The Latest

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین ضلع غربی حیدری یونٹ کراچی کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل محمد ظل حسنین ابن خادم حسین حرکت قلب بندہوجانے کے باعث اچانک انتقال کرگئے، ایم ڈبلیوایم کے انتہائی فعال اور محنتی رکن محمد ظل حسنین کی اچانک رحلت پر مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے سیکریٹری جنرل علامہ محمد صادق جعفری، ضلعی غربی کے سیکریٹری جنرل کلیم حیدر اور دیگر رہنماؤں نے دلی رنج وغم اور افسوس کا اظہا رکیاہے۔

رہنماؤں نے کہاکہ محمد ظل حسنین مرحوم انتہائی جفاکش ، ملنساراور فعال تنظیمی ساتھی تھے، ہمیشہ دکھی انسانیت کی خدمت میں پیش پیش رہتے تھے، ان کی ناگہانی وفات پر ان کے تمام والدین سمیت تمام پسماندگان کے غم میں برابرکے شریک ہیں، خدا وند متعال سے دعا گو ہیںکہ وہ مرحوم کوجوارآئمہ معصومین ؑ میں محشور فرمائے اور تمام لواحقین کو صبر جمیل عنایت فرمائے ۔

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل آغا علی رضوی اور پاکستان تحریک انصاف بلتستان ڈویژن کے صدر وزیرولایت علی کی آج اہم ملاقات وزیر ہاؤس سکردو میں ہوئی۔ اس ملاقات میں پی ٹی آئی کے سینئر رہنما یوسف نمبردار اور ایم ڈبلیو ایم کے سینئیر رہنما کاظم میثم موجود تھے۔

ملاقات میں گلگت بلتستان کی سیاسی و علاقائی صورتحال پر گفت و شنید ہوئی۔ دونوں جماعتوں کے رہنماوں نے بروقت اور شفاف الیکشن کو ناگزیر قرار دیا۔ اس موقع پر سیاسی جدوجہد کے ذریعے گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کے لیے خطے کی سیاسی و مذہبی جماعتوں کو کردار ادا کرنا وقت کی ضرورت قرار دیا۔

 اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نے آغا علی رضوی کی عوامی حقوق کے لیے جاری جدوجہد کو سراہا اور اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ تحریک انصاف گلگت بلتستان کے عوامی حقوق کے حصول کے لیے جدوجہد جاری رکھے گی۔ میرٹ کی بالادستی اور کرپشن کا خاتمہ ہماری جماعت کی بنیادی ترجیحات میں سے ہیں۔

 آغا علی رضوی نے کہا کہ گلگت بلتستان کے  حقوق کے حصول اور خطے کی تعمیر و ترقی کے لیے تمام سیاسی جماعتوں کو کردار ادا کرنا ہوگا۔ گلگت بلتستان کے عوام میں روز افزوں بڑھتا ہوا احساس محرومی کا کسی طور خطہ متحمل نہیں ہے۔تمام سٹیک ہولڈر کو عوامی حقوق خطے کی تعمیر و ترقی کے لیے بھرپور کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ ملاقات میں خطے کی سیاسی صورتحال پر بھی سیر حاصل گفتگو ہوئی۔

وحدت نیوز (لاہور) بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کے یوم وفات کے موقع پر رکن پنجاب اسمبلی و مرکزی سیکرٹری جنرل ایم ڈبلیوایم شعبہ خواتین سیدہ زھرا نقوی نے اپنے پیغام میں کہا محمد علی جناح جیسے عظیم سیاستدان ، ممتاز قانون دان اور فقید المثال رہنما نے منتشر قوم کو ایک پرچم تلے اکھٹا کرکے وہ تاریخی کارنامہ انجام دیا جس کی مثال نہیں ملتی۔

 انھوں نے کہا کہ ایک ایسی بکھری ہوئ شکستہ قوم کوجو مدتوں سے اپنا الگ تشخص کھو چکی تھی یکجا کرنا آسان کام نہ تھا لیکن قائداعظم محمد علی جناح کی بابصیرت قیادت نے ناممکن کو ممکن کر دکھایا۔ ان کا کہنا تھا کہ بانی پاکستان مخلص، انتھک کام کرنے والے تھے، بظاہر فولادی مگر درد مند دل رکھنے والے ، قول کے سچے، بات کے پکے اور اصولوں کے پابند تھے ان کا دل برصغیر کےمسلمانوں کے ساتھ دھڑکتا تھا۔

 سیدہ زھرا نقوی کا مزید کہنا تھا کہ قائد اعظم ملک پاکستان کو ایک آزاد فلاحی و اسلامی مملکت بنانا چاہتے تھے ایک ایسی خود مختار ریاست جسکے اختیارات میں سامراجی قوتیں مداخلت نہ کریں۔ سیدہ زھرا نقوی نے کہا کہ ہم اپنے عظیم رھبر و رہنما بانی پاکستان محمد علی جناح کی روح سے تجدید عہد کرتے ہیں کہ پاکستان کی سلامتی و خود مختاری اور اسکے نظریاتی تحفظ کی خاطر تا دم مرگ جدوجہد کرتے رہیں گے اور اپنے عظیم قائد کے نقش قدم پر چلتے ہوۓ کبھی کسی سامراجی و طاغوتی طاقت کے آگے نہیں جھکیں گے ۔

وحدت نیوز(لاہور)ناصر ملت علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے حکم پر قرآن حکیم کی توہین کے خلاف مجلس وحدت مسلمین سینٹرل لاہور کا بھرپور احتجاج۔ سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پنجاب علامہ عبدالخالق اسدی نے خصوصی شرکت اور خطاب کیا ۔

انہوں نے کہا کہ قرآن مجید کی توہین کے باعث محبان اہل بیت مقیم پاکستان کے مذہبی جذبات شدید مجروح ہوئے ہیں ۔ انسانیت کی فلاح کا دعویٰ کرنے والے فرانس کے دعوے جھوٹے اور کھوکھلے ہیں یہ انسانیت کے جزبات تو مجروح کر سکتے ہیں البتہ انسانیت کی فلاح نہیں کر سکتے ۔

علامہ اسدی نے کہاکہ حکومت وقت سے اپیل کرتے ہیں کہ فرانس کے سفیر کو بلا کر اسکی سرزنش کی جائے اور بتایا جائے کہ کبھی مسلمانوں نے تو کسی دوسرے مزہب کی مقدسات کی توہین نہیں کی تو یہ نام نہاد لبرل حکومتیں ہمیشہ خاتم النبیین پیغمبر خدا حضرت محمد مصطفی صل اللہ علیہ و آلہ وسلم اور آپ ص پر نازل کی گئی الہی کتاب قرآن حکیم کی ہی توہین کیوں کرتے ہیں کیوں دنیا میں بسنے والے سوا عرب مسلمانوں کی توہین برداشت کی جاتی ہے ۔ ان صیہونی حکومتوں کی خاموشی اس بات کی دلیل ہے کہ وہ اس قبیح فعل پر راضی ہیں اور مملکت خداداد پاکستان میں بسنے والے 18 کروڑ مسلمان فرانس کی حکومت کے اس عمل پر سراپا احتجاج ہیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)شیعہ وحدت کونسل کے زیر اہتمام"حرمت رسول ص و اتحاد امت"کے عنوان سے ملک کے مختلف شہروں میں پرامن احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔جن میں مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والی شخصیات شریک ہوئیں۔شرکا نے مختلف بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر عالم استعمار اور ملک دشمن سازشی عناصر کے خلاف نعرے درج تھے۔مظاہروں کا مقصد امت مسلمہ کے خلاف دشمنانِ اسلام کے مذموم عزائم کا پردہ چاک کر کے مسلمانوں کو سازشوں سے آگاہ کرنا تھا۔اسلام آباد میں مظاہرے کا آغاز مرکزی امام بارگاہ اثنا عشری جی سکس ٹو سے ہوا جس میں کارکنوں کی بڑی تعداد شریک تھی۔

احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے علامہ ضیغم عباس حسینی نے اتحاد بین المسلمین اور رواداری کے فروغ کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہاکہ مسلمانوں کو اپنی بقا اور قومی سالمیت کے لیے اختلافات بھلا کر اتحاد واخوت کا راستہ اختیار کرنا ہو گا۔ دشمنان اسلام کے پاس امت مسلمہ کی تباہی کا سب سے موثر ہتھیار "نفاق بین المسلمین" ہے.مذہب کا لبادہ اوڑھ کر جو بھی امت مسلمہ میں انتشار پھیلانے کی بات کرتا ہے وہ یہود و ہنود کاسہولت کار اور ملک و قوم کی سلامتی کا دشمن ہے۔تمام مکاتب فکر کو ایسے عناصر سے لاتعلقی کا کھلم کھلا اظہار کرنا ہو گا۔

خطیب جامع مسجد علامہ اختر عباس نے کہا کہ مسلمانوں کے درمیان بڑھتی ہوئی ناچاکی نے اسلام دشمنوں کے حوصلے بلند کر رکھے ہیں۔آج عالم استکبار اس قدر بے لگام ہو گیا کہ عالم اسلام کی مقدس ترین ہستی خاتم النبیین حضرت محمد صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے گستاخانہ خاکوں کے ذریعے اور ہماری مقدس ترین کتاب قران مجید کو نذر آتش کر کے ہماری غیرت ایمانی کا مذاق اڑایا جا رہا ہے۔عالم اسلام کی بے بصیرتی اور دشمن ناشناسی اس نہج پر پہنچ چکی ہے کہ مسلمان اپنے اصل دشمن کو فراموش کر کے دین اسلام کےحقیقی پیروکاروں اور اپنے ہی بھائیوں کے خلاف صف آرا ہیں۔انہوں نے کہا اگر عالم اسلام نبی کریم ص کی ذات مبارکہ پر کسی قسم کا کوئی سمجھوتہ کیے بغیر پہلی بار کی جانے والی ناپاک جسارت پر متعلقہ ریاست سے تجارتی و سفارتی روابط ہمیشہ کے لیے ختم کر دیتا تو دوبارہ کسی کو یہ توہین کرنے کی جرات نہ ہوتی سید ظہیر عباس نقوی نے کہا کہ ہماری کمزوریاں دشمن کا مضبوط ہتھیار بنی ہوئی ہیں۔دشمن ہمیں فروعی اختلافات میں الجھا کر حقیقی اسلام سے دور کر دے گا۔

انہوں نے کہا کہ کسی کے مذہبی مقدسات کی توہین کسی بھی مسلک میں قطعاً جائز نہیں ہے۔ جو عناصر توہین یا تکفیر کو عقیدے کا جز سمجھتے ہیں وہ یہود ونصاریٰ کے تنخواہ دار ہیں یا پھرایسے نا سمجھ دوست ہیں جوگہری کھائی کی پرواہ کیے بغیر اس ٹہنی کو کاٹنے میں مگن ہیں جس ہر وہ خود بیٹھے ہوئے ہیں۔ہمیں اس ہلاکت سے بچنا ہو گا۔باہمی احترام اور مذہبی رواداری کو زندگی کا حصہ بنا کر قومی سلامتی کی ضمانت لی جا سکتی ہے۔مقررین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ مسلمانوں کی دل آزاری کے خلاف فرانس اور سویڈن سے سرکاری سطح پر احتجاج کریں اور ملک میں مذہب کے نام پر ملت تشیع کے خلاف منافرت پھیلانے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے

وحدت نیوز(لاہور)مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل اور رکن پنجاب اسمبلی محترمہ سیدہ زھرا نقوی نے گزشتہ شب موٹروے پر خاتون کے ساتھ ہونے والی مبینہ ذیادتی پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوے کہا کہ ملک میں تسلسل کے ساتھ جنسی زیادتی کے ہولناک واقعات کا رونما ہونا قانون نافذ کرنے والے اداروں کی غفلت کا نتیجہ ہے۔

 انھوں نے کہا کہ درندہ صفت وحشی مجرموں کو جب تک اسلام و شریعت کے مطابق سزائیں نہیں دی جائیں گی معاشرے میں یہ درندگی بڑھتی چلی جاۓ گی۔ انھوں نے کہا کہ بچوں کے سامنے خاتون کی عصمت دری کا واقعہ انتہائی وحشت ناک ہے جس پر مجرموں کے خلاف سخت کاروائی کے بجاے خاتون کے اکیلے سفر کرنے پر بے جا سوال اٹھاے جا رہے ہیں۔

 انھوں نے کہا ملک میں امن و امان ، عوام کا تحفظ اور فوری انصاف کو یقینی بنانا حکومت کی اولین ذمہ داری ہے، ان کا مزید کہنا تھا کہ ریاست مدینہ کے قیام کے لیے مدینہ کی طرز کا نظام عدل و انصاف قائم کرنا ہی معاشرے میں بڑھتی ہوئی برائیوں کا سد باب کر سکتی ہے ۔رکن پنجاب اسمبلی سیدہ زھرا نقوی نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا کہ مجرموں کو فوری طور پر کیفر کردار تک پہنچایا جائے اور اس قسم کے واقعات کی روک تھام کے لیے مضبوط اقدامات کیے جائیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے قائد اعظم محمد علی جناح کی 72ویں برسی کے موقعہ پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ قائد اعظم کے اصولوں سے انحراف نے ملک کو تکفیریت اور دہشت گردی کے چنگل میں پھنسا دیا۔ قائد اعظم کی جدوجہد بیرونی ڈکٹیشن سے پاک ایک ایسی عظیم اور خود مختار ریاست کے لیے تھی جہاں ریاست کا کسی فرد کے مذہب سے کوئی سروکار نہیں، ریاست میں بسنے والا ہر فرد یکساں مذہبی آزادی کاحق رکھتا ہے۔طاقت کے زور پر دوسروں کے عقائد یا مذہب پر حملہ کرنا قائد کے فرمودات کی نفی ہے۔یہی عناصر قائد کے پاکستان کو شدت پسند ریاست میں بدلنے کے لیے بے تاب ہیں ۔جن طاقتوں نے قیام پاکستان کی مخالفت کی آج انہی کے پیروکار مستحکم و خوشحال پاکستان کی راہ میں روڑے اٹکا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عظیم قائد کے رہنما اصولوں پرکاربند رہے بغیر ایک عظیم فلاحی ریاست کی تشکیل ممکن نہیں۔ قائد اعظم کے حقیقی پاکستان کی شناخت ایک پُرامن اور تفرقہ بازی سے پاک ریاست سے ہو گی۔ تمام طبقات کو وطن عزیز کی خوشحالی میں اپنے حصے کا کردار ادا کرکے اپنی حب الوطنی کو ثابت کرنا ہو گا۔آج کا دن اس عہد کا تقاضہ کرتا پے کہ محض یوم پیدائش یا برسی کی تقریبات منانے سے حق ادا نہیں ہوتا ۔ملک سے کرپشن دہشت گردی،  تکفیریت، تعصبات کے خاتمے اور یکساں مذہبی آزادی، قومی ترقی و استحکام اور باہمی احترام کے لیے قائد اعظم محمد علی جناح کے زریں اصولوں میں خود کو ڈھالنا ہو گا۔

وحدت نیوز(کوئٹہ)مجلس وحدت مسلمین پاکستان مرکزی ترجمان مقصود علی ڈومکی نے کوئٹہ میں حضرت امام زین العابدین علیہ السلام کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سید ساجدین حضرت امام زین العابدین علیہ السلام کی حیات طیبہ پوری انسانیت کے لئے مشعل راہ ہے آپ نے واقعہ کربلا کے بعد یزیدی سلطنت کے مکروہ چہرے کو بے نقاب کیا اور کوفہ اور شام کے بازار میں اور دربار میں ظالم اور جابر حکمرانوں کے سامنے کلمہ حق بلند کیا آپ نے یزید کے دربار میں اس ظالم حکمران کو رسوا کیا اور کربلا اور امام حسین عالی مقام علیہ السلام کا پیغام پوری دنیا تک پہنچایا

علامہ ڈومکی نے کہاکہ امام علی ابن الحسین زین العابدین ع نے دعا اور مناجات کے ذریعے اللہ رب العزت سے عشق اور محبت کا درس دیا اور بلند و بالا اسلامی معارف کو دعا کی صورت میں پیش کیا بنو امیہ کے دور آمریت میں سید سجاد امام زین العابدین علیہ السلام نے اسلام کی تبلیغ اور ترویج کے لئے لیے کیے گٸے اقدامات ہم سب کے لئے مشعل راہ ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ صحیفہ سجادیہ معارف الہی اور مناجات کا بے مثل خزانہ ہے اسی لہذا اس کو زبور ال محمد کہا جاتا ہے ہمیں چاہیے کہ سید سجاد کی سیرت طیبہ کا مطالعہ کریں اور اپنی زندگی میں امام سجاد علیہ السلام کے نقش سیرت کو عملی کریں اس موقع پر کانفرنس سے شیعہ سنی علماء کرام اور شخصیات نے خطاب کیا۔

وحدت نیوز(ماتلی)ملک دشمن کالعدم دہشت گرد تنظیم کے دباؤاور بلیک میلنگ کے بعد بدین پولیس نے وطن دوست رہنما ، اتحاد بین المسلمین کے داعی او ر مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل یعقوب حسینی کے خلاف توہین صحابہ کے الزام کا جھوٹا مقدمہ درج کردیا ہے ۔

ایم ڈبلیوایم کے رہنما محمد یعقوب حسینی کے خلاف کالعدم دہشت گرد جماعت کے مقامی کارندے مولوی محمد ہاشم ولد عبد المجید خان کی مدعت میں دفعہ 295-Aاور298-Aکے تحت تھانہ ماتلی میں مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق کالعدم جماعت اور مقامی پولیس ڈی ایس پی خالد رستمانی کی بھر پور رکاوٹوں کے باوجود نیو دمبالو میں مرکزی جلوس عاشورا کی قیادت کرنے پر کالعدم جماعت اورپولیس یعقوب حسینی کے خلاف سرگرم عمل تھیں،پہلے جلوس عاشورا کو بنیاد بنا کر بے بنیاد ایف آئی آر کاٹی گئی اب توہین صحابہ کا جھوٹا الزام لگا کر ایک اور بےبنیاد مقدمہ درج کرلیا گیا ہے ۔

یعقوب حسینی پر کالعدم جماعت اور مقامی پولیس کے گٹھ جوڑ کے سبب قائم جھوٹے مقدمات پر مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ سید باقرعباس زیدی اور صوبائی پولیٹیکل سیکریٹری سید علی حسین نقوی نے شدید غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے سندھ حکومت خصوصاً وزیر اعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ ، آئی سندھ اور ڈی جی رینجرز سندھ کے مطالبہ کیا کہ ماتلی کے امن وتباہ ہونے سے بچایا جائےاور ایم ڈبلیوایم کے رہنما یعقوب حسینی کے خلاف قائم جھوٹے مقدمات فوری ختم کرکے کالعدم جماعتوں کے خلاف فوری ٹھوس کاروائی عمل میں لائی جائے۔

وحدت نیوز(سرگودھا) شیعہ وحدت کونسل کے زیر انتظام سرگودھا کی قدیمی درسگاہ دارالعلوم محمدیہ میں ملک میں بڑھتی ہوئی فرقہ وارانہ منافرت، شیعہ مومنین کے خلاف مقدمات کے بے جا اندراج اور موجودہ ملکی و عالمی صورتحال کے پیش نظر ضلع سرگودھا وخوشاب کے علمائے امامیہ، آئمہ جمعہ والجماعت، ذاکرین،  بانیانِ مجالس و بانیانِ جلوس ہائے عزا،  انجمن ہائے عزاداری ، شیعہ قومی و ملی تنظیموں اور جماعتوں کا نمائندہ مشاورتی اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں اتفاق رائے سے درج ذیل اعلامیہ جاری کیا گیا۔

1.    یہ اجلاس فرانسوی جریدے چارلی ہیبڈو کی طرف سے رحمت للعالمین حضرت محمد مصطفی صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے خلاف توہین آمیز مواد شائع کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا اور مذکورہ جریدے کے اس نفرت پر مبنی اقدام کو بین الاقوامی قوانین و ضوابط اور آزادی اظہار رائے کے مسلمہ عالمی اصولوں کی خلاف ورزی تصور کرتا ہے۔

2.    یہ اجلاس فرانسوی جریدے کے پیغمبر اسلام کے بارے توہین آمیز رویے پر مغربی حکمرانوں کی طرف سے خاموشی کی نیز شدید الفاظ میں مذمت کرتا اور اسے ان کی اسلام کی نسبت دوغلی اور منافقانہ روش پر حمل کرتا ہے۔

3.    یہ اجلاس پاکستان میں پیدا کی جانے والی فرقہ وارانہ فضا کی بھرپور مذمت کرتا اور اسے اسلام و پاکستان دشمنوں کی پاکستان کی سالمیت اور خودمختاری اور استحکام کے خلاف سازش قرار دیتا ہے۔ اور ذمہ دار طبقات سے یہ مطالبہ کرتا ہے کہ وہ شدت پسند عناصر پر گرفت کریں اور ملک پاکستان میں امن بھائی چارے اور مذہبی رواداری کے ماحول کی حفاظت کے لیے اپنا بنیادی کردار ادا کریں۔

4.    یہ اجلاس پاکستان میں بسنے والے ہر دین و مذہب خصوصا مذہب شیعہ کے تمام فکری و مادی حقوق کی ضمانت کا مطالبہ کرتا اور یہ قرار دیتا ہے کہ مذہب شیعہ اپنے بنیادی عقائد پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گا اور مسلمہ شیعہ عقائد کا ہر فورم پر بھرپور دفاع کیا جائے اور اپنے عقائد کی تبلیغ و ترویج کا آئینی و قانونی حق نیز استعمال کیا جائے گا اور اس راہ میں کسی قسم کی رکاوٹ کو شرپسندی تصور کیا جائے گا۔

5.    یہ اجلاس یہ اعلان کرتا ہے کہ شیعہ مراجع تقلید کے فتاوی کی روشنی میں مذہب شیعہ دیگر تمام ادیان مذاہب اور مسالک کے مسلمہ مقدسات کی توہین کر گناہ سمجھتا اور ایسے اقدامات روکنے میں اپنا ہرممکن کردار ادا کرے گا۔

6.    یہ اجلاس دیگر مسالک کی جانب سے کسی خاص مسلک پر اپنے عقائد مسلط کرنے کی ہر کوشش کی شدید مذمت کرتا اور اسے فکری دہشت گردی سے تشبیہ دیتا ہے۔

7.    یہ اجلاس ملک بھر میں مومنین کے خلاف درج کئے گئے مقدمات کی مذمت کرتا اور انہیں فی الفور ختم کرنے اور گرفتار شدگان کو رہا کرنے کا مطالبہ کرتا ہےکیونکہ یہ اجلاس مذہبی عبادات کی انجام دہی کے دوران مقدمات کو فرقہ وارانہ آگ کو مزید بڑھوایا دینے کے مترادف سمجھتا ہے اور یہ قرار دیتا ہے کہ چونکہ آئین پاکستان اور قوانین پاکستان ہر دین و مذہب و مسلک کے پیروکاروں کو عقیدے اور عمل کی مکمل آزادی دیتا ہے لہذا اپنے عقیدے کے مطابق مذہبی عبادات کی انجام دہی پر مقدمات کی اندراج عقیدے و عمل کی آئینی آزادی پر غیر قانونی قدغن ہے۔

8.    یہ اجلاس ان چند ایام میں مذہب شیعہ کے خلاف ہونے والی نفرت آمیز تقاریراور مذہب شیعہ کی سرعام تکفیرکی شدید مذمت کرتا اور حکومت سے ان شرپسندوں پر گرفت کا مطالبہ کرتا ہے۔

9.    یہ اجلاس حالیہ ایام میں عصمت و طہارت کے مصداق  اہل بیتِ رسول (اللہ کا درود و سلام ہو ان پر) اور عدل و انصاف کے پیکر  اصحابِ رسول (اللہ راضی ہو ان سے) کی توہین اور دشمنانِ اہل بیت کی تعریف و تمجید کی شدید مذمت کرتا اور ایک اسلامی ملک میں پیغمبر گرامی اسلام کے خاندانِ عصمت و طہارت اور نبی مکرم اسلام  کے یارانِ عادل و باوفا  کے خلاف ہرزہ سرائی اور دشمنانِ خاندان رسول کی قصیدہ گوئی پر حکومت کے فوری نوٹس کا مطالبہ کرتا ہے۔

10.    یہ اجلاس پنجاب اسمبلی میں پیش کردہ تحفظ بنیاد اسلام بل کو متنازعہ اور غیر ضروری قانون سازی قرار دیتا ہے اور یہ سمجھتا ہے کہ ملک پاکستان میں مقدسات اسلام کے تقدس کی حفاظت کے لیے ازقبل قانون سازی موجود ہے لہذا ایسے کسی نئے قانون کی ضرورت نہیں ہے نیز یہ سمجھتا ہے کہ تحفظ اسلام متنازعہ بل ملک میں کتب کی اشاعت کے کاروبار کو شدید متاثر کرے گا جس سے ہزاروں لوگ بے روزگار ہوسکتے اور آزادی رائے اور کتب بینی کی ثقافت شدید متاثر ہوگی۔ نیز یہ سمجھتا ہے کہ یہ بل اسلامی نظریاتی کونسل جیسے آئینی اداروں اور رائج قانونی طریقہ کار سے ہٹ کر پاس کروایا گیا ہے جو اس بل پاس کروانے والوں کی بدنیتی پر دلیل ہے لہذا یہ اجلاس مطالبہ کرتا ہے کہ تح

11.    یہ اجلاس کراچی اور اسلام آباد میں منعقدہ علمائے امامیہ کے اجلاسوں میں پیش کردہ اعلامیہ جات کی مکمل تائید کا اعلان کرتا ہے۔علاوہ ازیں یہ اجلاس ملک بھر سے بزرگ علمائے شیعہ  کے اس بابت بیانات اور اقدامات کی نیز تائید کرتا ہے۔

شیعہ وحدت کونسل کے زیر انتظام ضلع سرگودھا اور ضلع خوشاب کی سطح پر منعقد کئے جانے والے اس اجلاس میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے صوبائی سیکرٹری جنرل جناب علامہ عبدالخالق اسدی نے خصوصی شرکت کی۔ ان کے علاوہ دارالعلوم محمدیہ سرگودھا کے مہتمم اور مجلس علمائے امامیہ کے وائس چیئرمین جناب مولانا ملک نصیر حسین اعوان،  مجلس علمائے امامیہ کے وائس چیئرمین جناب مولانا سرفراز حسینی، مجلس علمائے امامیہ کے جنرل سیکرٹری جناب مولانا ضیغم عباس، ذاکر حسینی، مجلس علمائے امامیہ کے آفس سیکرٹری اور فاضلِ قم جناب حجت الاسلام عیسی امینی،  جامعہ ابو طالب خوشاب کے مہتمم جناب مولانا آغا حسین شاہ، جامعہ زینبیہ سرگودھا کے مہتمم جناب مولانا ملازم حسین شاہ، جامعہ مرتضی جوہر آباد کے مہتمم جناب مولانا سبطین حسین علوی، جامعہ معصومہ جوہر آبادکے مہتمم جناب مولانا ملک نذر عباس، امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے ڈویژنل صدر جناب ذوالقرنین حیدر شیرازی،مجلس وحدت مسلمین ضلع سرگودھا  شرقی کے سیکرٹری جنرل جناب سید مقصود بخاری، ماتمی انجمنوں کی طرف سے جناب سید وقار بخاری المعروف کاکے شاہ، جناب سید صفدر حسین شاہ، جناب سید طاہر حسین شاہ، جناب سید باو شاہ، متحدہ آرگنائزیشن سرگودھا کے جناب سید عباس رضا بخاری، القائم آرگنائزیشن سرگودھا کے  جناب شمشاد حیدر بخاری، جناب حسن رضا کرمانی، اسکاوٹ تنظیم کے جناب سید مجاہد حسین ،  ذاکر اہل بیت جناب ملک مرید حسین پدھراڑ، ذاکر اہل بیت جناب ملک اسد عباس  و ضلع سے تعلق رکھنے والے دیگر معزز مہمانان اور شخصیات اور ضلع بھر کی تحصیلوں سے آئمہ جمعہ والجماعت  نے شرکت کی۔

Page 3 of 1053

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree