وحدت نیوز(مظفرآباد) مجلس وحدت مسلمین آزاد کشمیر ، انسداد دہشت گردی پبلک ایکشن کمیٹی اور ملی شخصیات کی ڈپٹی کمشنر مظفرآباد تہذیب النساء، ایس ایس پی مظفرآباد راجہ اکمل اور انتظامیہ کے دیگر افسران سے ملاقاتیں ، سیکرٹری جنرل مجلس و حدت مسلمین آزاد کشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی اور ان کی اہلیہ پر قاتلانہ حملہ کرنے والوں کی عدم گرفتاری پر اظہار تشویش، خاموشی کو کمزوری نہ سمجھیں ، صبر کا پیمانہ لبریز ہونے لگا ہے، قوم نمائندوں سے جواب مانگتی کیا بتائیں کہ ابھی تک صرف تحقیقات ہی ہو رہی ہیں ؟ وفد کی گفتگو ، ہم ملزمان کو جلد کٹہرے میں لائیں گے ، انتظامیہ کی یقین دہانی ، تفصیلات کے مطابق مکتب جعفریہ کی ملی تنظیمات کے نمائندگان کی ڈپٹی کمشنر مظفرآباد تہذیب النساء اور ایس ایس پی مظفرآباد راجہ اکمل خان سے ملاقات ، وفد میں ڈپٹی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین آزاد کشمیر مولانا سید طالب حسین ہمدانی ، سیکرٹری مالیات سید حمید حسین نقوی ، کوآرڈینٹرانسداد دہشت گردی پبلک ایکشن کمیٹی سید شجاعت حسین کاظمی ، ڈپٹی کوآرڈینیٹر سید تصورعباس موسوی ، سید عجب حسین نقوی ، سید افتخار حسین نقوی ، سید یاسر علی نقوی ، سید زاہد حسین کاظمی ، سید چن پیر اور دیگر نمائندہ شخصیات شامل تھیں ۔

 وفد نے انتظامیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ علامہ تصور حسین نقوی اور ان کی اہلیہ پر قاتلانہ حملہ کرنے والوں کی گرفتاری پر ملت جعفریہ اور عام انسان سخت تشویش میں مبتلا ہے، ہم نے احتجاجی تحریک اس لیے نہیں روکی تھی کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش ہو جائیں ، اس لیے روکی کے تسلی سے کام کیا جا سکے ، مگر افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ تحقیات یا کیس میں کسی بھی قسم کی پیش رفت نہیں ہوئی ، ہماری خاموشی کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے ، ہمیں جلد از جلد دن دیہاڑے ہونے والے اس واقعے کے مجرمان کٹہرے میں چاہییں ، 12مئی سے احتجاجی تحریک جو کہ شروع کرنا تھی اس عزم کے ساتھ تھی کہ پھر گھروں کو واپس نہیں لوٹیں گے ، ڈپٹی کمشنر تہذیب النساء ، ایس ایس پی راجہ اکمل خان ، سید اشفاق گیلانی ، سید وحید گیلانی ،ایس ایچ او راشد حبیب نے کہا کہ ہم اس واقعے کے بعد خاموشی سے نہیں بیٹھے ، مسلسل تحقیقات کر رہے ہیں ، انشاء اللہ بہت جلد عوام اور ورثاء کے سامنے مکمل ثبوتوں کے ساتھ حقائق کو لایا جائے گا، احتجاج آپ کا حق ہے اور آپ کی تشویش بھی جائز ہے ، مگر ہم پھر بھی اپیل کرتے ہیں کہ احتجاجی تحریک کے اعلان کو واپس لیا جائے ، بعد ازاں وفد نے عید تک اپنا احتجاج مؤخر کرنے کا اعلان کیا اور کہا ہمیں امید ہے کہ انتظامی ادارے عید تک اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے اگر ایسا نہ ہوا تو عید کے فوراً بعد منظم اور بڑی احتجاجی تحریک شروع کریں گے۔

وحدت نیوز(کراچی ) مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان سے مطلوبہ نتائج اور فیصلہ کن اہداف تب ہی حاصل ہو سکیں گے جب اس قانوں کو سیاسی ضرورتوں سے بالاتر ہو کر صرف اور صرف دہشت گرد قوتوں کے خلاف استعمال کیا جائے گا۔اگر اس قانون کو انتقامی حربے کے طور پر استعمال کیا گیا تو بہت جلد اس کی افادیت زائل ہو جائے گی، ایس ایس پی خیر پور کی جانب سے نیاگوٹھ میں جشن عید غدیر ریلی پر پابندی قابل مذمت ہے، وزیر اعلیٰ سندھ اورآئی جی سندھ  اس متعصبانہ طرز عمل کا نوٹس لیں، کراچی سمیت ملک کے دیگر صوبوں میں جہاں جہاں فوج کی نگرانی میں آپریشن جاری ہیں وہاں وہاں حوصلہ افزا کامیابیاں ہو رہی ہیں لیکن سند ھ کے مختلف اضلاع میں نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کی آڑ میں بیلنس پالیسی زور پکڑتی ہوئی دکھائی دے رہی ہے۔حکومت سندھ  دہشت گردوں کے سرپرستوں کو خوش کرنے کے لیے ملت تشیع کے محب وطن گناہ افراد کو گرفتا ر کرنے میں مصروف ہے جو سراسر زیادتی اور سندھ میں دانستہ طور پر فرقہ واریت پھیلانے کی ایک منظم سازش ہے۔محرم سے قبل ملت تشیع کے افراد کو ہراساں کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے تا کہ عزاداری کو محدود کیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ عزاداری سید الشہدا کی راہ میں کسی قسم کی رکاوٹ کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ہم ملک میں قانون کی بالادستی چاہتے ہیں لیکن قانون پر عمل درآمد کے نام پر کسی غیر منصفانہ طرز عمل کو قبول نہیں کیا جائے گا۔

                           

وحدت نیوز (جیکب آباد) وارثان شھداء اور زخمیوں کے ایک وفد نے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنماء و چئیرمین شھداء کمیٹی، علامہ مقصود علی ڈومکی کی قیادت میں sspجیکب آباد ساجد حسین کھوکھر سے ملاقات کی ، اس موقع پر ایس ایس پی نے دھشت گردوں کے نیٹ ورک اور ان کی سرگرمیوں نیز پولیس کی جانب سے کئے گئے اقدامات سے وفد کو آگاہ کیا۔ وفد نے انہیں سانحہ شب عاشور میں ملوث دہشت گردوں کی گرفتاری اور دہشت گردی کا نیٹ ورک بے نقاب کرنے پر مبارکباد پیش کی۔ اس موقعہ پر سید فضل عباس ،وسیم لطیف مہر و دیگر بھی موجود تھے۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ سانحہ جیکب آباد کی پلاننگ کوئٹہ کے مدرسوں میں ہوئی لہٰذا ان مدارس کو سیل کیا گیا افسوسناک بات یہ ہے کہ دھشت گردی میں ملوث مدارس کی حمایت میں مولانا فضل الرحمٰن صاحب میدان میں آگئے ہیں ، دھشت گردی کے ان اڈوں کی حمایت سے وارثان شہداء کی دل آزاری ہوئی ہے۔ سانحہ کی تحقیقات سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ دھشت گردی کیلئے کروڑوں روپے ،ڈالر اور ریال خرچ ہورہے ہیں، دھشت گردوں کے مالی سہولت کاروں کے خلاف بھرپور اقدا،ات کی ضرورت ہے،سانحہ جیکب آباد کی فنڈنگ کرنے والے مولوی رمضان مینگل اور رفیق مینگل کے خلاف بھر پور کاروائی کرتے ہوئے ان کا نیٹ ورک توڑا جائے۔ جیکب آباد میں سینکڑوں لوگوں کو لشکرجھنگوی اور کالعدم سپاہ صحابہ دھشت گردی کیلئے تیار کیا جارہاہے ۔SSPجیکب آباد کے جرئت مندانہ اقدامات کو جاری رکھنے کی ضرورت ہے ۔

وحدت نیوز (نوشہروفیروز) نوشہروفیروز اندر بڑھتی بدامنی، دہشتگردی، انتظامیہ کی نااہلی کے خلاف مختلف سیاسی سماجی کے ساتھ مجلس وحدت مسلمین نے احتجاج کیا. اس دوران مظاہرین ایس پی نیاز چانڈیو ہٹاؤ نوشہرو بچاؤ کے زوردار نعرے لگا رہے تھے. اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین ضلع نوشہروفیروز کے سکریٹری میڈیاسیل مشتاق حسین بلوچ، اقبال راجپر، خادم حسین مری اور دیگر کا کہنا تھا کے جب سے ایس پی نیاز چانڈیو چارج سنبھالی ہے اس دن سے وارداتوں میں اضافہ ہوا ہے روز بہ روز بدامنی کی وارداتوں میں اضافہ انتظامیہ کے نااہلی کا ثبوت ہے اور لوگوں کا آزادی سے گھومنا پھرنا حرام ہوگیا ہے اور لوگوں کا سکون چھین لیا ہے. انہوں نے حکومت سندھ سے مطالبا کیا کہ اگر ایس پی نیاز چانڈیو کو ہٹا کر کوئی ایماندار ایس پی نوشہروفیروز مقرر کیا جاۓ دوسری صورت میں ہمارا احتجاج جاری رہیگا ۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree