The Latest

وحدت نیوز(لاہور)محترمہ حنا تقوی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور نے ولادت امام حسن مجتبیٰ علیہ السلام کے موقع پر گلشن کالونی، نادر آباد اور علی پارک کے علاقوں میں موجود ضرورت مند گھرانوں میں راشن تقسیم کیا۔

محترمہ حنا تقوی نے فرمان امام حسن علیہ السلام بیان کرتے ہوئے کہا کہ نیکی کا مطلب یہ ہے کہ اس سے پہلے ٹال مٹول نہ ہو اور اس کے آخر میں احسان نہ جتایا جائے۔

آپ کا مزید کہنا تھا کہ ماہ رمضان المبارک ہمیں درس دیتا ہے کہ مخلوقِ خداکی تکلیفوں کوکم کیاجائے ان کی پریشانیوں دکھوں اورمصیبتوں کے وقت ان کے کام آیا جائے اللہ تعالیٰ کی مخلوق کیلئے آسانیاں پیداکرنا ہی مقصد دین ہے۔

وحدت نیوزّ(پشاور) مجلس وحدت مسلمین خیبر پختونخوا کے صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ جہانزیب جعفری نے صدائے مظلومین پاراچنار کے رہنماؤں پر ایف آئی ار کے اندراج کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے انتقامی کارروائی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپنے حق کے لیے آواز بلند کرنے کی پاداش میں مقدمات قائم کرنا آمرانہ طرز عمل ہے۔ایک جمہوری معاشرہ ایسے کسی اقدام کی قطعاً اجازت نہیں دیتا۔

انہوں نے کہا کہ ظلم وجبر کے حربوں سے حق سچ کی آواز کو دبایا نہیں جا سکتا۔ پارا چنار انتظامیہ کی غفلت کے باعث شورکی مسجد و امام بارگاہ کی تباہی کا المناک سانحہ رونما ہوا۔اپنی ناہلی چھپانے کے لیے ملت تشیع کو نشانہ بنایا جانا اپنےاختیارات سے تجاوز کی بدترین مثال ہے۔

انہوں نے پاراچنار کے مذہبی رہنماؤں مولانا مزمل حسین، شبیر ساجدی، شفیق طوری، حشمت طوری اور مجاہد طوری کوایف آئی آر میں نامزد کرنے کی مذمت کرتے ہوئے رپورٹ کو فوری طور پر کالعدم قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں ہم خاموش نہیں رہیں گے۔اگر ہمارا مطالبہ نہ مانا گیا تو ذمہ دارن کے خلاف ہر طرح کی قانونی و آئینی چارہ جوئی کی جائے گی۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کی جانب سے امام حسن علیہ السلام کی ولادت باسعادت کے موقع پر افطار ڈنر اور جشن کا انعقاد صوبائی سیکریٹریٹ سولجر بازار میں کیا گیا۔ اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم رہنما علامہ مرزا یوسف حسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امام حسن علیہ السلام کی سیرت ہم سب کے لئے مشعل راہ ہے، امام (ع) کی زندگی کے بہت سے پہلو ایسے ہیں جو تاحال پنہاں ہیں، امام علی (ع) نے اپنے بیٹوں امام حسن (ع) اور امام حسین (ع) کو ظالم کے دشمن اور مظلوم کے مددگار بنے رہنے کی وصیت کی تھی، شہادت امام علی (ع) کے بعد امام حسن علیہ السلام جب منصب امامت پر فائز ہوئے تو امت مسلمہ کے کئی پیچیدہ معاملات آپ کے سامنے تھے، جنہیں آپ نے انتہائی بصیرت اور سمجھداری کے ساتھ حل کیا، امام علی (ع) کی سیرت کے مطابق آپ ظالموں سے جہاد کرتے رہے اور مظلوم کے مددگار بنے رہے، صلح امام حسن (ع) امام کی زندگی کا ایک پہلو ہے جبکہ آپ کی پوری زندگی مسلمانوں کے لئے اسوہ ہے، تاہم بدقسمتی سے امام (ع) کے نقش زندگی تاحال پنہاں ہیں جبکہ صلح کا پہلو بھی ایک تشنہ طلب موضوع ہے۔

علامہ مرزا یوسف حسین نے کہا کہ کورونا وائرس میں صحت عامہ کے متعلق ڈاکٹرز کی ہدایت پر عمل کرنا ضروری ہے۔ علامہ مرزا یوسف نے کہا کہ اشیائے ضروریہ کی بڑھتی قیمتیں لاک ڈاؤن کے باعث محدود آمدنی والے افراد کے لئے دوگنی مشکلات کا باعث بن رہی ہے۔ حکومت مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لئے زبانی جمع خرچ سے بڑھ کر عملی اقدامات بروئے کار لائے۔ اس موقع پر نماز باجماعت ادا کی گئی۔ جشن کی تقریب سے ایم ڈبلیو ایم سندھ کے صوبائی رہنما ناصر حسینی نے بھی خطاب کیا جبکہ شعراء کرام ناصر آغا، نوید حسین رضوی، زوہیب حسن، علی رضا جعفری نے منظوم نذرانہ عقدیت پیش کئے، جشن امام حسن علیہ السلام میں سابق ممبر صوبائی اسمبلی سندھ قمر عباس رضوی، مودت TV کے صادق زیدی، افتخار حسین، دانش عابدی اور اراکین نے شرکت کی۔ آخر میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے مریضوں کی صحت یابی کے لئے خصوصی دعا کی گئی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے یوم غزوہ بدر کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ غزوہ بدر اپنے اندر مسلمانوں کے لیے لاتعداد درس سموئے ہوئے ہیں۔حق و باطل کا یہ معرکہ اس حقیقت کی دلیل ہے کہ فتح و کامیابی بہترین افرادی قوت، جدید ہتھیاروں کی دستیابی اور مادی وسائل کی فروانی پر نہیں بلکہ کامل ایمان اور استقامت سے عطا ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا عصر حاضر میں باطل قوتوں کو شکست دینے کے لیے بدری جذبے کو بنیاد بنانا ہو گا۔عالم استکبار بے پناہ مادی وسائل ،جدید جنگی سازو سامان اور شیطانی قوتیں کے گٹھ جوڑ سے خود کو دنیاوی خدا ثابت کرنے پر تُلا ہوا۔ حقیقی خدا پر ایمان رکھنے والی امت مسلمہ وحدت و اخوت اور جذبہ ایمانی کے ہتھیار سے باطل کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملا سکتی ہے۔ اللہ کی راہ اختیار کرنے والوں کے ساتھ اللہ کی خصوصی مدد شامل حال ہوتی ہے۔انہوں نے کہ کہا کہ کسی  دنیاوی سپر پاور سے مرعوب ہونے کی بجائے حقیقی سپر پاور پر کامل ایمان رکھتے ہوئے باوقار زندگی بسر کی جانی چاہیئے ۔  آج اگر ساری امت مسلمہ باہم ہو جائے تو اسلام دشمنوں کی ساری رعونت کو پلک جھپکتے خاک میں ملایا جا سکتا ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) ولادت با سعادت کریم اھل بیت امام حسن مجتبی علیہ سلام کے پرمسرت موقع پر اپنے تہنیتی پیغام میں مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل اور رکن پنجاب اسمبلی محترمہ زھرا نقوی کا کہنا تھا امام حسن مجتبی علیہ سلام کا جود و سخا ، علم و حلم ، بخشش و عطا اور آپ علیہ سلام کی کریمی ہر خاص و عام کے لیے یکساں تھی آپؑ کے بلند اخلاق اور شان کریمی سے متاثر ہو کر دشمن بھی آپ کے گرویدہ ہو جاتے اور دین اسلام کی طرف مائل ہو جاتے آپ نے اپنی عمر کے 7 سال اپنے نانا رسول خداؐ کے ساتھ گزارے، بیعت رضوان اور نجران کے عیسائیوں کے ساتھ مباہلہ میں اپنے نانا حضرت محمد مصطفی ص کے ساتھ شریک ہوئے۔ آپ علیہ سلام اپنے نانا جناب رسول خداؑ اور بابا علی مرتضیؑ کے علم کے وارث تھے یہ آپ کی حکمت و بصیرت ہی تھی کہ جسکے باعث امت مسلمہ میں فتنہ گری کا توڑ ممکن ھوا۔دور حاضر میں ہر اٹھنے والے نئے فتنے کا مقابلہ اور دین مبین کی حفاظت کے لئے امام حسن مجتبی علیہ سلام کے کردار کی پیروی کرنا ضروری ہے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین ضلع جنوبی کراچی کے تحت چھٹے سالانہ معارف قرآن کلاسز کے چودہویں روز علامہ کاظم عباس نقوی نے آن لائن خطاب کیا ۔ اس موقع پر انہوں نے سورہ مومنون کی آیت نمبر 97سے آیت نمبر 104تک کی تفسیر بیان کی اور کہا کہ شیطان شناسی ضروری ہے ۔ دشمن شناسی آدھی کامیابی ہے ۔ شیطان بہت مخفی انداز سے اپنی چالیں چلتا ہے ۔ شیطان انسان کا کھلاہوا اور دقیق دشمن ہے ۔ شیطان ہماری طاقت کا مقابلہ نہیں کرتا بلکہ ہمارے کمزور پہلو پر حملہ کرتا ہے ۔ شیطان کو ہم پر اختیار نہیں ہے لیکن انسان خود کو پست کرکے اسے اپنا ولی بنانے کا موقع دیتا ہے ۔ انسان شہرت، پیسے اور قدت کی خاطر گھٹنے ٹیک دیتا ہے پھر شیطان اسے رسوا کرتا ہے ۔ شیطان وسوسہ پیدا کرتا ہے ۔ پھر اس کے لشکر اس وسوسے کو تقویت دیتے ہیں اورانسان اس کے جال میں پھنس جاتا ہے ۔

انہوں نےکہا کہ شیطان اپنے کاموں میں مایوس نہیں ہوتا اورمستقل کام کرتا ہے ۔ پہلے بھاری طریقے سے گمراہ کرتا ہے پھر ہلکے طریقہ سے اور جو قلیل ترین گناہ سرزرد کروا سکے ،اس سے بھی کنارہ کش نہیں ہوتا بعض دفعہ ہمارے ذہن میں ایک بات پیدا ہوتی ہے پھر وہ پوری کہانی بن جاتی ہے ،ایسی برائیوں کو بنیاد فراہم کرنے والی ذات شیطان ہے ۔ ایسے موقع پر شیطان سے دوری اختیار کرنی چاہیئے ۔ نماز کا وقت شیطان کے لئے بہت بھاری ہوتا ہے ۔ وہ بھولی بھٹکی باتیں اور ان خیالات کو یاد دلاتا ہے جو ہمارے لئے بہت حساس نوعیت کی ہوتی ہیں ۔ اگر ہم پورے دن اپنے افکار کو بہتر کرنے کی کوشش کرے تو ہم نماز میں ان شیطانی خیالات کو کنٹرل کرسکتے ہیں ۔ شیطان کے انداز مخفیانہ ہے ۔ خدا نے پیغمبر کو بھی کہا کہ وہ اس کی مخفی چالوں سے پناہ طلب کریں تو پھر ہماری کیا کیفیت ہوگی ۔

علامہ کاظم عباس نقوی نے کہا کہ انسان کوقیامت کے دن سے ڈرنا چاہیئے ۔ ایک صورسے سب ختم ہوجائے گا اور اس مرحلہ پر سب دوبارہ اٹھائے جائیں گے ۔ اس دن کوئی کسی کو نہیں پہچانے گا ۔ خوف اور وحشت کی کیفیت ہوگی ۔ جس کے اعمال کے وزن ہلکے ہوں گے ،انہوں نے خود اپنے نفسوں کو خسارہ میں رکھا ۔ ان کا ٹھکانا ہمیشہ کے لئے جہنم ہوگا ۔

 علامہ کاظم عباس نقوی نے بتایا کہ سورہ مومنون میں خدا کہتا ہے کہ جب ان کو موت آتی ہے تو وہ خدا سے درخواست کرتے ہیں کہ ہمیں واپس بھیج دے شاید عمل صالح انجام دے سکیں ۔ مگر خدا کہتا ہے کہ یہ ان کی محض زبانی جمع خرچی ہے ۔ مشکلوں میں بھی یہ لوگ اللہ کی جانب متوجہ نہیں ہوئے ۔ موت کے موقع پر پردے ہٹ جاتے ہیں ۔ اس موقع پر توبہ کا دروازہ بند ہوجا تا ہے ۔ انسان یقین کی مرحلہ پر داخل ہوجاتا ہے ۔ اس کے بعد برزخ کا مرحلہ ہے ۔

علامہ کاظم عباس نقوی نے کہا کہ برزخ اس دنیا اور اس آخرت کے درمیان کامرحلہ ہے ۔ جہاں کے وقت اور جگہ کا دنیا سے براہ راست تعلق نہیں ہے ۔ برزخ مومنین کے لئے تصفیہ کی جگہ ہے ۔ ہمارا بدن کسی عذاب کا متحمل نہیں ہوسکتا ہے ۔ بعض حقوق الناس ایسے ہیں جن کا عذاب شاید قیامت تک پورا ہوگا ۔ علامہ کاظم عباس نقوی نے کہا کہ روزانہ اپنا محاسبہ کریں ۔ اس طرح بتدریج نیک اعمال کا پلڑہ بھاری ہوگا ۔ لحظہ بھر کے لئے اپنی ذات پر تقیہ نہیں کرنا چاہیئے ۔ ایک لمحہ کے لئے بھی خدا ہمیں چھوڑ دے تو ہم تباہی کے دہانے پر ہوں گے ۔

وحدت نیوز(پشاور) مجلس وحدت مسلمین خیبر پختونخوا کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ وحید عباس کاظمی نے امام حسن علیہ السلام کے یوم ولادت کے موقعہ پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ عالم اسلام کے مابین افتراق اور انتشار سے چھٹکارا حاصل کرنے کا بہترین حل امام حسنؑ کی حکمت و تدبر سے استفادہ کرکے حاصل کیا جا سکتا ہے۔ صلح امام حسنؑ امت مسلمہ کی بقا اور مشترکہ مفادات کے لیے اہلبیتؑ کی طرف سے رواداری کا ایک عملی درس ہے۔ امام حسن علیہ السلام نے ثابت کیا کہ دین اسلام کی سربلندی انہیں ہر شے پر مقدم ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حضرت امام حسنؑ کا عمل و کردار وحدت بین المسلمین کا عمدہ اظہار اور وقت کے تقاضوں کے مطابق بہترین سعی تھی۔ خاندان نبوت نے ہمیشہ دین کی سربلندی کو زندگی کا مقصد سمجھا۔ عصر حاضر میں مسلمانوں کے باہمی اختلافات کو دشمنوں کی طرف سے ہوا دے کر ان میں شدت پیدا کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔ تمام مکاتب فکر کو چاہیئے کہ وہ فروعی اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے مشترکات پر مل بیٹھیں، تاکہ اسلام دشمن طاقتوں کے عزائم کو شکت دی جا سکے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس وقت پوری دنیا میں میں صرف امت مسلمہ ہی انتشار اور زوال کا شکار ہے۔ جس کا بنیادی سبب عدم برداشت اور رواداری کا فقدان ہے۔ اسلام دشمنی میں یہود و نصاریٰ ایک دوسرے کے جگری یار کا کردار ادا کر رہے ہیں۔ جبکہ ہم ایک نبی اور ایک دین کے پیروکار ہو کر باہم دست و گریباں ہیں۔ امت مسلمہ دین اسلام کی سربلندی کے لیے کیوں یکجا نہیں ہوسکتی۔ فروعی اختلافات مختلف مسالک کے درمیان کسی دشمنی کا نام نہیں بلکہ ایک علمی بحث ہے۔ جو عناصر فروعی اختلافات کو دشمنی میں بدلنے کی کوشش میں مصروف ہیں، ان کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں، وہ اسلام دشمن قوتوں کے پے رول پر ہیں اور مسلمانوں کو دست و گریباں کرکے غیر مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چودہ سو سال قبل صلح کرکے امام حسن علیہ السلام نے یہ درس دیا کہ امت مسلمہ کی سلامتی کے لیے کسی بھی شے کو قربان کیا جا سکتا ہے۔ یہ اسوہ آئمہ اطہار علیہم السلام اور وقت کی اہم ضرورت ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ امام حسن مجتبی علیہ السلام کی پاکیزہ سیرت اور بلند کردار ہمارے لئے نمونہ عمل ہے، آج بھی امت مسلمہ اسوہ حسنی اپنا کر عصر حاضر کی اسلام دشمن قوتوں کو شکست دے سکتی ہے۔

 ان خیالات کا اظہار انہوں نے جیکب آباد میں مقامی میڈیا کے خصوصی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ علامہ مقصود ڈومکی نے کہا ہے کہ کریم آل محمد امام حسن مجتبی علیہ السلام علم و حلم شجاعت و سخاوت سمیت اعلیٰ انسانی صفات کا مجسم نمونہ تھے، آپ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے خلق عظیم اور ہیبت و وقار کے وارث تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آپ علیہ السلام کا کریمانہ اخلاق اور سخاوت مشہور ہے، آپ نے سواری موجود ہونے کے باوجود 25 مرتبہ پیدل حج کئے، آپ ہی کے لئے سید الانبیاء (ص) نے فرمایا کہ میرا یہ بیٹا سردار ہے، آپ جوانان جنت کے سردار ہیں۔ انہوں نےکہا کہ امام حسن مجتبی علیہ السلام کی پاکیزہ سیرت اور بلند کردار ہمارے لئے نمونہ عمل ہے، آج بھی امت مسلمہ اسوہ حسنی اپنا کر عصر حاضر کی مکار اسلام دشمن قوتوں کو شکست دے سکتی ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) بلوچستان میں دہشت گردی کے واقعہ پر مجلس وحدت مسلمین کی شدید مذمت ۔سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے اپنے مذمتی بیان میں کہا کہ پاک فوج کے جوانوں کی شہادت قومی سانحہ ہے جس پر پوری قوم سوگوار ہے۔پاک فوج کو نشانہ بنانے والوں کی پشت پر بھارت کھڑا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں دہشت گرد تنظیموں کے مکمل خاتمے تک امن نہیں ہو سکتا۔بھارت مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم سے توجہ ہٹانے کے لیے پاکستان کے امن کو تباہ کر رہا ہے۔وطن عزیز کی سلامتی و استحکام کے لیے پوری قوم پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہے،پاک فوج کو نشانہ بنانے والے ملک و قوم کے غدار اور عبرتناک سزا کے مستحق ہیں۔

علامہ راجہ ناصرعباس نے مزید کہا کہ بھارت عالمی دہشت گرد اور پڑوسی ممالک کی خودمختاری کے خلاف سرگرم ہے۔شہداء کے اہل خانہ کے غم میں برابر کے شریک اور بلندی درجات کے لیے دعاگو ہیں۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین سندھ کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کہا ہے کہ عزاداری ہماری شناخت اور ہمارے ایمان کا حصہ ہے اس پر کسی قسم کا کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ وہ کورونا کی آڑ میں ملت تشیع کو ان کے مراسم عزا سے روک لے گا تو وہ قطعی مغالطے میں ہے۔ ملت جعفریہ نے اب تک حفاظتی انتظامات مجتہدین کے فتویٰ،ماہرین ڈاکٹرز  کے کہنے کے مطابق عمل کیا ہے آئندہ بھی کریں گے اور اپنے موقف سے ایک انچ بھی پیچھے ہٹنا گوارہ نہیں۔

انہوں نے کہا حکومت کی جانب سے جاری ایس او پیز پر عمل کرتے مجالس و جلوس کے انعقاد کا مکمل حق حاصل ہے۔یوم علی علیہ السلام کے موقع پر پوری قوم پرسہ پیش کرے گی۔ اس مسئلے پر پنجاب حکومت ملت تشیع کا ساتھ دینے پر آمادہ نظر آتی ہے تاہم سندھ حکومت کا پس و پیش ان کی بدنیتی کو آشکار کررہا ہے۔سندھ حکومت کا وفاق سے اختلافات کا نزلہ ہم اپنے اوپر نہیں گرنے دیں گے۔سندھ حکومت کو چاہئیے کہ وہ ملت تشیع کو نشانہ بنانے کی بجائے وفاق سے اپنے تنازعات حل کرے۔

انہوں نے کہا ملت تشیع نے مشکل کی ہر گھڑی میں زمہ دارانہ کردار ادا کیا ہے۔کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے ہم نے ناصرف طبی ہدایات پر سختی سے عمل کیا بلکہ لاک ڈاؤن کے دوران معاشی مشکلات کے شکار ہزاروں گھرانوں میں راشن تقسیم کر کے ایک باہمت اور محب وطن قوم ہونے کا ثبوت دیا۔

انہوں نے کہا وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے احتیاط تدابیر سے مشروط کر کیلاک ڈاؤن ختم کرنے کا فیصلہ کیا۔اگر ایس او پیز پر عمل کرتے ہوئے ہر فردکو باہر نکلنے کی اجازت دی جا رہی ہے تو ملت و تشیع کو جلوس سے روکنے کا کیا جواز بنتا ہے۔سندھ حکومت کے ایسے کسی بھی یکطرفہ فیصلے کو قطعی قبول نہیں کیا جائے گا جس میں ملت تشیع کے قائدین کی مشاورت شامل نہ ہو۔

 انہوں نے کہا کورونا کے نام پر خوف و ہراس پھیلا کر دوسرے کی مذہبی آزادی کو سلب نہ کیا جائے۔ گزشتہ تین ماہ میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد کا دیگر اموات سے موازنہ کریں تو حیران کن نتائج سامنے آئیں گے۔ملک بھر میں عام بیماریوں سے مرنے والوں کی تعداد کورونا کی نسبت زیادہ ہے۔انہوں نے کہا ایس او پیز پر عمل کرتے ہوئے سندھ بھر میں یوم علی ع کے پروگرام اپنے مذہبی عقیدت واحترام کے ساتھ بھرپور انداز سے منعقد کیے جائیں گے۔

Page 16 of 1049

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree