The Latest

وحدت نیوز (ملتان)  مجلس وحدت مسلمین کے قائد علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی کی اپیل پر ملک بھر میں یوم مردہ باد امریکہ اسرائیل وہندوستان ریلیاں نکالی گئیں،ملتان میں ریلی کی قیادت علامہ اقتدار نقوی،علامہ مجاہد عباس گردیزی،.علامہ ہادی حسین،مولانا عمران ظفر،سلیم عباس صدیقی ،پاکستان عوامی تحریک کے صوبائی ترجمان رائو عارف رضوی،تحریک منہاج القرآن کے رہنما میجر اقبال چغتائی،مرزا وجاہت علی کر رہے تھے ریلی دولت گیٹ سے ہوتے ہوئے گھنٹہ گھر تک نکالی گئی،جہاں ریلی جلسہ عام میں تبدیل ہوگئی۔ شرکائے ریلی نے بینرز، پلے کارڈز اور پارٹی جھنڈے اٹھارکھے تھے اور وہ مسلسل امریکا مردہ باد، اسرائیل مردہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔

ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ اقتدار نقوی کا کہنا تھا کہ یونائٹڈ اسٹیٹس آف امریکا عالمی دہشتگرہے جو دیگر ممالک اور خاص طور پر مسلمان و عرب ممالک اور تیسری دنیا کے ممالک میں مداخلت کی ایک طویل تاریخ رکھتا ہے۔انکا کہنا تھا کہ پوری دنیا میں جنگوں کی آگ بھڑکانے میں ، بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے اسلحے کی تیاری اور فروخت میں، دہشت گردوں کے ذریعے عدم استحکام اور قتل عام میں امریکی حکومتیں اور اس کے ادارے ہی ملوث ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں فیصلہ سنادیا کہ مقبوضہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت مان لینے کا اور وہاں اپنا سفارتخانہ منتقل کرنے کا امریکی حکومتی فیصلہ ناجائز و غیر قانونی ہے لیکن اس کے باوجود پوری دنیا کی رائے کو پاؤں تلے روندتے ہوئے ٹرمپ حکومت اپنے اس انسانیت دشمن، اسلام دشمن، عرب دشمن فیصلے پر ڈھٹائی سے قائم ہے۔ اس موقع پر علامہ مجاہد عباس گردیزی کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ کہ ماضی میں بھی امریکی حکومتوں نے پاکستانی قوم کی تذلیل و توہین کی ہے اور صدر ٹرمپ اور انکے دیگر حکومتی اہلکاروں نے پاکستان کے خلاف مہم شروع کررکھی ہے۔

انہوں نے کہا کہ واشنگٹن میں قائم بھارتی سفارتخانہ امریکی سرپرستی میں بلوچستان کے علیحدگی پسندوں کو پاکستان میں عدم استحکام پھیلانے کے قابل مذمت ایجنڈا پر عمل کررہا ہے۔ پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان رائو عارف رضوی نے اپنے خطاب میں کہا کہ امریکا اور اس کے اتحادیوں نے بڑے منظم طریقے سے فلسطین کی دوست حکومتوں اور تنظیموں کو نشانہ بنایا ہے اور ان ملکوں پر جنگیں مسلط کی اور کروائی ہیں تاکہ فلسطین پر ناجائز قبضہ کرنے والے اسرائیل کو بچاسکے۔ انکا کہنا تھا کہ اسرائیل نے نہ صرف فلسطین بلکہ لبنان اور شام کے علاقوں پر بھی ناجائز قبضہ کررکھا ہے لیکن امریکا اور اس کے اتحادی انٹرنیشنل لاء کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگر ممالک میں جارحیت کررہے ہیں اور اقوام متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہا ہے۔ اسرائیل کے انسانیت کے خلاف جرائم اور جنگی جرائم میں امریکا اور اس کے اتحادی شریک ہیں۔ امریکا نے عراق و افغانستان میں بھی یلغار کی اور وہاں اس نے دہشت گردوں کی آبیاری کی تاکہ اس بہانے سے ان دونوں ملکوں میں اپنے فوجی اڈوں کو قائم رکھ سکے۔

 آئی ایس او کے صدر ڈاکٹر موسی کاظم نے کہا کہ پاکستان کی تمام تر مشکلات کا ذمے دار بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ہیں کیونکہ وہ پاکستان کو دھمکیاں دیتے ہیں کہ ایران سے گیس نہ خریدیں، تجارت نہ کریں اور اس کی وجہ سے آج پاکستان میں انرجی کا بحران ہے، ملک میں بجلی مہنگی ہے اورلوڈ شیڈنگ ہورہی ہے ، صنعتیں بند ہورہی ہیں یا پیدوار بالکل کم ہوچکی ہے جس کی وجہ سے بر آمدات میں بھی بے حد کمی واقع ہوئی ہے اور پاکستان اپنی آمدنی کا ایک بڑا حصہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کی اس ایران دشمن پالیسی کی وجہ سے کھوچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان ترکی سے براستہ ایران تجارت کرکے جو زر مبادلہ کما سکتا تھا وہ بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ممالک کی بلیک میلنگ کی وجہ سے نہیں کما سکا۔ اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ پاکستان سمیت عالم اسلام و عرب اور تیسری دنیا کے ممالک امریکا اور اس کے اتحادیوں کی دھمکیوں اور بلیک میلکنگ کو جوتے کی نوک پر رکھ کر آزاد ہوکر اپنی پالیسیاں بنائیں اور حقیقی معنوں میں خود مختاری حاصل کریں۔

وحدت نیوز  (لاہور)  مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر ملک بھر میں 13مئی کو یوم مردہ باد امریکہ و ہندوستان منایا گیا چاروں صوبوں فاٹا گلگت بلتستان سمیت آزاد کشمیر میں تمام اضلاع میں اجتجاجی مظاہرے وریلیاں نکالی گئیں،عالمی دہشتگرد امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو غاصب صہیونی ریاست اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کرنے اور جنوبی ایشیا کا اسرائیل بھارت کی جانب سے مظلوم کشمیریوں کی نسل کشی کیخلاف ملک گیرے احتجاجی مظاہرے ہوئے،مرکزی ریلی کراچی میں نمائش چورنگی سے تبت سنٹر تک نکالی گئی جس کی قیادت سربراہ مجلس وحدت مسلمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کی،لاہور میں سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پنجاب علامہ مبارک موسوی نے جمعیت علمائے اسلام نیازی،متحدہ علماء بورڈ اور سول سوسائٹی کے رہنماوں کے ہمراہ امریکن قونصلیٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرے کی قیادت کی،مظاہرے میں بڑی تعداد میں نوجوان بزرگ بچے اور خواتین شریک تھے،مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مبارک موسوی نے کہا کہ امریکہ اسرائیل اور ہندوستان عالم انسانیت کے دشمن شیطانی طاقتیں ہیں جو دنیا کے امن کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے،مشرق وسطی سمیت مسلمان ممالک میں قتل عام کا ذمہ دار امریکہ و اسرائیل اور اسکے اتحادی حواری ہیں،جبکہ پاکستان اور کشمیر میں دہشتگردی کے پیچھے بھی یہی منحوس مثلث کا ہاتھ ہے۔

انہوں نے کہا قبلہ اول کو اسرائیلی دارالخلافہ قرار دے کر امریکہ نے مسلم امہ کے قلب پر وار کیا ہے آل سعود سمیت دیگر عرب ریاستیں امریکہ کی کاسہ لیسی میں مسلم امہ کیخلاف صف آرا ہیں,مسلم امہ کو بیدار ہونا ہوگا اور امریکہ و اسرائیل اور اس کے حواریوں کیخلاف متحد ہو کر قبلہ اول کو غاصب صہیونیوں اور جنت نظیر کشمیر کو ہندو بھیڑیوں کے چنگل سے آزادی دلانے میں کردار ادا کرنا ہوگا,آل سعود خادم حرمین بنیں خادم امریکین و اسرائیلین نہ بنیں اپنی بادشاہت بچانے کے لئے مسلم امہ کے خون سے ہولی کھیلنا بند کردیں,مغرب کی مفادات کے خاطر پاکستان میں انتہاپسندی کو فتوغ دینے والے ہمارے بے گناہ شہدا کے خون ناحق کا ذمہ دار ہیں,مملکت خداداد پاکستان کے حکمران اور مقتدر حلقوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی سابقہ پالیسیوں کی عوام سے معافی مانگیں اور اس منحوس امریکن بلاک کو خیر باد کہہ دیں اسی میں ہی ہماری بقا ہے-مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علمائے پاکستان نیازی کے رہنما ڈاکٹر امجد چشتی نے کہا کہ آل سعود امریکہ اور اسرائیل ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں,ان ظالموں سے مسلم امہ کو خیر کی توقع رکھنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں آل سعود امریکی کاسہ لیسی میں اسلامی اقدار کو مسخ کر رہے ہیں سر زمین حجاز کی حرمت کو لبرل ازم کے نام پر پامال کرنے والے کبھی بھی مسلم امہ کے خیر خواہ نہیں ہو سکتے,مسلمانو جاگ جاو اور متحد ہو کر آل سعود امریکہ اور اسرائیل کے عزائم کو خاک میں ملا دو ورنہ یہ منحوس استعماری طاقتیں تمھارے خون سے ہولی کھیل کر اپنی ہوس کی آگ بھجاتے رہیں گے۔مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کے مرکزی رہنما سیدہ معصومہ نقوی نے بھی مظاہرین سے خطاب کیا انہوں نے کہا کہ امریکہ اسرائیل بھارت کیخلاف اور دنیا بھر کے مظلومین کی حمایت میں جدو جہد جاری رکھیں گے ہم پیروان سیدہ زینب ع ہیں وطن عزیز سے وقت کے یزیدوں امریکہ اسرائیل ہندوستان اور انکے حواریوں کو رسوا کر کے دم لیں گے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین کے قائد علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی قیادت میں یوم مردہ باد امریکا کے سلسلے کی مرکزی ریلی قائد اعظم کے مزار کے سامنے نمائش چورنگی سے نکالی گئی جس کے شرکاء ایم اے جناح روڈ پر مارچ کرتے ہوئے سی بریز پہنچے جہاں ریلی جلسہ عام میں تبدیل ہوگئی۔ علامہ راجہ ناصر عباس کی قیادت میں نکالی گئی اس ریلی میں دیگر جماعتوں متحدہ قومی موومنٹ ،پاکستان عوامی تحریک،آل پاکستان سنی اتحاد کونسل،اصغریہ آرگنائزیشن ،ہیت آئمہ مساجد،ذاکرین امامیہ،مجلس علماء شیعہ سمیت دیگر سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنما وں اور ایم ڈبلیو ایم کے حامیوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ شرکائے ریلی نے بینرز، پلے کارڈز اور پارٹی جھنڈے اٹھارکھے تھے اور وہ مسلسل امریکا مردہ باد، اسرائیل مردہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔ یاد رہے کہ ایم ڈبلیو ایم کے قائد کی اپیل پر پاکستان بھر میں اتوار کے روز یوم مردہ باد امریکا منایا گیا۔ سی بریز چورنگی کے قریب شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے یوممردہ باد امریکا کی مناسبت سے بتایا کہ یونائٹڈ اسٹیٹس آف امریکا عالمی سامراج ہے جو دیگر ممالک اور خاص طور پر مسلمان و عرب ممالک اور تیسری دنیا کے ممالک میں مداخلت کی ایک طویل تاریخ رکھتا ہے۔انکا کہنا تھا کہ پوری دنیا میں جنگوں کی آگ بھڑکانے میں ، بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے اسلحے کی تیاری اور فروخت میں، دہشت گردوں کے ذریعے عدم استحکام اور قتل عام میں امریکی حکومتیں اور اس کے ادارے ہی ملوث ہیں ۔

 انہوں نے کہا کہ پوری دنیا نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں فیصلہ سنادیا کہ مقبوضہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت مان لینے کا اور وہاں اپنا سفارتخانہ منتقل کرنے کا امریکی حکومتی فیصلہ ناجائز و غیر قانونی ہے لیکن اس کے باوجود پوری دنیا کی رائے کو پاؤں تلے روندتے ہوئے ٹرمپ حکومت اپنے اس انسانیت دشمن، اسلام دشمن، عرب دشمن فیصلے پر ڈھٹائی سے قائم ہے۔ علامہ راجہ ناصر نے کہا کہ ماضی میں بھی امریکی حکومتوں نے پاکستانی قوم کی تذلیل و توہین کی ہے اور صدر ٹرمپ اور انکے دیگر حکومتی اہلکاروں نے پاکستان کے خلاف مہم شروع کررکھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ واشنگٹن میں قائم بھارتی سفارتخانہ امریکی سرپرستی میں بلوچستان کے علیحدگی پسندوں کو پاکستان میں عدم استحکام پھیلانے کے قابل مذمت ایجنڈا پر عمل کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اور افغانستان کو اپنے پڑوسی ملک پاکستان سے تعلقات اچھے کرنے چاہئیں نہ کہ امریکی سامراج کا پٹھو بن کر اس خطے میں کشیدگی پھیلانی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا اور اس کے اتحادیوں نے بڑے منظم طریقے سے فلسطین کی دوست حکومتوں اور تنظیموں کو نشانہ بنایا ہے اور ان ملکوں پر جنگیں مسلط کی اور کروائی ہیں تاکہ فلسطین پر ناجائز قبضہ کرنے والے اسرائیل کو بچاسکے۔

 انکا کہنا تھا کہ اسرائیل نے نہ صرف فلسطین بلکہ لبنان اور شام کے علاقوں پر بھی ناجائز قبضہ کررکھا ہے لیکن امریکا اور اس کے اتحادی انٹرنیشنل لاء کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگر ممالک میں جارحیت کررہے ہیں اور اقوام متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہا ہے۔ اسرائیل کے انسانیت کے خلاف جرائم اور جنگی جرائم میں امریکا اور اس کے اتحادی شریک ہیں۔ امریکا نے عراق و افغانستان میں بھی یلغار کی اور وہاں اس نے دہشت گردوں کی آبیاری کی تاکہ اس بہانے سے ان دونوں ملکوں میں اپنے فوجی اڈوں کو قائم رکھ سکے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تمام تر مشکلات کا ذمے دار بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ہیں کیونکہ وہ پاکستان کو دھمکیاں دیتے ہیں کہ ایران سے گیس نہ خریدیں، تجارت نہ کریں اور اس کی وجہ سے آج پاکستان میں انرجی کا بحران ہے، ملک میں بجلی مہنگی ہے اورلوڈ شیڈنگ ہورہی ہے ، صنعتیں بند ہورہی ہیں یا پیدوار بالکل کم ہوچکی ہے جس کی وجہ سے بر آمدات میں بھی بے حد کمی واقع ہوئی ہے اور پاکستان اپنی آمدنی کا ایک بڑا حصہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کی اس ایران دشمن پالیسی کی وجہ سے کھوچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ترکی سے براستہ ایران تجارت کرکے جو زر مبادلہ کما سکتا تھا وہ بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ممالک کی بلیک میلنگ کی وجہ سے نہیں کما سکا۔ اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ پاکستان سمیت عالم اسلام و عرب

اور تیسری دنیا کے ممالک امریکا اور اس کے اتحادیوں کی دھمکیوں اور بلیک میل لنگ کو جوتے کی نوک پر رکھ کر آزاد ہوکر اپنی پالیسیاں بنائیں اور حقیقی معنوں میں خود مختاری حاصل کریں۔یوم مردہ باد امریکا ریلی سے علامہ مرزا یوسف حسین ،علامہ نثار قلندری،مطلوب اعوان ،قیصر اقبال قادری ،ایم پی اے قمر عباس ،علامہ باقر عباس زیدی نے بھی خطاب کیا۔ جلسہ کے اختتام پر امریکہ ، اسرائیل اوربھارت کے پرچم نذر آتش کئے گئے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کی اپیل پرآج ملک بھر میں یوم مردہ باد امریکا انتہائی جوش وجذبے سےمنایا گیا، ملک کےچاروں صوبوں سندھ ، پنجاب، خیبرپختوخواہ، بلوچستان اور گلگت بلتستان و آزادجموں کشمیر کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میںمیں لگ بھگ20 مقامات پر امریکہ مردہ باد ریلیاں نکالی گئیں اورپر یس کلبز کے سامنے احتجاجی مظاہرے منعقد کیئے گئے،اس موقع پر مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر امریکا، بھارت اور اسرائیل کے خلاف نعرے درج تھے، جبکہ ملک بھر کی فضاءمردہ باد مردہ باد امریکا مردہ باد کے فلک شگاف نعروں سے گونج رہی تھی، ملک بھر میں امریکا مردہ باد امریکا ریلیوں میں شریک ایم ڈبلیوایم کے قائدین، کارکنان، شیعہ سنی عوام اور سیاسی ومذہبی جماعتوں کے رہنمائوں نے عالمی استعمار امریکا سے اپنی بھرپور نفرت کا اظہار کیا،،مرکزی مردہ باد امریکا ریلی نمائش چورنگی تا تبت سینٹر کراچی تک مرکزی سیکریٹری جنرل ایم ڈبلیوایم علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کی زیر قیادت نکالی گئی،وفاقی دار لحکومت اسلام آباد میں ریلی کی قیادت مرکزی رہنما علامہ اعجاز بہشتی کر رہے تھے ریلی اسلام آباد نیشنل پریس کلب سے ہوتے ہوئے ڈی چوک بلیو ایریا تک گئی جہاں ریلی جلسہ عام میں تبدیل ہوگئی۔ شرکائے ریلی نے بینرز، پلے کارڈز اور پارٹی جھنڈے اٹھارکھے تھے اور وہ مسلسل امریکا مردہ باد، اسرائیل مردہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ اعجاز بہشتی کا کہنا تھا کہ یونائٹیڈ اسٹیٹس آف امریکا عالمی دہشتگردہے جو دیگر ممالک اور خاص طور پر مسلمان و عرب ممالک اور تیسری دنیا کے ممالک میں مداخلت کی ایک طویل تاریخ رکھتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ پوری دنیا میں جنگوں کی آگ بھڑکانے میں ، بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے اسلحے کی تیاری اور فروخت میں، دہشت گردوں کے ذریعے عدم استحکام اور قتل عام میں امریکی حکومتیں اور اس کے ادارے ہی ملوث ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں فیصلہ سنادیا کہ مقبوضہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت مان لینے کا اور وہاں اپنا سفارتخانہ منتقل کرنے کا امریکی حکومتی فیصلہ ناجائز و غیر قانونی ہے لیکن اس کے باوجود پوری دنیا کی رائے کو پاؤں تلے روندتے ہوئے ٹرمپ حکومت اپنے اس انسانیت دشمن، اسلام دشمن، عرب دشمن فیصلے پر ڈھٹائی سے قائم ہے۔

اس موقع پر علامہ ڈاکٹر یونس کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ کہ ماضی میں بھی امریکی حکومتوں نے پاکستانی قوم کی تذلیل و توہین کی ہے اور صدر ٹرمپ اور انکے دیگر حکومتی اہلکاروں نے پاکستان کے خلاف مہم شروع کررکھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ واشنگٹن میں قائم بھارتی سفارتخانہ امریکی سرپرستی میں بلوچستان کےعلیحدگی پسندوں کو پاکستان میں عدم استحکام پھیلانے کے قابل مذمت ایجنڈا پر عمل کررہا ہے۔ نثار علی فیضی نے اپنے خطاب میں کہا کہ امریکا اور اس کے اتحادیوں نے بڑے منظم طریقے سے فلسطین کی دوست حکومتوں اور تنظیموں کو نشانہ بنایا ہے اور ان ملکوں پر جنگیں مسلط کی اور کروائی ہیں تاکہ فلسطین پر ناجائز قبضہ کرنے والے اسرائیل کو بچاسکے۔ انکا کہنا تھا کہ اسرائیل نے نہ صرف فلسطین بلکہ لبنان اور شام کے علاقوں پر بھی ناجائز قبضہ کررکھا ہے لیکن امریکا اور اس کے اتحادی انٹرنیشنل لاء کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگر ممالک میں جارحیت کررہے ہیں اور اقوام متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہا ہے۔ اسرائیل کے انسانیت کے خلاف جرائم اور جنگی جرائم میں امریکا اور اس کے اتحادی شریک ہیں۔ امریکا نے عراق و افغانستان میں بھی یلغار کی اور وہاں اس نے دہشت گردوں کی آبیاری کی تاکہ اس بہانے سے ان دونوں ملکوں میں اپنے فوجی اڈوں کو قائم رکھ سکے۔

 انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تمام تر مشکلات کا ذمے دار بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ہیں کیونکہ وہ پاکستان کو دھمکیاں دیتے ہیں کہ ایران سے گیس نہ خریدیں، تجارت نہ کریں اور اس کی وجہ سے آج پاکستان میں انرجی کا بحران ہے، ملک میں بجلی مہنگی ہے اورلوڈ شیڈنگ ہورہی ہے ، صنعتیں بند ہورہی ہیں یا پیدوار بالکل کم ہوچکی ہے جس کی وجہ سے بر آمدات میں بھی بے حد کمی واقع ہوئی ہے اور پاکستان اپنی آمدنی کا ایک بڑا حصہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کی اس ایران دشمن پالیسی کی وجہ سے کھوچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ترکی سے براستہ ایران تجارت کرکے جو زر مبادلہ کما سکتا تھا وہ بھی امریکا اور اس کے بعض اتحادی ممالک کی بلیک میلنگ کی وجہ سے نہیں کما سکا۔ اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ پاکستان سمیت عالم اسلام و عرب اور تیسری دنیا کے ممالک امریکا اور اس کے اتحادیوں کی دھمکیوں اور بلیک میلکنگ کو جوتے کی نوک پر رکھ کر آزاد ہوکر اپنی پالیسیاں بنائیں اور حقیقی معنوں میں خود مختاری حاصل کریں۔اہل سنت عالم دین علامہ حیدر علوی کا کہنا تھاکہ وہ دن دور نہیں جب مشرق وسطیٰ اور پاکستان میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کو شکست ہوگی، افغانستان میں امریکا کی شکست لکھ دی گئی ہے۔ امریکہ اپنے ناپاک عزائم میں کامیاب نہیں ہوگا۔

وحدت نیوز ( کراچی )  مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے پولیٹیکل سیکریٹری میر تقی ظفرنے کہاہے کہ جعفرطیار وحسنین سوسائٹی کے تجاوزات کے خلاف آپریشن سے متاثرہ مکینوںکی بحالی کیلئے ایم ڈبلیوایم ضلع ملیر کی ٹیم کی کوششیں اور کاوشیں قابل تحسین ہیں، جنہوں نے عوامی مشکلات کے فوری حل کیلئے آواز بلند کی اور جناب محمود اختر نقوی سے 350سے زائد متاثرہ مکینوں میں بلاتفریق ایک کروڑ روپے کی نقد رقوم تقسیم کروائیں ، ایم ڈبلیوایم کے زیر انتظام اتنے بڑے پیمانے پر امدادی رقوم کی تقسیم کی تقریب کا بغیر کسی بدنظمی کےخوش اصلوبی سے انعقاد قابل ستائش ہے، جس کیلئے ایم ڈبلیوایم کے رہنما علی احمر زیدی، احسن عباس رضوی ، عارف زیدی ، ثمر عباس ودیگر کا کرادر تعریف ہے ، اس کامیاب تقریب کے انعقاد پر ایم ڈبلیوایم کی پوری ٹیم اورذاتی طورپر ایک کروڑ روپے کی نقد امدادی رقوم کی تقسیم پر محمود اختر نقوی کو مبارک باد پیش کرتے ہیں ۔

وحدت نیوز (کراچی)  سندھ حکومت کی جانب سے جعفرطیاروحسنین سوسائٹی میں تجاوزات کے خلاف ہونے والے حالیہ آپریشن سے متاثرہ جعفرطیاروحسنین سوسائٹی کے مکینوں میں مجلس وحدت مسلمین کی مخلصانہ کوششوں کے سبب ایک کروڑ روپے کی نقدامدادی رقوم تقسیم کردی گئیں،تفصیلات کے مجلس وحدت مسلمین کے  پرزور مطالبے پر جعفرطیار وحسنین سوسائٹی میں تجاوزات کے خلاف آپریشن سے متاثرہ سینکڑوں مکینوں میں بلاتفریق ایک کروڑ روپے کی نقد امدادی رقوم کی تقسیم مکمل ہوگئی، ایم ڈبلیوایم نے سندھ حکومت اور جعفرطیار سوسائٹی میں ترقیاتی کاموں کے روح ِ رواں جناب محمود اختر نقوی سے علاقہ مکینوں کی مشکلات کے تناظر اور موصولہ درخواستوں کی روشنی میں متاثرہ مکانوں کی تزین وآرائش کے حوالے سے فوری طور پر مالی امداد کا پرزور مطالبہ کیا تھا، جس پر جناب محمود اختر نقوی نےاپنی جانب سے  فوری طور پر عمل درآمد کرتے ہوئے جعفرطیار وحسنین سوسائٹی کے 350 سے زائد متاثرہ مکینوں میں تقریباًایک کروڑ روپے نقد تقسیم کردیئے ہیں،مجلس وحدت مسلمین ضلع ملیر کے زیر اہتمام امدادی رقوم کی تقسیم کی سادہ مگر پروقار تقریب جعفرطیار سوسائٹی میں منعقد ہوئی جس میں ایم ڈبلیوایم کے رہنما علی احمر زیدی، میر تقی ظفر، احسن عباس رضوی، عارف رضا زیدی، ثمر عباس ، مولانا غلام محمد فاضلی ، علامہ گلزارحسین شاہدی ، دیگررہنمائوں اور کارکنان سمیت متاثرہ خواتین وحضرات نے بڑی تعدادمیں شرکت کی۔واضح رہے کہ جعفرطیار سوسائٹی میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی جانب سے حالیہ دنوں ہونے والے تجاوزات کے خلاف آپریشن کے متاثرہ مکینوں کی دادرسی کیلئے مختلف فورمز پر آواز بلند کی تھی،میڈیا کے ذریعے سندھ حکومت، متعلقہ حکام اوربرائے راست جناب محمود اختر نقوی سے فوری ریلیف پیکیج کا مطالبہ کیا تھا،ایم
ڈبلیوایم نے مرکزی روڈ پر دوروزہ ریلیف کیمپ برائے متاثرین بھی قائم کیا تھا جس میں سینکڑوں متاثرین نے اپنے کوائف جمع کروائے جن کی تحقیق اور تصدیق کے بعد جعفرطیار اور حسنین سوسائٹی کے پریشان حال رہائشیوں میں امدادی رقوم کی فوری تقسیم یقینی بنی، اس بہترین اور برقت اقدام پر اہلیان جعفرطیار سوسائٹی نے مجلس وحدت مسلمین اورجناب محمود اختر نقوی کا تہہ دل سے شکریہ اداکیا، اس موقع پر متاثرین کا کہنا تھا کہ ہم ایم ڈبلیوایم اور جناب محمود اختر نقوی کے انتہائی مشکور ہیں کے جنہوں نے شدید مشکلات میں ہماری دادرسی کی ، اس موقع پرجناب محموداختر نقوی نے ہڈیوںکے مہلک مرض میں مبتلاایک معصوم بچے کے فوری آپریشن کیلئے نقد 2لاکھ روپے بھی عطیہ کیئے۔

وحدت نیوز (آرٹیکل)  پہلوان ، بالآخر پہلوان ہوتا ہے، پہلوان کی پٹائی بہت شرم کی بات ہے ، خصوصا جب پٹائی کرنے والا کوئی عام سا آدمی ہو۔ اسرائیل نے اپنے آپ کو مشرقِ وسطیٰ کا پہلوان مشہور کر کرکھا ہے، سعودی عرب سمیت دیگر عرب ریاستیں اسرائیل کی طاقت کے سامنے سر تسلیمِ خم کر چکی ہیں، گزشتہ دنوں جب شام نے اسرائیل پر  کامیاب میزائل  حملہ کیا تو اسرائیل  کو سخت ہزیمت اور شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا۔چنانچہ اس شرمندگی کو چھپانے کے لئے اسرائیل نے یہ راگ الاپنا شروع کر دیا کہ یہ حملہ شام نے نہیں بلکہ ایران نے کیا ہے۔ اربابِ دانش بخوبی جانتے ہیں کہ اگر ایران اسرائیل پر حملہ کرے گا تو وہ صرف حملے  کا نہیں بلکہ اسرائیل کے خاتمے کا  دن ہوگا۔ یہی وجہ ہے کہ ایرانی اداروں نےایران کی جانب سے اسرائیل پر حملہ کئے جانے کی تردید کی ہے۔ اس سے پہلے تینتیس روزہ جنگ میں بھی  حزب اللہ نے اسرائیل کی طاقت کا گھمنڈ توڑا تھا۔فلسطینی تنظیم حماس کے مطابق  جولان میں اسرائیل کے فوجی ٹھکانوں پر جوابی کارروائی شام کا حق ہے اور وہ زمانہ گزر گیا جب اسرائیل حملے کرکے بھاگ جاتا تھا ۔شام نے بھی کہا ہے کہ اب اسرائیل کو ہر حملے کا جواب دیا جائے گا۔اسی طرح محاذ آزادی فلسطین نے بھی اسرائیل پرشام کے جوابی حملوں پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق ان حملوں کے بعد بہت سارے صیہونی اسرائیل سے بھاگنے کی سوچ رہے ہیں۔اسرائیل کی بوکھلاہٹ کا یہ عالم ہے کہ اسرائیل کی طرف سے بار بار ان حملوں کو ایران کی کارروائی کہا جا رہا ہے جبکہ حقیقت میں ایران نے اپنی طرف سے جوابی حملے کا حق ابھی تک محفوظ رکھا ہوا ہے۔اسرائیل جو حزب اللہ یا شام کی فوج کے حملوں کی تاب نہیں رکھتا وہ یقیناً ایران کا حملہ کبھی بھی نہیں سہہ سکتا ۔

اب اگر تل ابیب اور ریاض میں ایران اور امریکہ کے مابین جوہری خاتمے پر  خوشیاں منائی جارہی ہیں تو  یہ عالمی حالات سے آنکھیں چرانے کے مترادف ہے۔ اس وقت خود سعودی عرب  پوری اسلامی دنیا میں اپنی ساکھ کھو چکاہے اور دوسری طرف ہر نئے دن کا سورج  اسرائیل کے لئے موت  کا پیغام لے کر طلوع ہوتا ہے۔ ہر فلسطینی کی گرتی ہوئی لاش اسرائیل کے تابوت میں ایک کیل کا کام کر رہی  ہے۔اسرائیل اتنی بڑی عسکری طاقت نہیں  اور ویسے بھی جنگیں اسلحے کے بجائے قوتِ ایمانی سے لڑی جاتی ہیں لہذا ضروری نہیں کہ اسرائیل کے تابوت میں آخری کیل  ٹھونکنے کے لئے ایران کو ہی میدان میں اترنا پڑے بلکہ ایران سے پہلے شام، حزب اللہ اور حماس جیسی قوتیں بھی اسرائیل کے دانت کھٹے کر سکتی ہیں۔

ایران اور اسرائیل کے موجودہ تناو کے تناظر میں  نیز امریکہ کے ساتھ ایران کے ایٹمی معاہدے کے اختتام کے باعث سعودی عرب کو بہت خوشی ہوئی ہے جبکہ دوسری طرف ساری دنیا نے امریکی صدر کے جارحانہ رویے کی مذمت کی ہے اور  اس کے بعد  جرمنی سمیت دیگر یورپی ممالک  نے  ایران کو جوہری معاہدہ جاری رکھنے کے سلسلےمیں ہر قسم کا تعاون فراہم کرنے کی یقین دہانی کروائی ہے۔ گویا ہم کہہ سکتے ہیں کہ یہ ایران کی ایک اور سفارتی فتح ہے کہ پوری دنیا نے ایران کی حمایت کا علان کیا ہے۔ ایران کے ساتھ امریکہ کے جوہری معاہدے کے خاتمے کے سب سے بڑے حامی اسرائیل اور سعودی عرب ہی تھے سو اسرائیل اور سعودی عرب کا یہ مشترکہ ہدف بظاہر تو پورا ہوگیا ہے لیکن اب  دیکھنا یہ ہے کہ کیا اسرائیل اور سعودی عرب دیگر دنیا کو بھی اپنا ہمنوا بنا سکیں گے یا نہیں!؟ کیا اس کے بعد دنیا یمن پر سعودی جارحیت کو جائز قرار دے دیگی اور کیا اس کے بعد فلسطین پر اسرائیل کے ناجائز قبضے کو عالمی برادری جائز مان لے گی۔کیا اسکے بعد دنیاسعودی عرب کو طالبان اور القاعدہ جیسی تنظیمیں بنانے پر شاباش دے گی اور کیا شام میں اسرائیل اور سعودی عرب کی مداخلت کا کوئی جواز پیدا ہوجائے گا!؟

اگر نہیں تو پھر ظلم کی رات خواہ کتنی ہی طویل کیوں نہ ہو سویرا ضرور ہوتا ہے، اسرائیل اور سعودی عرب کو وقت آنے پر اپنے تمام جرائم کا حساب دینا ہوگا۔ حقیقتِ حال یہ ہے کہ  افغانستان، شام اور عراق میں دہشت گردوں کی شکست کے بعد  سعودی عرب ،امریکہ اور اسرائیل اس وقت  ایران اور حزب اللہ سے انتقام لینے کے لئے کوششیں کر رہے ہیں، چونکہ انہوں نے  دہشت گردوں کو شکست دینے اور سعودی عرب و امریکہ و اسرائیل کی مثلث کی ناکامی  میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ ان دنوں  ایک طرف تو  اسرائیل اور سعودی عرب کی کوشش ہے کہ امریکہ آگے بڑھ کر ایران سے لڑائی کرے  جبکہ دوسری طرف  امریکہ کی بھی کوشش ہے کہ اسرائیل اور سعودی عرب میں سے کوئی آگے بڑھ کر ایران سے جنگ کا آغاز کرے  لیکن حقیقت حال یہ ہے کہ تینوں میں سے کسی میں بھی ایران کا سامنا کرنے کا

حوصلہ نہیں اور اگر تینوں میں سے ایک میں بھی اس کی جرات ہوتی تو وہ کبھی بھی مزید  انتظار نہ کرتا۔ جنگ بہرحال جنگ ہوتی ہے اور اپنے ساتھ تباہی و بربادی لے کر آتی ہے۔ عالمی برادری کو چاہیے کہ وہ اس وقت دنیا پر منڈلاتے ہوئے جنگ کے بادلوں کے خلاف فیصلہ کن کردار ادا کرے  ۔ یہ انسانی ہمدردی اور بقائے باہمی کے شعور کاتقاضا ہے کہ دنیا کے تمام ممالک کو دیگر ممالک پر جارحیت سے روکا جائے اور اسرائیل جیسے غیر قانونی ملک کو ختم کیا جائے۔ اگر امریکہ ، سعودی عرب اور اسرائیل کے جارحانہ عزائم کو نہیں روکاجاتا تو آج نہیں تو کل یہ دنیا جنگ کے شعلوں سے بھڑک سکتی ہے۔



تحریر۔۔۔نذر حافی

This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

وحدت نیوز (اسلام آباد)  امریکہ دنیا بھر میں دہشت گرد قوتوں کا سرپرست ہے، ملک بھر میں قائد وحدت علامہ ناصر عباس کی اپیل پر13مئی کو یوم مردہ باد امریکہ منایا جائے گا۔ ملک بھر میں امریکی ناپاک عزائم کے خلاف احتجاج اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔ ملک بھر کی طرح اسلام آباد میں بھی یوم مردہ باد ریلی کا انعقاد کیا جائے گا جوکہ نیشنل پریس کلب اسلام آباد تا ڈی چوک اسلام آباد تک نکالی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنما علامہ اصغر عسکری نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیااس موقع پرملک اقرارحسین ، علامہ علی شیر انصاری، حسین شیرازی ودیگر موجود تھے ۔

 انہوں نے کہاکہ امریکہ ہی ہے جو فلسطین میں اسرائیل کے غاصبانہ تسلط اور ناجائز ریاست اسرائیل کے جرائم کی پشت پناہی اور سرپرستی کر رہا ہے، امریکہ ہی ہے کہ جس نے پہلے افغانستان پھر عراق میں اپنے دہشتگردانہ ناپاک عزائم کو تکمیل دینے کے کئے دسیوں ہزار معصوم انسانوں کو موت کی نیند سلا دیا۔امریکہ ہی ہے کہ جس نے داعش جیسی خونخوار دہشت گروہوں کو جنم دیا اور شام و عراق میں دہشت گردی کا بازار گرم کیا اب یہی امریکہ شام و عراق میں ناکام ہونے کے بعد اپنے ناپاک منصوبوں کا نشانہ پاکستان کو بنانے پر تلا ہوا ہے اور داعش جیسی دہشتگرد تنظیموں کو افغانستان میں سرپرستی کر کے خطے کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے۔یہ ایک الارمنگ صورت حال ہے افغانستان اور پاکستان میں گزشتہ چند ماہ میں ہونے والی ہزارہ برادری کی کلنگ کے پیچھے انہی دہشت گردوں کا ہاتھ ہے جو امریکا اور اسکے اتحادیوں نے ہی بھرتی کئے اور انہیں جہاد کے نام پر استعمال کیا۔

انہوں نے مزید کہاکہ مختلف ممالک کے وسائل کی لوٹ مار کرنا، کٹھ پتلی حکومتیں قائم کرکے ڈکٹیٹروں ظالم موروثی حکومتوں اور شیوخ و بادشاہوں کو قوموں پر مسلط کرکے انکی آزادیوں کو سلب کرنا، یہ سب امام خمینی کے اس جملے کو بالکل سچ ثابت کرتا ہے کہ ہماری تمام ترمشکلات کا ذمے دار امریکا ہے کئی جگہ دہشت گرد امریکی سرپرستی میں کام کر رہے ہیں۔دنیا بھر میں جتنی بھی بد امنی ہے اس کے پیچھے امریکہ اور اس کے حواری ہیں جو دنیا پر اپنا تسلط برقرار رکھنے کے لئے دنیا بھر میں انسانوں کا خون بہارہے ہیں۔ امریکہ دنیا کا سب سے بڑا شیطان اور دہشت گرد ہے .امریکہ کا مقبوضہ یروشلم میں اپنا سفارتخانہ منتقل کر نے اورامریکی حکومت کا پاکستان کے ساتھ نازیبا رویہ قابل مذمت ہے۔ 13مئی کو علامہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر ملک بھر میں یوم مردہ باد امریکہ کے عنوان سے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی جبکہ مرکزی احتجاجی ریلی کراچی میں نمائش تا تبت سینٹر نکالی جائے گی جس میں عوام کی بڑی تعداد سمیت سیاسی ومذہبی جماعتوں کے قائدین بھی شریک ہوں گے۔

وحدت نیوز (گلگت) گلگت بلتستان کے عوام کسی خیراتی پیکج کے محتاج نہیں۔ہم ستر سالوں سے اپنا حق مانگ رہے اور حکمران ہمیں ہمارا حق دینے کی بجائے پیکجز دے رہے ہیں۔نواز لیگ اختیارات کے نام پر ڈرامے بازی بند کرے ورنہ عوام کے جذبات سے کھلواڑ کرنے کی انہیں سنگین سزا بھگتنا پڑے گی۔مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما شیخ نیئر عباس مصطفوی نے نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے حکومت کو متنبہ کیا کہ اصلاحاتی پیکج کے نام پر گلگت بلتستان کے عوام کو دھوکہ نہیں دیا جاسکتا،اب پیکجز کا زمانہ گزرگیا ہے وفاق گلگت بلتستان کے عوام کو متنازعہ خطوں کے برابر حقوق دے۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام کا پاکستان کے ساتھ الحاق یکطرفہ ہے جس کا وفاق نے ستر سالوں تک کوئی مثبت جواب نہیں دیا ہے۔ہماری پاکستانی شہریت کو تو تسلیم کیا جاتا ہے لیکن پاکستانی شہریت کے حقوق سے محروم رکھا گیا ہے جو وفاقی حکمرانوں کا دوغلا پن ہے۔اگر یہ خطہ متنازعہ ہے تو کشمیر طرز کا سیٹ اپ دیا جائے اب کی بار ہم کسی پیکج کو ہرگز تسلیم نہیں کرینگے۔

انہوں نے صوبائی حکومت کی دوغلی پالیسی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کنٹریکٹ ملازمین کامسئلہ فوری حل کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ وزیر اعلیٰ کرپشن کے ماسٹر مائنڈ ہیں جس کے دور میں اقربا پروری اور سیاسی رشوت اپنے عروج کو پہنچ چکی ہے۔اپوزیشن جماعتوں پر کیچڑ اچھالنے والے ذرا اپنی کارکردگی پر نظر ڈالیںہرطرف کرپشن ہی کرپشن نظر آئیگی۔انہوں نے بجلی کے بحران پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت چاہے تو بجلی کی لوڈشیڈنگ پر قابو پاسکتی ہے لیکن جان بوجھ کر طویل ترین لوڈشیڈنگ سے عوام کی زندگی اجیر بنارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ نلتر پائین کے عوام کے مطالبات جائز ہیں حکومت ان کے مسائل کو حل کرے اور بجلی کی فراہمی کو یقینی بنائے۔نلتر پائین کے سو سے زیادہ گھرانے واٹر چینل کے تباہی کی زد پر ہیں کل کلاںان کے جان ومال کو کوئی نقصان پہنچا تو اس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔

وحدت نیوز(ملتان) امریکہ دنیا بھر میں دہشت گرد قوتوں کا سرپرست ہے، ملک بھر میں قائد وحدت علامہ ناصر عباس کی اپیل پرمئی کو یوم مردہ باد امریکہ منایا جائے گا۔ ملک بھر میں امریکی ناپاک عزائم کے خلاف احتجاج اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔ ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب بھرمیں بھی یوم مردہ باد ریلیوں اور مظاہروں کا انعقاد کیا جائے گا، جنوبی پنجاب کی مرکزی ریلی دولت گیٹ چوک سے گھنٹہ گھر چوک تک نکالی جائے گی، ملتان کے علاوہ بہاولپور میں یونیورسٹی چوک سے پریس کلب تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی، رحیم یارخان میں ریلوے چوک سے پریس کلب تک ریلی نکالی جائے گی، اوچشریف میں علمدار چوک پر احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا، مظفرگڑھ میں قنوان چوک سے پریس کلب تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی، بھکر میں امام بارگاہ قصر زینب سے احتجاجی ریلی نکالی جائے گی، میانوالی میں مرکزی امام بارگاہ ہاشم شاہ سے ریلوے چوک تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی۔

 علامہ اقتدار نقوی نے انتظامی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ ہی ہے جو فلسطین میں اسرائیل کے غاصبانہ تسلط اور ناجائز ریاست اسرائیل کے جرائم کی پشت پناہی اور سرپرستی کر رہا ہے، امریکہ ہی ہے کہ جس نے پہلے افغانستان پھر عراق میں اپنے دہشتگردانہ ناپاک عزائم کو تکمیل دینے کے کئے دسیوں ہزار معصوم انسانوں کو موت کی نیند سلا دیا۔امریکہ ہی ہے کہ جس نے داعش جیسی خونخوار دہشت گروہوں کو جنم دیا اور شام و عراق میں دہشت گردی کا بازار گرم کیا اب یہی امریکہ شام و عراق میں ناکام ہونے کے بعد اپنے ناپاک منصوبوں کا نشانہ پاکستان کو بنانے پر تلا ہوا ہے اور داعش جیسی دہشتگرد تنظیموں کو افغانستان میں سرپرستی کر کے خطے کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے۔یہ ایک الارمنگ صورت حال ہے افغانستان اور پاکستان میں گزشتہ چند ماہ میں ہونے والی ہزارہ برادری کی کلنگ کے پیچھے انہی دہشت گردوں کا ہاتھ ہے جو امریکا اور اسکے اتحادیوں نے ہی بھرتی کئے اور انہیں جہاد کے نام پر استعمال کیا۔ مختلف ممالک کے وسائل کی لوٹ مار کرنا، کٹھ پتلی حکومتیں قائم کرکے ڈکٹیٹروں ظالم موروثی حکومتوں اور شیوخ و بادشاہوں کو قوموں پر مسلط کرکے انکی آزادیوں کو سلب کرنا، یہ سب امام خمینی کے اس جملے کو بالکل سچ ثابت کرتا ہے کہ ہماری تمام ترمشکلات کا ذمے دار امریکا ہے کئی جگہ دہشت گرد امریکی سرپرستی میں کام کر رہے ہیں۔دنیا بھر میں جتنی بھی بد امنی ہے ا س کے پیچھے امریکہ اور اس کے حواری ہیں جو دنیا پر اپنا تسلط برقرار رکھنے کے لئے دنیا بھر میں انسانوں کا خون بہارہے ہیں۔ امریکہ دنیا کا سب سے بڑا شیطان اور دہشت گرد ہے .امریکہ کا مقبوضہ یروشلم میں اپنا سفارتخانہ منتقل کر نے اورامریکی حکومت کا پاکستان کے ساتھ نازیبا رویہ قابل مذمت ہے۔13 مئی کو علامہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر ملک بھر میں یوم مردہ باد امریکہ کے عنوان سے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی جبکہ مرکزی احتجاجی ریلی کراچی میں نمائش تا تبت سینٹر نکالی جائے گی جس میں عوام کی بڑی تعداد سمیت سیاسی ومذہبی جماعتوں کے قائدین بھی شریک ہوں گے ۔

Page 9 of 859

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree