہوچکے ہیں۔ اس کے علاوہ کئی امیدواروں کو آزاد حیثیت میں کھڑا کیا گیا تھا، جن میں متعدد کامیاب ہوئے ہیں۔ سید طاہر عباس کا کہنا تھا کہ ابھی بعض حلقوں سے نتائج آنا باقی ہیںیہ امیدوار مبارکباد کے مستحق ہیں اور جلد ان منتخب نمائندوں کے اعزار میں تقریب منعقد کی جائے گی۔ مجلس وحدت مسلمین اسی طرح سندھ ،پنجاب اور خیبر پختونخواہ میں بھی بلدیاتی انتخابات میں بھر پور حصہ لے گی اُن کا کہنا تھا کہ ہم جمہوری جدو جہد پر یقین رکھتے ہیں اور بلو چستان کے نتائج نے ثابت کیا کہ ہماری عوامی جدوجہد کو بھر پور عوامی حمایت بھی حاصل ہیں

وحدت نیوز(اسلام آباد) مکتب اہل بیت علیہ السلام میں شکست کا کوئی تصور موجود نہیں ہے ، ہم راہ خدا میں ماردیئے جائیں یاپس زندان ڈالیں جائیں دونوں حالتوں میں کامیابی ہمارا مقدر بنتی ہے ، پاکستان میں شہادتوں کے جس راستے کا احیاء سالار شہدائے پاکستان شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی رحمتہ اللہ علیہ نے کیا تھا ہمارے دوست علامہ دیدارعلی جلبانی بھی اسی راہ کے مسافر بنے ، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری تبلیغات علامہ شیخ اعجاز حسین بہشتی نے مرکزی سیکریٹریٹ سے جاری اپنے تعزیتی بیان میں کیا ۔


ان کا کہنا تھا کہ شہید دیدار جلبانی کی شہادت سے مجلس وحدت مسلمین کے قائدین اور کارکنان کو ایک نیاء حوصلہ ، ولولہ اور جذبہ عطا ہوا ہے ، اب ہماری راہ اور زیادہ مشخص ہو چکی ہے ، ہماری بھی یہی آرزو ہے کہ خدا وند عالم امربالمعروف اور نہی عن المنکرکے تمام امور کی انجام دہی کے بعد ہمیں بستر کی موت نہ دے بلکہ شہدائے کربلاعلیہم السلام اور شہیدائے راہ ولایت کی پیروی کر تے ہو ئے شہادت کی موت نصیب فرمائے ، شہید نے ایک ہدف ہمارے لئے معین کیا ہے اور وہ دشمنان اسلام کا تعقب ہے جس سے ہمیں کسی لمحے بھی غافل نہیں ہو نا ہے ۔ اور ہر وقت فقط ملت وحدت اور بھائی چارگی کے قیام میں کوشاں رہنا ہے ۔ ہم عہد کر تے ہیں کہ جب تک جسم میں ایک قطرہ لہو کا باقی ہے ، شہداء کے الہٰی مشن سے روگردانی نہیں کر یں گے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے تحت شہید مولانا دیدارعلی جلبانی اور انکے باوفا محافظ شہید سرفراز بنگش کی یاد میں ایک تعزیتی جلسہ کا انعقاد مسجد و امام بارگاہ وحدت المسلمین چشتی نگر گلستان جوہر کراچی میں کیا گیا۔ تعزیتی جلسہ میں شہداء کے خانوادوں نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ تعزیتی جلسہ سے ایم ڈبلیو ایم سندھ کے ڈپٹی سکریٹری جنرل مولانا سید صادق رضا تقوی اور مولانا رجب علی بنگش نے خطاب کرتے ہوئے شہداء کے حالات زندگی اور راہ خدا میں انکی انتھک فعالیت پر تفصیلی روشنی ڈالی۔ تعزیتی جلسہ کی نظامت کے فرائض مبشر حسن، سلیم رضا نے سلام جبکہ مظفر رضوی نے نوحہ خوانی کی۔ جلسہ میں مولانا مہدی کریمی، مولانا ریاض، ایم ڈبلیو ایم کراچی ڈویژن کے سیکریٹری جنرل حسن ہاشمی سمیت علماء کرام، عہدیداران اور خواتین و حضرات کثیر تعداد میں شریک تھے۔ تعزیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا سید صادق رضا تقوی نے کہا کہ شہید مولانا دیدار علی جلبانی نے کبھی بھی مصلحت کی چھری سے اسلام و تشیع کا گلا نہیں کاٹا۔ آج وقت کا تقاضہ ہے کہ تمام عوام و خواص، تنظیمیں، جماعتیں، ادارے نام نہاد مصلحت پسندی کو ترک کرکے اسلام و تشیع کی سربلندی کی راہ میں ہر قسم کی قربانی دینے کے جذبے کے تحت فعال کردار ادا کریں۔

 

مولانا سید صادق رضا تقوی نے کہا کہ شہید مولانا دیدار علی جلبانی کے قاتلوں کے تانے بانے گورنر سندھ سے ملتے ہیں۔ شہید مولانا دیدار علی جلبانی اور انکے محافظ شہید سرفراز بنگش کا خون گورنر سندھ کے سر پر ہے جو اسلام و پاکستان دشمن کالعدم دہشتگرد تنظیموں اور کراچی پر قابض لسانی سیاسی جماعت کی سرپرستی کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہید مولانا دیدار علی جلبانی کی شہادت میں تکفیری عناصر سے زیادہ سیاسی عناصر کا کردار ہے، سیاسی عناصر اور تکفیری دہشت گردوں کے آپس میں گہرے تعلقات ہیں اور یہاں تک کہ ان دونوں کے درمیان دہشت گردوں کے تبادلے بھی عام ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج محب وطن سنی شیعہ مسلمان مملکت خداداد پاکستان کے تحفظ کیلئے اسلام و پاکستان دشمن تکفیری عناصر کو نابود کرنے کیلئے اپنی صفیں منظم کر چکے ہیں جس کے باعث ان تکفیریوں پر خوف و ہیبت طاری ہے اور وہ اپنے نام نہاد مذہبی و سیاسی سرپرستوں کے ذریعے پاکستان کے طول و عرض میں سنی شیعہ مسلمانوں کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں جس کی ایک کڑی جشن عید میلاد النبی (ص) اور عزاداری شہدائے کربلا (ع) کے جلوسوں پر پابندی کا مطالبہ کرنا ہے۔ مولانا صادق رضا تقوی نے کہا کہ شہید سرفراز بنگش نے ایک باوفا محافظ کے طور پر آگاہانہ شہادت کو گلے لگا کر حضرت عباس باوفا (ع) سے اپنے تعلق کی لاج رکھی اور حقیقی غلامِ عباس علمدار (ع) کی حیثیت سے نہ صرف اپنے والدین بلکہ ملت تشیع کو مادرِ سید الشہداء (ع) سیدہ فاطمہ زہراء (س) کے حضور سرخرو کر دیا۔

 

مولانا رجب علی بنگش نے تعزیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہداء زندہ ہیں، ہمارے امور پر ناظر ہیں اور ان کی خواہش ہے کہ ان کے احباب ان کی راہ و ہدف کو زندہ رکھیں، ان کے مشن کو جاری رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ شہید مولانا دیدار علی جلبانی انتہائی شجاع، نڈر، بے باک، مجاہد و مبارز عالم دین تھے جو کہ مسلسل اسلام و پاکستان دشمن عالمی استعمار امریکا اور اسکے مقامی ایجنٹ جو دینی و سیاسی لبادہ اوڑھے ہوئے تھے، کو بے نقاب کرنے میں سرگرم تھے۔ مولانا رجب علی بنگش نے مزید کہا کہ فقط اتحاد و وحدت بین المسلمین و مومنین شہید مولانا دیدار علی جلبانی کی زندگی و شہادت کا مقصد و ہدف تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہم واقعی شہید مولانا دیدار علی جلبانی و دیگر شہدائے ملت سے محبت و عقیدت رکھتے ہیں تو ہمیں تنظیمی تعصبات سے بالاتر ہو کر ملی خدمات انجام دینی ہونگی۔ مولانا رجب علی بنگش کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے شہداء کے قاتل یاد رکھیں اور اس خام خیالی میں نہ رہیں کہ ہم اپنے شہداء کو بھول جائیں گے، ہم نہ صرف اپنے شہداء کی یاد و راہ کو زندہ و جاوید رکھیں گے بلکہ انکے قاتلو ں اور انکے نام نہاد مذہبی و سیاسی سرپرستوں کا تعاقب بھی جاری رکھیں گے۔ تعزیتی جلسہ کے آخر میں نوحہ خوانی و سینہ زنی کی گئی اور اختتام دعائے سلامتی امام زمانہ (عج) سے کیا گیا۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے تحت شہید علامہ دیدار علی جلبانی اور ان کے محافظ سرفراز بنگش کی یاد میں چراغاں کا انعقاد کیا گیا۔ جائے شہادت شہید جلبانی (این ای ڈی یونیورسٹی) اور نمائش چورنگی پر منعقدہ چراغاں کے پروگرام میں ایم ڈبلیو ایم سندھ کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ صادق رضا تقوی،الفت عالم کربلائی، کراچی ڈویژن کے رہنما علی حسین نقوی، حسن ہاشمی، علامہ علی انور جعفری و دیگر رہنماو¿ں سمیت خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر شرکاءنے چراغ روشن کرتے ہوئے کراچی میں امن و امان کے قیام کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھنے کا عزم کیا اور یہ اعلان کیا کہ ہم شہداءکی قربانیوں کو ہمیشہ زندہ رکھیں گے تاکہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں مظلومین جہاں میدان میں حاضر رہ سکیں۔ اس موقع پر علی حسین نقوی کا کہنا تھا کہ شہید علامہ دیدار علی جلبانی ایک نڈر اور شجاع عالم دین تھے، استعماری طاقتوں کے ایجنٹوں نے ایک ایسی آواز کو ہم سے چھینا ہے کہ جو امریکہ مخالف اور دنیا بھر کے مظلوموں کی حامی آواز تھی، انشاءاللہ ہم ان کا مشن جاری و ساری رکھیں گے اور ہمیشہ ہر مظلوم کی حمایت کیلئے میدان میں حاضر رہیں گے۔حسن ہاشمی، علامہ علی انور جعفری و دیگر کا کہنا تھا کہ شہید علامہ دیدار جلبانی نے اپنی پوری زندگی میں استعماری قوتوں کو انتہائی شجاعت کے ساتھ للکارا اور ان کی سازشوں کو ناکام کرتے ہوئے ہمیشہ اتحاد کا پرچم بلند کیا، ان کے جنازہ میں اہل سنت برادر اور علمائے کرام کی شرکت اس بات کی غماز ہے کہ شہید جلبانی نے اپنے خون کے ذریعے امت مسلمہ کے اتحاد کی ایک ایسی امید روشن کی ہے کہ جو ہمیشہ ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) صوبہ بلوچستان میں جماعتی بنیادوں پر ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے ابتدائی طور پر غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق صوبے بھر سے مجموعی طور پر گیارہ (11) نشستوں پر کامیابی حاصل کرلی ہیں۔ صوبائی دارالحکومت کوئٹہ کے وارڈ نمبر 10 سے ایم ڈبلیو ایم کے حمایت یافتہ اُمیدوار کربلائی عباس علی نے 1250 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی ہے۔ اسی طرح وارڈ نمبر 12 سے ایم ڈبلیو ایم کے اُمیدوار کربلائی رجب علی نے 713 ووٹ لیکر پہلے نمبر پر رہے۔ علاوہ ازیں بلوچستان کے ضلع سبی سے 1، گنڈاوا سے 1، جعفرآباد سے 4، سنوبر پور سے 1 اور ضلع نصیرآباد سے 2 نشتوں پر کامیابی حاصل کرچکے ہیں۔

 

دوسری جانب کوئٹہ میں کل 62 حلقوں میں سے 35 حلقوں کے آمد نتائج کے مطابق پشتونخوا میپ 11، مسلم لیگ (ن) 7، آزاد 6 اور نیشنل پارٹی نے 5 نشستوں پر کامیاب حاصل کرلی ہیں۔ اسی طرح ژوب میں سٹی کے 33 وارڈز میں سے پشتونخوا ملی عوامی پارٹی 18 کامیاب امیدواروں کیساتھ پہلے نمبر پر، اے این پی اور جمعیت نظریاتی ایک ایک، مسلم لیگ (ق) تین نشستوں پر کامیاب جبکہ دیہی علاقوں میں پشتونخوا میپ پہلے، مسلم لیگ (ق) دوسرے اور جمعیت تیسرے نمبر پر ہیں۔ یاد رہے یہ نتائج غیر حتمی و غیر سرکاری ہیں، جبکہ سرکاری طور پر اصل نتائج کا اعلان 10 دسمبر کو ہوگا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) افریقہ کے معروف رہنما نیلسن منڈیلا کی موت پرمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے مرکزی سیکریٹریٹ سے جاری اپنےتعزیتی پیغام میں نیلسن منڈیلا کو امتیازی سلوک اور نسلی امتیاز کے خلاف ایک آواز سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا کہ منڈیلا افریقہ میں سامراجی ظلم و ستم سے پسی ہوئی عوام کے حقوق کی آواز تھے جنہوں نے قیدوبند کی طویل صعوبتیں سہیں لیکن ظلم و ستم کے خلاف جدوجہد سے پیچھے نہیں ہٹے۔ منڈیلا نے اپنی زندگی مظلوم اور پسے ہوئے طبقے کی خاطر جدوجہد میں گزاری۔ وہ معاشرتی ناانصافیوں اور نا ہمواریوں کے خلاف لڑتے رہے۔ دنیا انہیں ہمیشہ اچھے الفاظ میں یاد رکھے گی۔ جب  بھی کبھی مستضعفین افریقہ کے حقوق کی بات کی جائے گی نیلسن مینڈیلا کا نام تاریخ  کے اوراق میں  سنہری حروف سےلکھا نظر آئے گا، انہوں نے جنوبی افریقہ کی عوام سمیت دنیا بھر میں ظلم و ستم کے خلاف آواز اٹھانے والوں سے منڈیلا کی وفات پر تعزیت پیش کی ہے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree