The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) وائس چیئرمین مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ سید احمد اقبال رضوی کی نانی محترمہ سیدہ کنیز پیمبری زوجہ سید اختر حسین آج کراچی میں رضائے الہی سے انتقال فرما گئیں ہیں نماز جنازہ آج بعد نماز مغربین مسجد امام رضا ؑ نیو رضویہ سوسائٹی کراچی میں ادا کی جائے گی۔

مرحومہ کے انتقال پر چیئرمین ایم ڈبلیوایم علامہ راجہ ناصرعباس جعفری ، مرکزی جنرل سیکریٹری سید ناصرشیرازی سمیت دیگر مرکزی وصوبائی قائدین نے دلی افسوس اور رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔

اپنے مشترکہ تعزیتی پیغام میں ایم ڈبلیوایم قائدین نے مرحومہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ خدا وند متعال مرحومہ کی مغفرت فرمائے ، انہیں جوار آئمہ معصومینؑ میں محشور فرمائے اور تمام پسماندگان کواپنی بارگاہ سے صابرین کا اجر عظیم عنایت فرمائے۔

دوسری جانب مرکزی سیکریٹریٹ اسلام آباد میں مختلف رہنماؤں اور آفس اسٹاف نے علامہ سید احمد اقبال رضوی سے ملاقات کی اور ان کی نانی محترمہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہارکرتے ہوئے مرحومہ کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین شمالی پنجاب کے رہنما و ممبر متحدہ علماء بورڈ پنجاب کی ملتان میں مجلس وحدت مسلمین ملتان کے ضلعی صدر علامہ وسیم عباس معصومی سے ملاقات، متحدہ علماء بورڈ پنجاب کے ممبر نے ایم ڈبلیو ایم کے نومنتخب صدر کو نئی ذمہ داریوں پر مبارکباد پیش کی۔ اس موقع پر ممبر متحدہ علماء بورڈ پنجاب، پرنسپل جامعہ شہید مطہری ملتان و صوبائی صدر مجلس علماء شیعہ جنوبی پنجا ب علامہ قاضی نادر حسین علوی اور دیگر موجود تھے۔ علامہ حسن رضا ہمدانی نے علامہ وسیم معصومی کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یہ ذمہ داریاں قوم کی امانت ہیں ہمیں اپنے اخلاص کے ساتھ اس قومی ذمہ داری کو ادا کرنے کی جدوجہد کرنی چاہیے، اس وقت ملت تشیع سخت اضطراب میں ہے، مجلس وحدت مسلمین نے ہر میدان میں قوم کی ترجمانی کی ہے اور انشاء اللہ آگے بھی ہر میدان میں موجود رہیں گے۔ علامہ وسیم عباس معصومی نے ایم ڈبلیو ایم شمالی پنجاب کے صوبائی رہنما کا ملتان آمد پر شکریہ ادا کیا۔

وحدت نیوز(ملتان) شیعہ علماء کونسل جنوبی پنجاب کے رہنما علامہ غلام شبیر حیدری نے نومنتخب ضلعی صدر ملتان مولانا اعجاز بہشتی اور نائب صدر صابر حسین کے ہمراہ جامع مسجد الحسین نیو ملتان میں مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے صدر علامہ اقتدار حسین نقوی سے ملاقات کی۔ ملاقات میں شیعہ علماء کونسل کے وفد نے علامہ اقتدار نقوی سے اُن کی والدہ کی وفات پر اظہار افسوس کیا اور بلندی درجات کے لیے فاتحہ خوانی کی۔

 علامہ اقتدار نقوی کی والدہ چند روز قبل رضائے الہی سے انتقال کر گئی تھیں۔ اس موقع پر علامہ غلام شبیر حیدری نے مرحومہ کے بلندی درجات کے لیے خصوصی دعا کرائی۔ دوسری جانب مرحومہ کے ایصال ثواب کے لیے مجلس وحدت مسلمین ملتان کے زیراہتمام  29جنوری بروز اتوار کو مجلس ترحیم کا پروگرام رکھا گیا ہے۔

وحدت نیوز(قم)تکفیری بِل کو نہیں مانتے، ہم فرزندانِ قائداعظم ہیں، تکفیری سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ ہم قائداعظم اور علامہ اقبال کے پاکستان کے محافظ ہیں۔ ہمارے ہوتے ہوئے اس ملک کو تکفیری ملک نہیں بنایا جا سکتا۔ تفصیلات کے مطابق مجلس وحدت مسلمین شعبہ امور خارجہ کا ایک اہم اجلاس ایم ڈبلیو ایم کے سیکرٹری امورِ خارجہ حجۃ الاسلام ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی کی زیرِ صدارت قم المقدس میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں علمائے کرام نے نام نہاد ناموسِ صحابہ بِل کے مختلف پہلووں کا جائزہ لیا۔ علمائے کرام کا کہنا تھا کہ یہ بِل صریحاً دینِ اسلام اور آئینِ پاکستان کے خلاف ہے۔ انہوں نے اس موقع پر کھل کر اس بات کا اظہار کیا کہ فرزندانِ پاکستان ہونے کے ناطے ہم اس غیر دینی تکفیری بِل کو نہیں مانتے۔

اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم کے خارجہ سیکرٹری حجۃ الاسلام ڈاکٹر شفقت شیرازی نے اپنی گفتگو میں کہا کہ ہم فرزندانِ قائداعظم ہیں اور کانگرسی لیڈروں کی اولاد نیز تکفیری سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ ہم قائداعظم اور علامہ اقبال کے پاکستان کے محافظ ہیں۔ ہمارے ہوتے ہوئے اس ملک کو گانگرسی لیڈروں کی تمنّا کے مطابق نہ تو توڑا جا سکتا ہے اور نہ ہی تکفیری ملک بنایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ملک کی جغرافیائی اور نظریاتی سرحدوں کی حفاظت ہماری دینی ذمہ داری ہے اور اس ذمہ داری کو ادا کرنے کیلئے ہماری جان و مال سب کچھ حاضر ہے۔

وحدت نیوز(قم) ورکشاپ کا مقصد مختلف تنظیمی شعبہ جات کے مسئولین کی پیشہ وارانہ مہارتوں میں اضافہ تھا۔ اس مقصد کیلئے ماہر اور جیّد اساتذہ کرام کی خدمات حاصل کی گئیں۔ تفصیلات کے مطابق مجلس وحدتِ مسلمین کے شعبہ امورِخارجہ کے زیرِ اہتمام قم المقدس میں مختلف تنظیمی شعبہ جات کے مسئولین کی پیشہ وارانہ مہارتوں میں اضافے کیلئے موسسہ باقرالعلوم میں ایک چھ روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا۔ ورکشاپ میں مجلس وحدت مسلمین قم المقدس، مشہد اور اصفہان کے سربراہان اور تنظیمی شعبہ جات کے مسئولین نے شرکت کی۔ تربیتی کلاسز کا دورانیہ صبح سات بجے سے نمازِ مغرب تک تھا۔ درمیان میں کھانے اور نماز کے بعد مختصر استراحت کا وقفہ بھی کیا جاتا رہا۔ ورکشاپ میں پاکستان شناسی، ذرائع ابلاغ، جدید اسلامی تمدن کی تشکیل، استعمار کی چالوں اور ثقافتی مدیریت کے حوالے سے کلاسیں منعقد ہوئیں۔

ورکشاپ کے آخری روز اختتامی تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس سے مجلس وحدت مسلمین کے شعبہ امورِ خارجہ کے سیکرٹری حجۃ الاسلام  ڈاکٹر شفقت حسین شیرازی نے خطاب کیا۔ انہوں نے اپنے خطاب کے دوران مختلف تنظیمی و تربیتی نکات پر روشنی ڈالی اور مسئولین کے اعزاز میں عشائیہ دیا گیا۔ ورکشاپ کے شرکاء نے تربیتی ورکشاپ کی افادیت کو سراہا اور اپنے معزز میزبان کا شکریہ ادا کیا۔ تقریب کے آخر میں ورکشاپ کے منتظمین اور نمایاں کارکردگی دکھانے والے مسئولین کو تعریفی اسناد بھی عطا کی گئیں۔

وحدت نیوز(قم) مجلس وحدت مسلمین شعبہ امورِ خارجہ میں دو نئے مسئولین کا اضافہ کیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایم ڈبلیو ایم پاکستان شعبہ امورِ خارجہ کے سیکرٹری حجۃ الاسلام ڈاکٹر شفقت شیرازی نے قم المقدس، مشہد مقدس اور اصفہان کے مسئولین کے ایک مشترکہ اجلاس میں شعبہ امورِ خارجہ میں دو نئے مسئولین کو نامزد کیا ہے۔ انہوں نے مختلف شعبہ جات کے مسئولین کے اجلاس سے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا شعبہ امورِ خارجہ اپنے نظریاتی و تنظیمی دوستوں کو صلاحیتوں کے اظہار کیلئے بھرپور مواقع فراہم کرنے پر یقین رکھتا ہے۔ اس موقع پر انہوں نے حجۃ الاسلام مولانا محمد عادل علوی صاحب کو شعبہ امور خارجہ کے مسئول روابط کے طور پر نامزدگی کا اعلان کیا۔ انہوں نے اس موقع پر قبلہ عادل علوی صاحب کی سابقہ تنظیمی خدمات اور تنظیم کیلئے جدوجہد کو بھی سراہا۔

یاد رہے کہ حجۃ الاسلام عادل علوی صاحب مجلس وحدِت مسلمین شعبہ قم کے سابق مسئول بھی رہ چکے ہیں اور تنظیمی حلقوں میں تمام احباب ان کی خدمات اور خلوص کے معترف ہیں۔ ان کے بعد ایم ڈبلیو ایم شعبہ امورِ خارجہ کے شعبہ ابلاغ (میڈیا) کے  مسئول کے طور پر حجة الاسلام مولانا نذر حافی کی نامزدگی کا بھی اعلان کیا۔ آقای نذر حافی کو بھی تنظیمی و نظریاتی حلقوں میں دوست احباب اچھے طریقے سے جانتے ہیں اور وہ بھی مختلف صورتوں میں اس سے پہلے شعبہ قم میں اپنی خدمات انجام دیتے رہے ہیں۔ شرکاء نے اس اعلان کا خیر مقدم کیا اور دعا کی کہ خداوند عالم مذکورہ بالا مسئولین کو کامیابی نصیب فرمائے۔

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ سید حسن ظفر نقوی نے کہا ہے کہ جس معاشرے میں عدالت نہ ہو وہ معاشرہ خوشحالی کے باوجود بدحالی کا شکار ہوجاتا ہے اور اچھی سے اچھی قوم تباہی سے دوچار ہو جاتی ہے آج ہم مارشل لاء سے بھی زیادہ سخت دور کا سامنا کر رہے ہیں۔ کراچی میں عہدیداران کی تربیتی نشست سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عام آدمی عدل و انصاف کے لئے ترس رہا ہے، کرپشن نے معاشرے کی بنیادوں کو کھوکلا کردیا ہے، عدالتیں غریبوں کو انصاف فراہم کرنے میں ناکام ہیں، طاقتور اپنی مرضی کے فیصلے کروالیتے ہیں۔

علامہ حسن ظفر نقوی نے کہا کہ امیرالمومنین علی ابن ابی طالب علیہ السلام اسی عدالت کے قیام کی راہ میں شہید ہوگئے، اسلام کی بنیاد عدالت پر ہے، اگر حکمران طبقہ عدالتوں کو اپنے اقتدار بچانے اور مخالفین کو کچلنے کے لئے استعمال کرے تو معاشرہ آگے بڑھنے کے بجائے زوال کا شکار ہو جاتا ہے، پاکستان میں گزشتہ 75 سالوں کی یہی داستان ہے کہ طاقتوروں کو ان کی مرضی کا انصاف مل جاتا ہے اور غریب آدمی کو اس کا حق بھی نہیں ملتا۔ اس موقع پر علامہ صادق جعفری، رضی رضوی، زین رضوی سمیت دیگر ذمہ داران موجود تھے۔

وحدت نیوز(جیکب آباد) مجلس وحدت مسلمین بلوچستان اور انجمن حسینیہ خواجگان نارووال کے زیر اہتمام مدرسہ المصطفی خاتم النبیین صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم جیکب آباد میں متاثرین سیلاب کے مکانات کی تعمیر کے سلسلے میں ایک پر وقار تقریب منعقد ہوئی تقریب میں متاثرین سیلاب بیوہ مستحقین اور سادات شریک ہوئے۔ اس موقع پر گیارہ متاثرین سیلاب کو تعمیر مکان کی پہلی قسط دی گئی جبکہ دو سو مستحقین میں رضائیاں تقسیم کی گئیں۔

تقریب سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری تنظیم سازی علامہ مقصود علی ڈومکی ،مجلس علمائے شیعہ کے رہنما علامہ ارشاد علی سولنگی، ایم ڈبلیو ایم بلوچستان کے رہنما سید رضوان علی شمسی ،برادر عبدالرشید ،مولانا عبد الخالق منگی، مولانا منور حسین سولنگی ،حافظ غلام عباس بھٹی نے خطاب کیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ انجمن حسینیہ خواجگان نارووال اور مجلس وحدت مسلمین کے باہمی تعاون سے متاثرین سیلاب کی خدمت اور تعمیرات کا سلسلہ قابل ستائش ہے۔ خدمت خلق اور دکھی انسانیت کی خدمت پر اللہ تعالیٰ کی توفیق پر ہمیں خدا کا شکر ادا کرنا چاہیے۔ سیلاب نے ہزاروں گھر اجاڑ دیئے کھڑی فصلیں اور زراعت تباہ ہوئی مگر اہل خیر نے جس ہمت اور خلوص کے ساتھ متاثرین سیلاب کا ساتھ دیا وہ لائق صد تحسین ہے۔ بدقسمتی سے اس مصیبت میں حکومت کہیں نظر نہیں آئی اور حکومتی کارکردگی صفر رہی  انہوں نے متاثرین سیلاب کی مدد پر انجمن حسینیہ خواجگان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین روز اول سے اب تک متاثرین سیلاب کے ساتھ رہی اور ہم ان کی مکمل بحالی تک حسب استطاعت ان کی مدد کریں گے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل مجلس وحدت مسلمین بلوچستان اور انجمن حسینیہ خواجگان نارووال کی جانب سے ڈیرہ غازی خان کے سیلاب متاثرہ گھروں کی تعمیر نو کا آغاز بھی کیا جاچکا ہے۔

وحدت نیوز(لاہور) صدر مجلس وحدت مسلمین پنجاب علامہ سید علی اکبر کاظمی نے ہالینڈ کے بعد سویڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کی شدید مذمت کرتے ہوئے آج بعد نماز جمعہ پنجاب بھر کی مساجد اور امام بارگاہوں کے باہر پر امن احتجاج کی اپیل کی ہے۔

علامہ علی اکبر کاظمی نے کہا کہ عالمی برادری انتہا پسندی کی جانب بڑھتے ہوئے قدم روکے، مسلمان سب کچھ برداشت کرسکتا ہے لیکن اپنے دین کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتا۔

انہوں نے اپیل کی کہ ملک گیر سطح پر زیادہ سے زیادہ پرامن احتجاج کے ذریعے عالمی برادری پر اپنا اتحاد اور اتفاق ظاہر کیا جائے اور انہیں مجبور کیاجائے کہ وہ مسلمانوں کے مقدسات کی توہین سے باز رہیں ۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس علماء شیعہ پاکستان کے مرکزی صدر علامہ سید حسنین گردیزی نے دیگر علمائے کرام کے ہمراہ نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قومی اسمبلی سے پاس ہونے والے مقدس شخصیات کی توہین کے بل پر ملت جعفریہ پاکستان کو شدید تحفظات ہیں جسے ہم یکسر مسترد کرتے ہیں۔ ہم پرامن لوگ ہیں کسی کے مقدسات کی توہین کو جائز نہیں سمجھتے ہمارے فقہاء کے نزدیک یہ حرام ہے ہم بھی امید کرتے ہیں کہ ہمارے مقدسات وعقائد کا بھی احترام کیا جائے۔ مقدس شخصیات کی توہین کے حوالے سے منظور کیا گیا بل پہلے بھی موجود تھا لیکن کیا وجہ بنی کہ اسے پھر ترمیم کر کے پاس کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ متنازعہ بل کو اسمبلی میں پیش کرنے اور منظور کروانے کا طریقہ کار ہی سرے سے Bad intention پر مبنی ہے جس کی تصدیق پیش کرنے والے رکن نے چینل پر یہ کہا کہ ہم تو اسے مخفی رکھنا چاہتے تھے۔اس بل کی نوعیت مسلکی اور مذہبی بنیادوں پر ہے تو اسلامی مکاتب فکر کو کیوں اعتماد نہیں لیا گیا اور اسلامی نظریاتی کونسل و ملی یکجہتی کونسل میں پیش کر کے بحث کیوں نہیں ہوئی جبکہ جماعت اسلامی کے تو دیگر مکاتب فکر سے گہرے روابط ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں اسے منظور کروانے کی کوشش کامیاب نہیں ہوئی، جونہی موجودہ حکومت آئی اس بل کو اپوزیشن بنچوں سے خالی معذور اسمبلی سے منظور کر لیا گیا۔ ہوتا تو یہ کہ فوجداری ترمیمی بل کے ماضی میں استعمال کو دیکھا جاتا کہ اس کا زیادہ استعمال کس کے خلاف ہوا، مسلمانوں کے یا غیر مسلم کے خلاف، میرٹ پر یا فرقہ وارانہ بنیادوں پر؟اور اگر کسی بے گناہ شہری پر توہین کا غلط الزام لگے, تو الزام لگانے والے پر بھی کوئی حد مقرر ہو۔

انہوں نے کہا کہ اس متنازعہ ترمیمی بل کو منظور کروانے میں تمام سیاسی ومذہبی جماعتیں ذمہ دار ہیں کیونکہ کسی نے بھی منظور ہوتے وقت اس پر نقطہ اعتراض نہیں اٹھایا، نہ بحث ہوئی کالعدم جماعتوں کے لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ یہ بل ہم نے جماعت اسلامی کو دیا ہے، گزشتہ تیس سالوں میں جسے کالعدم جماعتیں منظور نہ کر سکیں، یہ کام جماعت اسلامی کے کندھے استعمال کرتے ہوئے کیا گیا، لہذا جماعت اسلامی بھی زیر سوال ہے۔ اس بل کا زیادہ تر شکار مسلمان ہی ہوئے ہیں اور اگر اس بل کی اصلاح نہ کی گئی تو یہ تعصب کی آگ میں بھڑکے ہوئے متشدد تکفیری گروہ کے ہاتھوں میں آگ دینے کے مترادف ہوگا جس کی زد میں کئی معصوم لوگ آئیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں ایسے واقعات  رونما ہو چکے ہیں کہ توہین رسالت ص کے قانون کا استعمال اپنے ذاتی عناد کے تحت ہوا اور بے گناہ لوگوں کی جانیں لی گئیں جبکہ غلط استعمال کرنے والے کے خلاف کسی قسم کی کیپیٹل سزا کا تعین نہیں کیا گیا حالانکہ اس میں اسلام اور رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے مقدس نام پر غلط الزام لگا کر کسی کی زندگی لینے کی کوشش کی گئی ہے، اس کی سزا تو دوگنا ہو۔صحابی کی بھی تعریف کی جائے،توہین کی جامع و مانع تعریف کی جائے۔ کیا علم و ادب کے دائرے میں تاریخی حقائق لکھنا و بیان کرنا اور تجزیہ و تحلیل کرنا توہین ہے یا نہیں یا پھر غیر علمی و غیر مودّبانہ گالی گلوچ کو توہین کہتے ہیں۔؟

  انہوں نے کہا کہ اسی طرح صحابہ کرام کی تعریف میں بھی مشخص کیا جائے، رسول اکرمؐ، اُن کے والدینِ گرامی اور اُن کے چچا حضرت ابو طالبؑ کی توہین کی سزا کو شامل کیا جائے۔ رسول خداؐ کو نعوذ باللہ کوئی گنہگار اور فاسق انسان اگر اپنے جیسا کہے اور لکھے تو یہ سرورِ دو عالم کی توہین ہے، اس طرح سرکار کے عظیم الشّان والدین کو اور عظیم محسن و چچا حضرت ابو طالبؑ ع کو نعوذ باللہ اگر کوئی مشرک و کافر جیسی گالیاں لکھے یا کہے تو اُسے بھی توہینِ پیغمبرؐ کی پاداش میں سزا ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ بل کی منظوری پر زیادہ تکفیری گروہ خوش ہیں جس سے صاف ظاہر ہے انکے اہداف اور مقاصد خطرناک ہیں لہذا ریاست میں مسلکی بنیادوں پر قانون سازی ہرگز قبول نہیں کیونکہ معاشرے پر اس کے انتہائی مہلک اثرات مرتب ہوں گے۔ سزا کے قوانین بنانے سے کوئی بھی جرم نہیں رکتا بلکہ قانون کی بالادستی اور سختی سے عملداری سے مسائل حل ہوسکتے ہیں ورنہ قتل کی سزا متعین ہونے کے باوجود بھی قتل نہیں رکے۔ڈیرہ اسماعیل خان میں تین دن کے اندر دوسرے جوان کو فرقہ وارانہ بنیادوں پر ٹارگٹ کیا گیا۔

لہذا سینیٹ اس متنازعہ ترمیمی بل کو مسترد کرے اور تمام مکاتب فکر کے جید علمائے کرام کی آراء کی روشنی میں ترامیم کر کے قومی اسمبلی کے فل کورم سیشن میں پیش کرتے ہوئے اس پر سنجیدہ بحث کی جائے اور متفقہ طور پر اسے آگے بڑھایا جائے، اس شکل میں یہ بل کسی بھی صورت میں قابل قبول نہیں ہے اور ہم اسے نہ صرف مسترد کرتے ہیں بلکہ پورے ملک میں احتجاج کا پلان بھی رکھتے ہیں۔

Page 1 of 1306

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree