وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین ضلع اسلام آباد کے زیراہتمام جیو کے مارننگ شو میں توہین آمیز مواد نشر کرنے کیخلاف پیمرا آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرے میں شرکاء کی بڑی تعداد موجود تھی، مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے، جن پر توہین آمیز نشریات کے خلاف نعرے درج تھے۔ اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ پیمرا اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں ناکام رہا ہے، اگر پیمرا شروع دن سے اپنا کام ٹھیک انداز میں کرتا تو آج نوبت یہاں تک نہ پہنچتی۔ مقررین نے پیمرا کے تمام عہدیداروں کی برطرفی کا مطالبہ بھی کیا۔ مقررین کہنا تھا کہ توہین آمیز نشریات سے امت مسلمہ کی دل آزاری ہوئی ہے، وزارت اطلاعات کی خاموشی کی مذمت کرتے ہیں۔ مظاہرین نے حکومت سے فی الفور کارروائی کا مطالبہ کیا۔ رہنماوں نے کہا کہ حکومت اس بات کو لازمی بنائے کہ آئندہ کسی بھی ٹی وی چینل پر اس طرح کی نشریات نہ چل سکیں۔

وحدت نیوز(کراچی)11مئی 2013کا دن ملکی تاریخ کا سیاہ ترین دن تھا ، عوام کی امنگوں کا قتل ہوا ، عوامی مینڈیٹ کے چوری ہونے کا ایک سال مکمل ہونے پر مجلس وحدت مسلمین علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کے حکم پر 11مئی کو ملک گیر یوم احتجاج منائے گئی، ملک بھر کی طرح سندھ بھر میں احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ مرکزی احتجاجی مظاہرہ کراچی پریس کلب کے باہر ہو گا، موجودہ وفاقی اور تمام صوبائی حکومتوں کی ایک سالہ کارکردگی انتہائی مایوس کن ثابت ہوئی ، الیکشن مہم کے دوران ٹی وی اشتہاروں میں بلند و بانگ دعوے کرنے والے حکمران آج ایوانوں میں چھپ کے بیٹھے ہیں ، دہشت گرد عملی طور پر ملک پر حاکم جب کہ بیرونی امداد اور پریشر سے بر سر اقتدار آنے والی جماعتیں صرف نگران کی حیثیت سے ذمہ داری انجام دی رہی ہیں، پیپلز پارٹی مفاہمت کے نام پر نوازلیگ کی خیانتوں پر پر دے ڈال رہی ہے، عوامی حقوق کے استحصال اور ظالم نظام حکومت کے خلاف اٹھارہ مئی کو اسکردو سے بیداری امت و استحکام پاکستان کانفرنس کے ذریعے احتجاجی تحریک کا آغاز کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مختار امامی نے کراچی وحدت ہاؤس میں ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کاکہنا تھا مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے حکومت کے ایک سال مکمل ہونے کے دن کو یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا ہے جس کی ہم تائید کرتے ہیں ۔ اس موقع پر دیگر رہنماؤں میں علامہ صادق رضا تقوی، عالم کربلائی ،مولانا نشان حیدر،عبداللہ مطہری، آصف صفوی ،حیدر زیدی ،شفقت لانگاہ اور امتیاز شاہ بخاری بھی موجود تھے۔

 

علامہ مختار امامی کا کہنا تھا کہ ہمیں الیکشن سے قبل ہی الیکشن کے نتیجے کا اندازہ ہو چکا تھا ، عرب ممالک کی بیجا مداخلت اور پیسوں کی ریل پیل الیکشن کو مشکوک بنا رہی تھی، افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ نا صرف حکمران جماعت بلکہ الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ کے بعض جج صاحبان بھی اس بیرونی سازش میں ملوث تھے، عوام اپنے گھروں سے جوق در جوق نظام کی تبدیلی اور خائن حکمرانوں سے نجات کی خاطر نکلے تھے،ملکی تاریخ میں ایک منفرد ٹرن آؤٹ سابقہ الیکشن میں آیا لیکن بیرونی سرمائے سب پر پانی پھیر دیا،پاکستان میں دہشت گردوں کو اسٹیک ہولڈر بنانے کے لئے الیکشن ہائی جیک ہوئے اور نواز لیگ کو ان دہشت گردوں کا نگہبان بنا کر ایوان میں بھیجا گیا۔ سعودی عرب بحرین اور بعض دیگر خلیجی ریاستیں پاکستان کے الیکشن پر براہ راست اثر انداز ہوئیں۔انہوں نے موجودہ حکومت کی ایک سالہ کارکردگی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عوامی مسائل ، لودشیڈنگ، دہشت گردی ، مہنگائی ، بے روزگاری کے خاتمے کے نعرے لگانے والی سیاسی جماعتیں ایک سال گذرنے کے باوجود تاحال کسی ایک مسئلے کے حل میں کامیاب نہ ہو سکیں ، لودشیڈنگ کو چند ماہ اور چند سال میں ختم کر نے کے دعوے دار میاں صاحبان آج کہتے ہیں، ہمارے تو ہاتھوں سے طوطے اڑ گئے، الیکشن کیمپین کے دوران اربوں روپئے کے ٹی وی کمرشلز میں صرف جوش خطابت اور عوام کو خوش کر نے کے لئے ایسے دل فریب نعرے لگائے گئے۔ آج عوام چودہ چودہ ، سولہ سولہ گھنٹے کی لودشیڈنگ بھگت رہے ہیں ، صنعتوں کا پہہ جام ہو چکا ، بے روز گاری میں اضافہ ہوا، لوگ بھوک و افلاس س خودکشیوں پر مجبور ہو ئے۔انہوں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ ن اور پاکستان تحریک انصاف لوڈشیدنگ کے مسئلے پر سیاست چمکانے سے باز آئیں اور پاور پروجیکٹس کی تنصیب کے حوالے سے سنجیدہ اقدامات کریں۔باریاں لگانے والی پیپلز پارٹی اور نواز لیگ نے ایک دوسرے کے عیبوں اور خامیوں پر پردہ ڈالنے کا بھی معاہدہ کر رکھا ہے، زرداری صاحب نے بڑے بھائی کو پانچ سال پورے کروانے کی یقین دھانی کروارکھی ہے۔

 

انہوں نے کراچی سمیت ملک بھر میں جاری ٹارگٹ کلنگ بھتہ خوری ، دہشت گردی پر تشویش کا اظہار کر تے ہو ئے کہاکہ کراچی میں درجن بھر شہریوں کا قتل معمول بن چکا ہے، گذشتہ ایک سال میں وفاقی و صوبائی حکومت نے فقط ایک بوسیدہ ٹارگٹڈ آپریشن کے کچھ نہیں کیا، جس کا نتیجہ صفر نکلا ، ہزاروں دہشت گردو ں کی گرفتاری کے دعوے ہو ئے لیکن سزا کسی ایک مجرم کو بھی نہ ہوئی، وزیر اعظم صاحب فقط گرفتاریوں کی تعداد پوچھ کر کراچی سے واپس آجاتے ہیں۔کراچی کی طرح پنجاب بھر میں بھی لاء4 اینڈ آرڈر کی صورتحال قابل اطمنان نہیں لاہور، گجرانوالہ ،فیصل آباد،اسلام آباد، راولپنڈی ،ملتان اور دیگر شہروں میں دہشت گردوں کے مراکز موجود ہیں جو صوبے بھر میں دہشت گردی میں ملوث ہیں ، لیکن نواز لیگ ان دہشت گردوں کے خلاف کو ئی ٹھوس کاروائی کرنے میں سنجیدہ نہیں ،پاک فوج کے جوانوں ، ڈاکٹروں ، وکلاء، انجینئرز، علماء اور شیعہ کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے افراد کے قاتل تاحال آزاد ہیں۔ انہوں نے اعلان کیا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان بیرونی امداد پر برسر اقتدار آنے والی حکومت کے ایک برس مکمل ہونے پر گیارہ مئی کو ملک گیر یوم سیاہ منائے گی ، ملک بھر میں کی طرح سندھ بھر میں احتجاجی مظاہرے کیئے جائیں گے، جب کہ مرکزی احتجاجی مظاہرہ کراچی پریس کلب پر ہوگا، عوام سے پر زور اپیل کی جاتی ہے کہ ظالم اور کرپٹ حکومت کے خلاف گیارہ مئی کو اپنے گھروں سے باہر نکلیں اور ان بیرونی ایجنڈوں سے اپنی بھر پور نفرت کا اظہار کریں۔

وحدت نیوز(لاڑکانہ) گلگت بلتستان میں وفاقی وصوبائی حکومت کی نااہلی اور مہنگائی ، لوڈشیڈنگ میں ہو شربہ اضافے اور گندم پر دی جانے والی سبسڈی کے خاتمے کے خلاف علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر لاڑکانہ میں بعد نماز جمعہ ایم ڈبلیو ایم کے زیر اہتمام مرکزی جامع مسجد و امام بارگاہ جعفریہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی سیکریٹری جنرل طارق حسین بدوی نے کہاکہ گلگت بلتستان کے عوام کو بنیادی حقوق سے محروم رکھنا حکمرانوں کی فرعونیت کی عکاسی کرتا ہے، مہنگائی ، لوڈشیڈنگ،کرپشن اور گندم کی آسمان سے باتیں کر تی قیمتوں نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے، مہدی شاہ گلگت بلتستان کے نااہل ترین وزیر اعلیٰ ثابت ہوئے ہیں ، جو کہ آج تک اپنے صوبے کے عوام کے مسائل سے حل کے لئے ایک قدم بھی نہ اٹھا سکے۔ طارق بدوی نے حکومت کو متنبہ کیا کہ اگر عوامی ایکشن کمیٹی کے چارٹر آف ڈیمانڈ کو جلد از جلد تسلیم نہ کیا تو مجلس وحدت مسلمین ملک بھر میں احتجاج کا دائرہ کار بڑھا دے گی۔واضح رہے کہ لاڑکانہ کی تحصیل رتوڈیرو اور ڈوکری میں بھی اہلیان گلگت بلتستان سے اظہار یکجہتی کے لئے احتجاج کیا گیا۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کی اپیل پر ملک بھر کی طرح ملتان میں بھی گلگت بلتستان کی عوام کی حمایت اور عوامی ایکشن کمیٹی کے ساتھ اظہاریکجہتی کے لیے پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرے کی قیادت مجلس وحدت مسلمین ملتان کے سیکرٹری جنرل علامہ سید اقتدارحسین نقوی، ڈپٹی سیکرٹری جنرل محمد عباس صدیقی، سید دلاور عباس زیدی، مرزا وجاہت علی اور دیگر نے کی۔ مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈزاُٹھا رکھے تھے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم ملتان کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھاکہ گلگت بلتستان کا کرپٹ وزیراعلی عوام کے غیض وغضب سے ڈرے اگر عوام کے حقوق نہ مانے گئے تو اس کی حکومت کا خاتمہ ہو جائے گا۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ مجلس وحدت مسلمین عوامی ایکشن کمیٹی کے مطالبات کی مکمل حمایت کرتی ہے اور جب تک ان کے مطالبات تسلیم نہیں کیے جاتے ہم احتجاج کرتے رہیں گے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن اور گلگت بلتستان یوتھ کے زیر اہتمام ملک بھر کی طرح کراچی میں بھی مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں سیکڑوں افراد نے شرکت کی اور گلگت بلتستان میں عوام کو گندم پر دی جانے والی سبسڈی کے خاتمے پرپاکستان پیپلز پارٹی اور گلگت بلتستان حکومت کے خلاف سخت نعرے بازی کی، احتجاج میں شریک مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر استحصالی حکومت مردہ باد، مہدی شاہ سرکار نا منظور، گندم سبسڈی بحال کرو ، گلگت بلتستان حکومت مردہ باد سمیت متعدد نعرے آویزاں تھے۔

 

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی اور گلگت بلتستان یوتھ کے زیر اہتمام منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل مولانا مختار امامی ،کراچی کے رہنما حسن ہاشمی، عوامی ایکشن کمیٹی کراچی کے رہنما مولانا علی محمد،، اور گلگت بلتستان یوتھ کے رہنماصداقت علی اشتر کاکہنا تھا کہ گلگت بلتستان کے عوام کے حقوق کا استحصال کیا جا رہا ہے اور انتظامیہ کی جانب سے گندم پر سبسڈی کا خاتمہ عوام کو قتل کرنے کے مترادف ہے، رہنماؤں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام اپنے حقوق کے حصول کی خاطر کسی بھی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ، انہوں نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان ایک ایسا خطہ ہے کہ جہاں سے پورے ملک کو پانی کی فراہمی ہو رہی ہے اور اس پانی سے بجلی بن کر پورے ملک کو سپلائی کی جا رہی ہے لیکن جس سر زمین سے یہ وسائل برآمد ہو رہے ہیں اسء خطے کے عوام کو بنیادی حقوق سے محروم رکھنے کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی قوانین کی روشنی میں فراہم کی جانے والی گندم پر سبسڈی کے خاتمے کا اعلان حکومت کی نا اہلی اور بد فعلی اور عوام دشمن ہونے کا کھلا ثبوت ہے۔

 

شرکائے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ اگر گلگت اور بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کی فراہمی میں رکاوٹوں کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو ملک بھر میں شیعہ او ر سنی عوام مل کر گلگت بلتستان کی طرح نا ختم ہونے والے احتجاج کا آغاز کر دیں گے اور ملک بھر میں حالات کی سنگینی کی تمام تر ذمہ داری حکومت وقت پر عائد ہو گی۔انہوں نے پاکستان پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت بشمول آصف علی زرداری ، بلاول بھٹو سے مطالبہ کیا کہ وہ گلگت بلتستان کی مقامی انتظامیہ کے اس فیصلے کا نوٹس لیں بصورت دیگر ملت گلگت بلتستان کے عوام اس عوام دشمن سازش میں ان کو بھی برابر کا شریک کار سمجھیں گے۔اس موقع پر شرکاء نے مردہ باد پیپلز پارٹی اور شیم شیم کے نعرے لگائے ۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زیر اہتمام ملک بھر میں جمعرات کے روز بحرینی شاہ کی پاکستان آمد کے خلاف یوم سیاہ منایا گیا اور ملک بھر کی طرح کراچی میں بھی احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، احتجاجی مظاہرہ کراچی پریس کلب کے باہر کیا گیا جس میں سیکڑوں افراد سمیت مجلس وحدت مسلمین کے کارکنوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ، مظاہرے میں بچوں، جوانوں اور بزرگوں سمیت خواتین کی بڑی تعداد موجود تھی جن کے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز موجود تھے جس پر امریکہ مردہ باد، اسرائیل نامنظور، طالبان مردہ باد، قاتل آل خلیفہ مردہ باد،نواز حکومت کا قومی غیرت کا سودا نا منظور کے نعرے درج تھے۔
مظاہرے سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات مہدی عابدی سمیت کراچی ڈویژن کے رہنماؤں مولانا باقر زیدی، مولانا علی انور جعفری، علامہ حامد حسین مشہدی ،علامہ مبشر حسن اور حسن ہاشمی نے خطاب کیا۔

 

احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کاکہنا تھا کہ پاکستان کو امریکی و اسرائیلی ایماء پر سعودی و بحرینی کالونی نہیں بننے دیں گے،امریکی پٹھو، سینکڑوں بے گناہ بحرینی شہریوں کے قاتل، ڈکٹیٹر شاہ حماد بن عیسیٰ الخلیفہ کی پاکستانی سرزمین پر مہمان نوازی کی پرزور مذمت کرتے ہیں ۔ان کاکہنا تھا کہ نواز حکومت کو چند ڈالروں کے عوض پاکستان کی مقدس فوج کو سعودی و بحرینی آگ میں دھکیلنے کی ہر گز اجازت نہیں دیں گے ، انہوں نے کہا کہ نواز حکومت سعودی اور بحرینی حکومت کے ساتھ خفیہ معاہدوں کو منظر عام پر لائے اور پاکستان کے غیور عوام کو سعودی خیرات کے بدلے قومی وقار اور خوداری کا سودا کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا۔

 

احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کاکہنا تھا کہ پاکستان شام و بحرین میں سعودی آگ کا ایندھن نہ بنے ، خلیجی ممالک کے مسائل میں دخل اندازی کا خمیازہ پاکستان کے مظلوم عوام بھگتیں گے۔ان کاکہنا تھا کہ نواز حکومت نے اپنے ذاتی اور انفرادی مفادات کی خاطر سیکڑوں بے گناہ انسانوں کے قاتل بحرینی شاہ اور ان کے سرپرست سعودی آقاؤں کی خوشنودی کی خاطر پاکستان کو خطر ناک آگ میں جھونکنا چاہتی ہے جسے کسی صورت قبول نہیں کیا جا سکتا ہے، ان کاکہنا تھا کہ پاکستان بنانے کی خاطر ہمارے آباؤ اجداد نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے پاکستان کا قیام عمل میں لائے تھے نہ کہ نواز شریف کے آباؤاجدادنے کسی قسم کی قربانی دی تھی، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کو امریکی اور اسرائیلی ایماء پر سعودی کالونی نہیں بننے دیں گے اور نواز شریف یہ بات جان لیں کہ پاکستان پاکستانیوں کاہے اور اسے سعودی ریالوں کے عوض فروخت نہیں کرنے دیا جائے گا، انہوں نے نواز حکومت کو متنبہ کیا کہ وہ سیکڑوں عوام کے قاتل بحرینی شاہ کو فی الفور نا پسندیدہ شخصیت قرار دے کر ملک بدر کریں اور پاکستان کے عوام کی امنگوں کی ترجمانی کی جائے۔

 

مقررین نے مطالبہ کیا کہ افواج پاکستان خود کو امریکی اور سعودی سازشوں سے دور رکھے اور نواز حکومت کی ایماء پر مشرق وسطیٰ کے کسی بھی مسئلے میں الجھنے سے اجتناب کیا جائے ، ان کاکہنا تھا کہ ایک طرف سعودی حمایت یافتہ طالبان دہشت گردوں نے پاکستان کو اندرونی سطح پر عدم استحکام کا شکار بنا رکھا ہے تو دوسری جانب سعودی عرب براہ راست پاکستان کو دیگر ممالک کی جنگ میں دھکیل کر پاکستان کا تشخص تباہ کرنے کی گھناؤنی سازش کر رہا ہے ، انہوں نے نواز حکومت سے سوال کیا کہ آخر ایسی کیا وجوہات ہیں کہ چالیس برس کے بعد بحرینی شاہ کوپاکستان آمد کی ضرورت پڑی۔

 

مقررین کاکہنا تھا کہ شہر کراچی ،حیدر آباداور خیر پور سمیت دیگر مقامات پر گذشتہ چار گھنٹوں میں شہید ہونے والے دو شیعہ عمائدین کی ٹارگٹ کلنگ سندھ انتظامیہ کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ، انہوں نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا شہر بھر میں جاری شیعہ قتل عام میں ملوث دہشت گردوں کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے بصورت دیگر کسی راست اقدام سے گریز نہیں کریں گے۔

Page 12 of 16

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree