The Latest

dhrna 0121کراچی کے دیگر علاقوں،اسلام آباد،لاہور،گلگت،سکردو،جھنگ،حیدر آباد ،سکھر،جیکب آباد،جاموشورو نوابشاہ،بھکر،ملتان ،لیہ ،اٹک،مورواور پنڈی ،ٹوبہ ٹیک سنگ میں احتجاج کا اعلان باقی شہروں سے بھی خبریں موصول ہورہی ہیں

mwm quetta.raja nasirپورے ملک میں عوام گھروں سے باہرنکلیں اور احتجاج کریں کوئٹہ سے اپیل 
علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کوئٹہ دھرنے سے خطاب میں اپیل کرتے ہوئے کہا کہ پورے ملک کی مظلوم عوام خاص کر ملت تشیع پاکستان اور بالخصوص مجلس وحدت مسلمین کے کارکنوں سے اپیل کرتا ہوں وہ گھروں سے باہر نکلیں اور اس قتل عام کے خلاف احتجاج کریں 
علامہ راجہ ناصر عباس جعفری جو کہ آج صبح ایک اعلی رکنی وفد کے ہمراہ کوئٹہ تشریف لے آئے تھے نے گذشتہ روز سے 86جنازوں کے ساتھ سخت سردی میں دھرنا لگائے ہوئے مرد وزن کے اجتماع میں شرکت کی اور اپنے خطاب میں کہا کہ پورا ملک آپ کے ساتھ ہے ہر شریف انسان آپ کے ساتھ ہے ،اس وحشیانہ قتل عام اور بربریت پر ہر انسان دکھی ہے لیکن جن کو کسی قسم کا دکھ نہیں وہ یہاں کی حکومت ہے 
انہوں نے کہا کہ خون جمادینے والی اس سردی میں آپ کے اس دھرنے نے ،آپ کی استقامت نے ،آپ کے حوصلے نے ،آپ کی شجاعت نے ہر باضمیر انسان کو دنیا بھر میں جھنجوڑاہے ۔جب تک مطالبات پورے نہیں ہوتے اس دھرنے کو جاری رہنا چاہیے ،ہم ان نالائق اور بزدل حکمرانوں کو ایوانوں میں گھسنے نہیں دینگے ،یہ ہمارے صبر وحوصلے کا امتحان لے رہے ہیں ،یہ لٹیرے،یہ بدعنوان اتنے قتل عام کے باوجود ٹس سے مس نہیں۔

پورے ملک کو دھرنوں میں بدل ڈالو

mwm.dhrna 012quettaدھرنا اپ ڈیڈ
ٌکوئٹہ میں حکومت کی برطرفی اور فوج کے کنٹرول تک دھرنا جاری رہے گا
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سربراہ بھی دھرنے میں پہنچ رہے ہیں
آج ملک کے دوسرے شہروں میں بھی دھرنے متوقع ہیں
لندن ہائے کمیشن آف پاکستان کے سامنے سینکڑوں پاکستانی ہم وطنوں نے کوئٹہ دھرنے کی حمایت میں دھرنا لگا یا ہوا ہے مختلف افراد سے ہمارے نمایندے کی گفتگو کے دوران دھرنے کے شرکا کا کہناہے کہ جبتک کوئٹہ کا دھرنا ختم نہیں ہوتا ہائے کمیشن کا سامنے بھی دھرنا ختم نہیں ہوگا ،شرکا کا کہنا ہے کہ کوئٹہ میں فوری طور پر حکومت کو مستعفی ہونا چاہیے

Press conf.mwm.isd 01کوئٹہ میں قتل عام اور لانگ مارچ کے بارے میں سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی سربراہی میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی ہنگامی اہم پریس کانفرنس
محترم صحافی حضرات!
السلام علیکم! آپ کے شکر گزار ہیں کہ آپ یہاں تشریف لائے اور ہمیں موقع دیا کہ اپنی آواز آپ کے ذریعے حکمرانوں اور پاکستان کے مظلوم عوام تک پہنچا سکیں۔ آپ جانتے ہیں کہ ہمارا ملک مسلسل ناامنی کے دور سے گزر رہا ہے۔ یہاں ہر قسم کے بحران جنم لے چکے ہیں، جیسے کہ سیاسی بحران، معاشی بحران، انرجی کا بحران اور امن کا بحران بھی ہے۔ کل کا دن پاکستان کے عوام کے لیے ایک انتہائی بدقسمت دن تھا، جس میں سینکڑوں بے گناہ، پاکستان سے محبت کرنے والے پاکستانی اور مسلمان مارے گئے اور کچھ زخمی ہوئے۔ سوات میں حملہ ہوا اور وہاں پر بھی کچھ بے گناہ مارے گئے، کراچی میں بے گناہ مارے گئے اور پھر کوئٹہ کے اندر تین دھماکے ہوئے جن میں باچا خان روڈ پر، علمدار روڈ پر دو دھماکے کیے گئے جس میں ایک سو سے زائد بے گناہ مسلمان شہید ہوئے اور ڈیڑھ سو سے زائد مسلمان زخمی ہوئے۔ اس ساری صورتحال کے باوجود ہم دیکھتے ہیں کہ ہمارے حکمران جن کی گزشتہ 5 سالہ کارکردگی سے پتہ چلتا ہے کہ اتنے نالائق، مجرم اور بے حس حکمران کل کراچی میں جمع تھے اور اپنی کرسی و اقتدار کے کھیل میں مصروف تھے لیکن ان کو اتنی فرصت میسر نہ آسکی کہ یہ قاتلوں کے خلاف کوئی اقدام اٹھاتے۔

mwm.quetta.01کوئٹہ میں ایک ہی دن چار بم دھماکوں میں سو کے قریب افراد کی شہادت پر سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے ان افسوس اور دکھ کے ساتھ کہا کہ 
انا للہ و انا الیہ راجعون 
کوئٹہ میں رونما ہونے والے انتہائی دل خراش سانحوں سے اس وقت حکمران طبقے کے علاوہ پوری قوم کا دل خون کے آنسو رو رہا ہے 
بلوچستان خاص کر کوئٹہ میں شیعہ نسل کشی کا اصلی سبب وہاں کا انتہائی نااہل عجوبہ وزیر اعلی ہے ،یہ اس صوبے اور یہاں کی عوام کی انتہائی بدقسمتی یا پھر وفاقی حکومت کی جانب سے ظلم و ستم ہے کہ اس مظلوم صوبے کے مظلوم عوام پر ایک ایسے شخص کو مسلط کیا گیا ہے جسے نہ اپنا ہوش رہتا ہے اور نہ اپنے اطراف کا ۔انہوں نے علمدار روڈ اور باچاخان رود پر بم دھماکوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ بات طے ہے کہ کوئٹہ کی سرزمین پر گرنے والے بے گناہوں کے خون کا ہر قطرہ ایک طرف جہاں عوام کی مظلومیت کو بیان کرتا ہے وہیں پر تاریخ کے اوراق کو حکمرانوں کے ظلم و ستم سے بھی بھر لیتا ہے ۔اس قدر قتل عام کے باوجود چین کی نیند سونے والے وزیر اعلی ٰ کو ایک منٹ بھی اس کرسی پر بیٹھنے کا حق نہیں اس فورا ہٹادیا جانا چاہیے ۔
ہم افواج پاکستان اور اہم محب وطن قومی ذمہ دار اداروں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ ملک کے تمام ان حصوں میں فورا آپریشن شروع کریں جہاں ملک دشمن دہشت گرد موجود ہیں ۔انہوں نے مزید کہا ملکی سرحدوں پر بھارتی فوج افواج پاکستان پر حملہ کرتیں ہیں اور اسی وقت بھارتی ایجنٹ کوئٹہ سوات میں محب وطن پاکستانی بے گناہ عوام کو نشانہ بناتے ہیں 

انہوں نے کہا کہ کوئٹہ کے اس المناک واقعے پر تین دن سوگ منایا جائے گا ۔جبکہ ایک سوال کے جواب پر سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے کہا کہ آئندہ کا لائحہ عمل کل اعلان کیا جائے گا 

Allama raja Nasir SG mwm0؂موجودہ ملکی صورتحال اور لانگ مارچ کے حوالے سے سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کا خصوصی انٹریو وگفتگو(مکمل متن)
ملکی صورت حال کے حوالے سے آپ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 
پاکستان بننے کے بعد بار بار مارشل لاء نے جہاں معاشرے کو تباہ کیا وہیں سماجی حوالوں سے بھی تبدیلی کا باعث بنا۔ بار بار مارشل لاء کا آنا ملک کے اندر لسانی، قومی ،علاقائی ،مسلکی و مختلف قسم کے گروہ و طبقات وجود میں آئے۔
لہٰذا ہمارا معاشرہ مختلف گروہوں میں تقسیم ہو گیا۔ ضیاء الحق کے مارشل لاء کے بعد یہ مسائل اور مشکلات مزید بڑھتے چلے گئے اور پاکستان میں عالمی قوتوں کا عمل مزید بڑھ گیا۔ پاکستان میں اندرونی طور پر مختلف قسم کی تحریکیں مزید گہری ہوتی چلی گئیں اور عوام گروہ در گروہ تقسیم ہوتے چلے گئے۔ وطن عزیز میں کلاشنکوف کا کلچر فروغ پایا، اسی طرح ہیروئن کی لعنت پھیلتی گئی۔ 
اس وقت اپنی مرضی کے مطابق ایسے سیاسی گروپ بنائے گئے کہ جو ضیاء الحق کی پالیسیوں کے ساتھ ہم آہنگ ہوں۔ یہ گروپ چاہے سیاسی نام سے بنائے گئے ہوں یا مذہبی نام سے، ان گروپوں کا صرف ایک ہی مقصد تھا اور وہ یہ ہے کہ قوم پرستی ہو، آپس میں الگ دھڑے بنائیں جائیں

mwm.minhaj alquranمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ امحمد امین شہیدی کے اسلام تائمز کو دئے گئے انٹریو سے کچھ اقتباس
مجلس وحدت مسلمین کو علامہ طاہرالقادری کے لانگ مارچ کی حمایت کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی۔؟
علامہ امین شہیدی: پاکستان ایک ایسا ملک ہے جہاں سینکڑوں جماعتیں ہیں اور ہر ایک کا اپنا قبلہ ہے، نعرے سب کے پاس ہیں، لیکن عملاً وہ نعرے کہیں پر بھی دکھائی نہیں دیتے۔ اس وقت پاکستان کو جن چیلنجز کا سامنا ہے وہ دراصل ریاست کو درپیش ہیں جو کسی سیاسی پارٹی کو نہیں ہیں۔ اس وقت پاکستان کو دہشت گردی، عالمی سامراجی قوتوں اور ملک میں موجود ان کے ایجنٹوں سے خطرات درپیش ہیں۔ امریکہ اس ملک کو ایک اکائی کے طور پر دیکھنا نہیں چاہتا، برطانیہ اور بعض عرب ممالک پاکستان اور خیبر پختونخوا میں اپنے گماشتوں کے ذریعے سے دہشت گردی کی پرموشن میں مصروف ہیں۔

nasir sheraziمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری سیاسیات ناصر عباس شیرازی کا اسلام ٹائمز کے لئے دیا گیا انٹریو ۔اقتباس
کون سی چیز تھی، جس نے مجلس وحدت مسلمین کو لانگ مارچ کی حمایت کرنے پر مجبور کیا، دوسرا یہ
ایک طرف آپ اس کی حمایت کر رہے ہیں تو دوسری طرف جماعت اسلامی سمیت دیگر جماعتیں اس کی مخالفت کر رہی ہیں۔؟
ناصر عباس شیرازی: دیکھیں پہلی بات تو یہ ہے کہ لانگ مارچ کرنا، احتجاج کرنا، پرامن مارچ کرنا، دھرنا دینا، ایک جمہوری حق ہے جسے کوئی کسی سے نہیں چھین سکتا۔ جمہوری معاشرے کے اندر اس حق کا احترام کیا جانا چاہیے، جماعت اسلامی جو مختلف دھرنوں کی پاکستان کے اندر روح رواں رہی ہے، وہ اس کی مخالفت کرتے ہوئے بالکل اچھی نہیں لگتی۔ پاکستان پیپلزپارٹی جو پاکستان میں لانگ مارچ کے بانیوں میں سے ہے، وہ یہ بات کہتے ہوئے بالکل غیر جمہوری لگتے ہیں، اسی طرح عدلیہ اور بالخصوص میاں محمد نواز شریف جنہوں نے لانگ مارچ کے ذریعے عدلیہ کو بحال کرایا، اُن کا یہ کہنا بالکل ناحق لگتا ہے کہ مجھے تو یہ رائٹ ہے کہ میں لانگ مارچ کروں، لیکن کسی اور کو یہ حق حاصل نہیں ہے۔

shafqat sherazi mwmمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری امور خارجہ علامہ سید شفقت شیرازی نے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی جانب سے علامہ طاہر القادری کے ملک میں ریفارم کی خاطر لانگ مارچ کی حمایت کے اعلان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہر دور میں تقریبا اکثر سیاسی پارٹیوں نے مختلف ملکی ایشوز پر لانگ مارچ کیا ہے 
لانگ مارچ کی حمایت درحقیقت ان بنیادی اور اہم مسائل کی خاطر ہیں جو پوری قوم کے مشترکہ مسائل ہیں کرپشن کا خاتمہ ،سیاسی اصلاحات ،امن و امان ،بیرونی مداخلت تمام پاکستانیوں کے مشترکہ مسائل ہیں 
مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک نظریاتی جماعت ہونے کے ناطے ہر اس آواز کی حمایت کرتی ہے جو ملک میں بہتری کے لئے کوشش کرے ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں فرقہ واریت اور سطحی مسائل سے بالا تر ہوکر سوچنا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ جو لوگ علامہ طاہر القادری کے لانگ مارچ پر تنقید کررہے ہیں انہیں یا اپنے مفادات خطرے میں نظر آرہے ہیں اور کچھ ایسے بھی ہیں جو انتہائی سطحی سوچ رکھتے ہیں 
لانگ مارچ ایک جمہوری اور دستور عمل ہے جمہوریت کیخلاف سازش نہیں بلکہ انتخابات کو بہتر انداز سے انجام دینے کے لئے ہے تاکہ درست افراد پارلیمنٹ تک رسائی حاصل کریں ،ہم کسی ایسے عمل کے حامی نہیں جو انتخابات کا خاتمہ کرے یا جمہوریت عمل کو ڈی ریل کرے

abdul khaliq mwm panjabمجلس وحدت مسلمین نے علامہ طاہرالقادری کے لانگ مارچ کے استقبال کے لئے جی ٹی روڈ کے تمام شہروں میں کیمپ لگانے کا اعلان کر دیا۔ ایم ڈبلیو ایم پنجاب کا خصوصی اجلاس علامہ عبدالخالق اسدی کی زیرصدارت منعقد ہوا جس میں لانگ مارچ میں شرکت کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ جی ٹی روڈ پر تمام شہروں میں مجلس وحدت استقبالیہ کیمپ لگائے گی واضح رہے کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے لانگ مارچ کی حمایت کی ہے۔
علامہ عبدالخالق اسدی نے کہا کہ پنجاب حکومت اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہے اور اسے پرامن عوام کی غیض و غضب سے بچنا چاہیئے کیونکہ اب کوئی ظالم اس مظلوم قوم پر ظلم نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہا کہ انشاءاللہ 14 جنوری پاکستان کی تقدیر بدلنے اور غریبوں اور مظلوموں کی فتح کا دن ثابت ہو گا، اب مظلوموں کے ہاتھ ظالموں کے گریباں تک پہنچنے میں دیر نہیں۔ اجلاس میں ضلع لاہور کے نمائندوں اور یونٹس عہدداروں نے شرکت کی۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree