وحدت نیوز (گلگت)  پرائمری سکول گوچ پر بااثر اساتذہ کا قبضہ ، چیف سیکرٹری کے احکامات ٹھاہ۔ گائوں کے عوام اپنے چھوٹے بچوں کو بھاری کرایے اداکرکے دوسرے علاقوں میں بھیجنے پر مجبور۔محکمہ ایجوکیشن کے ذمہ داران نوٹس لیں۔مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے گوچ کے نمائندگان سے ملاقات کے دوران اس امر پر سخت افسوس کا اظہار کیا کہ پرائمری سکول گوچ کے دروازے چند بااثر اساتذہ نے بند کردیئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ محکمہ ایجوکیشن کے ذمہ داران پرائمری سکول گوچ کو کھلوانے کا بندوبست کریں تاکہ گائوں کے بچے بنیادی تعلیم سے محروم نہ ہوسکیں۔سکول بند ہونے کی وجہ سے علاقے کے عوام اپنے بچوں کو ٹرانسپورٹ کے بھاری کرایے ادا کرکے رحیم آباد بھیجنے پر مجبور ہیں جو کہ اس گائوں کے عوام کیساتھ انتہائی زیادتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ چیف سیکرٹری کے واضح احکامات کے باوجودچند بااثر افراد نے ملی بھگت سے بچوں کو بنیادی تعلیم اپنے گائوں میں حاصل کرنے سے محروم کردیا ہے۔ستم ظریفی یہ ہے کہ مذکورہ گائوں میں اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد کی موجودگی کے باوجود دیگر علاقوں سے مذکورہ سکول کے نام پر اساتذہ بھرتی ہوئے ہیں لیکن آفیسران بالا سے ساز باز کرکے اپنی ٹرانفسری کروادیتے ہیں اور سکول ہٰذا میں کوئی معلم ڈیوٹی دینے کو تیار نہیں۔حکام بالا اس زیادتی کا نوٹس لیں اور گوچ میں بچوں کو پرائمری تک تعلیم حاصل کرنے کے مواقع فراہم کریں۔

وحدت نیوز(گلگت) مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ چیف الیکشن کمشنر گلگت بلتستان کسی غیر متنازعہ اور تمام سیاسی جماعتوں کیلئے قابل قبول ہونا چاہئے۔ سابق چیف جج کیخلاف پہلے ہی وکلاء تنظیموں نے ریفرنس داخل کیا ہوا ہے اور موصوف کی پوری سروس اقربا پروری سے پُر ہے۔ گورنر اور وزیر اعلیٰ مک مکا کے ذریعے اہم عہدوں کو آپس میں تقسیم کر رہے ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کی سمری بھیجنے سے قبل اپوزیشن کو اعتماد میں نہیں لیا گیا اور متنازعہ شخصیات پر مبنی سمری وفاق کو ارسال کر دی گئی جو کسی طور قابل قبول نہیں۔ گورنر اور وزیر اعلیٰ کی مک مکا کی سیاست سے خطہ میں عدم سیاسی استحکام پیدا ہوگا اور آنے والے الیکشن قبل از وقت منتازعہ قرار پائینگے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتوں اور عوامی خواہشات کے پیش نظر مذکورہ سمری کو کالعدم قرار دیکر ازسر نو اہل اور دیانت دار افراد پر مشتمل سمری بھجوائی جائے تاکہ کوئی سیاسی جماعت الیکشن کے نتائج پر انگلیاں نہ اٹھا سکے۔ پچھلے الیکشن میں بھی جانب دار الیکشن کمشنر کی وجہ سے الیکشن متنازعہ قرار پائے ہیں اور عوامی مینڈیٹ کی توہین کی گئی ہے۔ ملکی استحکام اور ترقی کیلئے لازمی ہے کہ الیکشن کمشنر غیر جانبدار، دیانت دار اور امین ہو تاکہ عوامی مینڈیٹ کو چرایا نہ جاسکے اور عوام کے منتخب کردہ نمائندے ہی اسمبلی تک پہنچ سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کسی متنازعہ شخصیت کو چیف الیکشن کمشنر تعینات کیا گیا تو تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کو اعتماد میں لیکر سخت مزاحمت کی جائیگی۔

وحدت نیوز(گلگت) تحریک حمایت مظلومین کے زیر اہتمام بے گناہ محب وطن شہریوں کی جبری گمشدگی، جی بی کے حوالے سے سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے پر عملدرآمد میں تاخیری حربے استعمال کرنے، تمام بنیادی و انسانی حقوق کی عدم فراہمی، من پسند چیف الیکشن کمشنر کی تقرری، عوامی ملکیتی اراضی کی بندربانٹ کیخلاف گلگت میں جیل بھرو تحریک شروع ہو گئی۔

جمعرات کے روز اہم ڈبلیو ایم کے پانچ رہنماؤں محمد الیاس صدیقی، غلام عباس، شیخ علی اصغر، امجد حسین اور عارف قنبری نے سٹی تھانہ گلگت میں گرفتاری پیش کی، ایم ڈبلیو ایم کے رہنما حمایت مظلومین کے چیئرمین شیخ نیئر عباس کی قیادت میں ریلی کی شکل میں سٹی تھانہ پہنچے اور ان وہاں گرفتاری پیش کر دی، شیخ نیئر کے مطابق گرفتاریاں پیش کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے، ہم روزانہ کی بنیاد پر احتجاجی طور پر گرفتاریاں پیش کرتے رہیں گے۔

وحدت نیوز(گلگت)  ملک میںلاقانونیت عروج پر ہے اور حکومت محض جھوٹے اعلانات سے عوام کو تسلی دینے میں مصروف ہے۔محب وطن شہریوں کو جبری طور پر لاپتہ کرنا عدالتوں پر عدم اعتماد کے مترادف ہے۔جبری طور پر گمشدہ افراد کو عدالتوں میں پیش نہ کرنا عوام کو ریاست سے ٹکرانے کی سازش ہے۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ ملک لاقانونیت کے دلدل میں پھنستا چلاجارہا ہے۔آئے روز محب وطن شہری جبری طور پر لاپتہ کرنا قانون اور انصاف سے روگردانی ہے۔کراچی میں گمشدہ جوانوں کے اہل خانہ کے احتجاج کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔جن کے ہاتھ معصوم پاکستانیوں کے خون سے رنگین ہیں انہیں مین سٹریم میں لایاجارہا ہے اور محب وطن افراد کو ان کے گھروں سے اٹھالیا جاتا ہے اور اہل خانہ کو اپنے پیاروں کے متعلق کچھ نہ بتانا انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ کہاں کا انصاف ہے کہ سول لباس میں اہلکار دن دھاڑے گرفتاریاں کرتے ہیں اور جب پوچھا جاتا ہے تو ان کی زبانوں کو تالے لگ جاتے ہیں۔نہ تو ان افراد کا جرم بتایا جاتا ہے اور نہ ہی انہیں عدالتوں میں پیش کیا جاتاہے، کیا ریاست اتنی کمزور ہوچکی ہے کہ سچ بتانے سے گریزاں ہے؟ آخر کوئی تو بتائے کہ یہ جبری گمشدہ افراد کے اہل خانہ کس سے انصاف مانگ لیں؟۔حکومت اپنے شہریوں کے سامنے جوابدہ ہوتی ہے لیکن یہاں تو معاملہ ہی الٹا ہے۔عوام کے ووٹ سے منتخب ہونے والے عوام کو جوابدہ نہیں بلکہ کسی اور کو جوابدہ نظر آرہے ہیں۔انہوں نے مقتدر حلقوں سے مطالبہ کیا کہ جبری گمشدہ افراد کو فوری بازیاب کرایا جائے اور اس مظلوم ملت پر رحم کیا جائے۔

وحدت نیوز(گلگت) عوام کو عدل وانصاف فراہم کرنا حکومت کی اولین ذمہ داری ہے۔سانحہ چلاس میں درجنوں بے گناہ انسانوں کے قاتل آج بھی قانون کی گرفت سے باہر ہیں۔محض مالی نقصانات کا ازالہ زخموں پر مرہم کیلئے کافی نہیں ،قاتلوں کو گرفتار کرکے انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے حکومت کی جانب سے یادگار چوک متاثرین اور چلاس میں ہونے والے نقصانات کے معاوضوں کی ادائیگی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت جرات کا مظاہرہ کرکے ان قاتلوں کو بھی گرفتار کرے جنہوں نے درجنوں مسافروں کو خون میں نہلادیا اور آج بھی ان مقتولوں کے وارثین اپنے پیاروں کے قاتلوں کی گرفتاری کے منتظر ہیں۔گلگت بلتستان میں بدامنی کے کئی واقعات ہوئے ہیں جن میں ملوث دہشت گرد وں میں سے کئی ایک تو گرفتار ہوکر سزائیں بھی بھگت رہے ہیں جبکہ کئی طاقتور دہشت گرد آج بھی آزاد پھر رہے ہیں جو حکومت رٹ کو چیلنچ سے کم نہیں۔

انہوں نے کہا کہ چلاس واقعہ کے مجرم نامعلوم نہیں بلکہ ان مجرموں کی ویڈیوز سوشل میڈیا میں آج بھی وائرل ہے اور اندرون وبیرون ملک کروڑوں افراد نے اس ویڈیو کو دیکھ لیا ہے اور قاتل واضح طور پر نظر آرہے ۔ یہ کیسی حکومت اور کیسا انصاف ہے کہ قاتلوں کی نشاندہی کے باوجود ان کو گرفتار نہیں کیا جاتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ جھوٹ موٹ اور سیاسی اداکاری کی بجائے حکومت انصاف فراہم کرے تو اس کا قد اونچا ہوگا اور عوام کے دلوں میں حکومت کا احترام ہوگا۔

وحدت نیوز(گلگت) اپنی جان کی پرواہ کئے بغیر دوسروں کی جان بچانے والے بہادر سپوتوں کی حکومتی سطح پر حوصلہ افزائی ہونی چاہئے۔ہراموش سے تعلق رکھنے والے بہادر جوان خوشبودار حسین اور پولیس اہلکار راجہ ریاض حسین نے جان کی بازی لگاکر ایک قیمتی انسانی جان کو بچالیا ہے جس کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے۔ان دونوں بہادر جوانوں کو بہادری،جرات اور جانثاری دکھانے پر حوصلہ افزائی کے ساتھ تمغہ شجاعت سے نوازا جائے۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ نفسا نفسی کے اس عالم میں اپنے جان سے کھیل کر دوسروں کی جان بچانے والے بہادر جوانوں کی حوصلہ افزائی ایک واجبی امر ہے اور ہم پولیس اہلکار راجہ ریاض حسین اور خوشبودار حسین کی جرات و شجاعت کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے بغیر حفاظتی جیکٹ کے خود کو دریا کی بے رحم موجوں کے حوالے کیا اور ایک قیمتی انسانی جان کو بچانے میں کوئی لمحہ ضائع نہیں کیا۔جرات وبہادری کی ایسے مثالیں بہت کم دیکھنے کو ملتی ہیں کہ اپنی جان کی بازی لگاکر ان دونوں جوانوں نے سید محمد حسین سبحانی کو دریا کی بے رحم موجوں سے زندہ وسلامت باہر نکال دیاجو نہایت ہی قابل تحسین اقدام ہے۔

دوسری جانب ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے عملے نے بھی کوئی لمحہ ضائع کئے بغیر اپنی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا استعمال کرتے ہوئے ایک قیمتی انسان کو موت کے منہ سے نکال لیا ۔ہم ہسپتال کے عملے اور ڈاکٹرز کی بروقت طبی امداد پہنچانے پر انہیں بھی خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔انہوں نے نوجوان سید محمد حسین سبحانی کو دریا بردہونے سے بچانے والے دونوں جوانوں کی حوصلہ افزائی کے ساتھ ساتھ انہیں تمغہ شجاعت سے نوازنے کا مطالبہ کیا ہے۔

Page 1 of 27

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree