The Latest

وحدت نیوز (کراچی)  مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے پولیٹیکل سیکریٹری  علی حسین نقوی نے سجاول میں جلوس شہادت حضرت علی ابن ابی طالب ؑمیں تکفیری عناصر کی جانب سے رکاوٹ کھڑی کرنے کی پرزور الفاظ میں مذمت کی ہے، اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ انتظامیہ حالات خراب کرنے والوں کو قابو میں کرے،عزاداروں کا راستہ روکنے کی کوشش کی گئی تو حالات کی خرابی کی ذمہ دار انتظامیہ ہو گی ،سجاول میں جلوس شہادت حضرت علی ؑکے خلاف تکفیری عناصر کی سازشیں ضلعی انتظامیہ کے لئے چیلنج ہیں،ریاست پاکستان کی جانب سے کالعدم قرار دی جانے والی جماعتوں کو کھلے عام فتنہ وفساد پھیلانے کی کسی صورت اجازت نہیں دینی چاہیے، علی حسین نقوی نے کہاکہ اگر سجاول میں جلوس عزا میں کوئی بد نظمی کا واقعہ ہوا تو پورے سندھ میں شدید احتجاج ہوگا۔

وحدت نیوز (اٹک)  مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین ضلع اٹک زیر اہتمام دس روزہ دروس اور یوم خدیجہ علیہ السلام کا اہتمام کیا گیا  ۔دوئم رمضان المبارک سے لے کر دس رمضان المبارک تک درس اخلاق اور روزے افادیت کا اہتمام کیا گیا جس میں معلمہ مہک زہرا از المصطفی یونیورسٹی اسلام آباد نے بہت خوبصورتی سے ان پہلوؤں کو اجاگر کیا نیز آخری دن گیارہ رمضان المبارک کو یوم خدیجہ علیہ السلام کا اہتمام کیا گیا ۔۔جس میں تلاوت قرآن پاک اور حدیث کساء کے بعد نعت رسول مقبول صل اللہ علیہ و آلہ و سلم پیش کی گئی بعد از آن شعیب ابی طالب کی منظر کشی کی گئی ترانہ کے بعد روزہ نہ صرف بھوک پیاس برداشت کرنے کا نام نہیں بلکہ ایثار و قربانی کا نام بھی ہے پر خاکہ پیش کیا گیا ۔معلمہ مہک نے بی بی خدیجہ ولادت سے بعثت رسول کریم سے ازواج تک حال زندگی کو بہت خوبصورتی سے روشن کیا ۔معلمہ شازیہ از ایران نے بعثت رسول اللہ ص سے لےشعیب ابی طالب اور نوجوان نسل پر اثرات کے پہلو کو اجاگر کیا ۔بعد ازآن خواہر چمن فاطمہ از ایران نےبی بی خدیجہ اسلام پر قربانیاں اور شیعہ خواتین کی ذمہ داریاں اور آخر میں خواہر زینب نے بی بی کی وصیت اور شہادت کے پہلو پر روشنی ڈالی،نیز کوئز کا انعقاد بھی ہوا۔آخر میں دعا امام زمان سے نشست کا اہتمام کیا گیا ۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کراچی ڈویثزن کی جانب سے اسلامک ریسرچ سینٹر عائشہ منزل افطار عشائیہ میں منعقدہ فکر امام خمینی سیمینار کے موقعہ پر خطاب میں کہا کہ امام خمینی وہ عظیم عالمی اسلامی رہنما تھے جنہوں نے امت مسلمہ کو استعماری طاقتوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کا درس دیا۔ان کی آواز دنیا کی ان طاقتوں کے خلاف تھی جو اسلام کی حقیقی تعلیمات کو مسخ کرکے دنیا بھر میں اسلام کی شکل میں من پسند مذہب کا اجرا چاہتے تھے۔ امام خمینی نے ایران میں انقلاب برپا کر کے اڑھائی ہزار سالہ شہنشاہی کو سرنگوں اور رعونت و تکبر کے بت کو پاش پاش کیا اور امت مسلمہ کو بتایا کہ جہاں بھی اسلام کے تشخص کو خطرہ ہو اس طرح توحید کا پرچار کیا جائے۔ان کا انقلاب اللہ کی زمین پر اللہ کے قانون کو نافذ کرنے کے لیے تھا۔امام خمینی قدس سرہ ایک عارف باللہ اور ایسے عالم ربانی تھے جن کی دوستی و دشمن خدا کی خاطر جن کی تھی۔وہ اللہ کے نظام توحید اور ربوبیت کے نظام پر کامل یقین اور ایمان رکھتے تھے۔ ان کا ایمان تھا کہ اس کائنات میں سب سے بڑی طاقت اور قدرت اللہ کی ذات ہے اور اسی پر توکل کرنا چاہیے۔

 انہوں نے ناموس دین کے دفاع کے لیے آواز بلند کی۔ ناموس دین کے دفاع کا یہ تقاضہ ہے کہ دین کتابوں اور الماریوں میں بند نہ رہے بلکہ دین کی اصلی تعلیمات محفوظ بھی رہیں اور معاشرے پر اللہ کے دین اور قانون کو نافذ بھی کیا جائے۔امام خمینی نے اس کام کے لیے اپنے آپ کو آمادہ کیا۔سیر و سلوک اور تہذیب نفس کے مراحل طے کیے۔ عظیم ترین اساتیذ اور مربیوں کے زیر اثراپنے علمی درجات کو بلندی پر لے گئے۔علم و عمل کے زیور کے ساتھ ساتھ تہذیب نفس سے اپنے باطن کو بھی آراستہ کرتے رہے جواللہ کے نظام کو معاشرے میں نافذ کرنے کا بنیادی مرحلہ ہے۔ انبیاء کے نقش قدم پر چلتے ہوئے طاغوتی ا ور سرکش قوتوں کے ساتھ ٹکرائے۔دنیا بھر کے مظلوموں کی حمایت میں آواز بلند کی۔ان کا مقابلہ زمانے کے طاغوتی نظام کے ساتھ تھا۔امام خمینی کے چاہنے والے اپنے رہبر کی آواز پر ظلم و ستم کے سامنے ڈٹے رہے لیکن سرنگوں نہیں ہوئے۔امام خمینی نے کبھی رہنما ہونے کا دعوی نہیں کیا بلکہ دنیا بھر کے مسلمان ان کے طرز عمل سے متاثر ہو کر انہیں امت مسلمہ کا لیڈر سمجھتے تھے۔مسلمانوں کے دلوں میں ان کی محبت موجزن تھی۔ان کی وفات پر ہر شخص غمزدہ اور ہر آنکھ اشکبار تھی۔

انہوں نے کہا دور عصر کی طاغوتی قوتوں کو مقابلہ کرنے کے لیے امام خمینی کی حکمت،تدبر اور جرات کو اپنا طرز زندگی بنانا ہوگا۔افطار عشائیہ میں علامہ احمد اقبال رضوی،علامہ مرزا یوسف حسین،علامہ نثار قلندری،علی عرفان عابدی،علامہ باقر عباس زیدی،علامہ نقی نقوی،علامہ اظہر نقوی،علامہ صادق جعفری،شبر رضا،ضیاء الحسن،علی حسین نقوی،علامہ علی انور،علامہ احسان دانش سمیت دیگر سیاسی و مذہبی جماعتوں کےرہنماوں اور پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا نمائندگان کی بڑی تعداد موجود تھی۔

وحدت نیوز (جیکب آباد) بانی انقلاب اسلامی رہبر کبیر حضرت امام خمینی ؒ کی ۲۹ ویں برسی کے موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندہ کے سیکریٹری جنرل علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا ہے کہ امام خمینی ؒ عصر حاضر کے عظیم انقلابی رہنما تھے آپ نے امت مسلمہ کو خواب غفلت سے بیدار کیا اور عالمی استکباری قوتوں کے انسان دشمن عزائم کو بے نقاب کیا، آپ نے مستضعفین عالم کو مستکبرین کے مقابل لاکھڑا کیا۔ آپ ؒ نے اکیسویں صدی میں قرآن و سنت اور سیرت آل محمد ﷺ پر مبنی اسلامی جمہوریہ کی بنیاد رکھی، جو بہ یک وقت اسلامی اصولوں کی پاسدار بھی ہے اور دنیا کے مسلمہ جمہوری اصولوں پر عمل پیرا بھی۔

انہوں نے کہا کہ امام خمینی ؒ کی نہضت اور تحریک اب عالمی انقلابی تحریک بن چکی ہے جس سے شیاطین عالم خوف زدہ ہیں، آپ ؒ نے امام زمانہ ؑ کے عالمی اسلامی انقلاب کے لئے راہ ہموار کی۔ جس کے باعث دنیا بھر کی طاغوتی قوتیں خوف زدہ ہوگئیں، کیونکہ انہیں اپنا اقتدار باطل زوال پذیر نظر آرہا ہے۔ آپ ؒ نے قرآنی تعلیمات کی روشنی میں مستضعفین عالم کی عالمی حکومت کی نوید دی۔

انہوں نے پوری قوم سے اپیل کی کہ رہبر کبیر فقیہ مجاہدحضرت امام خمینیؒ کی برسی کی مناسبت سے خصوصی تقریبات منعقد کی جائیں ، جس میں امام راحل ؒ کی شخصیت افکار و تعلیمات سے نئی نسل کو آگاہ کیا جائے۔ یہ بات شک و شبہ سے بالاتر ہے کہ فکر خمینی ؒ ہمارے لئے رہنما اور ہمارے تمام مسائل کا حل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ۳ جون کو مجلس وحدت مسلمین کے زیراہتمام( انقلاب اسلامی و افکار امام خمینی ؒ کانفرنس) منعقد ہوگی، جس میں مختلف مکاتب فکر کے رہنما اوراہل سنت علماء خطاب کریں گے۔

وحدت نیوز (گڑہی یاسین) مجلس وحدت مسلمین ضلع شکارپور کے زیراہتمام ضلعی پولٹیکل کونسل اور معززین کا اہم اجلاس پیر چنڈام میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم صوبہ سندہ کے سیکریٹری جنرل علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ سندہ کے منتخب حلقوں سے مجلس وحدت مسلمین اپنے امیدوار کھڑے کر رہی ہے۔ دھشت گردی اور کرپشن ملک کے دو بڑے مسائل ہیں جن کے خلاف ہم نے ہمیشہ جدوجہد کی ہے۔ مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کا پانچ سالہ دور حکومت ملکی تاریخ کا سیاہ دور رہا، جس میں عوام غیر محفوظ رہے ،ملکی دولت کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا گیا، اور امریکی سامراج کی مداخلت رہی۔ ہم کرپشن اور دھشت گردی سے پاک ، پاکستان بنانا چاہتے ہیں۔

صحافیوں کی جانب سے ایم ایم اے کی حمایت کے سوال پرجواب دیتے ہوئے علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن نے کبھی بھی شیعہ نسل کشی کی کھل کر مذمت نہیں کی، ڈیرہ اسماعیل خان جو کہ مولانا کا حلقہ انتخاب اور گھر ہے میں مسلسل شیعیان علی ؑ کا قتل عام ہورہا ہے مگر وہ کبھی اس قتل عام کے خلاف نہیں بولے اور نہ ہی وہ شہداء کے گھر تعزیت کے لئے گئے۔ ایم ایم اے کو اسلام کی بجائے اسلام آباد کی فکر ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شیعہ علماء کونسل نے اپنے امیدواروں کی حمایت کے لئے رابطہ کیا تو پارٹی مشاورت کے بعد جواب دیا جائے گا، ہم باکردار اور صالح افراد کو پارلیمنٹ میں دیکھنا چاہتے ہیں، ایس یو سی کے ساتھ اشتراک عمل کی صورت نکل سکتی ہے۔ملت کی نمائندہ جماعت کی حیثیت سے باکردارصالح شیعہ امیدواروں کو سپورٹ کریں گے۔

تقریب سے مجلس وحدت مسلمین ضلع شکارپور کے سیکریٹری جنرل برادر فدا عباس لاڑک و دیگر نے خطاب کیا۔ تقریب میں ضلعی صدر شیعہ علماء کونسل برادر احمد علی برڑو، مجلس وحدت کے ضلعی رہنما محبوب علی ابڑو،شاکر حسین، مستنصر مہدی، دریا خان جتوئی و دیگر شریک ہوئے۔

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ آغا علی رضوی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ صوبائی حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے اور ذاتیات پر حملہ کر کے گلگت بلتستان کے ظالمانہ آرڈر کے خلاف جاری تحریک کا رخ تبدیل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جی بی آرڈر کے خلاف تحریک کو سبوتاژ کرنے کے لیے حکومت علاقائی ، مسلکی اور دیگر تعصبات کو ہوا دینا چاہتی ہے۔ آج داریل تانگیر سے بلتستان تک کے عوام نے جب حکومت کے نام نہاد اصلاحاتی پیکیج کو مسترد کر دیا اور صوبائی حکومت کے چہرہ کو بے نقاب کیا تو انکی چیخیں نکل رہی ہیں۔ عوام اب باشعور ہوچکی ہے کسی دھوکے اور سازش کا شکار نہیں ہوسکتی ۔

انہوں نے مزید کہاکہ لیگی حکمران چاہتے ہیں کہ گلگت بلتستان میں سانحہ ماڈل ٹاون کا تکرار ہو لیکن عوام نے صبر کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی تمام تر توانائیوںکو نام نہاد پیکیج کو زمین بوس کرنے اور اتحاد و اتفاق کی پرچار کے لیے صرف کریں، وفاقی سرپرستی کے خاتمے کے بعد حکمرانوں کی عقل ٹھکانے آجائیں گے۔ یہ پہلی بار نہیں بلکہ اس سے قبل بھی لیگی حکمران داعش کو بلواکر عوامی احتجاجات پر حملے کروانے کی دھمکیاں ریاستی اداروں کے سربراہان کے سامنے دے چکے ہیں۔ وفاق میں انکے قائد کے ممبی حملے کے متعلق بیان سے ہی واضح ہوگیا ہے کہ وہ ملک اور ریاستی کے کتنے خیرخواہ ہیں۔

 آغا علی رضوی نے کہا کہ گلگت اور بلتستان کو الگ کرنے کی کوشش بہت عرصے سے جار ی ہے لیکن ہر دفعہ عوام نے شعور کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک اکائی بن کر ثابت کیا  ہے کہ اب لڑاو اور حکومت کرو والی پالیسی نہیں چلنے نہیں دیں گے۔ جی بی آرڈر 2018ء صوبائی حکومت کی عوام دشمن پالیسی اور وفاق کی کاسہ لیسی کا منہ بولتا  ثبوت ہے۔حکمران کاسہ لیسی میں حد سے گزر چکے ہیں اور یہ بھی بول چکے ہیں وہ کس طرح کی شرمناک دھندوں میں ملوث رہ چکے ہیں۔

وحدت نیوز(گلگت)  مشیر اطلاعات اور وزیر تعمیرات اپنے گریبان میں جھانکیں تو انہیں معلوم ہوگا کہ وہ کس کھیت کے مولی ہیں۔مولانا سلطان رئیس اور آغا علی رضوی کے خلاف غم و غصہ سے نواز لیگ کی بوکھلاہٹ ظاہر ہورہی ہے۔سلطان رئیس اور علی رضوی گلگت بلتستان کے عوام کے حقیقی ترجمان ہیںجنہوں نے اپنی قائدانہ صلاحیتوںسے خطے کے عوام کے دل جیت لئے ہیں۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ ہم گلگت بلتستان کے عوامی کے حقوق کی جنگ لڑ رہے ہیں اورآرڈر 2018 گلگت بلتستان کے عوامی امنگوں کے خلاف ہے جسے ہرگز قبول نہیں کرینگے۔نااہل وزیر اعظم کے نااہل کارندے اپنی رسوائی کو چھپانے کیلئے معزز علمائے کرام کے خلاف ہرزہ سرائی پر اتر آئے ہیں۔نواز لیگ جی بی کے عوام کو آئینی حقوق دلوانے میں ناکام ہوکر آرڈر 2018 کو نافذ کرنا چاہتی ہے جو ان کے بادشانہ مزاج کا مظہر ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ اور اس کی ٹیم عوام کے احتجاج کا سامنا کرنے کی سکت نہیں رکھتی اور علاقے کے عوام کو تقسیم کرنے کیلئے دھونس دھمکیوں اور مذہبی تعصب کا سہارا لے رہی ہے ۔گلگت بلتستان کا امن یہاں کے علماء اور عوامی ایکشن کمیٹی کی کاوشوں سے بحال ہوا ہے، حفیظ الرحمن کے اقتدار سے امن کو مشروط کرنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں۔گلگت والوں کا دماغ پھراکر کر بلتستان کو ہلادینے کی بات کرنے والے صاف صاف بتادیں کہ وہ کیا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین نواز لیگ کی ہرسازش کا ڈٹ کرمقابلہ کرے گی اور گلگت بلتستان کے عوام کو جغرافیہ اور فرقے کی بنیاد پر تقسیم کرنے کی ہر سازش کو ناکام بنادے گی۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے زیر اہتمام سالانہ دعوت افطاروفکر امام خمینی ؒسیمینار بسلسلہ 29ویں برسی امام راحل خمینی بت شکن کا انعقاد آئی آر سی لان میں کیا گیا ،اس تقریب میں مختلف سیاسی وسماجی شخصیات ، پرنٹ والیکٹرونک میڈیا کے نمائندگان، قومی وملی تنظیمات کے رہنمائوں سمیت مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام نے شرکت کی، سیمینار سے خصوصی خطاب مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے کیا انہوں نے عالمی استعمار کے خلاف امام خمینی ؒ کی عالمی تحریک کے مختلف پہلوئوں پر تفصیلی روشنی ڈالی اور سرزمین مقدس فلسطین پر غاصب اسرائیل کے ناجائز قبضے کے خلاف امام خمینی ؒ کے حکم پر عالمی یوم القدس کی اہمیت پر بھی گفتگو کی، اس سے قبل دعوت افطار اور سیمینار کے شرکاءنے بزرگ عالم دین ، مجلس علمائے شیعہ پاکستان کے مرکزی صدر اور امام جمعہ جامع مسجد نور ایمان علامہ مرزایوسف کی زیر اقتداءنماز مغربین باجماعت اداکی، ایم ڈبلیوایم کے زیر اہتمام اس دعوت افطار وفکر امام خمینی ؒ سیمینار میں ہیت آئمہ مساجد وعلمائے امامیہ پاکستان کے وفدنے مرکزی جنرل سیکریٹری علامہ سید باقرعباس زیدی کی سربراہی میں شرکت کی جبکہ اس موقع پر امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن ، پیام ولایت فائونڈیشن، امامیہ آرگنائزیشن، خیر العمل ٹرسٹ کے وفود سمیت جعفریہ الائنس کے رہنماشبر رضا، مرکزی تنظیم عزاداری کے رہنما ایس ایم نقی، شہید فائونڈیشن کے مرکزی رہنما سید عابد رضوی ،،فرزند علامہ سید عرفان حیدر عابدی مرحوم علامہ سید محمد علی عابدی، سابق رکن سندھ اسمبلی سیدمیجر (ر) سید قمرعباس رضوی،، عالم اہل سنت علامہ عبد اللہ جونا گڑھی،علامہ سجاد شبیر رضوی، ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی،مرکزی سیکریٹری امور تنظیم سازی سید مہدی عابدی ، صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ مقصودڈومکی،صوبائی پولیٹیکل سیکریٹری علی حسین نقوی،ڈویژنل سیکریٹری جنرل علامہ محمد صادق جعفری، علامہ اظہر حسین نقوی سمیت دیگر معزز شخصیات نے بھرپور شرکت کی ، بعد از ختم سیمینارشرکاءکیلئے عشائیے کا بھی اہتمام تھا۔

وحدت نیوز (اسلام آباد)  مجلس وحدت مسلمین ضلع راولپنڈی،اسلام آباد اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن راولپنڈی ڈویثرن کی یوم القدس کے حوالے سے مشترکہ میٹنگ آج ایم ڈبلیوایم کے مرکزی سیکرٹریٹ میںمنعقد کی گئی ۔جس میں القدس کمیٹی کا قیام عمل میں لایاگیا اور وفا عباس نقوی کو کوارڈینیٹر منتخب کیا گیا ۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ریلی اپنے پرانے روٹ امام بارگاہ جی سکس ٹو سے نکالی جائے گی ۔میٹنگ میں ایم ڈبلیو ایم ضلع راولپنڈی کے سیکرٹری جنرل علامہ اکبر کاظمی اور اسلام آباد ضلع کے سیکرٹری جنرل علامہ حسین شیرازی نے شرکت کی ۔آئی ایس او کے ڈوثرنل صدر برادر طاہر بھی اس موقع پہ موجود تھے۔

وحدت نیوز (کراچی )  مجلس وحدت مسلمین کی مرکزی سیاسی کونسل نے ایم ڈبلیوایم سندھ کے پولیٹیکل سیکریٹری اور معروف سماجی شخصیت سید علی حسین نقوی کو آمدہ قومی انتخابات میں حلقہ PS-89ضلع ملیر کراچی سے اپنا امیدوار نامزد کردیاہے، مرکزی پولیٹیکل سیل سے جاری ایک بیان میں کہاگیاہے کہ وطن عزیز میں موثر سیاسی تبدیلی کرپشن اور لوٹ مار سے پاک معاشرے کی تشکیل کیلئے ایم ڈبلیوایم جنرل الیکشن  2018 میں ملک کے مختلف حلقوں سے قومی وصوبائی اسمبلی کی نشستوں پر قابل، باکردار اور اہل امیدواروں کو میدان میں اتارے گی، تاحال کسی جماعت کے انتخابی اتحاد یا سیٹ ایڈجسٹمنٹ کا حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا ، ملک کی مختلف بڑی سیاسی ومذہبی جماعتوں سے بات چیت فیصلہ کن مراحل میں ہے ، انشاءاللہ جلد مرکزی قیادت آمدہ انتخابی پالیسی کا اعلان کرے گی۔

Page 4 of 859

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree