The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ احمد اقبال رضوی نے مختلف اشیاء پر سیلز ٹیکس کی مد میں دی گئی چھوٹ کے خاتمے یا اس کی شرح میں اضافے کے لیے پیش کئے گئے منی بجٹ کو ناانصافی قرار دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مہنگائی کی نئی لہر عوام کی مشکلات میں اضافے کا باعث بنے گی۔قوم پر اس کی برداشت سے زیادہ بوجھ ڈالا جا رہا ہے۔عوام نے تحریک انصاف کو جس مثبت تبدیلی کے لیے مینڈیٹ دیا تھا وہ کہیں بھی نظر نہیں آ رہی۔گزشتہ تین سالوں کے دوران جس تیزی سے مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے اس کی ملک کی تاریخ میں کہیں مثال نہیں ملتی۔حکومتی اراکین کی جانب سے منی بجٹ کا دفاع عوام کی انکھوں میں دھول جھونکنے کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہاکہ اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی کر کے ملک کے متوسط طبقے کو مہنگائی کی اذیت سے نجات دلائی جائے۔موجودہ مہنگائی کے تناسب سے عوام کو ریلیف دینا ریاست کی ذمہ داری ہے۔ منی بجٹ سے عام ادمی کے متاثر نہ ہونے کا حکومتی دعوی اگر جھوٹ ثابت ہوا تو مذکورہ بجٹ کو عوام کے معاشی قتل کے لیے ایک ظالمانہ اقدام سمجھا جائے گا۔

وحدت نیوز(لاہور)مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور کے اسلام پورہ یونٹ کی جانب سے عظمت و تکریم شہداء ِ مکتب اہلبیت علیہ السّلام کو خراج عقیدت پیش کرنے کے سلسلہ میں کانفرنس اور قرآن خوانی کا انعقاد کیا گیا جس میں محترمہ حنا تقوی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور، ڈپٹی سیکرٹری جنرل محترمہ عظمیٰ نقوی، کابینہ ممبران اور یونٹ اراکین سمیت کثیر تعداد میں خواتین نے شرکت کی۔

تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک و قرآن خوانی سے کیا گیا۔فرائض ِ نظامت و منقبت خوانی محترمہ عظمیٰ نقوی ڈپٹی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور نے ادا کئے۔

راہ ِ حق پر اپنی جانیں نچھاور کرنے والے شہداء مکتب اہلبیت علیہ السّلام کی قربانیوں سے متعلق خصوصی خطاب کرتے ہوئے محترمہ حنا تقوی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور کا کہنا تھا کہ شہدائے انقلاب کے لیے ذاتِ سید الشہداء علیہ السلام چراغِ نور و ہدایت ہے۔ امام حسین علیہ السلام کو سید الشہداء اور بقیہ شہدائے کربلا کو تاریخ  شہداء کا سردار کہا جاتا ہے جو سب سے عظیم اور سب سے برتر ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ کربلا کا سب سے پہلا سبق دین اور خدا کی راہ میں فدا ہو جانا ہے ۔ امام عالی مقام نے تمام مسلمانوں بلکہ تمام عالم بشریت ، تمام آزاد منش افراد چاہے وہ مسلمان ہوں یا غیر مسلم ، کو یہ درس دیا کہ اگر انسان کا شرف ، اس کی آزادی اور استقلال ، انسانی اقدار اور مسلمانوں کا دین خطرے میں پڑ جائے تو سخت  حالات میں بھی  دین کا دفاع ایک اسلامی اور انسانی فریضہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مکتب تشیع سے تعلق رکھنے والے ہمارے تمام شہداء بالخصوص شہید عارف حسین الحسینی، شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی اور شہید قاسم کی زندگیاں اسی درسِ کربلا کا عملی مظاہرہ پیش کرتی نظر آتی ہیں۔ یہ زمانہ عصر تحریک اور عصر انقلاب ہے  اور مومن کے لیے  ذاتِ حسین ابن علی علیہ السّلام ایک ماہتاب عالم تاب ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شہدائے انقلاب و مکتب اہلبیت علیہ السّلام نے اپنی زندگیاں عالمی و طاغوتی استعمار کی سازشوں کیخلاف اور محروم و مظلوم طبقات کے حقوق کیلئے جدوجہد میں صرف کر دی ہمیں چاہئے کہ ہم اپنے شہداء کی زندگیوں کا روشن فکری کیساتھ مطالعہ کریں اور ان کے نقش قدم پر چلنے کی کوشش کریں۔

آخر میں محترمہ حنا تقوی نے محترمہ روبی سیکرٹری شعبہ مالیات اسلام پورہ یونٹ اور محترمہ شہزادی کی اس عظیم اور کامیاب کانفرنس کے انعقاد کے لیے  تمام کاوشوں کو سراہتے ہوئے مبارکباد پیش کی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)مجمع جہانی تقریب مذاہب اسلامی کے سیکریٹری جنرل آیت اللہ ڈاکٹر حمید شہریاری نےمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی جانب سےاسلام آباد کے مقامی ہوٹل میںاپنے اعزازمیں دیئے گئے عشائیہ کے موقع پر تقریب سے خطاب ہوئے کہا کہ پاکستان میں وحدت و اخوت کے لیے مجلس وحدت مسلمین کی کوششیں حوصلہ افزا ہیں۔مذہبی رواداری اور ہم آہنگی کی ایسی مثال ماضی میں نہیں ملتی۔

انہوں نے کہا کہ خاتم النبیین حضرت محمد صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی ذات مقدسہ امت مسلمہ کے لیے مرکز اتحاد ہے۔رہبر معظم آیت اللہ خامنہ ای اپنے خطبات میں واضح کر چکے ہیں کہ استکباری اور اسلام دشمن طاقتیں مسلمانوں کو تفرقہ بازی کے ذریعے آپس میں لڑا کر انہیں کمزور کرنے اور خود حکمرانی کرنے کی پالیسی پر گامزن ہیں۔ ایسے حالات میں امت اسلامیہ کا اتحاد ناگزیر ہے۔عالم اسلام کے قائدین اور سرکردہ شخصیات کو ان سازشی عناصر سے چوکنا رہنا ہوگا۔عالم اسلام کے مشترکہ دشمنوں کے خلاف مشترکہ محاذ قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ انقلاب اسلامی کے بعد آج بھی ایران صہیونیوں کے ناپاک عزائم کے مقابلے میں مضبوط اور ثابت قدم ہے۔ایران دنیا کی مظلوم اقوام بالخصوص فلسطینی عوام کے حقوق اور ان کے نظریات کے دفاع سے بھی غافل نہیں۔مجاہدین اسلام اورمقاومتی محاذ سے وابستہ تحریکوں کے ساتھ تعاون و ہم آہنگی ہمارا طرہ امتیاز ہے۔انہوں نے پاکستان کے مختلف مکاتب فکر کےدرمیان اسلامی وحدت اور اتحاد پر زور دیتے ہوئے اسے اولین فریضہ قرار دیا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس خبرگان ایران کے رکن وسنی عالم دین مولانا نذیر احمد سلامی نےمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی جانب سےاسلام آباد کے مقامی ہوٹل میںاپنے اعزازمیں دیئے گئے عشائیہ کے موقع پر تقریب سے خطاب ہوئے کہا کہ پاکستان میں مذہبی رواداری ہمارے لیے باعث مسرت ہے۔ماضی میں تکفیری طاقتوں کا غلبہ دیکھ کر دل رنجیدہ تھا لیکن آج محبت و اخوت کے جذبات اور تکفیریوں کو تنہائی و ذلت کا شکار دیکھ کر اطمینان اور حوصلہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ جو نظام قرآنی تعلیمات کے مطابق ہو گا اس کی حفاظت خدا تعالی اسی طرح کرے گا جس طرح وہ قران کا محافظ ہے۔

عشائیہ میں امت واحدہ کے سربراہ علامہ امین شہیدی، صوبائی وزیر زراعت گلگت بلتستان میثم کاظم، چیئرمین البصیرہ و مرکزی رہنما ملی یکجہتی کونسل ثاقب اکبر، ڈپٹی مئیر اسلام آباد ذیشان نقوی، پاکستان پیپلز پارٹی سیکریٹریٹ کے انچارج سبط حیدر بخاری، آئی ایس او کے وفد، جامعہ المصطفی العالمیہ کے وفد کے علاوہ دیگر سیاسی، سماجی اور صحافتی شخصیات بھی موجود تھیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما سینیٹر اعجاز چودھری نے مجمع جہانی اہلبیتؑ کے سیکرٹری جنرل آیت للہ ڈاکٹر حمید شہریاری، ان کے ہمراہ آنے والے مجلس خبرگان کےاہل سنت ممبر مولانا نذیر احمد سلامی اور ڈاکٹر محسن کے اعزاز میں مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے دیئے گئے عشائیہ میں اتحاد امت کے لیے مجلس وحدت مسلمین کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ وحدت مسلمین نے اپنے نام کو اپنے کردار سے منوایا ہے۔وطن عزیز میں اتحاد امت کے لیے مجلس وحدت مسلمین کی کوششیں مثالی اور قابل تقلید ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 45 سالوں میں اگر کسی نے طاغوت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کہ ہے تو وہ ایران ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) جماعت اہل حرم کے سربراہ مفتی گلزار نعیمی نے مجمع جہانی اہلبیتؑ کے سیکرٹری جنرل آیت للہ ڈاکٹر حمید شہریاری، ان کے ہمراہ آنے والے مجلس خبرگان کےاہل سنت ممبر مولانا نذیر احمد سلامی اور ڈاکٹر محسن کے اعزاز میں مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے دیئے گئے عشائیہ میں آیت اللہ شہریاری کے خطاب کی تعریف کرتے ہوئے اس نکتے کی بھرپور تائید کی کہ ہمیں رسول اللہ ص کی ذات کے ساتھ مربوط ہونا چاہئے۔ اتحاد کے لئے اس سے بڑا کوئی نکتہ نہیں ہو سکتا۔دنیا میں اسلامی بیداری کو منظم کرنا بہت ضروری ہے۔ استعماری قوتیں کچھ اسلامی ممالک کے ساتھ مل کر اسلام کو نشانہ بنانے میں مصروف ہیں۔ایسے حالات سے آگہی کے لیے وحدت و اخوت کے عملی اظہار پر مبنی ایسی تقریبات کا انعقاد انتہائی ضروری ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے مجمع جہانی اہلبیتؑ کے سیکرٹری جنرل آیت للہ ڈاکٹر حمید شہریاری، ان کے ہمراہ آنے والے مجلس خبرگان کےاہل سنت ممبر مولانا نذیر احمد سلامی اور ڈاکٹر محسن کے اعزاز میں مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے دیئے گئے عشائیہ سےخطاب کرتے ہوئےمجمع جہانی اہلبیت کے سیکرٹری جنرل ، ان کے ہمراہ آنے والے مجلس خبرگان کے ممبر آقائے سلامی اور ڈاکٹر محسن کی پاکستان میں موجودگی کو سراہتے ہوئے اس دورے کو خوش آئند قرار دیا اور شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے کہاکہ شہید قائد نے پاکستان کی سرزمین پر اتحاد بین المسلمین کا پرچم بلند کیا ہم انہیں شہید راہ حق بین مسلمین کہتے ہیں۔وہ شیعہ سنی مکاتب فکر کو شیر و شکر دیکھنا چاہتے تھے۔پاکستان کی سرزمین پر فتنہ گروں نے مذہبی منافرت پھیلانے کی سرتوڑ کوشش کی لیکن انہیں ناکامی دیکھنا پڑی۔اتحاد بین المسلمین ہمارے دین کا حصہ ہے اس کے لئے بڑی سے بڑی قربانی دینے سے بھی دریغ نہیں کریں گے۔پاکستان کے علماء باشعور و بابصیرت ہیں اور اتحاد کے راستے پر گامزن ہیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے مجمع جہانی اہلبیتؑ برائے تقریب مذاہب اسلامی کے سیکریٹری جنرل آیت للہ ڈاکٹر حمید شہریاری اور ان کے وفد کے اعزاز ایک پر وقار عشائیہ دیا۔ تقریب کا اہتمام اسلام آباد کے مقامی ہوٹل میں کیا گیا تھا جس میں مختلف علمی،سیاسی،سماجی اور صحافتی شخصیات کے علاوہ عالمی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

ڈاکٹر حمید شہریاری ،آقائے سلامی ، آقائے ڈاکٹر محسن ، سنیٹراعجازچودھری ، مولانا گلزار نعیمی اور آقائے محسن خزاعی تقریب کے مہمانان خصوصی تھے۔علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے مجمع جہانی اہلبیتؑ کے سیکرٹری جنرل ، ان کے ہمراہ آنے والے مجلس خبرگان کےاہل سنت ممبر مولانا نذیر احمد سلامی اور ڈاکٹر محسن کی پاکستان میں موجودگی کو سراہتے ہوئے اس دورے کو خوش آئند قرار دیا اور شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔

عشائیہ میں امت واحدہ کے سربراہ علامہ امین شہیدی، صوبائی وزیر زراعت گلگت بلتستان میثم کاظم، چیئرمین البصیرہ و مرکزی رہنما ملی یکجہتی کونسل ثاقب اکبر، ڈپٹی مئیر اسلام آباد ذیشان نقوی، پاکستان پیپلز پارٹی سیکریٹریٹ کے انچارج سبط حیدر بخاری، آئی ایس او کے وفد، جامعہ المصطفی العالمیہ کے وفد کے علاوہ دیگر سیاسی، سماجی اور صحافتی شخصیات بھی موجود تھیں۔

وحدت نیوز (ملتان) شہدائے پاکستان، شہداۓ راہ حق اور شہدائے مدافعین حرم ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں جن کی بدولت آج پاکستان، اسلام اور حرمہائے مقدسہ محفوظ ہیں۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین ضلع ملتان کے سیکرٹری جنرل مولانا وسیم عباس معصومی نے ضلعی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

 اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم جنوبی پنجاب کے صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل سلیم عباس صدیقی، علامہ قاضی نادر حسین علوی، ندیم عباس کاظمی، مولانا ہادی حسین، مولانا امیر حسین ساقی، مولانا خضر عباس اور دیگر موجود تھے۔

 اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا وسیم عباس معصومی کا کہنا تھا کہ شہداء کسی بھی قوم کی اساس ہوتے ہیں، جو قومیں اپنے محسنوں کو اور شہداء کو فراموش کر دیتی ہیں انہیں باقی رہنے کا کوئی حق نہیں ہے، نئے سال کی ابتداء شہدائے پاکستان شھدائے اسلام اور شہدائے مدافعین حرم کی یاد کے ساتھ کریں گے، پوری قوم ان شہدا کو خراج تحسین پیش کرتی ہے۔

 اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل سلیم عباس صدیقی کا کہنا تھا کہ شہداء مدافعین حرم باالخصوص شہید سلیمانی اور شہید ابو مہدی مھندس کی دوسری برسی کے موقع پر شایان شان سیمینار کا انعقاد کیا جائے گا جس سے مختلف مذہبی،سیاسی اور سماجی رہنما خطاب کریں گے۔ اجلاس میں مولانا محمد رضا مومن، مولانا غلام جعفر انصاری، سید عاصم علی زیدی، حکیم غلام شبیر، عاشق حسین اور دیگر موجود تھے۔

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ سیاسیات کے زیر اہتمام کراچی پریس کلب میں تعمیر کراچی تعمیر پاکستان کے عنوان سے آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔کانفرنس کی صدارت صوبائی سیکرٹری سیاسیات سیدعلی حسین نقوی نے کی۔

کانفرنس میں تحریک انصاف ،متحدہ قومی موومنٹ، پی ایس پی ،جی ڈی اے،عوامی نیشنل پارٹی،مسلم لیگ ق، جے یو آئی  ف،آل کراچی تاجر اتحاد ،پاکستان عوامی تحریک، پاکستان فلاح پارٹی سمیت سول سوسائٹی کے رہنماوں نے شرکت کی۔آل پارٹیز کانفرنس میں کراچی کی ترقی کے لیے مشترکہ کوششوں کا عزم کیا گیا۔اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے مرکزی رہنما علامہ مختارامامی، علامہ صادق جعفری ،علامہ مبشرحسن، میرتقی ظفر ، ناصر الحسینی ، عارف رضا زیدی و دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

ایم ڈبلیو ایم رہنما علی حسین نقوی نے کہا کہ بلدیاتی بل کے متعدد نکات پر اسٹیک ہولڈرز کے تحفظات کو دور کرنے کیلئے حکومت کو نظرثانی کرنا ہو گی۔ مذکورہ بل پر حکومت اور دیگر اسٹیک ہولڈرزکے درمیان ہم آہنگی انتہائی ضروری ہے۔شہر کی ترقی و عوامی سہولیات کی فراہمی وفاقی و صوبائی حکومتوں کی ذمہ داری ہے۔صوبہ کو قومی و لسانی بنیادوں پرتقسیم کرنا معاشی حب کو خطرہ میں ڈال دے گا۔شہر قائد بنیادی سہولیات سے محروم اشیاء خوردونوش کی فراہمی میں رکاوٹ، پانی،گیس، بجلی سمیت دیگر بحرانوں کا شکار ہے۔ حکومت محدود وسائل میں بھی مختلف ریلیف پروگراموں کے ذریعہ ترقی و خوشحالی کے بہترین مواقع میسر کر سکتی ہے۔شہر کے خودساختہ بحرانوں میں ملوث مافیاز کا خاتمہ کیا جائے۔شہریوں کے مسائل صرف تجاوزات کےخاتمہ سے حل نہیں ہوں گے بلکہ مہنگائی،بے روزگاری، پانی، گیس،بجلی سمیت بنیادی سہولیات کی فراہمی پر حکومت کو توجہ دینی ہو گی۔صوبہ سندھ کے دیگر نامکمل منصوبوں کی طرح کے فور منصوبہ تاحال مکمل نہیں ہوا۔شہر کی مردم شماری کے اعداد شمار پر شکوک و شبہات اٹھائے جا رہے ہیں۔ سیاسی رسہ کشی نے پورے ملک کو بحرانوں کا شکار کر دیا۔

تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی بلال احمد غفار نے کہا کہ شہر کی ترقی کیلئے سنگل ایجنڈے پر متحد ہیں ،2013 کا بلدیاتی بل میں شہری حکومت کے اختیارات نہیں ،مضبوط شہری حکومت کیلئے با اختیار شہری نظام کی ضرورت ہے،سندھ حکومت پی ایس سی ایوارڈ کا اب تک انعقاد ہی نہیں کیا،سندھ حکومت نئے لوکل باڈی سسٹم کے زریعہ صوبہ کو اپنا غلام بنا رہی ہے،سندھ میں کوئی ایک ماڈل یوسی نہیں جہاں عوامی بنیادی سہولیات میئسر ہوں،سندھ اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی اس بلدیاتی بل کے خلاف جدوجہد کر رہی ہے،جنوری میں با اختیار شہری حکومت کیلئے احتجاج کریں گے۔آئین کے آرٹیکل 140 اے کے تحت اختیارات پر عمل کیا جائے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما محفوظ یار خان نے کہا کہ مرد شماری کو ٹھیک سے مکمل کیا جائے،سندھ حکومت  صوبہ میں دوہری پالیسی کھیل رہی ہے،سندھ حکومت نے شہر کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا ہے،بلدیاتی بل کی ترامیم کے حق میں ہیں ایسے مسترد کرتے ہیں،کراچی پورے ملک کا ریونیو جنریٹ کرتا ہے، لہذا اس شہر کو اس کا حق دیا جائے۔

 رہنما گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس سردار عبد الرحیم نے کہا کہ شہریوں کو حقوق فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داریوں میں شامل ہے،شہر کو قومی لسانی سیاست نے بہت نقصان پہنچاہے،با اختیار شہری حکومت شہر کی ترقی کی ضامن ہے۔پڑھی لکھی قوم کو پینے کا صاف بھی میّسر نہیں۔بلدیاتی ایکٹ کو منسوخ کیا جائے۔دیگر صوبوں  اور شہروں کی طرح کراچی کی عوام کو بھی ان کا حق دیا جائے۔شہر کی ترقی و فلاح کیلئے متحد ہو کر مضبوط سسٹم بنانے کی ضرورت ہے۔

پاک سرزمین پارٹی کے رہنما سید حفیظ الدین نے کہا کہ وفاقی سطح پر شہرقائد کیلئے مختص مراعات صرف زبانی دعوؤں تک محدود ہیں۔خیبر پختونخوا اور بلوچستان کے حالیہ الیکشن میں عوام نے ان سیاسی قوتوں کو مسترد کر کے اپنے شدید ردعمل کا اظہار کیا جنہوں نے عوام کو نظر انداز کیا۔ سندھ کے بلدیاتی انتخابات میں بھی عوام کارکردگی کی بنیاد پر اپنا ووٹ دیں گے۔

مسلم لیگ ق کے رہنما طارق حسن نے کہا کہ پاکستان کی ضمانت کراچی ہے کراچی کی ترقی پاکستان کی ترقی ہے ، کراچی میں کچرے اٹھانے سمیت دیگر مسائل ہیں،اتنے بڑے شہر میں ٹرانسپورٹ کا کوئی نظام نہیں۔

اے پی سی میں شامل دیگر رہنماؤں نے کہا کہ عالمی وباء کرونا کے باعث  شہر میں کاروبار ی افراد کو شدید نقصان اٹھانا پڑا۔حکومتی سطح پر کاروباری افراد کو ریلیف فراہم کیا جائے تاکہ ان کے نقصانات کا کسی حد تک ازالہ ہو سکے۔ شہر یوں کیلئے بھی اشیاء خوردونوش، پانی،گیس، بجلی سمیت دیگر بنیادی سہولیات میں ریلیف پیکیجز کے اعلانات کئے جائیں۔ماس ٹرانزٹ پروگرام پر مکمل عملدرآمد ہونا چاہیے۔کراچی میں تعلیم، صحت اور ٹرانسپورٹ سمیت بیشتر مسائل ہیں جن پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔سر کلر ریلوے کی بحالی بھی عوامی ریلیف کا ذریعہ بنے گی۔ مستحکم بلدیاتی نظام شہر کی ترقی و عوامی فلاح کا بنیادی حصہ ہے۔حکومت تمام جماعتوں کو اعتماد میں لیکر بلدیاتی نظام کو ترتیب دے۔شہر کی تعمیر و ترقی کیلئے تمام جماعتوں کو اپنے اپنےاختلافات بالا طاق رکھ کر کام کرنا ہوگا۔ماہی گیروں کے مسائل،کراچی شہر کی ماسٹر پلان کے تحت تزئین و آرائش اور اکنامک کوریڈور پر مکمل توجہ دے کر شہریوں کو سہولیات  فراہم کی جائیں۔

Page 5 of 1185

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree