The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی کے فرزند سید حسین الحسینی نےمجلس وحدت مسلمین کے تحت اسلام آباد کے پریڈ گراونڈ میں ناصران ولایت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں سلام پیش کرتا ہوں سربراہ مجلس وحدت مسلمین اور ان کی ٹیم کو اور تمام پیروکاران شہید حسینی کوجو دور دراز کے علاقوں سے یہاں تشریف لائے ہیں اور شہید کی فکر کو زندہ رکھنے میں کردار ادا کر رہے ہیں، اکتیس سال بعد بھی اگر یہاں لوگ موجود ہیں تو یہ شہید حسینی کی محبت کا نتیجہ ہے، شہید حسینی کا نام ہمارے درمیان اتحاد و وحدت کا ضامن ہے، شہید کا نام ہمیں دعوت دیتا ہے کہ ہم ایک ہو جائیں۔

شہید کا پروگرام ایک رسم کی شکل تک نہ رہے بلکہ شہید کے وحدت کے پیغام میں منتقل ہونا چاہیئے، ہمیں شہید کے پیغام کو سمجھنا ہوگا، امام خمینی نے بھی تاکید تھی کہ ہم شہید کی فکر کو زندہ رکھیں، سب کو اتحاد و وحدت کی طرف آنا پڑے گا، اپنے درمیان تمام اختلاف ختم کرنا ہوں گے، ہر جگہ پروگرامات ہوتے ہیں لیکن الگ الگ، اس کی وجہ یہی ہے کہ ہم نے شہید کی فکر کو نہیں سمجھے، اگر ہم شہید کے خون سے تجدید عہد کرنا چاہتے تو ایک ہونا ہوگا، یہ سوچنا ہوگا کہ ہم نے اکتیس برسوں میں کیا کھویا اور کیا پایا؟، ضرورت اس امر ہے کہ ہم شہید کے پیغام کو سمجھتے ہوئے اپنے اختلافات کو ختم کر دیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) استادالذاکرین سیدریاض حسین شاہ رتوال نےمجلس وحدت مسلمین کے تحت منعقدہ ناصران ولایت کانفرنس سے خطاب میں کہا ہے کہ مذہب حقہ کے ماننے والے ایک ہیں اور اپنی تحریک کو جاری رکھے ہوئے ہیں، ولایت کی تحریک کوئی طاقت نہیں روک سکتی، یہ تحریک چلتے ہوئے قائد شہید عارف حسین الحسینی تک پہنچی، جنہوں نے اپنے خون سے اس تحریک کو سینچا۔

انہوں نے کہاکہ شہید قائد ؒنےولایت تکوینی کا درس دیا، ہم شہید قائد کو ان کی کاوشوں اور خدمات پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں، حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ شر کا خاتمہ کرے اور اچھے کام کرنے والوں کو سپورٹ کرے، ہم اس ملک کے سپورٹ کرنے والے ہیں، جس کے بانی قائد اعظم محمد علی جناح ہیں، ہم پرامن شہری ہیں، ہر مکتبہ فکر کو مذہبی معاملات میں آزادی دی جائے۔ ہم کسی بھی لمحہ اہل بیت علیہ السلام کو نہیں چھوڑ سکتے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر قاسم شمسی نےمجلس وحدت مسلمین کے تحت پریڈ گراؤنڈ اسلام آبادمیں منعقدہ ناصران ولایت کانفرنس سے خطاب میں کہا ہے کہ آج ہم اس ہستی کو خراج عقیدت پیش کرنے آئے ہیں، جس نے اس ملک میں مظلوموں کی آواز بلند کی اور امریکی ایجنڈے کو ناکام بنایا، دشمن سمجھتا تھا کہ وہ علامہ عارف حسین کو شہید کرکے اُن کے افکار ختم کر دے گا، مگر وہ اس میں ناکام ہوگیا، قائد کے وارثان زندہ ہیں، اسلامیان پاکستان نے آپ کا راستہ نہیں چھوڑا۔

انہوںنےکہاکہ آج پھر پاکستان کے خلاف سازشیں کی جا رہی ہیں، ڈیل آف دی سنچری لیکر آئے ہیں، یمن اور کشمیر میں ان کے مظالم کسی سے ڈھکے چھپے نہیں، دشمنان اسلام کو شام میں ناکامی ہوئی، فلسطین اور کشمیر میں بھی ان کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑے گا، جب تک ایک بھی حسینی پاکستان میں موجود ہے، امریکی اور استکباری طاقتوں کی سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ دشمن نے پے در پے ناکامیوں کے بعد اس ملک کو داخلی سطح پر الجھانے کی کوشش کی ہے، لیکن ہم بتا دینا چاہتے ہیں اس ملت کے علماء اور فرزندان اسلام ایک پیج پر ہیں اور طاغوتی سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ علامہ ناصر عباس اور ان کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، جنہوں نے راہ وفا کو زندہ رکھا ہوا ہے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کےمرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ احمد اقبال رضوی نے کہا ہے کہ دشمن کی سازش ہے کہ ملت جعفریہ کو ٹکروں اور گروہوں میں تقسیم کر دیا جائے اور بصیرت یہی ہے کہ ہم تقسیم نہ ہوں، قائد شہید نے ساڑھے چار سال کے مختصر عرصے میں ہمیں بصیرت عطا کی اور بتایا کہ زندہ کس طرح رہنا ہے۔ پریڈ گراونڈ میں ناصران ولایت کانفرنس سے خطاب میں علامہ احمد اقبال رضوی نے کہا کہ نوے فیصد خطرات داخلی دشمن سے ہیں، جو دشمن کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں، امام علی علیہ السلام کی ولایت کے ماننے والے کبھی تقسیم نہیں ہوسکتے، اختلاف فقط اس لیے ہوسکتا ہے کہ بعض افراد ذاتی شہرت کی خاطر اختلافات کو پروان چڑھاتے ہیں، ملت جعفریہ کے اندر جتنے بھی اختلاف ہیں، وہ ذاتی خواہشات کی وجہ سے ہیں، ہوائے نفس اس کے پیچھے ہیں، شیطان کی پیروی نہ کریں، آئیں ملکر امام زمانہ علیہ اسلام کی پیروی کریں۔ ذاکرین سمیت ملت کے تمام دھڑوں کو ایک کریں، یہی قائد شہید کی فکر تھی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنما علامہ حسن ظفر نقوی نے کہا ہے کہ کشمیر میں ظلم و ستم کا بازار گرم کر دیا گیا ہے، حکمرانوں سے اختلاف تھا، ہے اور رہے گا، آج قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی زندہ ہوتے تو لازمی مظلوم کشمیروں کیلئے آواز بلند کرتے، ہم مقبوضہ وادی میں مظالم کی مذمت کرتے ہیں، ہم کوئی یہاں صفائیاں دینے نہیں آئے ہیں، کسی سے حب الوطنی کا سرٹیفکیٹ لینے کی ضرورت نہیں، ہمیں معلوم ہے کہ اس ملک میں دہشتگردی کو پروان کس نے چڑھایا، کس نے طالبان بنائے، کس نے لشکر بنائے، آج ایک مرتبہ پھر امریکا سے ہاتھ ملایا جا رہا ہے، ایک مرتبہ پھر پرانی روش پر جایا جا رہا ہے، ہم واضح کر دینا چاہتے ہیں کہ تم امریکا اور آل سعود سے ہاتھ ملا سکتے ہو، مگر جب تک اس ملک میں ایک بھی شیعہ زندہ ہے، نہ امریکا اور نہ ہی آل سعود کے عزائم کو پورا ہونے دے گا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی دہشت گردی امریکہ، اسرائیل اور بھارت کے گٹھ جوڑ کا نتیجہ ہے۔ ڈیل آف سینچری (صدی کی ڈیل) کے نام پر فلسطین کی سرزمین پر غاصبانہ اسرائیل کے قبضے اور مقبوضہ کشمیر پہ ہندوستانی غاصبانہ تسلط کو قانونی شکل دینے کے امریکی، اسرائیل، بھارتی اور خائن عرب ریاستوں کے منصوبہ کو اْمت مسلمہ مسترد کرچکی ہے۔ مذہب کے نام پر اپوزیشن جماعتیں اپنے سیاسی اغراض و مقاصد کیلئے تکفیر اور مذہبی کاڑد کو استعمال نہ کریں، 40 سال سے پاکستان مذہبی کارڈ اور تکفیر کی وجہ سے لاکھوں پاکستانیوں کی جانیں دے چکا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زیر اہتمام شہید علامہ عارف حسین الحسینی کی اکتیسویں برسی کی مناسبت سے اسلام آباد کے پریڈ گراونڈ میں ناصرانِ ولایت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، جس میں ہزاروں کی تعداد میں مرد و خواتین نے شرکت کی، جو اپنے ہاتھوں میں مجلس وحدت مسلمین، پاکستانی پرچم، پلے کارڈز اور شہید علامہ عارف حسینی کی تصاویر اٹھائے ہوئے تھے۔ جلسے کے شرکاء امریکا مردہ باد، اسرائیل مردہ باد اور بھارت مردہ باد کے نعرے لگا رہے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سربراہ مجلس وحدت مسلمین علامہ راجہ ناصر عباس کا کہنا تھا کہ پاکستان کو اپنی خارجہ پالیسی کو بہتر اور متوازن بنا کر اسلامی ممالک کیساتھ تعلقات کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان کو بین الاقوامی تنازعات کا حصہ بننے کے بجائے اس کے حل کیلئے کردار ادا کرنا چاہیئے۔ علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ پاکستان کی سیاست میں سیاسی مخالفین کیخلاف ناموس رسالت کو ہتھیار کے طور پر استعمال کرنیکی مذمت کرتے ہیں، مذہبی مقدسات کو اپنے سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے والے دنیا اور آخرت میں جوابدہ ہونگے۔ ملک کی لوٹی ہوئی دولت کی پائی پائی وصول کرکے غریب عوام کی فلاح و بہود پر خرچ کرنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ پلی بارگینگ کے نام پر لٹیروں کو چھوٹ دینے کی پاکستانی قوم کبھی اجازت نہیں دے گی۔ انہوں نے کہا کہ امریکا افغانستان میں اپنی بدترین شکست کو فتح میں تبدیل کرنے کیلئے پاکستان کا کندھا استعمال کرنا چاہتا ہے۔

سربراہ ایم ڈبلیو ایم نے کہا کہ اس وقت خطے میں امریکا، بھارت اور اسرائیل کا گٹھ جوڑ امتِ مسلمہ اور پاکستان کیخلاف تیار ہو رہا ہے، امریکا نے اسرائیل کی ایماء پر فلسطین کیخلاف صدی کی ڈیل نامی سازش رچائی، جو کہ ذلت آمیز شکست کا شکار ہوئی، امریکا صدی کی ڈیل کے نام پر فلسطین پر اسرائیل کو مسلط کرنا چاہتا ہے  اور اسی طرح کشمیر پر بھارت کا تسلط قائم کرکے وہاں مسلمانوں کی نسل کشی چاہتا ہے، جو پاکستان کی غیور عوام کبھی نہیں ہونے دے گی، ہم کشمیر میں بھارتی ناپاک عزائم و ظلم و بربریت کی شدید مذمت کرتے ہیں، کشمیر میں بھارتی عزائم سے ہم باخبر ہیں، نہتے کشمیریوں کیخلاف جو خونی کھیل انڈیا کھیلنے جا رہا ہے، بھارت کو اس کی بھاری قیمت چکانی پڑھے گی، کسی بھی دشمن کو مادر وطن کی جانب میلی آنکھ سے دیکھنے کی اجازت نہیں دینگے۔ علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ امریکا سے دوستی کسی بھی قوم کیلئے خودکشی کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ خطے کی صورتحال تیزی سے تبدیل ہو رہی ہے، حکمران کوئی ایسا فیصلہ نہ کریں کہ پاکستان کے ہاتھ کچھ نہ آئے۔

علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ قرآن مجید نے یہود و نصاریٰ سے دور رہنے کی ہدایت کی ہے، مومنوں کو دور رہنے کی ہدایت کی گئی ہے، یہود و نصاریٰ فساد پھیلانے والے ہیں، آج قطر، یو اے ای اور سعودی عرب یہود و نصاریٰ کے ایجنٹ بن گئے ہیں، اللہ نے اپنے رسول اور امام کو ولی ماننے کا کہا ہے، غلبہ پانے کا راستہ یہ ہے کہ یہود و نصاریٰ کی ولایت کی جانب مت جائیں بلکہ اللہ، رسول اور علی ؑ کی ولایت کی طرف آئیں، پھر نجات پائیں گے۔ امام خمینی رضوان اللہ تعالیٰ نے ایران میں یہود و نصاریٰ کے ایجنٹوں کو منطقی انجام تک پہنچایا، ولایت کی حکومت قائم کی، عراق میں شہید باقر الصدر، لبنان میں شہید عباس موسوی اور پاکستان کی سرزمین پر شہید علامہ عارف حسین الحسینی نے اس نہضت کو آگے بڑھایا، ولایت فقیہ کا مطلب عصر حاضر میں یہود و نصاریٰ کی ولایت کا انکار ہے، جس تحریک میں خون شامل ہو جائے، اس کو کوئی یزید روک نہیں سکتا، راولپنڈی میں سازش کے تحت ملت تشیع کو ملوث کرنے کی کوشش کی گئی، ایک بڑی سازش بنائی گئی، فتنہ کو شکست ہوئی، عزاداری پر پابندی لگانا چاہتے تھے، جب تک ولایت اللہ، ولایت رسول، ولایت امام علیٰ ؑ اور ولایت فقیہ کے ماننے والے اس ملک میں ہیں، دشمن کی سازش کامیاب نہیں ہوسکتی۔ دشمن اب ناکامی پر اندرونی محاذ پر ہمیں تقسیم کرنا چاہتا ہے۔

سربراہ ایم ڈبلیو ایم نے کہا کہ میرا ان خطباء، ذاکرین، عزاداران اور بانیان مجالس پر سلام ہے، جنہوں نے شیعہ قوم کو دو فرقوں میں تقسیم ہونے کی سازش کو ناکام بنا دیا۔ شہید قائد اتحاد بین المسلمین چاہتے تھے، آج ملت تشیع کے اہل سنت بھائیوں سے بہترین تعلقات ہیں، شہید خطباء اور ذاکرین کی طرف ہاتھ بڑھاتے تھے، شہید قائد نفرتیں نہیں بانٹتے تھے، کسی کی توہین اور تحقیر نہیں کرتے تھے۔ ہمیں ان سے سیکھنا ہے، ان کی فکر اور عمل پر عمل پیرا ہونا ہے، علامہ ناصر عباس نے کہا کہ مغربی بارڈر پر داعش مضبوط ہو رہی ہے، اس وقت پاراچنار سمیت پورے خطے میں داعش کے خطرات منڈلا رہے ہیں، سکیورٹی اداروں کو پاراچنار کے لوگوں کو اعتماد میں لیکر اس خطرے کا مقابلہ کرنا جاہیئے، ڈی آئی خان میں دہشتگردی کے خطرات منڈالا رہے ہیں، کے پی کے اور مرکزی حکومت ڈیرہ اسماعیل خان میں دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کرے، پاکستان کی خارجہ اور داخلہ پالیسی پاکستان کے قومی مفاد کے مطابق ہونی چاہیئے، امریکا ناقابل اعتماد ہے، یہ ہمارے دشمن ہیں، ان پر اعتماد نہیں کرنا چاہیئے، قرآن مجید کہتا ہے کہ ان سے دوستی نہ کرو، پہلے دوستی کی تو ملک ٹکروں میں بٹ گیا، ہر طرح کا بحران کھڑا ہوگیا، ہماری جغرافیائی لحاظ سے بہت اہمیت ہے، اپنے آپ کو کمزور مت سمجھیں۔

ایم ڈبلیو ایم کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ اب امریکا کی کشتی ڈوب ہو رہی ہے، اب ڈوبتی کشتی میں سوار ہوئے تو ہم بھی ڈوب جائیں گے، امریکہ کی ہیبت کے غبارے سے ہوا نکل چکی ہے، رہبر معظم آیت اللہ خامنہ ای نے اس غبارے سے ہوا نکال دی ہے۔ یمن میں امریکا اور یو اے ای شکست کھا چکے ہیں، ڈیل آف سنچری مٹ چکی ہے۔ امریکہ کی طاقت کا محل ڈھے چکا ہے، یہ محل علی والوں نے گرایا ہے، کربلا والوں نے گرایا ہے، غیرتمند شیعہ سنی نے ملکر گرایا ہے۔ پاکستان میں بھی شیعہ سنی ملکر ان منافقوں اور ظالموں کے اثرورسوخ کو روکیں گے۔ گلگت بلستان کے باسیوں کو آئینی حقوق دیئے جائیں، مقتدر حلقے کی ذمہ داری ہے کہ ان کی زمینوں پر قبضہ نہ کریں، وہ تنہا نہیں ہیں۔ نائجیریا میں ابراہیم زکزکی اور ان کی زوجہ اسیر ہیں، ہماری حکومت کی ذمہ داری ہے کہ پاکستان کے پانچ کروڑ شیعہ اور سولہ کروڑ سنی مطالبہ کرتے ہیں کہ دو سال سے قید ابراہیم زکزکی کو جیل سے باہر لایا جائے اور علاج کیلئے بیرون ملک بھیجا جائے۔ انہوں نے کہا کہ مسنگ پرسنز ممتاز رضوی، ظہیر الدین بابر سمیت دیگر تمام لاپتہ افراد کو بازیاب کرایا جائے، کئی کئی بار بار کہہ چکے ہیں کہ ان کو باہر لاو، اگر وہ مجرم ہیں تو کورٹ میں پیش کریں، آج کا یہ اجتماع مطالبہ کرتا ہے کہ عمران خان ملک کی ایجنسیوں سے ان اسیروں کو رہا کرائیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے تحت شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی ؒ کی 31ویں برسی کے موقع پر ناصران ولایت کانفرنس کا باقائدہ آغاز تلاوت کلام پاک سے پریڈ گراؤنڈ اسلام آباد میں ہوگیا ہے ۔ تلاوت کلام پاک کی سعادت معروف قاری آصف سروری نے حاصل کی ۔ ناصران ولایت کانفرنس میں نظامت کے فرائض ایم ڈبلیوایم کے مرکزی رہنما علامہ مختارامامی اورملک اقرارحسین انجام دے رہے ہیں ۔

اس عظیم الشان اجتماع میں ایم ڈبلیوایم کے مرکزی قائدین، مذہبی وسیاسی جماعتوں کے رہنماخطاب کریں گے ۔ جبکہ خصوصی فکر انگیز خطاب مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کریں گے ۔ کانفرنس میں شرکت کیلئے ملک کے مختلف شہروں سے ہزاروں عاشقان ولایت تشریف لائے ہیں ۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی ؒ کی 31ویں برسی کے موقع پر مجلس وحدت مسلمین کےزیر اہتمام پریڈ گراؤنڈ اسلام آباد میں منعقدہ عظیم الشان اجتماع بعنوان ناصران ولایت کانفرنس میں شرکت کیلئےملک بھر سےعاشقان ولایت اسلام آباد پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔ چاروں صوبوں ، آزادکشمیر اور گلگت بلتستان سے بذریعہ ٹرین اور بس قافلوں کی آمد کا سلسلہ کل رات سے جاری ہے ۔جنہیں استراحت اور طعام کے لئے مختلف امام بارگاہوں میں ٹھرایاگیاہے ۔

مرکزی سیکریٹریٹ سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ناصران ولایت کانفرنس میں ملک بھر سے ہزاروں خواتین ومرد عاشقان ولایت کی شرکت متوقع ہے ۔ ملک کے مختلف شہروں سے آنے والے قافلوں کیلئے راولپنڈی اور اسلام آباد کے داخلی راستوں پر استقبالیہ کیمپس لگائے گئے ہیں جوکہ قافلوں کی رہنمائی کے فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ انشاءاللہ جلسے کا باقائدہ آغاز شام 5بجے ہوجائے گا، جس سے خصوصی خطاب مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کریں گے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی ؒ کی 31ویں برسی کے موقع پر مجلس وحدت مسلمین کےزیر اہتمام پریڈ گراؤنڈ اسلام آباد میں  منعقدہ عظیم الشان اجتماع بعنوان ناصران ولایت کانفرنس کی تیاریاں اختتامی مراحل میں داخل ہوگئی ہیں ۔

ملک بھر سے وحدت یوتھ پاکستان سے سینکڑوں رضاکار انتظامی امور سنبھالنے کیلئے جلسہ گاہ پہنچ گئےہیں ، مرکزی سیکریٹری وحدت یوتھ پاکستان علامہ شیخ اعجازبہشتی نے یوتھ رضاکاروں کا استقبال کیااور ان سے گفتگو کی ۔

واضح رہے کہ پنڈال میںہزاروں کرسیاں لگادی گئی ہیں ،دیوہیکل اسٹیج کی سجاوٹ جاری ہے ،شہید فاؤنڈیشن سمیت مختلف ملی تنظیمات اوراداروں کی جانب سےکیمپس ، شہداءکی تصویری نمائش اور سبیلوں کا اہتمام کیا گیاہے۔

مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی ، چیئرمین کانفرنس نثارعلی فیضی ، علامہ اعجازبہشتی اور ملک اقرار حسین نے انتظامات کا جائزہ لیااور رضاکاروں سے خطاب کیا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) 4اگست پریڈ گراونڈ میں عظیم الشان ناصران ولایت کانفرنس منعقد ہو گی ملک بھر سے ہزاروں کارکنان سمیت ملکی مذہبی وسیاسی شخصیات جلسے میں شرکت کریں گی ۔کانفرنس کا انعقاد شہید علامہ عارف حسین الحسینی کی 31ویں برسی کی مناسبت سے کیا جارہا ہے ۔ سربراہ ایم ڈبلیو ایم علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سمیت دیگر قائدین خطاب کریں گے ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے رہنما نثار فیضی، علامہ مختار امامی، علامہ اقبال بہشتی اور علامہ اعجاز بہشتی نے مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب میں کیا ۔

انہوں نے کہا کہ قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی کی 31ویں برسی کے تمام انتظام مکمل کرلیے گئے ہیں، برسی کا اجتماع چار اگست کو اسلام آباد کے پریڈ گراونڈ میں شام 5 بجے شروع ہوگا ۔ مجلس وحدت مسلمین کے رہنماؤں نے ہندوستان کی جانب سے ایل او سی کی خلاف ورزی کی شدید مذمت کی اور کہا کہ انسانی آبادی پر کلستر بم پھیکنا عالمی اصولوں کی خلاف ورزی ہے جس کا اقوام کو متحدہ نوٹس لینا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان کی کشمیر میں جاری جارحیت کی شدید مذمت کرتے ہیں بھارت بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کا مرتکب ہو رہا ہے ۔نثار علی فیضی نے کہا کہ شہید عارف حسین الحسینی کی برسی کے انعقاد کا مقصد ان کے افکار اور کردارکو زندہ رکھنا اور آ نیوالی نسل تک پہنچانا ہے ۔مجلس وحدت مسلمین علامہ عارف حسین الحسینی کا مشن لیکر اگے بڑھ رہی ہے ۔شہید عارف حسین الحسینی پاکستان میں اتحاد بین المسلمین کے داعی تھے۔ آپ نے پاکستانی مظلومین کی آواز کو عالمی اسلامی تحریکوں کے ساتھ مربوط کیا۔

انہوںنے مزیدکہاکہ کشمیر فلسطین کے مظالم کے خلاف آپ نے ساری زندگی جدوجہد کی اور عالمی استکبار طاقتوں کو بے نقاب کیا، اسی وجہ سے انہیں شہید کردیا گیا،یہ کانفرنس اس بات کا عزم ہے کہ ہم پاکستان میں کسی دوسرے ملک کی مداخلت کو قبول نہیں کرتے اور مظالموں کے ساتھ اپنے رشتے کو اور مضبوط کریں گے۔ اس کانفرنس کے ذریعے ملک کی سلامتی کےلئے جانیں قربان کرنے والے شہدا کو خراج تحسین پیش کریںگے۔

Page 9 of 965

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree