The Latest

وحدت نیوز(کراچی) ایم ڈبلیوایم شعبہ خواتین سندھ کی سیکریٹری جنرل خواہر زہرہ نجفی نے اسلام آباد میں  پُرامن اور نہتے مظلوم عوام پرحکومت کی  جانب سےشیلنگ اور فائرنگ کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوے کہا کہ یہ معصوم اور مظلوم لوگ جو انقلاب کی خاطر اورانصاف کی خاطراپنے پورے پورے خانوادہ کے ساتھ جو باہر آئے ہیں کیا یہ ہی انصاف اور جمہوریت کے طور طریقے ہیں .رات کے اندھرے میں پُرامن اور نہتے مظاہرین پر ظلم و بربریت کی ایسی انتہا  کہ نا معصوم جانوں کی پرواہ اور ناہی عورتوں کا لحاظ. یہ کیسی جمہوریت ہے کہ جہاں عوام کو اپنے اوپرڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف آواز بلند کرنے اور احتجاج تک کی اجازت نہیں.ان پُرامن مظاہرین ان معصوم بچوں اور خواتین کے نکلنے کا مقصد اور اس جدوجہد کا مقصدصرف اور صرف پاکستان اور اسکے عوام کےلیے ہے. پاکستان کی آئندہ آنے والی نسلوں کےلیے ہے.اور اس پُرامن صدائے احتجاج کو یوں  خونریزی میں بدلنایہ کہاں کا انصاف ہے.مگر آیئں اور آکر دیکھیں آج کہ یہ فرعون نماظالم و جابر حکمراں کہ لاکھ ظلم و ستم ڈھانے کے باوجود یہ کربلائی جوش و ہمت رکھنے والی مظلوم عوام کے پائے استقلال میں زرہ برابر بھی کمی نہیں آئی.اور سلام ہو ہمارا انقلاب مارچ کے تمام رہنماوں پر جو ہر ہر قدم پر مظلوم عوام کے ساتھ شانہ بشانہ موجود ہیں.ظالم حکومت اب  آخری سانسیں لے رہی ہے،فتح و کامرانی انشاءاللہ اس ارضِ پاک کی مظلوم و مجبور عوام کی ہوگی. اسلام آبادمیں جو ظلم ڈھایا گیا اور جو خونِ ناخق بہایاگیا ہےاسکا حساب ان فرعون نما حکمرانوں کی گردنوں پہ ہے.اور ستم پہ ستم کہ جو زخمی ہیں انکو نا صرف گرفتار کر رہے ہیں بلکہ نا معلوم مقامات پر منتقل بھی کررہے ہیں.جو زخمی بچ گئے حد تو یہ ہے کہ ڈاکڑوں کو منع کیا جارہا ہے کہ طبی سہولیات فراہم نہ کی جائیں.ظلم کی تمام حدیں پار  کردیں اور ہسپتالوں میں زخمیوں پہ تشدد کیا.جو اس راہِ حق میں شہید ہوئے ان شھدا۶ کی لاشیں چھپا دی گیئں. اگر ظالم یہ سمجھتا ہے کہ ایسا کرنے سے اسکے تمام کرتوت اور مظالم چھپ جایئں گے اور کوئی گواہ یا ثبوت نا ہوگا.تو یہ اسکی بھول ہے.کیونکہ ایک ایسا گواہ بھی موجود ہے جو ہر عمل کا شاہد بھی اور گواہ بھی.جو بہترین فیصلہ کرنے والا ہے.جسکا حساب بہت ہی قریب ہے.یہاں دنیا میں عوامی عدالت میں بھی اور خدا کی بارگاہ میں بھی انھیں ایک ایک ظلم و ستم کا حساب دینا ہوگا.یہ خونِ ناحق اورعوام و تمام انقلابی رہنماوں کا کربلائی اور حسینی[ع] جوش و جذبہ اس بات کی نوید دے رہا ہے کہ جلدہی ظلمت کی اندھیری شب مٹنے والی ہے اور حق و عدل و انصاف کا سوج طلوع ہونےکو ہے۔

وحدت نیوز(کراچی) ایم ڈبلیوایم شعبہ خواتین کراچی سندھ کی سیکریٹری خواہر زہرانجفی نے ڈویژنل ممبران سے میٹنگ کے بعد گفتگو کرتے ہوےکہا  کہ ھم ہر لمحہ اپنے وطن کی پاک فوج کیساتھ ہیں.اور مسلسل بارگاہِ خداوندی میں دعا گو ہیں کہ ارضِ وطن کی پاک فوج تمام ملک دوشمن عناصر بشمول طالبان دھشتگردوں کے خلاف آپریشن '' ضربِ غضب'' میں کامیابی و کامرانی حاصل کرے.ہماری جان و مال سب کچھ پاک وطن کے لیے ہے،ہم مکمل اس آپریشن کی حمایت کرتے ہیں اور جب بھی پاک فوج نے پکارا تو وطن کی ماوں اور بہنوں کو کسی بھی مشکل میں یہ اپنے شانہ بشانہ پائیں گے.مکتبِ اہل بیت [ع] کے پیروکار مرد و خواتین ہمیشہ ملکی سلمیت و بقا کے لیے میدانِ عمل رہتے ہوئے قربانیاں دیتےرہے  ہیں اور آگے بھی دیتے رہیں گے.تاریخِ پاکستان گواہ ہے کہ ملکی سلامتی اور استحکام کے لیے ہم ہمیشہ ہرطرح کی قربانی دیتے ہیں اور جب بھی ارضِ پاک صدا دے گا ہم اپنی پاک فوج کے ساتھ میدانِ عمل میں ہونگے.

 

ان کا کہنا تھا کہ ایم ڈبلیو ایم کا شروع سے یہی موقف رہا کہ یہ طالبان دھشتگرد ہیں،ان کے خلاف صرف اور صرف آپریشن ہونا چاہی. یہ اسلام اور پاکستان دونو کے دشمن ہیں.اور ملکی سالمیت کے لیے ناسور بن گیے ہیں.ان سے مزاکرات نہں بلکہ انھیں جڑھ سے اکھاڑنا ہوگا.اور نہں معلوم وہ کیا وجوہات تھیں کہ اب تک کس انتظار میں ہمارے حکمراں دور اندیش فیصلوں کے وقت غفلت کا مظاہرہ کرتے رہے. جبکہ طالبان جیسے ملک دشمن عناصر کے خلاف فورآ آپریشن ہونا چاہیے تھا.مگر اب بھی وقت نہیں گزرا...پاک فوج کے ہوتے ہوے کسی ملک دشمن کی مجال نہیں  کہ ملکِ پاک پر بری نگاہ ڈال سکے.ھم ہر محب وطن پاکستانی کی طرح اپنی بھرپور حمایت کے ساتھ اپنی پاک فوج ک ساتھ ہیں.جب تک پاک فوج دشمنان اسلام و دشمنان پاک وطن طالبان کے خلاف مکمل کامیاب و کامران نہیں ہوجاتی ہم بھی اپنی فوج کے ساتھ ان کے شانہ بشانہ حالتِ جنگ میں ہیں.جب بھی وطن صدا دے گا مکتبِ تشیع کا ہر پیر و جواں، خواتین و بچے اپنی پاک فوج کے ساتھ قدم سے قدم ملا کے کھڑے ہونگے.ہاں مگر اب ضرورت اس امر کی بھی ہے کہ آپریشن کا دائرہ کار ملک کے طول و عرض تک پہلایا جاے.ہر اس جگہ تک وسعت دی جاے جہاں ملک بھر میں دہشتگردی کے مراکز موجود ہیں.اور وہاں باقائدہ دہشتگردوں کی تربیت کا انتظام موجود ہے.اورصرف یہی نہں بلکہ اعلیٰ عہدوں اور حکومتی حلقوں میں موجود ان کرداروں سے بھی سختی سے نمٹا جائے جو نا صرف کھلے عام ان دھشتگردوں کی حمایت کرتے ہیں بلکہ ان تنظیموں کی سرپرستی اور مالی معاونت بھی کرتے ہیں.یہ کردار بھی اتنے ہی ملک دشمن ہیں جتنے طالبان اور یہ بھی برابر کےگناہگار ہیں.

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین ویمن ونگ کی مرکزی سیکریٹری جنرل خانم سکینہ مہدوی نےایک وفد کے ہمراہ منہاج القرآن سیکریٹریٹ لاہور میں  منہاج القرآن ویمن لیگ کی مرکزی صدر راضیہ نوید سے ملاقات کی  خانم سکینہ مہدوی نے پنجاب حکومت کی جانب سے بے گناہ کارکنان خصوصاً خواتین ورکرز پر گولیاں برسانے کو بزدلانہ کاروائی قرار دیتے ہو ئے کہا کہ مسلم لیگ ن جھوٹ ، دھاندلی ، دھوکے بازی اور بیرونی امداد سے اقتدار پر قابض ہوئی، ظلم و ناانصافی کے ساتھ حکومت کرنے والے اپنے اقتدار کی بقاء کی خاطر درندگی پر اتر آئے ہیں ، ایم ڈبلیوایم ویمن ونگ اس در خراش سانحے پر منہاج القرآن کے غم میں برابر کی شریک ہے، آخر میں شہدا ءکے بلندی درجات کیلئے خصوصی دعابھی کی گئی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) خیر العمل فاﺅنڈیشن پاکستان کے بورڈ آف گورنرز کا اجلاس ہیڈآفس اسلام آباد میں منعقد ہوا جس میں علامہ راجہ ناصر عباس جعفری ، علامہ محمد امین شھیدی ، علامہ حسن ظفر نقوی، ناصر عباس شیرازی، فضل عباس نقوی ،سید مھدی عابدی ، سید توصیف شاہ اور نثار علی فیضی نے شرکت کی۔ چیئرمین خیرالعمل فاﺅنڈیشن نثارعلی فیضی نے اراکین بورڈ آف گورنرز کو ادارے کی کارکردگی کے حوالے سے بریف کرتے ہوئے بتایا کہ اس وقت 40منصوبے مکمل کرلیے گئے ہیں 37منصوبوں پر کام جاری ہے۔تقریبا 40منصوبوں کے لیے ڈونرز کو درخواستیں بجھوائی جاچکی ہیں ۔ اجلاس میں مساجد پروجیکٹ ، ہیلتھ پروجیکٹ، ایتام پروجیکٹ، ہاوسنگ پروجیکٹ، تعلیم سپورٹ پروجیکٹ اور واٹر پروجیکٹ کے سلسلے میں مکمل کیے گئے منصوبہ جات کے منفی و مثبت پہلوﺅں کو زیر بحث لاتے ہوئے ان میں درپیش مشکلات اور حکمت عملی کے اعتبار سے ان منصوبوں کی منظوری و استفادہ پر گفتگو کی گئی۔ اجلا س میں گلگت بلتستان میں اعلان کردہ منصوبہ جات پر عمل درآمد اور اہداف کے حصول کے لیے مختلف امکانات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اسکے علاوہ منصوبوں کے لیے پالیسی اصول مرتب کیے گئے جس میں ڈیمانڈ و تناسب ، تعمیرات ، منصوبہ جات سے استفادہ اورمخیر اداروں و شخصیات سے روابط کے لیے بھی حکمت عملی مرتب کی گئی۔ اجلاس میں رمضان المبارک میں راشن پروگرام کا اجراءکی منظوری دی گئی ۔ اجلاس سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری ، علامہ امین شہیدی اور علامہ حسن ظفر نقوی نے بھی خطاب کرتے ہوئے ادارے کی خدمات کو سرہاتے ہوئے آئندہ کے حوالے سے اپنی تجاویز بھی دیں۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن شعبہ خواتین کی ڈویژنل کونسل کا اجلاس منعقد ہوا،جسمیں صوبہ سندھ کی سیکرٹری جنرل خانم زہرا نجفی نے خصوصی طور پر موجودہ حالات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ معلوم ہوتا کے حکومت اور باقی تمام ادارے سب سو چکے ہیں کچھ سمجھ نہیں آتا کہ حکومت سمیت تمام اداروں نے پاکستان کی عوام کو کیوں دہشت گردوں کہ حوالے کردیا ہے دہشتگرد آزادانہ طور پرجہاں چاہتے ہیں کاروائیاں کرتے ہیں جب چا ہتے ہیں دہشتگردی کرتے ہیں افسوس کا مقام ہے کہ سرزمین پاکستان معصو م لوگوں کہ لہوسے سرخ ہے اورنواز حکومت اور ادارے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں معلوم ہوتا ہے کے گویا یہ خود ہی پاکستان کو دنیا کے نقشے سے مٹادینے کے لیے آمادہ ہیں حکمرانوں کی ناقص پالیسوں کی وجہ سے ملک آج دہشت گردوں کی جنت بن چکا ہے؟اب وقت آچکا ہے کہ نواز حکومت مزاکرات کا ڈھونگ بند کرے اور فوج بھی سنجیدہ ہو جائے اور صرف اس انتظار میں نہ رہے کہ اگر فوج پر دفاعی اداروں پر حملہ کیا تو دہشتگردوں کے خلاف فیصلہ کن جنگ کا آغاز کرے گی فوج کی بھی ذمداری ہے کہ وہ قوم و ملک کی سلامتی کے لیے دفاعی اقدامات کرے قوم فوج کے ساتھ ہے پھر فوج کو پوری سنجیدگی کے ساتھ دہشتگردوں کا اس پاک زمین سے صفایہ کرنے میں دیر نہیں کر نی چاہیے کیوں کہ ان کو جتنی مہلت دی جائے گی یہ ملک کو اتنا ہی نقصان پہنچائے گے اور ہم دیکھ بھی رہے ہیں کہ ابھی گزشتہ روز ایک ہی دن میں ایک طرف تفتان میں زائرین پرفائرنگ پھر دستی بم سے حملہ یا گیا جسمیں ۵۲ سے زائد مرد و خواتین اور معصوم بچے شہید ہوئے اور دسیوں شدید زخمی ہوئے دوسری طرف کراچی میں ایئر پورٹ پر حملہ جوکے نہایت منصوبے سے کیاگیا بہت ہی شرمندگی کی بات ہے کہ دہشتگردوں کو کوئی روکنے والا نہیں دہشتگرد اتنی آسانی سے ایئر پورٹ میں کیسے داخل ہو گئے یہ دنیا کے سامنے کیا تاثر پیش کیا جا رہا ہے ایک طرف معصوم لوگوں کی زندگیاں محفوظ نہیں تو دوسری طرف کو بھی اہم اور حساس علاقے ادارے مقامات کچھ بھی محفوظ نہیں؟اور افسوس کا مقام ہیں کے وزیر اعظم نواز شریف صاحب اداروں کو مبارکباد اور خراج تحسین پیش کر رہے ہیں؟کس بات کی مبارکباد دنیا سوال کر رہی ہے کے پاکستان میں دہشتگرد جب چاہیے اتنے آرام سے کی بھی مقام پر حملہ آور ہو سکتے ہیں؟ کہاں تھے انٹیلی جنس ادارے؟آخر کب تک عوام برداشت کرے گی کب تک معصوم لوگوں کو قربانیاں دینی ہو گی تاکہ حکومت اور فوج ہوش میں آجائے اور سنجیدگی سے دہشتگردوں کے خلاف اوپریشن کیاجائے۔ لہزاہمارافوج سے مطالبہ ہے کہ طالبان کے ساتھ اب صرف گولی سے بات کی جائے انشااللہ فوج کے ساتھ اٹھارہ کروڑ عوام انکے ساتھ شانہ بشانہ ہوں گے۔ آخر میں صوبہ سندھ کی سیکرٹری جنرل خانم زہرانے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے اس دلخراش سانحہ پر تین روز کا سوگ کا علان کیا اور تمام یو نٹس کو شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے کے حوالے سے پروگرامزکاا نعقاد کرنے کی ہدایت دی۔آخرمیں شہداءکے لے فاتحہ اور زخمیوں کے صحت یابی کے لیے دعائے توسل پڑھی گئی۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ خواتین کی سیکریٹری جنرل خانم سکینہ مہدوی نے کہا ہے کہ پاکستان میں بیرونی امداد اور ایجنڈے پر ایوان اقتدار پر قابض نواز حکومت کے خلاف 11مئی کو خواتین بھی اپنا قومی کردار ادا کرتے ہو ئے سڑکوں پر نکل آئیں ، گذشتہ ایک سال میں ہونے والے مظالم نے دس سالہ ظلم کے رکارڈ توڑ ڈالے ہیں ، مریم نواز صاحبہ اپنے شاہی محلات سے نکل کر دیکھیں کہ پاکستانی معاشرے میں خواتین کس ذلت اور پسماندگی میں زندگی بسر کر رہی ہیں ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے 11مئی کو نواز حکومت کی تشکیل کے ایک سال مکمل ہونے پر ملک گیر یوم احتجاج کے حوالے سے جاری بیان میں کیا ۔

 

ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ نواز کی موجودہ حکومت پاکستان پیپلز پارٹی کی سابقہ حکومت کی  روش پر ہی کار فرما ہے، بظاہر عوامی حقوق کی بحالی کا نعرہ لگانے والی اور آزادی نسواں کا ڈھول پیٹنے والی نام نہاد جمہوری حکومتیں عوام کو بجلی ، پانی ، گیس اور سستی روٹی تک دینے کی اہلیت نہیں رکھتے ، اب تو حال یہ ہے کہ حوا کی بیٹیوں کی عزتیں روز سر بازار پامال ہو رہی ہیں اور حکمران اپنے محلات میں عیش و عشرت کی زندگی میں مگن ہیں ، انہوں نے مجلس وحدت مسلمین کی شعبہ خواتین کی تمام ذمہ داران نے اپیل کی کے 11مئی کو ملک بھر میں ہو نے والے احتجاجی پروگرامات میں بھر پور شرکت کریں ۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحد ت مسلمین کوئٹہ ڈویثرن  کے خوا تین ونگ کے زیراہتمام کا رکنوں کے لئے ایک تر بیتی اور تعلیمی نشست کا اہتمام کیا گیا جس میں پا رٹی کے خوا تین ونگ کے عہدے دا ران اور کارکنوں نے بڑی تعدا د میں شر کت کی تقریب سے خطا ب کر تے ہوئے مجلس وحدت خو اتین ونگ کے رہنما وں نے کہا کہ معا شرے میں مثبت تبدیلی اور اسکی تعمیر و تر قی میں خوا تین کا کر دا ر انتہائی اہم ہے جس سے انکار ممکن نہیں عوام میں شعو ر اور آگا ہی میں خو اتین کا اہم رول ہے پارٹی میں خواتین کی کارکر دگی کے حو الے سے با ت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پچھلے ایک ڈیڑ ھ سا ل میں معاشرے کے اندر جو بیداری آئی ہے اُس میں معا شر ے کے ہر فر د کے سا تھ سا تھ خواتین نے انتہائی اہم کر دار ادا کر تے ہوئے معا شرے میں ایک نئے جو ش و ولولے کو ایجا د کیا اور اس میں پارٹی کار کنوں نے جومثبت کر دار ادا کیا ہے وہ حقیقی معنوں میں سیاسی حوالے سے قوم کیلئے سنگ میل کی حیثیت رکھتی ہے جو قا بل ستائش ہے او ر پارٹی اس کو قدر کی نگا ہ سے دیکھتی ہے اس سلسلے میں شعبہ خواتین کی ذمہ دا ری مزید بڑھ جاتی ہے کہ وہ پارٹی پیغا م کوگھر گھر پہنچا ئے اور پا رٹی کے بنیا د ی یونٹس کو مزید فعال بنا ئے تاکہ آنے والے پارٹی انتخا با ت میں وہ بہتر ین قیا دت کو سا منے لاسکیں جواس شعبے کو مزید فعال بنانے میں بہتر کردار ادا کر سکے اس ضمن میں پارٹی کے ہر کارکن پر بھاری ذمے دا ر ی عا ئد ہو تی ہے ۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ خواتین کے زیر اہتمام جشن ولادت دختر رسول خدا (ص)جناب فاطمتہ الزہراسلام اللہ علیہا کی مناسبت سے سالہائےگذشتہ کی طرح امسال بھی عظیم الشان جشن مرج البحرین کا انعقاد کیا گیا ، الحمراہال لاہور میں منعقدہ اس عظیم الشان اجتماع میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ محمد امین شہیدی، علامہ ابوزر مہدوی،معروف مذہبی اسکالر خانم طیبہ بخاری صاحبہ ، مرکزی سیکریٹری ایم ڈبلیوایم  شعبہ خواتین خانم سکینہ مہدوی، مہتمم جامعہ نعیمیہ مفتی راغب حسین نعیمی، سنی اتحاد کونسل کے مرکزی رہنما سعید رضوی ، معروف منقبت خواں اور ذاکر اہل بیت ع مقدس شاہ کاظمی اور عیسائی برادری کے صدر ڈاکٹرکنول فیروز،پہلی وومن پائلٹ شہناز لغاری اور معزز مہمانان گرامی نےبھی خطاب کیا۔ اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین مرکزی سیکریٹری امور خارجہ علامہ شفقت حسین شیرازی نےخصوصی شرکت کی ۔اس تقریب سعید میں اہل تشیع علماء و عوام کے علاوہ اہل سنت علمائے کرام اور خواتین و حضرات نے بھی بڑی تعداد میں شرکت کی ۔

 

اس عظیم الشان جشن مرج البحرین میں مختلف نعت ومنقبت خواں حضرات نے بارگاہ جناب سیدہ سلام اللہ علیہا میں نذرانہ عقیدت پیش کیا، جب کہ جشن کے اختتام پر علامہ امین شہیدی نےبذریعہ قراندازی پانچ خوش نصیب خواتین وحضرات میں عمرے کے ٹکٹ تقسیم کیئے اور ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین کی جانب سے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والی تنظیمی خواہران میں ایوارڈ بھی تقسیم کیئے گئے۔

وحدت نیوز(قم المقدسہ) شہزادی کونین، ام ابیہا، حضرت فاطمۃ الزہرا (س) اور انکے باشرف فرزند، بانی انقلاب اسلامی ایران حضرت امام خمینی (رہ) کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے قم کی مقدس سرزمین پر مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی جانب سے ایک عظیم الشان جشن کا انعقاد کیا گیا۔ جشن کا یہ پروگرام مدرسہ زینبیہ (س) میں منعقد ہوا، جس میں خواتین کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس بابرکت محفل میں خطباء نے بی بی دو عالم (س) کی سیرت پاک پر روشنی ڈالی اور امام خمینی (رہ) کو سیرت فاطمیہ کا روشن نمونہ قرار دیا۔ اس محفل کے مہمان خصوصی مدرسہ امام خمینی (رہ) قم کے مسئول امور فرہنگی حجت الاسلام والمسلمین امیر حسین  حسینی تھے۔ حجت الاسلام والمسلمین حسینی نے اپنے صدارتی خطاب میں حضرت زہرا (س) کی سیرت پر تفصیل سے روشنی ڈالی  اور کہا کہ حضرت فاطمہ (س) نہ  فقط خواتین کے لئے بلکہ مردوں کے لئے بھی اسوہ حسنہ ہیں۔ جشن  کے اختتام پر مہمانان خصوصی کے ذریعے "خطبہ فدکیہ" کے  انعامی مقابلے میں پوزیشن حاصل کرنی والی خواتین میں انعامات تقسیم کئے گئے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کراچی ڈویژن کے آفس میں مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین صوبہ سندھ کی سیکریٹری جنرل خانم زہرانجفی کے ساتھ شعبہ خواتین کراچی ڈویژن و یونٹس کی میٹنگ کا انعقادکیا گیاجسمیں خانم زہرانے کراچی میں ہونے والی ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئےکہا کہ پورے پاکستان میں ہمیں خا ص کر کراچی میں قانون نام کی کوئی چیز نظر نہیں آرہی آئے دن ہماری ملت کے سرمائے کو دہشگرد گولیوں کا نشانہ بناں رہے ہیں آپ کا مزید یہ بھی کہنا تھا کہ شاہد اللہ شاہد جو اب یہ کہہ رہے ہیں کہ معصوم لوگوں کو نشانہ بنانا حرام ہے تو اب یہ خیال کیسے آگیا؟ ہم سب نے دیکھا کہ سعودیہ سے فنڈز آنے کے بعد پورے ملک میں خا ص کر کراچی میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ میں مزید تیزی آ گئ ہے۔ایسے میں ہماری ذمہ داری کیا ہے ہم دیکھ رہے ہیں کہ ہمارے جوانوں کو ہماری ملت کے سرما ئے کبھی کوئی پروفیسر،ڈاکٹر، انجینئر تو کبھی کوئی وکیل چن چن کر شہید کیا جا رہا ہے ان کا جرم ایک تو یہ ہے کہ یہ شیعہ ہیں  دوسرے یہ کے یہ اپنے وطن کی خدمت اور اس کی ترقی کی ضمانت ہیں ایسے میں خاموشی ایک جرم ہے ہماری موجودہ حکومت ہماری قاتل بھی ہیں اور مجرم بھی۔خانم زہرانے کراچی ڈویژن اور تما م یونٹس کو تاکید کی کے وہ اپنے اپنے علاقوں میں سیاسی شعور اجاگر کرنے کے لیے پروگرامز مرتب کر یں ملت میں وحدت کی فضاء پیدا کریں یہ وقت آپس میں لڑنے کا نہیں یہ ملت کی دفاع کا وقت ہے یہ وحدت کا وقت ہے آپس میں روابط کو مضبوط کرئے اختلافات کو دورکریں  صرف اپنے مکتب فکر سے ہی نہیں بلکہ اپنے پروگرامز میں ودسرے مکاتب فکر کے لوگوں کو بھی دعوت دیں۔

 

خانم زہرہ نے خطاب کے بعد نماز جماعت ادا کی گئی۔ نماز با جماعت کے بعد کا بینہ کے ساتھ ایک نشست کا انعقاد کیا گیاجسمیں خانم زہرانے کابینہ کو اپنی فعالیت کو بہتر بنانے پر زور دیتے ہوئے کہاکہ موجودہ دور میں ہم کو مزید قوت۔طاقت،خلوص،لگن اور ایک ہوکر کام کرنا ہوگا۔یہ ہمارا شریعئ فریضہ ہے کہ ہم نے جو ذمہ داری قبول کی ہے اورجوعہد اپنے امام زمانہ عج سے کیا ہے۔اسے بخوبی انجام دیں۔خانم زہرانے شعبہ خواتین میڈیا کی کارکردگی اور ان کے کام کو سہراتے ہو ئے انھیں مزید فعال پونے کی تاکید فرمائی۔خانم کا کہنا تھا کہ بے شک ابھی ہمارے پاس وسائل کی کمی ہےمگرجومخلص افراد ہوتے ان کے لیےوسا ئل کی کمی نہ ہی کوئی روکاٹ ثابت ہوتی ہے اور نا ہی انکو کبھی بھی ہدف کے حصول سے دور نہیں کرتی ہےلہذا ہم پروردگار عالم سے دعا کرتے ہیں کہ خدایا" تو ہمیشہ ہمیں راہ حق پر کامزن رکھنا اور راہ حق میں ہر آنے والی روکاوٹ سے ہمیں باخوبی طور پر عبور کرنے کی توفیق عطا فرمانا بے شک تو حق پر چلنے والوں کی مدد ضرور فرماتا ہے۔نشست کا اختتام دعائے سلامتی امام زمانہ کیا گیا۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree