The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل محترمہ سیدہ زہراء نقوی نے دسمبر کے آخری ہفتے میں لاہور ،اسلام آباد اور خیبرپختونخواہ کا دورہ کیا جہاں انہوں نے مہدی برحق ورکشاپس اور جشن صادقین کے پروگراموں میں شرکت کی ۔وہ اس سلسلے میں کراچی سے سنٹرل پنجاب ،اسلام آباد اور کے پی کےوزٹ پر آئیں تھیں۔ اسلام آباد میں انہوں ورکشاپ کے اختتام پر اپنے خطاب میں کہا کہ ان ورکشاپ کے انعقاد کا مقصد خواتین میں تنظیمی اور تربیتی شعور کو اجاگر کرنا ہے تاکہ خواتین معاشرے میں اپنا مثبت رول ادا کرسکیں اور تنظیمی امور میں اپنے مردوں کےشانہ بشانہ زندگی کے ہر شعبہ میں اپنی فعالیت کو اجاگر کر سکیں ۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی خواتین کارکنان ہماری تنظیم کا ایک قیمتی اثاثہ ہیں انہیں تنظیمی میدان فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ان ورکشاپ کا انعقاد بے حد ضروری ہے ۔ امید ہے ان ورکشاپس کے انعقاد سے ہماری تنظیمی خواتین بھر پور استفادہ کریں گی ۔

انہوں نے کہا کہ ہماری تنظیمی خواتین  کے اصرار پر سال 2017 میں یہ پنجاب میں تیسری مرتبہ ورکشاپس منعقد ہو رہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کراچی اور اندرون سندھ میں اس سلسلے میں کئی ایک ورکشاپس کا انعقاد کیا جس سے وہاں کی خواتین نہ صرف مستفید ہوئی ہیں بلکہ انہوں نے عملی میدان بھی اپنا رول احسن طریقے سے نبھا رہی ہیں ۔ محترمہ سیدہ زہراء نقوی نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ہمیشہ ان ورکشاپس میں خواتین کی ایک کثیر تعدادنئی ممبر سازی کرتی ہے جو ایک خوش آئند اقدام ہے ۔ تیزی سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان میں خواتین شمولیت ہمارے لئے باعث اطمینان ہے کہ معاشرے میں ہمارا رول ایک حوصلہ افزاء قدم ہے ۔ ہماری خواہش ہے کہ ہماری خواتین کارکنان  کسی بھی تنظیمی اور تربیتی میدان میں اپنے مردوں سے پیچھے نہ رہیں ۔ آج تک الحمدللہ اس سلسلے میں ہم کامیابی سے اپنے تنظیمی سفر کی جانب گامزن ہیں اور ان شاء اللہ آگے بھی اسی طرح ہر میدان میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی رہیں گیں ۔

ان کامذید کہنا تھا کہ قائد وحدت اور مجلس وحدت کی معزز کابینہ کی جانب سے ہمیشہ ہمیں بہت ہی عزت ملی ہے جس کے لئے ہم اپنے قائد وحدت اور مسئولین کے شکر گزار ہیں کہ جنہوں نے ہم پر اعتماد کیا ہے اور ہمارے لئے تنظیمی میدان فراہم کیا ہے ۔ انہوں نےذمہ دار خواتین  سے گزارش کی کہ بلاتاخیر اپنے اپنے علاقوں فعالیت انجام دیں تاکہ آئندہ سیاسی میدان ہم ملت کی خدمت اور فلاح و بہبود کے لئے ایک زمینہ ہموار کرسکیں ۔ سیاسی میدان میں خواتین بہتر انداز میں اپنا رول ادا کرسکتی ہیں ۔ اور اپنے خاندان کے علاوہ محلے اور انتخابی حلقے میں اپنا مثبت رول انجام دے سکتی ہیں ۔ آج بھی ہماری خواتین  مردوں کے ہمراہ اسمبلیوں بھی اپنا سیاسی حصہ ڈال رہی ہیں اور ملک و ملت کی خدمت میں مصروف عمل ہیں ۔ آنے والے الیکشن میں ان شاء اللہ ہم پہلے سے بہتر ایک نئی حکمت عملی کے ساتھ میدان میں وارد ہوں گے ۔ تاکہ ہماری حکمت عملی گذشتہ کی نسبت مزید بہتر ہو ۔ ان شاءاللہ

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ خواتین کے زیر اہتمام مھدی برحق ؑ تنظیمی و تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہو ئے مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ خواتين کسی ملک يا قوم کی ترقی اور فلاح و بہبود ميں برابر کردار ادا کر سکتی ہيں ۔کسی بھی ملک کی تعمير و ترقی ميں عورتوں کا مردوں کے برابر حصہ ہوتا ہے ، مردوں کے ساتھ عورتيں بھی سماجی اور اقتصادی ميدان ميں مردوں کے شانہ بہ شانہ کام کرکے آگے بڑھ سکتی ہيں ۔ انسان ہونے کے ناطے تو مرد اور عورت دونوں مساوی ہيں ،تمدن کی تعمير اورتہذيب کی تشکيل اور انسانيت کی خدمت ميں دونوں برابر شريک ہيں ۔ضرورت اس بات کی تھی کہ ’’مساوات مرد وزن‘‘ کے کھوکھلے نعرے کے بجائے تمدن کی فلاح کيلئے دونوں کی دماغی تربيت اورعقلی وفکری نشونماکے مواقع بہم پہنچائے جاتے کيونکہ ہر تمدن کا فرض ہے کہ سماج کا يہ نصف حصہ اپنی فطری استعداد اور صلاحيتوں کے مطابق سماج کی ترقی ميں بڑھ چڑھ کر کردار ادا کرے عزت نفس کا بھی بہترين شہري صفات کے فروغ کا باعث بن سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اسلام دنيا کا پہلا مذہب ہے جس نے عورت کو مرد کے برابر مقام ديا ہے بلکہ سماج کی تشکيل ميں عورت کو مرد سے زيادہ اہميت دی ہے، اسلام کی نظر ميں عورت معمار اول کا درجہ رکھتی ہے، عورت اور مرد انسانيت کی گاڑی کے دو پہيے ہيں ، کسی ايک پہيے کے بغير انسانيت کی ترقی و عروج کا تصور نہيں کيا جا سکتا، قرآن حکيم نے عورت کے حقوق اور معاشرہ ميں اس کی اہميت پر بہت زور ديا ہے اور جو بھی احکامات دئیے ہيں ، ان ميں عورت اور مرد دونوں برابر کے شريک ہيں ، ایک موقع پر اردو کے معروف اسکالر اور شاعر علامہ اقبال نے کہا تھا کہ قرآن کا گہرائی کے ساتھ مطالعہ کيا جائے تو معلوم ہو گا کہ اس ميں عورتوں کے حقوق اور ان کی اہميت پر اتنا زور ديا گيا ہے کہ گويا يہ کسی عورت کا کلام ہو، ان حقوق و اختيارات کی لسٹ کافی طويل ہے جن کے عنوانات پر ہی نظر ڈال لينا کافی ہو گا، اسلام نے مرد اور عورتوں ميں حقوق کی مساوات رکھی ہے، عورت کی مستقل حيثيت کو تسليم کيا ہے، سزا اور معافی ميں مرد اور عورتوں کو برابر رکھا ہے، عورت کو اپنے شوہر کے انتخاب کے ساتھ ساتھ وراثت ميں بھی حق حاصل ہے، جو اسے ماں باپ اور شوہر دونوں کی طرف سے ملتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسلامی معاشرے میں مرد و زن کے لئے میدان کھلا ہوا ہے۔ اس کا ثبوت اور دلیل وہ اسلامی تعلیمات ہیں جو اس سلسلے میں موجود ہیں اور وہ اسلامی احکامات ہیں جو مرد اور عورت دونوں کے لئے یکساں طور پر سماجی ذمہ داریوں کا تعین کرتے ہیں۔ یہ تو پیغمبر اسلامﷺ کا ارشاد گرامی ہے کہ " من اصبح و لا یھتم بامور المسلمین فلیس بمسلم" ( جو شخص شب و روز گزارے اور مسلمانوں کے امور کی فکر میں نہ رہے وہ مسلمان نہیں ہے) یہ صرف مردوں سے مخصوص نہیں ہے، عورتوں کے لئے بھی ضروری ہے کہ مسلمانوں کے امور، اسلامی معاشرے کے مسائل اور عالم اسلامی کے معاملات بلکہ پوری دنیا میں پیش آنے والی مشکلات کے سلسلے میں اپنے فریضے کا احساس کریں اور اس کے لئے اقدام کریں، کیونکہ یہ اسلامی فریضہ ہے۔ حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی ذات گرامی، جو بچپن میں اور مدینہ منورہ کی جانب پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی ہجرت کے بعد مدینے میں اپنے والد کو پیش آنے والے تمام معاملات میں، اپنا کردار ادا کرتی ہوئی نظر آتی ہے، ایک نمونہ ہے جو اسلامی نظام میں عورت کے کردار اور فرائض کو ظاہر کرتا ہے۔ سورہ احزاب کی ایک آيت کہتی ہے کہ اسلام ہو، ایمان ہو، قنوت ہو، خشوع و خضوع ہو، صدقہ دینا ہو، روزہ رکھنا ہو، صبر و استقامت ہو، عزت و ناموس کی حفاظت ہو یا ذکر خدا ہو، ان چیزوں میں مردوں اور عورتوں کے درمیان کوئی فرق نہیں ہے۔ معاشرے میں عورتوں کی وہ سرگرمیاں بالکل جائز، پسندیدہ اور مباح و بلا اشکال ہیں جو اسلامی حدود کی پابندی کرتے ہوئے انجام دی جائيں۔ جب معاشرے میں مرد اور عورتیں دونوں ہی تعلیم حاصل کریں گے تو تعلیم یافتہ افراد کی تعداد اس دور کے مقابلے میں دگنی ہوگی جس میں تعلیمی سرگرمیاں صرف مردوں سے مخصوص ہوکر رہ جائیں۔ اگر معاشرے میں عورتیں تدریس کے شعبے میں سرگرم عمل ہوں گی تو معاشرے میں اساتذہ کی تعداد اس دور کی بنسبت دگنی ہوگی جس میں یہ فریضہ صرف مردوں تک محدود ہو۔ تعمیراتی سرگرمیوں، اقتصادی سرگرمیوں، منصوبہ بندی، فکری عمل، ملکی امور، شہر، گاؤں، گروہی امور اور ذاتی مسائل اور خاندانی معاملات میں عورت و مرد کے مابین کوئی فرق نہیں ہے۔ سب کے فرائض ہیں جن سے ہر ایک کو عہدہ بر آ ہونا چاہئے۔

انہوں نے مذید کہا کہ اگر اسلامی معاشرہ عورتوں کو اسلامی تربیت کے نمونوں میں تبدیل کرنے میں کامیاب ہو جائے تو اس کا مطلب یہ ہوگا کہ عورت اپنے شایان شان مقام و منزل پر پہنچ گئی ہے۔ اگر معاشرے میں عورت علم و معرفت اور روحانی و اخلاقی کمالات پرفائز ہو جائے جو اللہ تعالی اور ادیان الہی نے تمام انسانوں، بشمول مرد و زن، کے لئے یکساں طور پر معین کئے ہیں تو بچوں کی بہتر تربیت ممکن ہو سکے گی، گھر کی فضا زیادہ پاکیزہ اور محبت آمیز ہو جائے گی، معاشرہ زیادہ ترقی کر سکے گا، زندگی کی مشکلات زیادہ آسانی سے برطرف ہوں گي۔ یعنی مرد اور عورت دونوں خوشبخت ہو جائیں گے۔ مقصد عورتوں کو مردوں کے مقابلے میں صف آرا کرنا نہیں ہے، مقصد عورتوں اور مردوں کی معاندانہ رقابت نہیں ہے۔ ہدف یہ ہے کہ عورتیں اور لڑکیاں اسی عمل کو دہرا سکیں جس کو انجام دے کر مرد ایک عظیم انسان میں تبدیل ہو جاتے ہیں، یہ ممکن بھی ہے اور اسلام میں اس کا عملی تجربہ بھی کیا جا چکا ہے۔

آخر میں انہوں نے کہا کہ انتہائی اہم چیزوں میں ایک، گھر کے اندر کے فرائض یعنی شوہر اور بچوں سے برتاؤ کی نوعیت کے تعلق سے عورتوں کو صحیح طریقوں سے آگاہ کرنا ہے۔ ایسی عورتیں بھی ہیں جو بہت اچھی ہیں، ان میں صبر و تحمل، حلم و بردباری، درگزر اور رواداری کا جذبہ اور اچھا اخلاق پایا جاتا ہے لیکن وہ بچوں اور شوہر کے سلسلے میں اپنا رویہ درست نہیں کرتیں۔ یہ رویہ اور روش با قاعدہ ایک علم ہے۔ یہ ایسی چیزیں ہیں جو انسانی تجربات کے ساتھ روز بروز بہتر ہوئی ہیں اور آج اچھی صورت حال میں موجود ہیں۔ بعض لوگ ہیں جن کے پاس بڑے گرانقدر تجربات ہیں۔ کوئی ایسا راستہ اختیار کیا جانا چاہئے جس سے یہ عورتیں گھر کے اندر رہتے ہوئے ان روشوں اور طریقوں سے آگاہ ہو سکیں اور رہنمائی حاصل کر سکیں۔

مرکزی سیکرٹری شعبہ خواتین ،خواہر زہراء نقوی نے خطاب کیا اور تنظیم کے ثمرات اور افادیت کے بارے میں بتایا، انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے بھی ہمیشہ خواتین کو پاکستانی معاشرے میں اپنا کردار ادا کرنے کے لئے میدان فراہم کیا ہے ۔ اور ذمہ داریاں سونپی ہیں لہذا ہماری پاکستان کی تمام خواہران سے گزارش ہے کہ وہ آگے بڑھیں اور مجلس وحدت مسلمین کا حصہ بن کراپنا بھر پور کردار ادا کریں ۔قائد وحدت اور ان مخلص کابینہ نے ہمیشہ خواتین کو عزت کی نگاہ سے دیکھا ہے ۔ اور خواتین کے ساتھ تعاون کیا ہے ۔

ورکشاپ کے دوسرے مقررعلامہ سید حسنین گردیزی نے خطاب کیا اور امت مسلمہ کے مسائل اور ان کے حل کیلئے نہج البلاغہ کی نظر میں ان کا حل بتایا،گروپ ڈسکشن کی گئی جس میں انتظار امام ؑ کیسے کیا جائے اور اس میں ہماری ذمہ داری بتائی گئی۔سید حسنین گردیزی صاحب نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مردوں کے ساتھ عورتوں کو شانہ بشانہ ساتھ چلنا ہو گا۔اور اپنے مسائل کا حل نہج البلاغہ سے لیناتلاش کرنا ہو گا اس وقت معاشرے کو تعلیمی پسماندگی ، جہالت،کمزور معیشیت، فقرو ناداری اورتفرقہ، دین میں تحریف و بدعت ۔ان سب کا حل نہج البلاغہ بآسانی لیا جا سکتا ہے۔تعلیم کو عام کیا ہے۔ جہالت کا خاتمہ علم ایک زندگی ہے۔ غربت و افلاس کو ختم کیا جائے۔

 ورکشاپ کے آخر میں پنڈی ڈویژن کی خواتین کی سرگرمیوں سے متعلق سید قندیل کاظمی نے روشنی ڈالی ۔ انتظار امام اور اُس کی تیاری پرخواہر نگین نقوی صاحبہ نے سیر حاصل گفتگو کی اس ورکشاپ میں تنظیمی خواہران ایک کثیر تعداد نے شرکت کی اور خواہران اس بات پر زور دیا کہ اس طرح کی وکشاپس کا انعقادتنظیمی خواتین کی صلاحیتیوں کو بڑھانے کےلئے ازحد ضروری ہیں ۔ ان ورکشاپس کے انعقاد سے ہمیں کام کرنےکی روش کے علاوہ اپنے مردوں کے شانہ بشانہ کام کرنے کا حوصلہ اور جذبہ بھی پیدا ہوتا ہے اور ایک معاشرے میں اپنا کردار ادا کرنے کی ایک نئی جہت ملتی ہے جس سے بنحو احسن ہم اس الہی تنظیم میں اپنا رولادا کر سکتی ہیں ۔

وحدت نیوز (کراچی) موسم سرماکی آمد کے ساتھ ہی مستحق افراد میں گرم کپڑوں اور گمبلوں کی ضرورت شدت سے محسوس کی جاتی ہے، اس ضرورت کے پیش نظر خیر العمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ شعبہ فلاح وبہود مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کی جانب سے مختلف علاقوں میں ضرورت مندوں کی سہولت کیلئے مفت بازار مہربانی کا اہتمام کیا گیا ہے، خیرالعمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ کراچی ڈویژن کے سیکریٹری سید زین رضا رضوی نے وحدت نیوزسے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ کراچی شہر میں ملک بھر سے لاکھوں کی تعداد میں شہری دیگر شہروں سے ہجرت کرکے آتے ہیں اور روزگار کے حصول میں مصروف ہوئے ہیں جن کی اکثریت مضافاتی علاقوں میں رہائش پذیر ہے مہنگائی اور بے روزگاری کے باعث ایسے سفید پو ش افراد جو موسم کے مطابق گرم کپڑے اور گمبل وغیرہ خریدنے کی استطاعت نہیں رکھتے ان کے لئے پہلے مرحلے میں خادم سولنگی گوٹھ، جامع مسجد نورایمان اور خدا کی بستی سرجانی ٹاون میں مفت بازار مہربانی لگائے گئے ہیں جہاں سے خواتین اور حضرات اپنی ضرورت کے مطابق گرم کپڑے اور ملبوسات مفت حاصل کرسکتے ہیں ، ان بازاروں میں نئی اور پرانی اشیاء پیش خدمت ہیں  پرانی اشیاءبھی بلکل نئے کے انداز میں رکھی گئیں ہیں ، تینوں مقامات پر قائم بازار مہربانی میں متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں خواتین او حضرات نے اپنے ضرورت کے مطابق اشیاءمفت حاصل کیں اور اس کارخیر پر خیرالعمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ کے اراکین کو خراج تحسین پیش کیا۔اس موقع پر ایم ڈبلیوایم ضلع وسطی کے رہنما ثمرزیدی ، علی رضا چانڈیو اور دیگر بھی موجود تھے۔

وحدت نیوز(لاہور) امریکی وسعودی ایماء پر نائجیرین حکومت کی جانب سے اسلامک موومنٹ آف نائجیریا کے سربراہ آیت اللہ شیخ ابراہیم زکزاکی کی ظالمانہ قید کے خلاف وحدت یوتھ لاہور کے زیر اہتمام  پریس کلب پر پر امن احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، احتجاجی مظاہرے میں کارکنان کی بڑی تعداد شریک تھی جنہوں نے ہاتھوں میں بینرزاور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر شیخ ابراہیم زکزاکی کی فوری رہائی کا مطالبہ درج تھا، اس موقع پر وحدت یوتھ لاہور کے سیکریٹری جنرل سجاد نقوی نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نائجیرین حکومت امریکی اور سعودی ایماء پر معروف مذہبی رہنما شیخ ابراہیم زکزاکی پر مظالم کے پھاڑ توڑ رہی ہے، انہیں فوری طور پر رہا کیا جائے پہلے وہ اسلام کی راہ میں اپنے پانچ فرزندوں کی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کرچکے ہیں اور اطلاعات کے مطابق ان کی حالت دوران اسیری انتہائی خراب ہے ان کی ایک آنکھ بھی ضائع ہو چکی ، عالمی عدالت انصاف شیخ زکزاکی کی رہائی کیلئے فوری اقدامات کرے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلسِ وحدت مسلمین  شعبہ خواتین  کراچی  کی جانب سے شعبہ خواتین کراچی کےتین اضلاع کا اجلاس منعقد ہوا جسمیں ضلع غربی ،ضلع وسطی اور ضلع شرقی کی ذمہ داران نے شرکت کی،اجلاس میں مرکزی سیکریٹری جنرل شعبہ خواتین محترمہ زہرانقوی اور مرکزی سیکریٹری امور تنظیم سازی مہدی عابدی نے خصوصی طور پر شرکت کی اور ضلعی ذمہ داران سے مختلف موضوعات پر خطاب کیا، محترمہ زہرانقوی نے  مسئلہ فلسطین پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ  فلسطین امتِ اسلامی کا سب سے اہم ترین مسئلہ ہےاور تمام اسلامی ممالک پہ فلسطین اور مسجدِ اقصٰی کے لئے آوازِ حق بلند کرنا ایک فرض کی حیثیت رکھتا ہے، یہ دوشمن کی ناکامی کا ثبوت ہے کہ دشمن خود ساختہ دعٰوی کرنے لگا ہے جو سراسر بین الاقوامی قوانین  کی خلاف ورزی  ہے اور اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کے منافی ہے۔انشاء اللہ ہم بحیثیتِ مکتبِ تشیع پاکستان ہر فورم پر قبلہ اول کی مکمل آزادی تک استعمار کے خلاف آوازِ حق بلند کرتے رہیں گے۔

سید مہدی عابدی نے  ملکی اور بین الاقوامی سیاسی صورتحال کے پس منظر میں ملتِ تشیع پاکستان کے کرادار کے حوالے سےتفصیلی گفتگو کی، انہوں نے انتہائی مفصل انداز میں ملکی اور بین الاقوامی حالات وواقعات،مسجدِ اقصٰی بیت المقدس کی تحریک سے لے کر شام اور عراق سے داعش کی شکست اور پھر انخلا اور دنیائے تشیع کے کردارپر روشنی ڈالی اور ملکی سیاسی صورتحال ، واقعات و حالات کے پس منظر میں حاضرین  کی جانب سے پوچھے جانے والے مختلف سوالات کے بھی تفصیلی جوابات دئیے۔

اجلاس کے اختتام پر شعبہ خواتین کراچی کے حوالے سے آنے والی تینوں  اضلاع کی مسؤلین سے تنظیمی و فلاحی امور کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی  اور مستقبل قریب کے مختلف پروگرامز ترتیب دئے، بلخصوص شعبہ خواتین ضلع وسطی کے زیرِ انتظام بیتِ زہرہ ع کی نمائندہ مسؤلین سےخصوصی ملاقات کی اور بیت زہرہ ع کی کارگردگی کےحوالے سے تین ماہ کی رپورٹ طلب کی ، اسکے علاوہ بیتِ زہرہ ع  میں آئندہ آنے والے دنوں میں آغاز کئے جانے والے مختلف فلاحی پروجیکٹز کے حوالے سے گفتگو کی ، بعد ازاں ضلع غربی  میں شعبہ  خواتین کی جانب سے سردیوں کے پیشِ نظر گرم کپڑے اور سردیوں کا دیگر ضروری سامان ضلع غربی کی ذمہ داران کے حوالے کیا گیاتاکہ خواتین کو بروقت سامانِ ضرورت مہیا کیا جاسکے۔

وحدت نیوز (میانوالی) مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے ضلع میانوالی کے 237 یتیم بچوں میں وظائف تقسیم کئے گئے۔ اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم رہنماء علی رضا طوری, عدیل عباس زیدی, ضلعی رہنماء علمدار حسین ایڈووکیٹ, کیپٹن ریٹائرڈ رفیع اللہ خان اور سید مظفر نقوی موجود تھے۔ علی رضا طوری کا کہنا تھا کہ مجلس وحدت مسلمین ملت تشیع کو ایک مضبوط ملت کے طور پر دیکھنا چاہتی ہے، ہماری خواہش ہے کہ ہماری ملت و قوم کا ایک ایک بچہ علم کے زیور سے آراستہ ہو اور وطن عزیز پاکستان کی تعمیر و ترقی میں اپنا بہترین رول ادا کرے، ضلع میانوالی کے 237 بچوں میں وظائف کی تقسیم کا مقصد بھی یہی ہے کہ یہ بچے خود کو تنہاء نہ سمجھیں بلکہ معاشرہ میں خود اعتمادی کیساتھ جیتے ہوئے اپنا مستقبل بہتر بنائیں۔.

وحدت نیوز(حیدرآباد) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین ضلع حیدرآباد کے زیر اہتمام ولادت باسعادت رسول اکرم (ص)اور امام صادق( ع) کے سلسلے میں جشن صادقین ؑ کا انعقادبیت زہراسلام اللہ علیہا میں کیا گیا، جس کی مہمان خصوصی ایم ڈبلیوایم شعبہ خواتین کی مرکزی سیکریٹری جنرل محترمہ سیدہ زہرا نقوی تھیں، محفل میں حیدرآباد کے مختلف مدارس ،تنظیموں اور مقامی خواتین نے بھرپور شرکت کی ، پروگرام میں نظامت کے فرائض  خواہر شگفتہ علی نے با احسن و خوبی انجام دیئے،پروگرام کا باقاعدہ آغاز حمد باری تعالیٰ اور حدیث کسا ء سےہوا،بعد ازا مختلف  خواتین نےبارگاہ محمد (ص) و آل محمد (ع) میں نعت رسول مقبول اور ہدیہ منقبت پیش کیں۔ محترمہ سیدہ عظمیٰ تقوی سیکریٹری جنرل ایم ڈبلیوایم شعبہ خواتین ضلع حیدرآباد کی جانب سے ڈسٹرکٹ اور یونٹس کی ممبران میں حسن کارکردگی کے اعتراف میں خانم زہرہ نقوی مرکزی سیکریٹری جنرل شعبہ خواتین اور محترمہ عابدہ حسینی (فا ضلہ قم ) کے ہاتھوں اعزازی اسناد (شیلڈ )تقسیم کی گئیں، محترمہ کنول بتول نے رسول اللہ (ص)کی شان میں اپنا کلام پیش کیا ،محترمہ سیدہ زہرانقوی نے  بعنوان سیرت رسول خدا (ص ) اور ہفتہ وحدت پر مختصر خطاب  کیا، اس کے علاوہ محترمہ عابدہ حسینی نے سیرت امام صادق پر مختصر درس دیا ،پروگرام کا اختتام دعا ء سلامتی امام زمانہ (عج)سے ہوا بعد اختتا م پروگرام  مومنات کے لیے نیاز  کا انتظام  بھی تھا ۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) خیر العمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ شعبہ فلاح وبہبودمجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے سیکریٹری زین رضوی نے کہا ہے کہ سالہائے گذشتہ کی طرح اس سال بھی امام خمینی ؒ کے فرمان پر جشن ولادت رسول اکرم ﷺ کے موقع پر ہفتہ وحدت منائیں گے اور کراچی کے مختلف اضلاع میں شرکائے جلوس میلادالنبی ﷺ کی تواضع کیلئے تیس سے زائد مقامات پر سبیلوں کو اہتمام کیا جائے گا ۔ر بیع الاول کا مقدس مہینہ آقائے دوجہاں رحمۃللعالمین ﷺ کی ذات گرامی سے متعلق ہے، اس مبارک مہینہ میں عاشقان رسول ﷺ پیغمبر رحمت سے اپنے عشق و مودت کا اظہار کرتے ہیں اسی مناسبت سے خیر العمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ کی جانب سے  ملک بھر میں عید میلاد النبی ﷺ کے جلوسوں پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کریں گے اوراس پر مسرت موقع پربرادران اہل سنت کیلئے  سبیلیں لگائیں گے اور دس سے سترہ ربیع الاول تک ہفتہ وحدت منائیں گے۔

وحدت نیوز ( سکردو) مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل برادر ناصر عباس شیرازی کی ماورائے قانون گرفتاری کے خلاف جوانان وحدت کیساتھ علمائے کرام اور تنظیمی رہنماؤں کی نشست ہوئی. اس موقع پر برادران سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ احمد علی نوری نے کہا کہ ملک عزیز کے لئے ہماری قربانیوں کا یہ صلہ دیا جا رہا ہے کہ ہمارے نڈر اور بے باک نوجوان قیادت کی آزادی کو سلب کرکے دن دیہاڑے اٹھایا گیا اور ریاست خاموش لاچارگی کی تصویر بنی ہوئی ہے. اس موقع پر صوبائی و ضلعی رہنماؤں شیخ علی محمد کریمی،برادرمیثم کاظم، مولانا فدا حسین عابدی و دیگر نے بھی گفتگو کی،قائد وحدت علامہ راجہ  ناصر عباس جعفری صاحب کے حکم پر بروقت لبیک کہنے کیلئے جوانوں کی ذہن سازی اور ان کو آمادہ رکھنے کے حوالے سے مجلس وحدت مسلمین کے آفس سکردو میں درجنوں جوانوں کے ساتھ نشست میں اس بات کا اعادہ کیا گیا کہ ہم وطن کی سربلندی کیلئے ہر صف اول میں اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے, لیکن ریاستی اداروں کو بھی اپنی پیشہ ورانہ امور کو درست سمت میں انجام دیتے ہوئے کرپٹ اور متعصب سیاسی لوگوں کی غلامی سے اجتناب کرنا ہوگا، پنجاب کے متعصب وزیر اعلیٰ جس کے تعلقات ہمیشہ سگے کالعدم دہشت گرد جماعتوں سے رہی کی شیعہ دشمنی کی پرزور الفاظ میں مذمت کی گئی اور ان کو لگام دیتے ہوئے ہائی کورٹ کے حکم پر ناصر شیرازی کو جلد بازیاب کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) خیر العمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ شعبہ فلاح وبہبودمجلس وحدت مسلمین پاکستان کے چیئرمین علامہ باقرعباس زیدی نے کہا ہے کہ ر بیع الاول کا مقدس مہینہ آقائے دوجہاں رحمۃللعالمین ﷺ کی ذات گرامی سے متعلق ہے، اس مبارک مہینہ میں عاشقان رسول ﷺ پیغمبر رحمت سے اپنے عشق و مودت کا اظہار کرتے ہیں اسی مناسبت سے خیر العمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ کی جانب سے  ملک بھر میں عید میلاد النبی ﷺ کے جلوسوں پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کریں گے اوراس پر مسرت موقع پربرادران اہل سنت کیلئے  سبیلیں لگائیں گے اور دس سے سترہ ربیع الاول تک ہفتہ وحدت منائیں گے۔

Page 10 of 40

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree