وحدت نیوز (مظفرآباد) ملت جعفریہ کے اکابرین علامہ تصور حسین نقوی الجوادی کے ہمراہ 15 فروری کو سینٹرل پریس کلب مظفرآباد میں اہم پریس کانفرنس کریں گے۔ پریس کانفرنس میں علامہ تصور جوادی کیس کے متعلق لائحہ عمل اعلان کیا جائے۔ پندرہ فروری علامہ تصور جوادی پر حملے کا دن ہے۔ اس دن ایک سال مکمل ہو جائے گا۔ آج تک مجرمان کا گرفتار نہ ہونا اور حکومتی عدم دلچسپی تشویشناک اور تکلیف دہ عمل ہے۔

اعلامیہ تفصیلات کے مطابق ملت جعفریہ مظفرآباد ڈویژن کا اہم اجلاس علامہ مفتی سید کفایت حسین نقوی کی رہائش گاہ پر ہوا۔ صدارت چیئرمین جعفریہ سپریم کونسل آزادکشمیر سید شبیر حسین بخاری نے کی۔ جبکہ سیکریٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی نے خصوصی شرکت کی۔ اجلاس میں علامہ سید فرید عباس نقوی ، علامہ احمد علی سعیدی ، مولانا سید طالب ہمدانی ، سید شجاعت علی کاظمی ، سید تصور عباس موسوی ، سید غفران علی کاظمی سید ذیشان حیدر ، پیر سید مہر علی شاہ ایڈوکیٹ ، سید تبریز علی کاظمی ، مولانا معصوم سبزواری ، مولانا حافظ کفایت نقوی ، مولانا خلیل نقوی ، مولانا مجاہد کاظمی ، مولانا سید فضائل نقوی سید محسن نقوی ، سید افضل سبزواری ، سید ضیاء الحسن ، پیر سید افتخار نقوی ، سید مشتاق کاظمی ، سید سعادت علی کاظمی ، سید منظور حسین نقوی ، سید منیر حسین شاہ ، سید صابر علی نقوی ، سید شاہد حسین نقوی ، سید کرامت علی کاظمی ، سید اسرار علی کاظمی ، تنویر احمد مغل اور دیگر بیسیوں مظفرآباد ، نیلم اور ضلع جہلم ویلی سے آئے رہنماؤں نے شرکت کی۔ اکابرین ملت جعفریہ نے گزشتہ ایک سالہ انتظامیہ کی کارکردگی اور کیس کے حوالے سے کردار کو اجلاس کے سامنے پیش کیا۔

 اس موقع پر علامہ مفتی سید کفایت حسین نقوی، سید شبیر حسین بخاری ، علامہ فرید عباس نقوی ، علامہ احمد علی سعیدی ، مولانا سید طالب ہمدانی ، سید شجاعت علی کاظمی ، سید تصور عباس موسوی و دیگر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایک سال مکمل ہونے کو ہے لیکن تا حال علامہ تصور جوادی اور ان کی اہلیہ پر قاتلانہ دہشتگردانہ حمل کرنے والوں کو گرفتار نہ کیا جانا افسوسناک عمل ہے۔ ہم نے ایک لمبا وقت دیا تا کہ انتظامیہ بغیر کسی مداخلت کے اچھا رزلٹ سامنے لائے۔ مگر ہمیں مایوس کیا گیا۔ ہماری خاموشی کو کمزوری گردانا گیا۔ لیکن واضح رہے کہ مجرمان کے کٹہرے میں آنے تک ہمارا ایک ایک فرد چین سے نہیں بیٹھے گا۔ بھمبر سے لیکر نیلم تک ہمارا ہر فرد مضطرب ہے اور جواب چاہتا ہے۔ 15 فروری کو پریس کانفرنس میں آئندہ کا لائحہ عمل دیں گے۔ ہم ریاست کے شہری ہیں ہم سے ہمارا بنیادی حق یعنی حق زندگی نہ چھینا جائے۔

وحدت نیوز (مظفرآباد) تفصیلات کے مطابق ملت جعفریہ کی جملہ تنظیمات پر مشتمل کمیٹی کا اجلاس دفتر مجلس وحدت مسلمین مظفرآباد میں منعقد ہوا۔اجلاس کی صدارت سرپرست اعلی علامہ مفتی سید کفایت حسین نقوی نے کی۔ اجلاس میں چیئرمین کمیٹی سید شبیر حسین بخاری سربراہ جعفریہ سپریم کونسل آزاد کشمیر،علامہ سید فرید عباس نقوی وائس چیئر مین جعفریہ سپریم کونسل آزاد کشمیر، مولانا طالب حسین ہمدانی ڈپٹی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر،مولانا سید معصوم علی سبزواری صدر شیعہ علماء کونسل ضلع مظفرآباد،سید شجاعت علی کاظمی کوآرڈینیٹرانسداد دہشت گردی ایکشن کمیٹی،سید راشد علی نقوی صدر انجمن جعفریہ جہلم ویلی ،سید تصور عباس موسوی،نمائندہ آئی او،نمائندہ آئی ایس اوکے علاوہ دیگر نے شرکت کی۔اجلاس میں علامہ تصور جوادی کیس پر انتظامی کارکردگی پر سخت مایوسی کا اظہار کیا گیا،انتظامی اداروں کی اس کیس پر عدم پیش رفت ایک مجرمانہ فعل ہے اور ناقابل معافی عمل ہے۔ شرکاء اجلاس نے کہا کہ ایس ایس پی مظفرآباد کی کارکردگی صفر ہے، پولیس آفیسر مجرمان کو تحفظ دینے کی کوشش کر رہے۔ 15فروری 2017کے واقعہ کے بعد آزادکشمیر میں بالعموم اور مظفرآباد ڈویژن میں بالخصوص کالعدم تنظیموں کی فعالیت عروج پر پہنچ چکی ہے جسکی بارہا نشاندہی کی گئی لیکن انتظامیہ نے بات گول کر دی۔مقررین نے کہا کہ اب اس کیس کا فیصلہ سڑکوں پر ہو گا اور حالات کی تمام تر زمہ داری انتظامیہ پر ہو گی۔ کوآرڈینیٹرکمیٹی سید طالب حسین ہمدانی کے کہا کہ ہم انتظامیہ کے ساتھ امذید ملاقاتیں نہیں کریں گے بلکہ اب انتظامیہ کو ہمارے تحفظات دور کرنے ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ 15فروری 2018کو مظفرآباد ڈویژن میں دما دم مست قلندر ہو گا،اور اسی طرح کا احتجاج ہو گا جیسا اْس سانحہ کے روز ہوا تھا۔اب کی بار احتجاج چارٹر آف ڈیمانڈ مکمل ہونے تک جاری رہیگا۔ شرکاء اجلاس نے بہت جلد ایک تفصیلی پریس کانفرنس کرنے کا اعلان کیا جس میں آئندہ کا لائحہ عمل پیش کیا جائے گا۔اجلاس میں اس بات کا بھی فیصلہ ہوا کہ جلدازجلد وزیراعظم آزادکشمیر سے ایک آخری ملاقات کی جائے گی اور اپنے تحفظات و آئندہ کا لائحہ عمل سامنے رکھا جائیگا۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) مجلس وحدت مسلمین آزاد کشمیر کے ترجمان سید حمید حسین نقوی نے کہا کہ ا مریکی اقدام نے امت مسلمہ کے دل میں خنجر پیوست کر دیا ہے۔امریکہ کو عالمی قوانین کی ہرگز پرواہ نہیں اور نا ہی دنیا کے امن سے کچھ مطلب اپنے ناپاک عزائم کی تکمیل کے لئے اس نے دنیا بھر میں انسانوں کا قتل عام کیا ہے۔بیت المقدس مسلمانوں کا قبلہ اول ہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت بنائے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔اور پاکستانی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس مسئلے پر فوری طورپر امریکہ سفیرکو وزات خارجہ میں طلب کیا جائے۔حکومت پاکستان اس مسئلے اپنے موقف کو واضع طور پر پیش کرئے۔

ان کا مذید کہنا تھا کہ مجلس وحدت مسلمین اس مسئلے پر ہرگز خاموش نہیں بیٹھے گی قبلہ اول مسلمانان عالم کا دل ہے،اس کیخلاف امریکہ اور اسرائیل کی سازش کو ہم کبھی کامیاب ہونے نہیں دینگے، اسرائیل انشااللہ دنیا کے نقشے سے جلد مٹ جائیگا،اسرائیل کے خاتمے کا کاونٹ ڈاون شروع ہو چکا،عالم اسلام کا بچہ بچہ غاصب انسانیت دشمن صہیونی ریاست کیخلاف لڑنے اور بیت المقدس کی آزادی کے لئے ہمہ وقت تیار ہیں۔انہوں نے کہا کہ کہاں ہے تمام اسلامی ممالک کو مل کر اس ناسور کا خاتمہ کرنا ہو گا اگر ایسا بروقت نہ ہوا تو پوری دنیا کا وجود بلعموم اورملت اسلامیہ بالخصوص خطرے میں ہے نیز اگر 41ممالک کا اسلامی اتحا د القدس کی آزادی کے لیے کچھ نہیں کر سکتا تو اس کے قیام پر سوالیہ نشان ہے،انشاء اللہ ظالموں جابروں کے خاتمے کا وقت آ پہنچا ہے،وہ وقت دور نہیں جب اسرائیل اور اسکے سرپرست امریکہ کے ناپاک عزائم خاک میں مل جائینگے،مسلمان متحد ہو کر امریکہ اسرائیل اور اسکے اتحادی پٹھوں کیخلاف ہر سطح پر آواز بلند کریں،یہ ہمارے ایمان کا حصہ ہے اسے ہم سرانجام دیتے رہیں گے۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) مجلس وحدت مسلمین آزاد کشمیر کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل مولانا سید طالب حسین ہمدانی نے وحدت سیکرٹریٹ مظفرآباد سے جاری ہونیوالے اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے قبلہ اول کو اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کرنے اور وہاں امریکی سفارت خانہ کھولنے کا اعلان شرپسندی ہے جس کے خلاف مسلمانان ریاست آزادجموں و کشمیر میں شدید تشویش پائی جاتی ہے۔اور پوری ریاست ڈونلڈ ٹرمپ کے بیان کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بیت المقدس کو اسرائیل کا پایہ تخت قرار دینا امت مسلمہ کے زخموں پر نمک پاشی ہے۔ امریکی صدر کا اسلام دشمن متعصبانہ رویہ عالمی امن کے لئے خطرہ بنتا جا رہا ہے۔اس اقدام کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔امریکی صدر نے امت مسلمہ کے وقار پر حملہ کیا ہے۔اس پر خاموش رہنا امت مسلمہ کی توہین ہے۔ عالمی قوانین کی اس پامالی پر تمام مذہبی و سیاسی جماعتوں، طلبا تنظیموں اور ریاستی اداروں کو اپنی آواز بلند کرنا ہو گی۔مسلمان ہونے کے ناطے بیت المقدس سے ہم سب کا مذہبی تعلق جڑا ہوا ہے۔امریکہ اپنی ناجائز اولاد اسرائیل کا ہمیشہ دفاع کرتا آیا ہے۔ اس حمایت کی بنیاد اسلام دشمنی کے علاوہ اور کوئی نہیں۔انہوں نے کہا کہ ڈونلڈ کی اسلام دشمن پالیسیوں میں اسے عرب مسلم ممالک کی مکمل حمایت حاصل ہے جو افسوسناک ہے۔عالم اسلام کی تنزلی عرب حکمرانوں کی خیانت کا نتیجہ ہے۔مظلوم فلسطینیوں اور بیت المقدس کے حوالے سے پاکستان کو واضح اور دو ٹوک موقف اختیار کرنا چاہیے۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) بجلی لوڈشیڈنگ کا درد ناک عذاب،وزیراعظم آزاد کشمیر واپس آ کر عوام کی خبر لیں۔ بیس گھنٹے کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ناقابل برداشت اقدام ہے، واپڈا ہوش کے ناخن لے ۔ ان خیالات کا اظہار سیکرٹری سیاسیات مجلس وحدت مسلمین آزاد جموں و کشمیرسید محسن رضا سبزواری ایڈووکیٹ نے وحدت میڈیا سیل سے جاری ایک بیان میں کیا ۔

 انہوں نے کہا کہ کاروبار زندگی بری طرح سے متاثر ہے۔ گرمی کے ساتھ ساتھ لوڈشیڈنگ کا عذاب بری طرح مسلط کر دیا گیا ہے۔پچھلے دنوں سینئر وزیر اور وزیر برقیات کی جانب سے ایک ریاستی اخبار کو اشتہار دیا گیا ، جس میں حکومت کے سال مکمل ہونے کے بعد بتایا گیا کہ آزاد کشمیر کو سو فیصد بجلی فراہم کی جارہی ہے ۔ جو کہ ریاست کی عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق تھا۔ وزیراعظم اور وزراء نواز شریف کو جہلم سے ہی رخصت کر کے دارالحکومت واپس آکر سو فیصد بجلی فراہمی کا بندوبست کریں ۔ نہیں تو عوام سے معافی مانگیں ۔

 سیکرٹری سیاسیات سید محسن رضا سبزواری ایڈووکیٹ نے مزید کہا کہ عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوچکا۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ واپڈا جیسے بے لگام ہاتھی کا بندوبست کرتے ہوئے بجلی بلاتعطل فراہم کی جائے۔ آزاد کشمیر کی ضرورت ساڑھے تین سو میگاواٹ جبکہ پیداوار چودہ سو سے زائد ہے۔ مزید نئے منصوبوں کو ملا کے یہ پیداوار ڈبل ہو جائے گی۔ ایسی صورت میں بجلی بنا کے دینے والے خطے کوہی بجلی سے محروم رکھنا ظلم عظیم ہے۔ وزیراعظم آزاد کشمیر فوری طور پر وزیر اعظم پاکستان کے ذریعے اس معاملے کو حل کرنے لیے قدم اٹھائیں ۔ وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی اپنی مختصر مدت میں اس اہم مسئلے کو حل کریں ہم اسے کارنامہ شمار کریں گے اور شکر گزار ہوں گے۔ انہوں نے کہا دردناک لوڈشیڈنگ کے عذاب کے خلاف انجمن تاجران یا کوئی بھی سیاسی جماعت کوئی تحریک شروع کرتی ہے تو مجلس وحدت مسلمین اس عوامی حق کے لیے ان کے شانہ بشانہ ہو گی۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین آزاد کشمیر کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ طالب حسین ہمدانی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کا قتل عام کیا جا رہا ہے، لیکن پاکستانی حکومت نے اپنے مفادات کی خاطر مسئلہ کشمیر کو پس پشت ڈالا ہوا ہے۔ ایم ڈبلیو ایم سندھ کے زیر اہتمام نشترپارک کراچی میں استحکام پاکستان و امام مہدیؑ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ طالب حسین ہمدانی نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا کردار انتہائی خراج تحسین کے لائق ہے کہ جس نے اپنے منشور میں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ٹھوس مؤقف دیا اور عملی حوالے سے کشمیریوں کے شانہ بشانہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ تصور جواد نقوی کی انتھک محنتوں سے آزادی کشمیر میں اپنی جدوجہد سے زمینہ ہموار کی، رواں سال 15 فروری کو ان پر اسلام و ملک دشمن تکفیری دہشتگرد عناصر کی جانب سے قاتلانہ حملہ ہوا، تکفیریت ہماری استقامت سے خوفزدہ ہے، ہم نے پھر بھی امن، اتحاد اور وحدت کا دامن نہیں چھوڑا، ہم تمام تر ظلم و ستم برداشت کرتے ہوئے راہ الٰہی پر گامزن رہتے ہوئے اپنے مقاصد پر گامزن رہیں گے اور ظہور امام مہدیؑ کی راہ ہموار کرنے کیلئے سرگرم عمل رہیں گے۔

Page 1 of 4

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree