The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) آج 18 ذی الحجہ اور عید اللہ الاکبر یعنی عید غدیر ، عید ولایت کا دن ھے ۔ایک طرف تو غدیر کے بارے مسلمانوں کے ایک بڑے طبقے کو " آلزایمر " کی بیماری ھو گئی، اور اس عظیم حقیقت کو یا تو جان بوجھ کر طاق نسیاں کے حوالے کر دیا گیا ، اور یا غفلت کی وجہ سے فراموشی کے سپرد کر دیا گیا ۔اور دوسری طرف " من کنت مولاہ فھذا علی مولاہ " کی ایسی تفسیر  اور تشریح کی گئی جس نے اس ولایت کی  عظیم نعمت کو کم اھمیت کر دیا ، کچھ نے یہ کہا کہ یہاں " مولا " سے مراد صرف دوستی ھے، یعنی جس جس کا میں دوست ھوں اس اس کے علی دوست ھیں، کچھ نے اس کو صرف اور صرف ولایت باطنی( یا ولایت تکوینی ) منحصر کر دیا۔

اور یوں " مولا" کا معنی ایسا بیان کیا جس سے اجتماعی معاشرتی زندگی سے کٹا ھوا خانقاھی نظام تو وجود میں آسکتا ھے، جو آپ کو اجتماعی زندگی کی نسبت بے تفاوت کر دیتا ھے، اور ظلم کے مقابل میدان مبارزہ میں اتر کر " رسم شبیری " ادا کرنے سے محروم کر دیتا ھے ۔( جسے علامہ اقبال رہ  " جدا ھو دین سیاست سے تو رہ جاتی ھے چنگیزی " کہتے ھیں ) ۔

ایک وہ طبقہ ھے جو " مولا " سے ایک جامع معنی مراد لیتا ھے جسے امامت و ولایت سے تعبیر کرتے ھیں ۔یعنی 18 ذی الحجہ کو میدان غدیر میں مولا علی علیہ السلام کی امامت و ولایت کا اعلان ھوا ھے ۔لہذا دین و سیاست، دین و اخلاق، دین و معیشت، دین و قانون، دین و تعلیم تربیت اکھٹے ھیں ۔اور اسلام میں لبرالزم ، کیمونزم ، نیشنلزم ، سوشلزم وغیرہ کی کو ئی جگہ نہیں ھے

یعنی خاتم الانبیاء ص کے بعد بھی ان میں جدائی نہیں ھو گی دین کا اپنی جامعیت کے ساتھ اجراء اب رسول پاک ص کے بعد والے " مولا" کے ھاتھوں ھو گا ۔یعنی جس طرح ختمی مرتبت پیامبر گرامی ص کو دین کے نفاذ کے لئے " ولایت در تشریع " اللہ سبحانہ و تعالی کی طرف سے حاصل تھی اسی طرح اللہ سبحانہ و تعالی کی طرف سے بھی " ولایت در تشریع " مولا علی ع کو حاصل ھے اور وھی دین اسلام کے احکام کو نافذ کریں گے، دین کی تفسیر و تبیین وھی  کریں گے ، ان کا اجراء کریں گے۔  بعد از رسول خدا انہی کی حکومت مشروعیت رکھتی ھے ۔

اور یوں معصومین علیہم السلام کا سلسلہ امامت ھی رسول پاک ص کا جانشین ٹھہرا ۔اب سوال یہ ھے کہ غیبت کبری میں دین کے احکام کا اجراء اور نفاذ کون کرے گا ، (اور یہ بات واضح ھے کہ ان احکام دین کا اجراء حکومت کے بغیر ممکن نہیں ۔)

کیا غیبت کبری میں حدود الہیہ( جو کہ ناموس خدای سبحان ھیں ) معطل رھیں گی، احکام الہی کتابوں میں بند الماریوں کی زینت رھیں گے ۔ضد دین قوتوں کے لئے میدان خالی چھوڑ دیا جائے گا ۔احکام الہی جب پاؤں تلے روندے جائیں گے تو ھم یا بے تفاوت ھو کر  ان کی بے حرمتی کا تماشا دیکھیں گے یا حجرہ نشین ھو کر اظہات افسوس کریں گے۔

یقیناً ایسا ھر گز درست نہیں ھمارے آئمہ علیھم السلام نے بھی اور عقل نے بھی راھنمائی کی ھے کہ دور غیبت کبری می  فقیہ جامع الشرائط کی ذمہ داری ھے کہ وہ اس فریضے کو انجام دے اور غیبت کبری میں دین کے نفاذ کے  اور حدود الہیہ کے اجراء کے نظام کو ولایت فقیہ کا نظام کہتے ھیں ۔فقیہ کی حکومت دراصل اللہ سبحانہ و تعالی کے احکام اور قوانین کی حکومت ھوتی ھے ، وہ قوانین جو خود فقیہ پر بھی لاگو ھیں، فقیہ قوانین الہیہ سے بالاتر نہیں ۔

اب ولایت فقیہ کا مخالف در اصل اللہ سبحانہ و تعالی کے قوانین کے اجراء اور نفاذ کا مخالف ھے، ( جب کہ ولایت فقیہ کے مخالفین لبرالزم اور سیکولرازم اور کیپٹلزم کے بارے بالکل چپ کا روزہ رکھ لیتے ھیں ) ۔لہذا غیبت کبری میں ولی فقیہ یعنی ایسا حاکم جو کہ  جامع الشرائط فقیہ ھے اور مبسوط الید ھے ، جو دین کے احکام اور قوانین کے نفاذ اور اجراء کے لئے کوشاں ھیں ۔اور ھر غیرت مند دین دار، متدین کی ذمہ داری ھے کہ دین کے نفاذ میں وہ فقیہ کا ساتھ دے اور ان کی مدد کرے ۔

دنیا گلوبل ولیج ھے ، ھم جہاں بھی نظام ولایت فقیہ کی حمایت ھماری ذمہ داری ھے ۔نظام ولایت فقیہ کے دشمن ھر جگہ موجود ھیں ۔اس وقت نظام ولایت فقیہ ( یعنی اللہ سبحانہ و تعالی کے دین و قوانین کو نافذ کرنے والا نظام ) لبرل ورلڈ آرڈر کے استکباری فرعونوں اور ان کے آلہ کاروں کی طرف سے حملے کی زد میں ھے،

چالیس سال سے دنیا کے فرعون و شداد و قارون اور بلعم باعورا اپنی ساری طاقت اکٹھی کر کے اس مقدس نظام پر حملہ ور ھیں، وہ امریکہ یورپ افریقہ سے لیکر ایشیا تک  ولایت فقیہ کے نظام کے خلاف  مکہ اور اطراف مکہ کے مشرکین کی طرح جنگ احزاب کی مانند صف کشیدہ ھیں ۔ ان کا مقابلہ صرف ایران کے مظلوم انقلابی عوام کی ذمہ داری ھے یا دنیا میں موجود ھر غیرت مند مؤمن کی ذمہ داری ھے ۔تا کہ شیطانی قوتوں کو شکست ھو ۔

لہذا شھید قائد رہ کا یہ کہنا کہ " میں اپنی اولاد ، جان، مال اور سب کچھ فدا کر سکتا ھوں لیکن خط ولایت فقیہ سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ھٹ سکتا " قران و اسلام کے اصولوں کے عین مطابق  ایک دینی غیرت رکھنے والے رھبر اور قائد کا بیان ھے ۔

لہذا ھم آج غدیر کے دن اپنے شھید قائد رہ سے  یہ عہد کرتے ھیں کہ ھم نظام ولایت فقیہ اور ولی فقیہ کی۔حمایت، نصرت، اتباع اور پیروی میں اپنی جان مال ، اولاد اور سب کچھ فدا کر سکتے ھیں لیکن خط ولایت سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ھٹیں گے ۔

اللہ اکبر
الموت لامریکا
الموت لاسرائیل
اللعنة علی الیہود

النصر و للاسلام

وسلام
علامہ راجہ ناصر عباس جعفری

مرکزی سیکریٹری جنرل

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

وحدت نیوز (کراچی)مجلس وحدت مسلمین ضلع وسطی کراچی کے زیر اہتمام جشن عید غدیر میں منقبت خوانی کے علاوہ بچوں کے لئے جھولوں،بچیوں کے لئے مہندی اور فیس پینٹنگ سمیت عیدی کا بھی خصوصی انتظام کیا گیا تھا۔اس موقع پر مومنین و مومنات باالخصوص بچوں کی کثیر تعداد جشن میں شریک تھی۔

زرائع کے مطابق عید سعید غدیر کی مناسبت سے مجلس وحدت مسلمین ضلع وسطی کراچی کے زیر اہتمام جشن عید غدیر کا انعقاد علامہ رشید ترابی پارک انچولی بلاک 20 پر ہوا۔جشن کا آغاز معروف منقبت خواں برادر جاسر عباس جعفری کی تلاوت حدیث کساء سے ہوا،جشن میں معروف منقبت خواں حضرات نے بارگاہ مولا امیر المومنین علیؑ ابن ابیطالب ؑ میں ہدیہ عقیدت پیش کیا ۔جشن کے موقع پر چراغا اور آتش بازی کے علاوہ خصوصی بات بچوں کے لئے جھولوں،بچیوں کے لئے مہندی اور فیس پینٹنگ سمیت عیدی کا بھی خصوصی انتظام تھا،جس میں بچوں اور بچیوں نےبھرپور انداز میں حصہ لیا۔

جشن سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنماء علامہ سید علی انور جعفری کا کہنا تھا کہ ولایت ایک ایسا موضوع کہ اللہ سبحان تعالیٰ نے سب سے زیادہ جس شے کے طرف دعوت دی ہے اور لوگوں کو بلایا ہے وہ ولایت اہلبیتؑ ہے،اللہ تعالیٰ نے ولایت ایک ایسا جز رکھا ہے کہ جس کے بغیر کوئی عبادت قبول نھیں ہوتی۔ولایت روح عبادت ہے،ولایت روح نماز ہے،ولایت روح روزہ ہے،ولایت روح حج ہے،لہذا جتنی بھی عبادتیں ہیں ان کی روح ولایت مولائے کائنات امام علیؑ ہے،ولایت اہلبیتؑ ہے۔علامہ سید علی انور جعفری نے مزید کہا کہ غدیر ایک ایسا دن ہے کہ جسے صادق آل محمد، امام جعفر صادقؑ و دیگر آئمہؑ نے عید اللہ اکبر یعنی سب سے بڑی عید قرار دیاہے۔یعنی عید الفطر اور عید الاضحی بھی اگر عید بنی ہیں توبھی عید غدیر کی بدولت ہے۔

مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ مبشر حسن نے جشن عید غدیر کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اللہ رب العزت نے پوری کائنات میں جو ایک نور پھیلایا ہے وہ نور مولا علیؑ اور ان کی آل کے وسیلے سے قائم ہے،پاک پروردگار نے کائنات کی خلقت سے قبل اپنی حبیب حضرت محمدﷺ ، مولا علیؑ اور بی بی فاطمۃ الزھراء سلام علیہا کے نور کو خلق کیا تھا،یعنی خالق کائنات نے اس کائنات اس میں موجود ہر شئے اور اپنے پیغمبروں کی خلقت سے پہلے محمدﷺ و اہلبیت محمدﷺ کے نور کو خلق کیا تھا،اور اسی نور کی بدولت آج پوری کائنات روشن ہے۔علامہ مبشر حسن کا کہنا تھا کہ آج مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زمہ داران و کارکنان سمیت تمام شیعہ جوانوں ،ملی اداروں،ماتمی انجمنوں،مساجد و امام بارگاہوں کی زمہ داران نے نے ناصرف انچولی بلکہ ملک کے گوشے گوشے کو نور ولایت علیؑ ابن ابیطالبؑ سے منور کیا ہوا ہے،انھوں نے کہا کہ آج علیؑ کے ماننے والوں نے پاکستان سمیت پوری دنیا کو میدان خم غدیر میں بدل دیا ہے،جہاں دیکھیں نور ولایت کے پروانے اعلان ولایت پر جشن منا رہے ہیں۔

علامہ مبشر حسن،ڈویژنل رہنماء زین رضا رضوی اور صوبائی رہنماء برادر ظہیر حیدر نے مجلس وحدت مسلمین ضلع وسطی کے تمام زمہ داران و کارکنان باالخصوص ضلعی رہنماء برادر کمیل عباس اور برادر ہمایوں کو عظیم الشان جشن عید غدیر کے انعقاد پر مبارکبارد پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج علامہ رشید ترابی پارک پر موجود مومنین و مومنات اور بچوں کے جم غفیر نے جس طرح جشن منایا ہے اور جشن کے انتظامات کی تعریف کی ہے،اس کے لئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی مرکزی،صوبائی اور کراچی ڈویژن کی قیادت برادر کمیل عباس اور برادر ہمایوں سمیت مجلس وحدت مسلمین ضلع وسطی کی کابینہ اور یونٹس کے زمہ داران وکارکنان کو بھرپور خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور ان کی صحت و سلامتی کے لئے دعا گو ہیں

جشن کے اختتامی مرحلے میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے سیکریٹری جنرل علامہ صادق جعفری،صوبائی رہنماء برادر ظہیر حیدر،ڈویژنل رہنماء زین رضا رضوی،ضلع وسطی کے سیکریٹری جنرل محمد کاظم اور ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ ملک محمد عباس نے عید غدیر کی مناسبت سے بچوں میں عیدی تقسیم کی، اس دوران آتش بازی کا بھرپور مظاہرہ کیا گیااور مومنین و مومنات کی خدمت میں نیاز مولائے کائناتؑ پیش کی گئی

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے ترجمان علامہ مقصود ڈومکی نے کہا ہے کہ ملک میں ملت جعفریہ کے محب وطن اور اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں کی جبری گمشدگی کا سلسلہ بند کیا جائے، ماورائے آئین انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کیخلاف اعلیٰ عدلیہ کو نوٹس لینا چاہیئے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ سابق مرکزی صدر آئی ایس او پاکستان اور ملتان بارکونسل کے رکن ایڈووکیٹ یافث ہاشمی کا دن دہاڑے دارالحکومت اسلام آباد کے ریڈ زون سے غائب ہونا اس بات کی غمازی ہے، ان قوتوں کو نہ عدلیہ کا خوف ہے نہ آئین و قانون کی یہ پاسداری کرتے ہیں، ہم پاکستان کو بنانا ریپبلک نہیں بننے دینگے، اگر کوئی قصوروار ہے تو انہیں عدالتوں میں پیش کیا جائے، ہم ایسے غیر قانونی و غیر آئینی اقدامات کی شدید مذمت کرتے ہیں،علامہ مقصود ڈومکی نے کہا ہے کہ حکومت عوام کی جان و مال کی تحفظ کو یقینی بناتے ہوئے ان نادیدہ قوتوں کیخلاف کاروائی کرے، اور تمام ہمارے جبری گمشدہ افراد کو رہا کرے بصورت دیگر ان کے لواحقین کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ اپنے پیاروں کی بازیابی کے لئے ہر فورم کو استعمال کرے.

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین کے وفدنے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی ایڈوکیٹ کی سربراہی میں آئی ایس او کے سابق مرکزی صدر اور معروف قانون دان یافث نوید ہاشمی ایڈوکیٹ کے اہل خانہ سے ملتان میں انکی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور انہیں سربراہ ایم ڈبلیوایم علامہ راجہ ناصرعباس کا خصوصی پیغام پہنچایا اور ایم ڈبلیوایم کی جانب سے مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی۔ اس موقع پر ایم ڈبلیوایم جنوبی پنجاب کے پولیٹیکل سیکریٹری انجینئر مہر سخاوت علی ،ضلعی سیکریٹری جنرل ملتان وجاہت علی مرزا اور دیگر بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔

ناصر شیرازی نے اپنے دورہ ملتان کے دوران ہائی کورٹ بار ملتان کے عہدیداران،رکن قومی اسمبلی ملک عامر ڈوگر اور چیف وہپ پی ٹی آئی سے ملاقات بھی کی اور یافث ہاشمی جلد بازیابی کیلئے تمام ممکنہ اقدامات پر تفصیلی بات چیت اور مشاورت کی۔بعد ازاں انہوں نے جامع مسجد گلگشت کالونی میں نماز جمعہ کے اجتماع اور آئی ایس او اور ایم ڈبلیوایم کے تحت پریس کلب پر جاری احتجاجی دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ یافث ہاشمی کا وفاقی دارالحکومت سے اغواء باعث تشویش اور قابل مذمت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وطن کے محب وطن بیٹوں کا یوں لاپتہ کیا جانا کسی صورت آئینی وقانونی اقدام نہیں ۔ہزاروں قربانیوں کے باوجود ملت جعفریہ کے فعال اور متحرک رہنماؤں کا ماورائے عدالت جبری گمشدہ کیا جانا انسانی حقوق کے عالمی قوانین کی رو سے قومی جرم ہے۔ہم یافث ہاشمی کی باحفاظت بازیابی کیلئے اپنی تمام تر صلاحتیں بروئے کار لارہے ہیں ۔امید ہے انشاءاللہ بحق اسیران کربلا ع یافث ہاشمی جلد آپ کے درمیان ہوں گے۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے اعلی سطحی وفد کے ہمراہ آئی ایس او پاکستان کے مرکزی دفتر کا دورہ کیا ۔آئی ایس او کے مرکزی صدر قاسم شمسی اور دیگر رہنماؤں نے ایم ڈبلیوایم کے قائدین کا استقبال کیا اور انہیں خوش آمدید کہا۔

علامہ راجہ ناصرعباس کی زیر صدارت منعقدہ اجلاس میں سابق مرکزی صدر آئی ایس او یافث نوید ہاشمی کی جبری گمشدگی کے حوالے سے تشویش کا اظہار کیا گیا ۔علامہ راجہ ناصرعباس نے کہاکہ فعال شیعہ قومی شخصیات کا اس طرح جبری گمشدہ کیا جانا بنیادی شہری آزادی پر قدغن کے مترادف اور خلاف آئین و قانون ہے۔مسلسل احتجاجات کے باوجود درجنوں جوان اب تک لاپتہ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایم ڈبلیوایم یافث ہاشمی کی بازیابی کیلئے آئی ایس او کے تمام تر اقدامات کی مکمل حمایت کرتی ہے۔ایم ڈبلیوایم کا شعبہ سیاسیات یافث ہاشمی سمیت تمام اسیران ملت کی جلد بازیابی کیلئے شب و روز کوشاں ہے۔اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے مرکزی رہنما علامہ اعجاز بہشتی،ناصر شیرازی،اسدعباس نقوی ،ڈاکٹر یونس حیدری، صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ عبدالخالق اسدی،سید حسن کاظمی اور دیگر بھی موجود تھے۔

وحدت نیوز(کراچی) شہر قائد میں عید الاضحی کے بعد سے جگہ جگہ ہونے والے گندگی کے ڈھیر نے شہریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے۔ پاکستانی معیشت کی شہ رگ اورسب سے بڑے شہر کی عوام طرح طرح کی مہلک بیماریوں میں مبتلا ہو رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین سند ھ کے سیکریٹری جنرل علامہ سید باقر عباس زیدی نےمیڈیا سیل سے جاری اپنے بیان نے کیا ۔ علامہ باقر زیدی کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کی معیشت کی شہ رگ ہے اور یہاں کے باسیوں کے ساتھ ملک کی تمام جماعتیں سوتیلا سلوک کر رہی ہیں۔ پیپلز پارٹی ، ایم کیو ایم اور تحریک انصاف کی سیاسی رسہ کشی نے ملک کی معاشی رگ کو گندگی کے ڈھیر میں بدل دیا ہے۔ پاکستانی معیشت کو چلانے والے شہر کو اقتدار کے بھوکے درندوں نے تباہ کر کے رکھ دیا ہے۔ علامہ باقر زیدی نے کہا کہ مون سون کی بارشوں اور عید الاضحی کے بعد سے سیوریج کا گندہ پانی اور کچرے کے ڈھیر شہر میں تعفن اور بیماریاں پھیلا رہے ہیں ۔ اگر ان کو صاف نہ کیا گیا توشہر بھر میں وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ ہے۔ علامہ باقر زیدی نے مون سون بارشوں میں کے الیکٹرک کی غفلت سے ہونے والی اموات پر بات کرتے ہوئے کہا کہ کے الیکٹرک کی نااہلی اور غفلت نے اہلِ کراچی کی جانیں لے لیں۔کے الیکٹرک کی وجہ سے معصوم شہریوں کے قتل پرانسداد دہشت گردی کا مقدمہ چلایا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کے الیکٹرک حالیہ بارشوں میں معصوم شہریوں کی قاتل بن گئی ہے، کے الیکٹرک کی غفلت سے ہونے والے قتل کا نوٹس اب تک نہیں لیا گیا۔ انہوں نے چیف جسٹس اور وفاقی حکومت سے اپیل کی کہ وہ کے الیکٹرک کے خلاف مقدمات کا نوٹس لیں ۔بے گناہ قتل ہونے والے افراد کے اہل خانہ اپنے پیاروں کے خون کا انصاف مانگ رہے ہیں۔ انہوں نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ کے الیکٹرک کا معاہدہ فوری طور پر ختم کر کے اسے واپس حکومتی تحویل میں لیا جائے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) سلامتی کونسل کا مسئلہ کشمیر پر اجلاس خوش آئیندہے کشمیریوں کی مشکلات کا تدارک کرنا یواین سیکورٹی کونسل کی بھی ذمہ داری ہے ۔بھارتی وزیردفاع کا جوہری ہتھیاروں کے استعمال کا بیان بھارتی جنگی جنونیت کی واضع مثال ہے بلوچستان میں جاری دہشگردی کے پیچھے ہندوستان ملوث ہے ان خیالات کا اظہار مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ایم ڈبلیوایم علامہ سید احمد اقبال رضوی نے میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ کئی دہائیوں بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اس مسئلے پر بات کی ہے۔سلامتی کونسل کی 11 قراردادوں میں کشمیریوں کو حق خودارادیت دینے پر زور دیا گیاہندوستان کی بھرپورمخالفت کے باوجود سلامتی کونسل کا اجلاس پاکستان کے لیے بڑی کامیابی ہے تاہم یہ ایک مسلسل جدوجہد ہے ہمیں ہر محاذ پر ہر پلیٹ فارم پر مظلوم کشمیریوں کے لئے سفارتی اور اخلاقی مدد جاری رکھنا ہوگی ۔
انہوں نے کہا کہ ہندوستان ایل او سی پر مسلسل کشیدگی کو بڑھا رہا ہے ہندوستان کے وزیر دفاع جوہری ہتھیاروں کے استعمال کی بات کررہا ہے ۔بھارت کی جنگی جنونیت پورے خطے کے امن کو داو پر لگائے ہوئے ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ انسانی حقوق کا ہے۔جسے دنیا کئی دہائیوں سے نظر انداز کرتی آئی ہے اب وقت آگیا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو جلد از جلد حل کیا جائے اور مسئلہ کشمیر کاحل کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق ہونا چاہئے

وحدت نیوز : مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ قم و مؤسسہ آموزشی فرہنگی شہید فخر الدین، بتعاون خانوادہ ہائے شہداء، بصیرت آرگنائزیشن، جامعہ روحانیت بلتستان پاکستان کی جانب سے قم ایران میں شہید عارف حسین الحسینی اور شہید دکتر غلام محمد فخرالدین کی برسی کا پروگرام انعقاد کیا گیا، جس میں علمائے کرام آیت ا…اختری رئیس مجمع جہانی اھل البیت علیہم السلام،آیت ا…شیخ معین دقیق استاد درس خارج حوزہ علمیہ قم (از لبنان)،حجۃ الاسلام شیخ عبد اللہ دقاق استاد حوزہ علمیہ قم (از بحرین)،حجۃ الاسلام والمسلمین دکتر سید شفقت شیرازی مسئول روابط خارجہ مجلس وحدت نے خطاب کیا۔ مقررین نے اپنے خطبات میں کہا کہ شہید علامہ عارف حسین الحسینی پاکستان میں اتحاد بین المسلمین کی علامت تھے، ان کی مستقبل جدوجہد کی وجہ سے پاکستان میں فرقہ وارنہ اور قتل عام کی سازشوں کو ناکام بنایا اور عالمی سامراج امریکہ کو بینقاب کر کے امت مسلمہ کو واضع کیا کہ وہ عالم انسانیت کا دشمن ہے، شہید عارف حسینی استکبار کے سامنے ڈٹ کر مقابلہ کیا اور اپنے عملی کردار سے انہیں شکست دی، ہمیں شہید کی فکر کو آگے بڑ ھانے کی ذمہ داری ہے جس سے ہم منہ نہیں موڑ سکتے۔مقررین نے کہا کہ باقاعدہ سازش کے تحت شیخ غلام محمد فخرالدین سمیت دنیائے اسلام کے قیمتی افراد کو شہید کردیا۔

وحدت نیوز(سجاول) مجلس وحدت مسلمین ضلع سجاول کیجانب سے سیکرٹری جنرل حاجی مظفرعلی لغاری کی قیادت میں اریگشن کالونی سجاول سے مین بٹھورو اسٹاپ کراچی بدین روڈ تک جشن آزادی ریلی نکالی گئی۔ کارکنان نے جوش وخروش کےساتھ شرکت کی۔ ریلی میں مجلس وحدت مسلمین کےسیکرٹری جنرل حاجی مظفرعلی لغاری فیاض حسین شیخ اورفرحت عباس کھوسو نے خطاب کیا۔ مقررین نے پاکستان کی سلامتی اور سربلندی کیلئے خصوصی دعا کی اور کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے کشمیر میں جاری بھارتی فوج کی دہشتگردی اور ظلم بربریت کی مذمت کی اور اقوام متحده اور عالمی انسانی حقوق کی عدالتوں سےمطالبہ کیا کہ کشمیر کی آزادی کا فیصلہ کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق کیا جائے۔

وحدت نیوز(جیکب آباد) مجلس وحدت مسلمین ضلع جیکب آباد کے زیراہتمام مدرسہ خاتم النبیین المرتضی کالونی سے پریس کلب تک جشن آزادی ریلی نکالی گئی۔ ریلی کی قیادت مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی ، ضلعی رھنما حسن رضا غدیری، مولانا منور حسین سولنگی نے کی۔ شہر کے مرکزی ڈی سی چوک اور پریس کلب کے سامنے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ آج پوری قوم جشن آزادی کو کشمیری عوام کے ساتھ یکجہتی کے دن کے طور پر منا رہی ہے ہم مظلوم کشمیری عوام کے ساتھ ہیں۔

مجلس وحدت مسلمین مظلوموں کی حامی اور ظالم کی دشمن ہے۔ ظالم مودی ہو یا ٹرمپ ہم اس کے دشمن ہیں۔ کشمیری مسلمانوں کو اللہ تعالی کی نصرت پر ایمان رکھنا چاہیے آزادی ان کا مقدر ہے.انہوں نےکہا کہ دنیائے اسلام کشمیر میں بھارتی فوج کے مظالم کے خلاف صدائے احتجاج بلند کرے۔

Page 1 of 961

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree