وحدت نیوز(لیہ) مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے سیکرٹری تنظیم سازی سید عدیل عباس زیدی نے کہا ہے کہ سانحہ پاراچنار کے بعد نواز شریف حق حکمرانی کھو چکے ہیں، آرمی چیف نے مظلومین کی دادرسی کرکے قوم کے دل جیت لئے، دہشتگردی کا خاتمہ اس وقت تک ممکن نہیں جب تک دہشتگردوں کے سہولت کار اقتدار میں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع لیہ کے علاقہ چوک اعظم میں سانحہ پاراچنار کیخلاف احتجاج کے دوران خطاب کرتے ہوئے کیا۔ احتجاجی مظاہرے آل پاکستان مسلم لیگ جنوبی پنجاب کے رہنماء چوہدری شاہد، پاکستان عوامی تحریک کے ضلعی رہنماء محمد شاہد آرائیں، پیپلزپارٹی کے رہنماء محمد فیاض ایڈووکیٹ اور چوک اعظم شہری اتحاد کے صدر عمر شاکر نے بھی خطاب کیا اور سانحہ پاراچنار کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

وحد نیوز (لیہ) مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے سیکرٹری تنظیم سازی سید عدیل عباس زیدی سے آل پاکستان مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر چوہدری شاہد محمود، جنوبی پنجاب کے رہنماء چوہدری محمد ثاقب اور جہانگیر خان نے ملاقات کی۔ اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم کے ضلعی رہنماء ڈاکٹر ناصر علی جعفری بھی موجود تھے۔ لیہ میں ہونے والی اس ملاقات میں ملکی حالات، بالخصوص جنوبی پنجاب کی سیاسی صورتحال اور آئندہ انتخابات کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔ دونوں جماعتوں کے مابین پاکستان کو دہشتگردی، کرپشن سے پاک کرنے کیلئے موثر آواز بلند کرنے کے حوالے سے اتفاق پایا گیا۔ عدیل عباس زیدی نے اے پی ایم ایل کے وفد کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ وطن عزیز پاکستان اس وقت نازک دور سے گزر رہا ہے، دہشتگردی کیساتھ ساتھ کرپشن کے ناسور کے ہمارے وطن کو ترقی سے روک رکھا ہے، حکمرانوں کا رویہ ملک و قوم کیلئے انتہائی نقصان دہ ہے۔ مجلس وحدت مسلمین دہشتگردی اور کرپشن کیخلاف روز اول سے میدان عمل میں ہے، محب وطن قوتوں کو پاکستان بچانے کیلئے اپنا رول ادا کرنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ جنرل (ر) راحیل شریف کی جانب سے سعودی اتحاد کی سربراہی سنبھالنا عالم اسلام کے مفاد میں نہیں، یہ اقدام پاکستان کو تنہاء کرسکتا ہے، آل پاکستان مسلم لیگ کی قیادت اس حوالے سے  حکومت پر اپنا موقف واضح کرے اور پاکستان کو اس متنازعہ اتحاد سے علیحدہ رکھنے کیلئے آواز بلند کرے۔ اس موقع پر اے پی ایم ایل کے مرکزی رہنماء چوہدری شاہد محمود نے کہا کہ ہماری مرکزی قیادت نے محب وطن جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر یکجا کرنے کیلئے کوششیں شروع کی ہیں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ مجلس وحدت مسلمین ایک محب وطن اور عوام کا درد رکھنے والی جماعت ہے، لہذا ایم ڈبلیو ایم کو بھی مرکزی سطح پر اس اتحاد میں شامل ہونے کی دعوت دی گئی ہے، ہم چاہتے ہیں کہ آئندہ انتخابات میں یہ محب وطن قوتیں ایک پلیٹ فارم سے میدان میں آئیں اور موجودہ کرپٹ اور ظالم حکمرانوں سے نجات حاصل کی جاسکے۔ اس موقع پر عدیل عباس نے کہا کہ مرکزی قیادت کے حکم کے مطابق ہی ہم جنوبی پنجاب میں سیاسی حکمت عملی اور آئندہ انتخابات کے حوالے سے کوئی فیصلہ کریں گے۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے نمائندہ وفد نے شرکت کی وفد میں صوبائی سیکریٹری سیاسیات برادر حسن رضا کاظمی، صوبائی سیکریٹری تنظیم سازی مولانا سید نیاز حسین بخاری شامل تھے۔اجلاس میں پاکستان نیشنل مسلم لیگ، پاکستان عوامی تحریک، سنی اتحاد کونسل، تحریک انصاف، عزاداری کونسل پنجاب، پاکستان مسلم لیگ ج، پاکستان مزدور محاذ سمیت مختلف سیاسی و سماجی جماعتوں نے شرکت کی اجلاس میں ملک میں جاری صورتحال کا جائزہ لیاگیااور پاکستان کی سیاسی صورتحال، آپریشن ردالفساد، اور قومی مسائل سے متعلق گفتگو کی گئی۔

آل پاکستان مسلم لیگ نے آئندہ انتخابات کے حوالے سے بننےوالےاتحاد میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کو باضابطہ دعوت دی جس پر صوبائی سیکریٹری سیاسیات برادر حسن رضا کاظمی نے خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کےمجلس وحدت مسلمین ایک قومی سیاسی جماعت  ہے جس کے تمام فیصلے اعلیٰ اختیاراتی ادارے کرتے ہیں اس حوالے سے مجلس وحدت مسلمین اپنے اداروں کے فیصلے کے مطابق اپنى حكمت عملى اور ترجيحات كا تعين كرکے مناسب وقت پر اعلان كريگى۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) پاکستان کے سابق صدر مملکت اور آل پاکستان مسلم لیگ کے سربراہ جنرل (ر) پرویز مشرف نے کہا ہے کہ شہریوں کو مذہبی رسومات کی آزادی کی فراہمی اور دوران عبادت ان کی بھرپور حفاظت یقینی بنانا ریاست کا فرض ہے، بدعنوانی میں ملوث اور داخلی بحرانوں سے دوچار حکومت نے شہریوں کو شرپسند عناصر کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا، پولیس اور ایف سی سے سیاسی کارکنان کے خلاف کریک ڈاؤن کی بجائے امن و امان برقرار رکھنے کا کام لیا جاتا تو شاید یہ سانحہ رونما نہ ہوتا، پولیس کو سیاسی مقاصد اور مفادات کیلئے استعمال کرنا ماورائے آئین اقدام ہے، حکومت کی اس مجرمانہ روش نے شہریوں اور شہروں کو غیر محفوظ کر دیا ہے، ہم غمزدہ خاندانوں کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ انہوں نے سانحہ کراچی پر اپنے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے حکومت پر زور دیا کہ شرپسند عناصر کو فوری کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ وہ اے پی ایم ایل کے قائدین اور کارکنان سے فون پر گفتگو کر رہے تھے۔ پرویز مشرف نے مزید کہا کہ شہر قائد میں مجلس عزا پر شرپسند عناصر کی شدید فائرنگ کے نتیجہ میں چار قریبی عزیزوں سمیت پانچ قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع ایک بڑا سانحہ ہے، امن و امان کی بحالی وفاقی اور سندھ کی صوبائی حکومت کی ترجیحات میں سرفہرست کیوں نہیں، حکمرانوں کا شرپسندوں کی سرکوبی پر فوکس کرنے کی بجائے سیاسی قوتوں کے ساتھ محاذ کھولنا ناقابل فہم ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) شیعہ ٹارگٹ کلنگ اور حکومتی بے حسی کے خلاف مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ نا صر عباس جعفری کی بھوک ہرتال کے گیارویں روز بھی ایم ڈبلیو ایم کے احتجاجی کیمپ میں مختلف سیاسی و مذہبی جماعتوں کے وفود اور عمائدین کی ملاقاتوں کا سلسلہ جاری رہا۔ملی یکجہتی کونسل پاکستان و جمیعت علمائے پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر ابو الخیر زبیر نے اپنے اعلی سطح وفد کے ہمراہ ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر جعفری سے ملاقات کی۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں مکتب تشیع کے خلاف ہونے والے ظلم و بربریت کی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں۔سانحہ پارہ چنار کے ذمہ داران کے خلاف فوری کاروائی ہونی چاہیے۔پاکستان کے مظلومین کی حمایت میں قائد وحدت علامہ راجہ ناصر عباس نے جو جدوجہد شروع کی اس میں ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت مجلس وحدت مسلمین کے تحفظات کو دور کرے۔علامہ ناصر عباس ملک کی ایک باوقار اور محب وطن شخصیت ہیں۔ان کی بھوک ہرتال کے معاملے میں حکومت کا غیر سنجیدہ رویہ حکومتی مشکلات میں اضافے کا باعث بن سکتا ہے۔آل پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی رہنما ڈاکٹر امجد نے علامہ ناصر عباس کو مکمل حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کہا ہے کہ عوام کی جان و مال کا تحفظ ریاست کی اولین ذمہ داری ہے۔ ملت تشیع کو درپیش مشکلات اور ان کے تحفظات دور کرنے کے لیے حکومت کو فورا مذاکرات کرنے چاہیے۔ڈاکٹر امجد نے کہا کہ ایم ڈبلیو ایم کے تمام مطالبات شیعہ کمیونٹی اور ملک و قوم کے تحفظ کے لیے انتہائی اہم ہیں۔ہم ان کی بھرپور تائید کرتے ہیں۔علامہ ناصر عباس نے علامہ ابو الخیر زبیر اور ڈاکٹر امجد کی آمد پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہمارے پرامن احتجاج کوکمزوری نہ سمجھے۔ہم قوم کو کسی آزمائش میں نہیں ڈالنا چاہتے ۔ہم اپنے اصولی مطالبات کو آئینی جدوجہد کے ذریعے منوانے کے لیے کوشاں ہیں۔مگرموجودہ حکومت شرافت کی زبان کو بزدلی سمجھ رہی ہے۔ وطن عزیز کے مفادات اور عساکر پاکستان کے خلاف برسرپیکار دہشت گرد گروہوں کو حکومتی آشیرباد حاصل ہے جبکہ ملک کی محب وطن جماعتوں سے بات کرنے کا بھی حکومت کے پاس وقت نہیں۔ حکومت کو اپنی ترجیحات میں تبدیلی لانا ہو گی۔ حکومت اگر ہمارے مطالبات تسلیم کرنے سے گریزاں رہی تو ہم اپنے احتجاج کو ملک گیر تحریک میں بھی بدل سکتے ہیں۔ اس سلسلے میں متعدد مذہبی و سیاسی جماعتیں ہمارے ساتھ کھڑی ہیں۔علامہ ناصر عباس نے کہا کہ مطالبات کی منظوری تک یہاں سے واپسی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) گلگت بلتستان الیکشن کے نتائج غیر حقیقی اور ناقابل قبول ہیں۔ مسلم لیگ نون نے بیشتر حلقوں میں گنتی کے عمل کو موخر کر کے نتائج میں تبدیلی کی ہے۔ دھاندلی کے لیے مالی فوائد سمیت دیگر ذرائع کو بھی استعمال کیا گیا۔ماروی میمن نے پیسے کا پانی کی طرح بہایا۔ الیکشن پُرامن مگر دھاندلی زدہ تھے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور آل پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی رہنماوں علامہ اصغرعسکری اور احمد رضا قصوری نے ایم ڈبلیو ایم مرکزی سیکریٹریٹ میں مشترکہ پریس کانفرنس میں کیا۔سینئر سیاسی رہنما احمد رضا قصوری نے کہا کہ ماروی میمن کو بے نظیری انکم سپورٹس پروگرام کے پچاس ارب روپے کا بجٹ دے کر گلگت بلتستان بھیجا گیا جہاں انہون نے ہزاروں خاندانوں میں بے نظیر انکم کارڈ اور پچاس پچاس ہزار روپے نقد تقسیم کیے۔قومی خزانے کو ووٹوں کے حصول کے لیے بے دردی سے لٹایا گیا۔الیکشن میں دھاندلی کے لیے ایک غیر مقامی شخص کوسانگلہ ہل سے اٹھا کرگلگت بلتستان میں گورنر بنادیا ہم نے اس الیکشن کو سیاسی و قانونی طور پر چیلنج کرنا ہے۔علامہ اصغر عسکری نے کہا کہ ہم نے الیکشن سے پہلے ہی کہ دیا تھا کہ نون لیگ نے پری پول رگنگ کے لیے ہوم ورک مکمل کر لیا ہے۔2013 الیکشن فارمولے کو گلگت بلتستان میں آزما کر موجودہ نتائج حاصل کیے گئے۔جن جن حلقوں کے نتائج دو دو گھنٹے بعد آنا شروع ہو گئے تھے اور مجلس وحدت مسلمین کی برتری واضح ثابت ہو رہی تھی انہیں روک دیا گیا اور پھر ستائیس گھنٹے بعد حکومت کے من پسند رزلٹس منظر عام پر آنا شروع ہو گئے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف بعض حلقوں میں چار چاربار گنتی کے عمل کو دوہرایا جا رہا ہے جبکہ دوسری طرف مجلس وحدت مسلمین کے امیدواروں کے ووٹوں کی گنتی روکنے کے لیے چیف الیکشن کمیشن اپنے خصوصی احکامات صادر کرتا ہے۔نام نہاد شفاف انتخا بات کی قلعی کھل کر سامنے آ گئی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ ہم نے گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کے لیے دیانت دار اور تعلیم یافتہ افراد کو آگے آنے کا موقعہ دیا لیکن مسلم لیگ نون نے ان شخصیات کو کامیاب کرایا جو داغدارماضی کے حامل ہونے کے ساتھ ساتھ فرقہ وارنہ سرگرمیوں میں بھی فعال کردار ادا کرتے رہے ہیں۔یہ لوگ گلگت بلتستان کے امن و سکون کو تباہ کر کے رکھ دیں گے۔انہوں نے کہا افواج پاک کی نگرانی کے باعث الیکشن پُرامن رہے۔مجلس وحدت مسلمین کے رہنما نے مطالبہ کیا کہ حلقہ 3سکردو اور حلقہ 4 روندو میں ووٹوں کی گنتی دوبارہ کی جائے۔ ہم ان دونوں حلقوں سے جیتے ہوئے ہیں جبکہ گنتی میں ہیر پھیر کر کے نتائج تبدیل کیے گئے اور شکست خوردہ امیدواروں کو کامیاب قرار دے دیا گیا۔ایم ڈبلیو ایم سندھ کے صوبائی سیکریٹری سیاسیات سید حسین علی نے کہا کہ الیکشن فوج کی نگرانی میں کرانے کا مطالبہ اس لیے تھا کہ مسلم لیگ نون گلگت بلتستان میں فرقہ وارانہ فسادات برپا کروانا چاہتی تھی۔ فوجی نے الیکشن کی نگرانی کر کے حالات کو پُرامن رکھنے میں اہم کردار ادا کیا۔ ہم نون لیگ کی طرف سے وزارت کی پیشکش کو رد کرتے ہوئے مطالبہ کرتے ہیں کہ ہمیں گلگت بلتستان کے آئینی حقوق دیے جائیں۔

Page 1 of 2

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree